Home Forums Non Siasi عورتوں کے حقوق

  • This topic has 88 replies, 14 voices, and was last updated 1 year, 4 months ago by nayab. This post has been viewed 2688 times
Viewing 20 posts - 41 through 60 (of 89 total)
  • Author
    Posts
  • #41
    حسن داور
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 4310
    • Posts: 2846
    • Total Posts: 7156
    • Join Date:
      8 Nov, 2016

    Re: عورتوں کے حقوق

    میں ان سب کا ذکر کیوں کر کروں جن کا ذکر آپ کر رہے ہیں یہ تشدد میں نہیں آتا میں نے صرف ایک عام عورت کی بات کی ہے اور بار بار کی ہے نہ ہی میں نے تمام مردوں کو یکساں کہا ہے میں نے صرف ان مظلوم عورتوں بچیوں کا ذکر کیا ہے جن پر تشدد ہوا ہے یا ہوتا ہے سنی لیون کوئی متاثرہ خاتون نہیں ہے جس کے لیے میں عورتوں کے عالمی دن پر آواز اٹھا ہوں یا حیا مارچ میں اس کی عزت کی حفاظت کے لیے ریلی نکالوں :17:

    کون سی عام عورت ؟؟؟ وہ جو بلوچستان کے کسی دور دراز علاقے سے ہے جسے پتا نہیں کے عورت مارچ ہے کیا …. یا وہ عورت سندھ کے کسی علاقے سے ہے …. یا وہ عورت جو پنجاب کے کسی گاؤں دیہات سے ہے …. یا سرحد کی وہ عورتیں جنھے پتا نہیں باہر کی دنیا ہے کیسی …انکے لئے تو کہیں نہیں دکھا کے آواز اٹھائی ہو ان خواتین نے … آپکو سنائی دی کیا

    #42
    Guilty
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 0
    • Posts: 5403
    • Total Posts: 5403
    • Join Date:
      6 Nov, 2016

    Re: عورتوں کے حقوق

    ۔

    یہ عورت ہے جس نے تین بے گناہ ۔۔۔۔۔ ٹوڈلر بچوں  کو قتل کردیا ہے ۔۔۔۔۔۔

    #43
    Guilty
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 0
    • Posts: 5403
    • Total Posts: 5403
    • Join Date:
      6 Nov, 2016

    Re: عورتوں کے حقوق

    میں ان سب کا ذکر کیوں کر کروں جن کا ذکر آپ کر رہے ہیں یہ تشدد میں نہیں آتا میں نے صرف ایک عام عورت کی بات کی ہے اور بار بار کی ہے نہ ہی میں نے تمام مردوں کو یکساں کہا ہے میں نے صرف ان مظلوم عورتوں بچیوں کا ذکر کیا ہے جن پر تشدد ہوا ہے یا ہوتا ہے سنی لیون کوئی متاثرہ خاتون نہیں ہے جس کے لیے میں عورتوں کے عالمی دن پر آواز اٹھا ہوں یا حیا مارچ میں اس کی عزت کی حفاظت کے لیے ریلی نکالوں :17:

    ۔

    پر سنی لیون ۔۔۔۔ اور دیگر لاکھوں ۔۔۔۔ پورن سٹار ۔۔۔۔۔۔ عورتوں نے ۔۔۔۔ معاشرے میں ۔۔۔۔۔ نا جائز غیر قا نونی غیر انسانی  سیکس کرائم کیا  ۔۔۔۔۔ مجرم تو وہ ہیں ۔۔۔۔۔۔۔

    اگر ایک مرد ایک بچی کو ریپ کرکے مجرم ہے ۔۔۔۔۔ تو ۔۔۔ پورن سٹار عورتیں تو انسانیت اور معاشروں کو ریپ کررھی ہیں ۔۔۔۔۔

    معاشروں کو ریپ کرنے والی لاکھوں پورن سٹار کا زکر کون کرے گا ۔۔۔۔۔۔

    ایک بچی سے ریپ کرنے والے مرد کا زکر تو آپ نے کر لیا ۔۔۔۔۔۔۔ شہروں ملکوں  ریپ کرنے والی پورن سٹار عورتوں  کا زکر کون کرے گا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

    • This reply was modified 1 year, 4 months ago by Guilty.
    #44
    Muhammad Hafeez
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 663
    • Posts: 4162
    • Total Posts: 4825
    • Join Date:
      13 Oct, 2016

    Re: عورتوں کے حقوق

    کون سی عام عورت ؟؟؟ وہ جو بلوچستان کے کسی دور دراز علاقے سے ہے جسے پتا نہیں کے عورت مارچ ہے کیا …. یا وہ عورت سندھ کے کسی علاقے سے ہے …. یا وہ عورت جو پنجاب کے کسی گاؤں دیہات سے ہے …. یا سرحد کی وہ عورتیں جنھے پتا نہیں باہر کی دنیا ہے کیسی …انکے لئے تو کہیں نہیں دکھا کے آواز اٹھائی ہو ان خواتین نے … آپکو سنائی دی کیا

    عام کیا یہاں خاص عورتوں کو بھی حقوق نہیں ملتے ، آج تک پاکستان میں ایک بھی عورت کو سپریم کورٹ کا جج نہیں بنایا گیا

    #45
    nayab
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 13
    • Posts: 1592
    • Total Posts: 1605
    • Join Date:
      24 Nov, 2016

    Re: عورتوں کے حقوق

    کون سی عام عورت ؟؟؟ وہ جو بلوچستان کے کسی دور دراز علاقے سے ہے جسے پتا نہیں کے عورت مارچ ہے کیا …. یا وہ عورت سندھ کے کسی علاقے سے ہے …. یا وہ عورت جو پنجاب کے کسی گاؤں دیہات سے ہے …. یا سرحد کی وہ عورتیں جنھے پتا نہیں باہر کی دنیا ہے کیسی …انکے لئے تو کہیں نہیں دکھا کے آواز اٹھائی ہو ان خواتین نے … آپکو سنائی دی کیا

    آپکو بھی آگاہی کی ضرورت ہے ویسے

    میں نے بھی تو یہی کہا ہے کہ اس مارچ نے ایک عام عورت کو کوئی مثبت پیغام نہیں دیا.یہ بات غلط ہے کہ کسی عورت کو یہ نہ پتا ہو کہ اسکے حقوق یا حقوق کے لیے مارچ یا ریلی کیا ہیں آج کل جدید دور میں تقریبا ہر ایک دیہات یا گاؤں میں کم از کم ٹی وی کیبل کی سہولت موجود ہے جس سے وہاں بیھٹی ایک عورت کو اس دن کا اور اسکی اہمیت کا پتا چل سکتا ہے …

    اگر نہیں ہے تو کافی این جیو ز ہیں جو دیہات دیہات گاؤں گاؤں جا کر آگاہی مہم چلاتی ہیں انہی سے میری غرض تھی کہ اگر اس مارچ میں وہ میرا جسم میری مرضی کی مثبت تشریح یا کوئی اور سولوگن  استعمال کرتیں جو اس معاشرے کے مردوں کے سوچ کے  لیےبھی قابل قبول ہوتی تو معاملات کچھ اور ہوتے  اور زیادہ سے زیادہ مرد حضرات بھی اسکی حمایت کرتے پھر نہ تو کسی حیا مارچ کی ضرورت پڑتی نہ اس طرح ایک قوم ہوتے ہوے یوں ایک ملک میں چار چار مختلف مارچ ہوتے

    :jazak:

    #46
    Muhammad Hafeez
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 663
    • Posts: 4162
    • Total Posts: 4825
    • Join Date:
      13 Oct, 2016

    Re: عورتوں کے حقوق

    میری برقعے کی مخالفت سے آپ لوگ شاید یہ تاثر لے رہے ہیں کہ میں برقعے پر پابندی کے حق میں ہوں، یا زبردستی عورتوں کا برقعہ اتارنے کا حامی ہوں، تو ایسا نہیں ہے، کیونکہ اگر میں ایسا کہتا ہوں تو پھر مجھ میں اور ان لوگوں میں کوئی فرق نہیں ہوگا جو عورت کو جبراً برقعہ پہننے پر مجبور کرتے ہیں۔ میرا تو سادہ سا موقف ہے کہ عورت کو اس بات کا فیصلہ کرنے کی (حقیقی) آزادی دی جائے کہ وہ برقعہ پہننا چاہتی ہے یا نہیں، اس پر مذہبی، خاندانی اور سماجی دباؤ نہ ڈالا جائے۔ ایک آزاد خیال گھرانے میں پرورش پانے والی پڑھی لکھی لڑکی اگر بغیر کسی دباؤ کے اپنی چوائس سے برقعہ پہننے کا انتخاب کرتی ہے تو میں اس کے اس حق کا احترام کرتا ہوں، اگرچہ میں پھر بھی برقعے کو جہالت کی نشانی ہی کہوں گا، مگر اس کو اس کے جسم پر اسکی مرضی چلانے کا حق دینے کی حمایت کروں گا۔۔

    مگر یہاں معاملہ یہ ہے کہ ہمارے معاشرے میں برقعہ اوڑھنے والی خاتون کی اکثریت کو فری چوائس ہے ہی نہیں، وہ تو مذہبی، سماجی اور خاندانی دباؤ سے مجبور ہوکر برقعہ پہنتی ہیں اور یہی مجبوری پھر ان کی عادت بن جاتی ہے۔ ہر شہر اور ہر گاؤں میں جگہ جگہ جو لڑکیوں کے اسلامی مدارس کھلے ہوئے ہیں، وہ سب سے پہلے اپنے مدرسے میں پڑھنے والی لڑکیوں پر برقعہ اوڑھنے کی پابندی نافذ کرتے ہیں۔ہمارے معاشرے میں مردوں کی اکثریت چونکہ قدامت پسند اور کٹر مذہبی فکر کی حامل ہے، اس لئے یہ اپنی بیوی، بہن اور بیٹی پر اپنی اسلامی سوچ بھرپور انداز میں مسلط کرتے ہیں۔ جو لوگ یہ دعویٰ کرتے ہیں کہ ہمارے معاشرے کی عورت اپنی مرضی اور چوائس سے برقعہ پہنتی ہے، ان کے دعوے کے رد میں حالیہ تازہ ترین مثال ہے کہ عورت کے محض “میرا جسم اور میری مرضی” کا نعرہ لگانے سے ہی پاکستانی پدرشاہی معاشرے میں زلزلہ آگیا، انٹرنیٹ پر مختلف پولز میں عورتوں کی اپنے جسم پر اپنی مرضی چلانے کی بھرپور مذمت کی گئی، جو مرد حضرات صرف نعرے سے اس قدر بھڑک اٹھتے ہیں، وہ عملی طور پر عورت کو کیسے فری چوائس دے سکتے ہیں کہ وہ اپنی مرضی سے فیصلہ کرے کہ اس نے کیا پہننا ہے اور کیا نہیں۔۔

    میری بیٹیاں ایک ماڈرن انگلش میڈیم سکول میں جاتی ہیں وہاں کیمبرج کی تعلیم دی جاتی ہے مگر ساتھ ہی یونیفارم کی پابندی کروائی جاتی ہے ، یہ برقعہ مدرسے والوں کا یونیفارم ہے اگر وہ پابندی کرواتے ہیں تو غلط کیا ہے؟؟

    #47
    nayab
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 13
    • Posts: 1592
    • Total Posts: 1605
    • Join Date:
      24 Nov, 2016

    Re: عورتوں کے حقوق

    ۔ پر سنی لیون ۔۔۔۔ اور دیگر لاکھوں ۔۔۔۔ پورن سٹار ۔۔۔۔۔۔ عورتوں نے ۔۔۔۔ معاشرے میں ۔۔۔۔۔ نا جائز غیر قا نونی غیر انسانی سیکس کرائم کیا ۔۔۔۔۔ مجرم تو وہ ہیں ۔۔۔۔۔۔۔ اگر ایک مرد ایک بچی کو ریپ کرکے مجرم ہے ۔۔۔۔۔ تو ۔۔۔ پورن سٹار عورتیں تو انسانیت اور معاشروں کو ریپ کررھی ہیں ۔۔۔۔۔ معاشروں کو ریپ کرنے والی لاکھوں پورن سٹار کا زکر کون کرے گا ۔۔۔۔۔۔ ایک بچی سے ریپ کرنے والے مرد کا زکر تو آپ نے کر لیا ۔۔۔۔۔۔۔ شہروں ملکوں ریپ کرنے والی پورن سٹار عورتوں کا زکر کون کرے گا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

    آپ

    #48
    Guilty
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 0
    • Posts: 5403
    • Total Posts: 5403
    • Join Date:
      6 Nov, 2016

    Re: عورتوں کے حقوق

    آپ

    ۔

    مطلب آپ عورت کے جرائم کو زکر نہیں کریں گے ۔۔۔۔۔ صرف مرد پر کیچڑ اچھا لیں گی ۔۔۔۔۔

    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

    #49
    حسن داور
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 4310
    • Posts: 2846
    • Total Posts: 7156
    • Join Date:
      8 Nov, 2016

    Re: عورتوں کے حقوق

    آپکو بھی آگاہی کی ضرورت ہے ویسے میں نے بھی تو یہی کہا ہے کہ اس مارچ نے ایک عام عورت کو کوئی مثبت پیغام نہیں دیا.یہ بات غلط ہے کہ کسی عورت کو یہ نہ پتا ہو کہ اسکے حقوق یا حقوق کے لیے مارچ یا ریلی کیا ہیں آج کل جدید دور میں تقریبا ہر ایک دیہات یا گاؤں میں کم از کم ٹی وی کیبل کی سہولت موجود ہے جس سے وہاں بیھٹی ایک عورت کو اس دن کا اور اسکی اہمیت کا پتا چل سکتا ہے … اگر نہیں ہے تو کافی این جیو ز ہیں جو دیہات دیہات گاؤں گاؤں جا کر آگاہی مہم چلاتی ہیں انہی سے میری غرض تھی کہ اگر اس مارچ میں وہ میرا جسم میری مرضی کی مثبت تشریح یا کوئی اور سولوگن استعمال کرتیں جو اس معاشرے کے مردوں کے سوچ کے لیےبھی قابل قبول ہوتی تو معاملات کچھ اور ہوتے اور زیادہ سے زیادہ مرد حضرات بھی اسکی حمایت کرتے پھر نہ تو کسی حیا مارچ کی ضرورت پڑتی نہ اس طرح ایک قوم ہوتے ہوے یوں ایک ملک میں چار چار مختلف مارچ ہوتے :jazak:

    ویسے آگاہی کی ضرورت آپکو ہے … مارچ میں کچھ خواتین ایسی بھی تھیں جنھے انکی باجیاں لے تو ایی تھیں پر انھے پتا کچھ نہیں تھا اس بارے میں …. میڈم جی آپکی نظر میں ہر گھر میں کیبل ہوگا …. پر ابھی بھی بہت سارے علاقے ایسے ہیں جہاں کیبل تو کیا بجلی بھی ٹھیک سے نہیں آتی …. سندھ بھرا پڑا ہے 

    #50
    nayab
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 13
    • Posts: 1592
    • Total Posts: 1605
    • Join Date:
      24 Nov, 2016

    Re: عورتوں کے حقوق

    ۔ مطلب آپ عورت کے جرائم کو زکر نہیں کریں گے ۔۔۔۔۔ صرف مرد پر کیچڑ اچھا لیں گی ۔۔۔۔۔ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

    میں نے مرد پر کوئی کیچڑ نہیں اچھالا بس وہ واقعات کا ذکر کیا جو پیش آتے رہے ہیں اور جن کے خلاف ہر عورت مرد آواز ضرور بلند کرتا ہے

    میں با حیثیت عورت ہر موڑ پر اپنے حقوق کی بات کروں گی  نہ میں نے کسی اچھے اور عورتوں کو حقوق اور عزت  دینے والے مرد کے لیے برے الفاظ بولے ہیں نہ میں نے کسی قصوروار عورت کی حمایت کی ہے

    باقی سوچ کی بات ہے اگر میری ہر  پوسٹ آپ ایک انصاف پسند انسان بن کر سمجھے گے تو آپکو اندازہ ہو گا کہ میں نے کسی بے گناہ پر غلط بات نہیں کی اور  اگر اسکو محظ یہ سمجھ کر پڑھے گے کہ نایاب نے بس سب  مردوں کو غلط کہا ہے تو کبھی نہیں سمجھے گے

    #51
    nayab
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 13
    • Posts: 1592
    • Total Posts: 1605
    • Join Date:
      24 Nov, 2016

    Re: عورتوں کے حقوق

    ویسے آگاہی کی ضرورت آپکو ہے … مارچ میں کچھ خواتین ایسی بھی تھیں جنھے انکی باجیاں لے تو ایی تھیں پر انھے پتا کچھ نہیں تھا اس بارے میں …. میڈم جی آپکی نظر میں ہر گھر میں کیبل ہوگا …. پر ابھی بھی بہت سارے علاقے ایسے ہیں جہاں کیبل تو کیا بجلی بھی ٹھیک سے نہیں آتی …. سندھ بھرا پڑا ہے

    ٹی وی یا کیبل نہ ہونے کی بنا پر کیا کیا جا سکتا ہے وہ بھی میں واضح کر چکی ہوں پوسٹ کو پورا پڑھا کرے جذباتی ہونے کی ضرورت نہیں

    اور بقول آپکے کہ انکو  باجیاں لائیں تھیں  اور پتا نہیں تھا  کہ مارچ کیا ہے تو اب انکو پتا چل گیا ہو گا

    کیاپتا یہی انکا انداز آگاہی ہو

    #52
    حسن داور
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 4310
    • Posts: 2846
    • Total Posts: 7156
    • Join Date:
      8 Nov, 2016

    Re: عورتوں کے حقوق

    ٹی وی یا کیبل نہ ہونے کی بنا پر کیا کیا جا سکتا ہے وہ بھی میں واضح کر چکی ہوں پوسٹ کو پورا پڑھا کرے جذباتی ہونے کی ضرورت نہیں اور بقول آپکے کہ انکو باجیاں لائیں تھیں اور پتا نہیں تھا کہ مارچ کیا ہے تو اب انکو پتا چل گیا ہو گا کیاپتا یہی انکا انداز آگاہی ہو

    ایک تو آپ بھی نہ …. جب کوئی جواب نہیں سمجھ آے تو بول دیا جذباتی نہ ہوں … چلیں جی کوئی نہیں

    :bigsmile: :bigsmile: :bigsmile: :bigsmile:

    #53
    nayab
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 13
    • Posts: 1592
    • Total Posts: 1605
    • Join Date:
      24 Nov, 2016

    Re: عورتوں کے حقوق

    ۔ یہ عورت ہے جس نے تین بے گناہ ۔۔۔۔۔ ٹوڈلر بچوں کو قتل کردیا ہے ۔۔۔۔۔۔ 

    یہ تو شکل سے ہی نفسیاتی مریض لگتی ہے

    :(

    اب میری سوچ ایسی بھی نہیں کہ اگر عورت ہے تو اسکو غلط نہ بولوں جبکہ اس نے غلطی کی ہو میں اسکی بھی مذمت کرتی ہوں

    مگرایک بات ایڈ کرتی چلوں کہ کسی بھی ملک میں کسی بھی عورت کے ساتھ غلط ہو تو تکلیف اور دکھ ضرور ہوتا ہے مگر اپنے ملک میں ایسا ہوتو شدت زیادہ ہوتی ہے  اب خدارا اس بات کو  اپ خود غرضی  نہ سمجھ لینا

    پلیز

    اسیلئے میں زیادہ فوکس اپنے ملک میں ہونے والے واقعات پر دیتی ہوں بجاۓ کہ سنی لیون یا اس خاتون کا ذکر کروں .

    میں نے  تو یہ خبر ہی آپکی اس پوسٹ کے بعد گوگل کیا

    :17:

    #54
    Mujahid
    Blocked
    Offline
    • Threads: 11
    • Posts: 840
    • Total Posts: 851
    • Join Date:
      10 Oct, 2018
    • Location: Scotland

    Re: عورتوں کے حقوق

    آپ

    @nayaab

    You must learn to ignore the ………….who lacks good manners.

    • This reply was modified 1 year, 4 months ago by Mujahid.
    #55
    Mujahid
    Blocked
    Offline
    • Threads: 11
    • Posts: 840
    • Total Posts: 851
    • Join Date:
      10 Oct, 2018
    • Location: Scotland

    Re: عورتوں کے حقوق

    با حیثیت عورت ہر موڑ پر اپنے حقوق کی بات کروں گی

    Power to your elbow Nayaab.

    #56
    nayab
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 13
    • Posts: 1592
    • Total Posts: 1605
    • Join Date:
      24 Nov, 2016

    Re: عورتوں کے حقوق

    ایک تو آپ بھی نہ …. جب کوئی جواب نہیں سمجھ آے تو بول دیا جذباتی نہ ہوں … چلیں جی کوئی نہیں

    :bigsmile: :bigsmile: :bigsmile: :bigsmile:

    دیکھاآپ پھر جذباتی ہو گے

    پوسٹ کو غور سے یا دو دفعہ پڑھ لیا کریں  سوال جواب سبھی واضح ہیں

    #57
    Guilty
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 0
    • Posts: 5403
    • Total Posts: 5403
    • Join Date:
      6 Nov, 2016

    Re: عورتوں کے حقوق

    میں نے مرد پر کوئی کیچڑ نہیں اچھالا بس وہ واقعات کا ذکر کیا جو پیش آتے رہے ہیں اور جن کے خلاف ہر عورت مرد آواز ضرور بلند کرتا ہے میں با حیثیت عورت ہر موڑ پر اپنے حقوق کی بات کروں گی نہ میں نے کسی اچھے اور عورتوں کو حقوق اور عزت دینے والے مرد کے لیے برے الفاظ بولے ہیں نہ میں نے کسی قصوروار عورت کی حمایت کی ہے باقی سوچ کی بات ہے اگر میری ہر پوسٹ آپ ایک انصاف پسند انسان بن کر سمجھے گے تو آپکو اندازہ ہو گا کہ میں نے کسی بے گناہ پر غلط بات نہیں کی اور اگر اسکو محظ یہ سمجھ کر پڑھے گے کہ نایاب نے بس سب مردوں کو غلط کہا ہے تو کبھی نہیں سمجھے گے

    ۔

    آپ نے جتنے واقعات درج کیئے وہ تما م واقعات مرد سے متعلق تھے ۔۔۔۔ اور واقعات کی آڑ میں  آپ نے مردوں پر کیچڑ اچھا لی ہے ۔۔۔۔

    آ پ حقوق حاصل کرنا چا ھتی ہیں تو حقوق کے لیئے کوشیش کریں ۔۔۔۔۔ مردوں پر کیچڑ اچھا لنے کی کوششیں نہ کریں ۔۔۔۔۔۔۔۔

    اور اگر ۔۔۔ آپ کے حقوق یا ماروی سرمد جیسی عورتوں کے حقوق ۔۔ مردوں پر کیچڑ ۔۔۔۔ اچھا لنے سے حا صل ہونے ہیں تو سب سے پہلے

    اپنے ۔۔۔۔ گھر میں موجود مردوں ۔۔۔۔۔ کا کٹھہ چٹھہ کھولیں ۔۔۔۔ اپنے باپ ۔۔۔۔ بھا ئی ۔۔۔ شوھر ۔۔۔ بہنوئی ۔۔۔۔۔۔  کے بارے بتا یا جائے کہ انہوں نے کتنے کتنے ریپ کررکھے ہیں

    اور کتنے مظالم عورتوں پر توڑ چکے ہیں ۔۔۔۔۔

    • This reply was modified 1 year, 4 months ago by Guilty.
    #58
    Mujahid
    Blocked
    Offline
    • Threads: 11
    • Posts: 840
    • Total Posts: 851
    • Join Date:
      10 Oct, 2018
    • Location: Scotland

    Re: عورتوں کے حقوق

    شرم تم کو مگر نہیں آتی

    #59
    Bawa
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 154
    • Posts: 15514
    • Total Posts: 15668
    • Join Date:
      24 Aug, 2016

    Re: عورتوں کے حقوق

    میں ماروی سرمد کے غیر مہذب انداز کی حامی ہرگز نہیں۔ لیکن ایک بات مجھے سمجھ نہیں آرہی. میرے جسم پر میری ہی مرضی نہیں ہو گی تو پھر کس کی ہو گی ہم سب خواتین کے چند روز مرہ کے مسائل: جب ایک ریپسٹ ایک پانچ سال کی بچی کا ریپ کرتا ہے جب مذہب کے لبادے میں لپٹا ایک شیطان مدرسے میں کسی بچے کا ریپ کرتا ہے جب ایک باپ اپنی بچی اپنے زانی یا قاتل بیٹے کی ضمانت میں ونی کر دیتا ہے جب کوئی آوارہ شخص اپنی محبوبہ کے روٹھ جانے پر اسکے منہ پر تیزاب پھینکتا ہے جب ایک نفسیاتی مریض قبر کھود کر کسی لاش کی بے حرمتی کرتا ہے جب ایک ٹیچر بچے کو وحشیانہ تشدد کا نشانہ بناتا ہے جب ایک ڈاکٹر مقدس پیشے کی آڑ میں اپنی پیشنٹ کی بیہوشی کا فائدہ اٹھاتا ہے جب گومل یونی ورسٹی کا باریش پرہیزگار ہیڈ آف ڈیپارٹمنٹ یتیم لڑکی کو نوکری دینے سے پہلے کہتا ہے کہ میری ایک کمزوری ہے اسے پورا جب ایک مہذب نظر آنے والا شہری ہجوم میں کسی عورت یا بچے کے جنسی اعضاء کو ٹچ کرتا ہے تو وہ یہ کہتا ہے کہ تمھارہ جسم میری مرضی میرا جسم میری مرضی کا یہ مطلب نہیں کہ مجھے کپڑے اتارنے کی اجازت چاہیے، میرا جسم میری مرضی کا مطلب یہ بھی نہیں کہ مجھے ملکی قوانین کو پامال کرنے کی اجازت چاہیے۔ اس کا مطلب صرف یہ ہے کہ جیسے مردوں کو اپنے جسم پر اختیار دیا ہے ویسے ہی عورت کو بھی اپنے جسم پر اختیار دیا جائے، اس کا مطلب یہ ہے کہ کوئی بھی میری اجازت کے بغیر میرے جسم سے فائدہ نا اٹھاۓ، میرا جسم میری مرضی کا مطلب ہے کہ میرے جسم کے بارے میں فیصلے اگر کوئی انسان کرے گا تو وہ کوئی اور نہیں میں خود ہوں، لیکن اس بے ضرر اور انصاف پر مبنی نعرے کی جس شد و مد سے مخالفت ہو رہی ہے تو پورا معاشرہ جنسی مریضوں اور ظالموں کا گڑھ لگ رہا ہے۔ جیسکہ میں نے شروع میں لکھا کہ میں ماروی سرمد کے غیر مہذب انداز کی حامی ہرگز نہیں اسی طرح میں یہ بھی کہنا چاہوں گی کہ عورت مارچ میں جس طرح یہ خواتین ڈھول بجا بجا کر اپنے حقوق یا آذادی کا نعرہ لگا رہی ہیں مگریہ تو پہلے ہی کم آذاد نہیں ۔۔۔ این جیوز میں کام کرنے والی ایک عورت اور مجھ جیسی گھر بیھٹی ایک عورت میں کافی فرق ہے ۔۔۔ میں نے جس طرح اوپر میرا جسم میری مرضی کے نعرے کی تشریح کی ہے تو میرے لیے یہ بات سوشل مڈیا پر کہنا تو آسان ہے مگر اپنے گھر میں باپ، بھائی کے سامنے یہ جملہ بولنا تک مشکل ہے ۔۔۔ لہذا ایک عام عورت پر اگر تشدد کیا جاتا ہے تو ان میں سے اکثر خواتین صرف ظلم سہتی ہیں یا پھر آخری حد تک جاکر خودکشی کر لیتی ہیں، کیونکہ وہ اپنے حق کی بات کر ہی نہیں سکتی نہ ہی انصاف کے حصول کے لیے تھانے میں اکیلی داخل ہونے کا تصور کر سکتی اصل آگاہی اور شعور کی ان عورتوں کو ضرورت ہے نہ کہ مارچ کرنے والی ان عورتوں کو اور جس طرح انہوں نے آگاہی دی یا یہ پیغام معاشرے کو آٹھ مارچ کو دیا میری نظر میں نعرہ غلط نہیں تھا مگر انداز مناسب نہیں تھا اسلیے کوئی مثنت پیغام ایک عام عورت کو نہ جا سکا کہ وہ کس طرح اپنے حقوق کی جنگ لڑ سکے ۔۔۔

    نایاب جی

    عورتوں کو با اختیار کرنے اور انہیں مردوں کے برابر اختیارات دینے میں کسی مرد کو کوئی مسئلہ نہیں ہے. کونسا ایسا باپ، بھائی، بیٹا یا خاوند ہے جو اپنی بیٹی، بہن، ماں اور بیوی کو کمزور دیکھنا چاہتا ہے؟ مسئلہ صرف یہ ہے کہ کیا مادر پدر آزاد عورتوں کو پاکستانی عورتوں کی نمائندگی کا حق ہے یا وہ این جی اوز چلانے والی عورتیں جس قسم کے غلیظ نعرے لگاتی اور پلے کارڈ لیکر کھڑی ہوتی ہیں، کیا وہ ہمارے کلچر اور مذھب سے مطابقت رکھتے ہیں؟

    آپ نے خواتین کے جن روز مرہ کے مسائل کا ذکر کیا ہے وہ پاکستان کی کتنے فیصد خواتین کے مسائل ہیں؟ میرے خیال میں پاکستان کی ایک فیصد خواتین بھی ان مسائل کا شکار نہیں ہیں. پاکستان کی ننانوے فیصد خواتین کے اصل مسائل کیا ہیں؟ کیا ایک فیصد سے بھی کم خواتین کے مسائل کی بات کرنی چاہیے یا ننانوے فیصد سے بھی زیادہ خواتین کے مسائل پر بات کرنی چاہیے؟ میں یہ نہیں کہتا ہوں کہ ان ایک فیصد سے بھی کم مسائل کا شکار ہونے والی خواتین کیلیے آواز نہ اٹھائی جائے. میرا موقف ہے کہ خواتین کو جن بڑے مسائل کا سامنا ہے ان کا ذکر نمایاں کیا جائے لیکن ان این جی اوز چلانے والی مادر پدر آزاد عورتوں کو دال روٹی صرف ایک ایک فیصد سے بھی کم خواتین کے مسائل پر بات کرنے سے چلتی ہے

    جن مظلوم خواتین کا آپ نے ذکر کیا ہے، کیا پاکستان کے مردوں کے ان خواتین کے مجرموں کی حمایت کی ہے یا اس کی بھرپور مذمت کی ہے اور انہیں کیفر کردار تک پہنچانے میں اپنا کردار ادا کیا ہے؟ کیا ان جرائم کے مرتکب افراد کو سزائیں دینے کے پاکستان میں قوانین نہیں ہیں یا یہ مجرم سزا سے بچ گئے ہیں؟ پاکستان تو ایک ترقی پزیر ملک ہے لیکن کونسا ایسا ترقی یافتہ ملک ہے جس نے خواتین کے تمام مسائل پر قابو پا لیا ہے؟ کیا ان ممالک میں بچے، بچیاں اور خواتین اغوا نہیں ہوتی ہیں، ان کے ساتھ زیادتی نہیں ہوتی ہے اور انہیں امتیازی سلوک اور تشدد کل نشانہ نہیں بنایا جاتا ہے؟ دنیا میں کوئی بھی ملک اور کوئی بھی معاشرہ ایسا نہیں ہے جو خواتین حتی کہ مردوں کو سو فیصد تحفظ دے پایا ہو

    ہماری خواتین کے اصل مسائل یہ ہیں کہ انہیں مردوں سے کمتر نہ سمجھا جائے، انہیں مردوں کے برابر حقوق دیے جائیں اور کسی بھی میدان میں جنس کی بنیاد پر ان کے ساتھ امتیازی سلوک نہ کیا جائے. انہیں وراثت میں سے انکا حصہ دیا جائے. انہیں تعلیم، صحت، ٹرانسپورٹ اور ملازمت کی مردوں کے برابر سہولیات حاصل ہوں. پارلیمنٹ کی خواتین ممبرز خواتین کے ووٹ سے منتخب ہو کر پارلیمنٹ جائیں تاکہ وہ قانون سازی میں خواتین کے مفادات کا تحفظ کر سکیں. ان کی پارلیمنٹ، قانون سازی اور حکومت میں مردوں کے برابر نمائندگی ہو. ان کے ساتھ عزت و احترام کے ساتھ پیش آیا جائے اور انہیں آگے بڑهنے کی راہ میں کوئی رکاوٹ حائل نہ کی جائے. انہیں بلا خوف اور آزادی سے زندگی گزارنے کے مواقع میسر ہوں اور وہ گھر میں یا گھر کے باہر عدم تحفظ کا شکار نہ ہوں

    ایک بات جو خواتین اکثر نظر انداز کر دیتی ہیں وہ یہ ہے کہ عورت کا استحصال عورت ہی کرتی ہے اور خواتین ہی خواتین کے زیادہ تر معاشرتی مسائل کا سبب ہیں. وہ خواتین جو بہو بن کر خود کو مظلوم کہتی ہیں، گھر میں بہو لا کر ظالم بن جاتی ہیں. خواتین ہی خواتین کو شادی کیلیے پسند کرنے کے وقت ایسے ٹٹولتی ہیں جیسے قصائی منڈی سے جانور خریدتے وقت ٹٹولتا ہے. خواتین ہی جہیز کا مطالبہ کرتی ہیں اور وہی مردوں کو اکسا کر خواتین پر ظلم کرنے پر مجبور کرتی ہیں. کیا خواتین کے معاشرتی مسائل خواتین کے مسائل کا حصہ نہیں ہیں؟ خواتین ان پر لب کشائی کیوں نہیں کرتی ہیں؟

    • This reply was modified 1 year, 4 months ago by Bawa.
    #60
    nayab
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 13
    • Posts: 1592
    • Total Posts: 1605
    • Join Date:
      24 Nov, 2016

    Re: عورتوں کے حقوق

    Bawa

    باوا جی جن باتوں کا ذکر میں نے کیا ان سے بھی خواتین د وچار ہیں اور جنکا ذکر اپ نے کیا ان مسائل کا بھی سامنا ہے ایک ہی معاشرے میں خواتین کے مختلف طبقے  مختلف قسم کے مسائل کا شکار ہیں

    میں مانتی ہوں کہ کوئی باپ بیٹا شوہر اپنے گھر کی خواتین کو حق بھی دیتا ہے اور حق کے لیے جنگ بھی لڑتا ہے مخالفین کے خلاف اسی لیے میں نے یہ کہیں بھی نہیں لکھا کہ سارے مرد ایک جیسے ہیں .میری تعلیم میرے حقوق کے لیے آج بھی میری والدہ سے زیادہ میرے والد صاحب کوشش کرتے ہیں کہ کہیں میری بیٹی کی کوئی حق تلفی نہ ہو

    آپ کی بات سے اتفاق کرتی ہوں تبی تو لکھا کہ یہ نعرہ نہ مناسب تھا یا اسکا انداز سہی نہیں تھا

    آج جو حقوق اس معاشرے میں خواتین کو میسر بھی ہیں  تو اسکے پیچھے کافی محنت اور کوشش ہے اکیلے خواتین کی نہیں کافی اصول پرست مرد بھی اس جدوجہد میں شامل ہیں

    مگر جن مسائل کا میں نے ذکر کیا ہے وہ ان تمام تر قانون سازی کے بعد بھی وجود رکھتے ہیں میرا یہ بھی ماننا ہے مسائل کبھی ختم نہیں ہو سکتے مگر کم ہونے کی امید کے ساتھ ہم عورتوں پر ہونے والے مظالم کے  لیے آواز ضرور اٹھائیں گے اب انداز ہر کسی کا ضروری نہیں کہ ہر ایک کو پسند آے

    کچھ لوگوں کو ماروی کا انداز نہ پسند تو کچھ لوگوں کو خلیل کا

    یقین جانے مجھے دونوں کا انداز اچھا نہیں لگا مگر انکی یا کسی کی وجہ سے ہم مظلوم خواتین پر ہونے والے تشدد پر چپ تو نہیں ہو سکتے میں  ان سب کے خلاف ہوں جو بے گناہ عورت پر ظلم کرے  اب وہ تشدد کوئی عورت خود کسی دوسری عورت پر کرے یا پھر یہ کوئی مرد سے سرزد  ہو .

    دونوں ہی نہ پسند عوامل ہیں

Viewing 20 posts - 41 through 60 (of 89 total)

You must be logged in to reply to this topic.

×
arrow_upward DanishGardi