Home Forums Non Siasi Mohanjedaro

Viewing 14 posts - 1 through 14 (of 14 total)
  • Author
    Posts
  • unsafe
    Participant
    Offline
    Thread Starter
    • Advanced
    #1
    آج سے کوئی پانچ ہزار پہلے جب انڈس تہذیب کی شہروں کے میں کوئی مسجد ، کوئی مولوی نہیں ہوتا تھا تو وہ یوروپ سے تقریبا ترقی میں دو ہزار سال آگے تھی

    • This topic was modified 1 year, 7 months ago by الشرطہ. Reason: Thumbnail Added
    Jack Sparrow
    Participant
    Offline
    • Advanced
    #2

    جس فرد یا قوم نے نظام الہی کو تھام لیا – – وہ دنیا میں عروج پا گیا. کامیاب ہو گیا – – نظام الہی سب کے لئے یکساں ہے – اس میں مذہب کی بندش نہیں ہے

    نادان
    Keymaster
    Offline
      #3
      امریکہ میں مسجد بھی ہیں ، چرچ بھی ..مندر بھی ہیں اور یہودیوں کی عبادت گاہیں بھی ..پھر کیوں امریکہ سپر پاور بن گیا ترقی کر کے

      :thinking:

      unsafe
      Participant
      Offline
      Thread Starter
      • Advanced
      #4

      ویڈیو پوسٹ کرنے کا مقصد آپ لوگ شائد سمجھ نہ سکے … اس زمانے میں انڈس تہذیب کی سوچ کی عکاسی کرنا تھا … کہ باقی پرانے تہذیبی شہروں کی طرح … موہنجوڈارو میں بادشاہوں کے لئے کوئی شاہی محل تعمیر نہیں تھا .. اور حکومت کے لئے کوئی وہائٹ ہاؤس یا پارلیمنٹ ہاؤس نہیں تھا … مولویوں اور پنڈتوں کے کوئی مندر کوئی مسجد کوئی چرچ نہیں تھی … اور گھروں کی تعمیر بلکل کو مساوات کے تحت رکھ بنائی گئی تھی … مطلب امیر غریب کا کوئی چکر نہیں تھا ……. آج امریکا میں بھی امیر ہیں غریب ہیں … پاکستان میں امیر غریب ہیں … کسی کے لئے محل بنا ہوا تو کسی کے لئے جھونپڑی …. اور مذھب کی بات تو چھوڑ ہی دو ایک مذھب میں اتنے فرقے ہیں …

      JMP
      Participant
      Offline
      • Professional
      #5
      unsafe sahib

      محترم
      اس قدیم زمانے اور اس نئے زمانہ کے انسان کی سوچ میں اس قدر تبدیلی کیوں رونما ہوئی
      کیا رہنماوں کے اقدار اور اصول بدل گئے یا انسان گمراہ ہو گیا
      کیا بیرونی عناصر کو مواد الزام ٹہرائیں یا انسان کی اندرونی شکست اور ریخت کو
      کیا انسان کی مادی ترقی ہاتھوں انسان کے بس سے باہر ہو گئی یا انسانی سوچ زنگ آلود ہو گئی
      کیا انسان کے علم میں اضافہ نقصاندہ ثابت ہو رہا ہے یا انسان کا علم کم ہوتا جا رہا ہے
      کیا انسان صرف برائی ہی برائی دیکھ رہا ہے یا واقعی ہر چیز بری ہو گئی

      JMP
      Participant
      Offline
      • Professional
      #6

      ویسے ترقی کی کیا تعریف ہے اور ترقی کے تعیین  کا پیمانہ کیا ہے . کیا ترقی کی کوئی ایک ایسی تعریف ہے جس پر تمام لوگ، قومیں، مذاہب، نظریات متفق ہیں

      کیا ترقی کی ایک تعریف پر سب متفق ہو سکتے ہیں

      unsafe
      Participant
      Offline
      Thread Starter
      • Advanced
      #7

      جے ایم پی صاحب کسی معاشرے میں ترقی کا تعلق درج زائل باتوں سے ہوتا ہے 

       ڈویلپمنٹ، مساوات…. حقوق … قانون …. مدد…. مارکیٹ….. ضروریات زندگی … منصوبہ بندی… آبادی….  غربت …. پیداوار….پراگرس…. وسائل… سائنس ….سوشل ازم…. معیار زندگی ریاست ٹیکنالوجی …..ماحول….. اس حساب سے موہنجدارو اپنے وقت کا سب سے کامیاب ترین شہر تھا …. 

      رہی بات آپ کی پہللی پوسٹ کی  کہ اس قدیم زمانے اور اس نئے زمانہ کے انسان کی سوچ میں اس قدر تبدیلی کیوں رونما ہوئی … تو میرا ذاتی خیال ہے موہن جو وڑو جیسے شہروں کو باہر سے آنے والے لٹیروں اور قدرتی آفات نے تباہ کر دیا جس کی وجہ سے لوگوں میں اچھے انجنئیر اور لوگ ناپید ہوتے گے …. معیار زندگی کم ہوتا گیا  ۔ اچھے مکانوں کی جگہ  چھوٹے چھوٹے گھٹیا مکان بنے اور بتدریح دارلحکومت پر بیرونی طاقتوں کے  لامتناہی حملوں نے  سندھ تہذیب اور سندھ سلطنت کو تباہ و برباد کر دیا۔  ۔ یہ باہر سے آنے والی فاتح اقوام کے کے لٹیرے تھے  ۔ یہی وجہ ہے اس تہذیب کا کوئی قصبہ تباہ ہوتا تو  اگلی دفعہ لٹیروں کے اس حملے کی وجہ سے  کمتر ثقافت دیکھنے میں آتی … روز روز کے حملوں سے ثقافتیں کمزور ہو جاتی ہیں 

      • This reply was modified 1 year, 7 months ago by unsafe.
      Ghost Protocol
      Participant
      Offline
      • Expert
      #8
      انتہائی حیرت کا مقام ہے کہ ہزاروں سال قبل دریأ سندھ کے کنارے قلیل تعداد میں ہی سہی، اسقدر جدید تہذیب آباد تھی علمی آگہی اور اسکو عملی شکل دینا عقل و دانش، بہتری کی چاہ ،دقت اور وقت کا طلب گار ہے اگر اس تہذیب کی نمو نامیاتی تھی تو اسکے آثار ارد گرد میں بھی پاے جاتے ہوں گے یا ہونا چاہیں اگر اس تھذیب کے باسیوں نے کہیں اور نکل مکانی کی ہوگی تو وہاں بھی ایسا ہی جہاں آباد کیا ہوگا جن کے آثار ملنے چاہیں اگر ایسے کویی آثار موجود نہیں ہیں تو اس تہذیب اور اس سے جڑی کہانیوں پر بھی سوالات کھڑے ہو جاتے ہیں کم سے کم جن لوگوں نے اندروں سندھ کی قدیم بستیوں کا دورہ کیا ہے اور انکی حالت دیکھی ہے یہ تصور بھی محال ہوگا کہ آج کے باسیوں کی کسی بھی طریقہ سے نسبت اس تہذیب سے جڑتی ہو گی
      unsafe
      Participant
      Offline
      Thread Starter
      • Advanced
      #9
      انتہائی حیرت کا مقام ہے کہ ہزاروں سال قبل دریأ سندھ کے کنارے قلیل تعداد میں ہی سہی، اسقدر جدید تہذیب آباد تھی علمی آگہی اور اسکو عملی شکل دینا عقل و دانش، بہتری کی چاہ ،دقت اور وقت کا طلب گار ہے اگر اس تہذیب کی نمو نامیاتی تھی تو اسکے آثار ارد گرد میں بھی پاے جاتے ہوں گے یا ہونا چاہیں اگر اس تھذیب کے باسیوں نے کہیں اور نکل مکانی کی ہوگی تو وہاں بھی ایسا ہی جہاں آباد کیا ہوگا جن کے آثار ملنے چاہیں اگر ایسے کویی آثار موجود نہیں ہیں تو اس تہذیب اور اس سے جڑی کہانیوں پر بھی سوالات کھڑے ہو جاتے ہیں کم سے کم جن لوگوں نے اندروں سندھ کی قدیم بستیوں کا دورہ کیا ہے اور انکی حالت دیکھی ہے یہ تصور بھی محال ہوگا کہ آج کے باسیوں کی کسی بھی طریقہ سے نسبت اس تہذیب سے جڑتی ہو گی

      جی پی صاحب دو باتیں ہو سکتی ہیں .. ایک تو یہ کہ سندھ میں سیلاب کی وجہ سے یہ لوگ تباہ ہو گے اور ان کو نقل مکانی کا موقع نہ مل سکا اور دوسری کسی بیرونی طاقت کے حملے میں یہ سب لوگ مارے گے …

      Sohraab
      Participant
      Offline
      • Expert
      #10
      امریکہ میں مسجد بھی ہیں ، چرچ بھی ..مندر بھی ہیں اور یہودیوں کی عبادت گاہیں بھی ..پھر کیوں امریکہ سپر پاور بن گیا ترقی کر کے :thinking:

      nadan ji aap ko kitne saal ho gaye america settle huay ??

      aur amreeki musalmanon se kaisa salook karte hain ??

      نادان
      Keymaster
      Offline
        #11

        ویڈیو پوسٹ کرنے کا مقصد آپ لوگ شائد سمجھ نہ سکے … اس زمانے میں انڈس تہذیب کی سوچ کی عکاسی کرنا تھا … کہ باقی پرانے تہذیبی شہروں کی طرح … موہنجوڈارو میں بادشاہوں کے لئے کوئی شاہی محل تعمیر نہیں تھا .. اور حکومت کے لئے کوئی وہائٹ ہاؤس یا پارلیمنٹ ہاؤس نہیں تھا … مولویوں اور پنڈتوں کے کوئی مندر کوئی مسجد کوئی چرچ نہیں تھی … اور گھروں کی تعمیر بلکل کو مساوات کے تحت رکھ بنائی گئی تھی … مطلب امیر غریب کا کوئی چکر نہیں تھا ……. آج امریکا میں بھی امیر ہیں غریب ہیں … پاکستان میں امیر غریب ہیں … کسی کے لئے محل بنا ہوا تو کسی کے لئے جھونپڑی …. اور مذھب کی بات تو چھوڑ ہی دو ایک مذھب میں اتنے فرقے ہیں …

        شروع آپ نے کیا تھا

        :serious:

        نادان
        Keymaster
        Offline
          #12
          nadan ji aap ko kitne saal ho gaye america settle huay ?? aur amreeki musalmanon se kaisa salook karte hain ??

          یہاں مذھب ، نسل ، کلر پر سرکاری طور پر ڈسکریمینیشن جرم ہے ..

          عام  طور پر لوگوں کے رویہ بہترین ہوتے ہیں ..کہیں اکا دکا واقعات ہو جائیں تو ایسا ممکن ہے ..

          امریکہ میں اتنے عرصے سے ضرور ہوں کہ شہریت مل گئی ہے

          :bigsmile:

          Sohraab
          Participant
          Offline
          • Expert
          #13
          یہاں مذھب ، نسل ، کلر پر سرکاری طور پر ڈسکریمینیشن جرم ہے .. عام طور پر لوگوں کے رویہ بہترین ہوتے ہیں ..کہیں اکا دکا واقعات ہو جائیں تو ایسا ممکن ہے .. امریکہ میں اتنے عرصے سے ضرور ہوں کہ شہریت مل گئی ہے :bigsmile:

          phir gol mol jawab :facepalm:

          PML-N
          Participant
          Offline
          • Advanced
          #14
          يار انسیف۔ اس زمانے  میں کررہے ہو ۔ منجوداڑو یا اس سے پہلے زمانے ہوتے ۔
        Viewing 14 posts - 1 through 14 (of 14 total)

        You must be logged in to reply to this topic.

        ×
        arrow_upward DanishGardi