Thread: یوم پلٹن گراونڈ والی

Home Forums Siasi Discussion یوم پلٹن گراونڈ والی

This topic contains 154 replies, has 27 voices, and was last updated by  Qarar 1 year ago. This post has been viewed 7021 times

Viewing 20 posts - 41 through 60 (of 155 total)
  • Author
    Posts
  • #41
    BlackSheep
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 15
    • Posts: 2345
    • Total Posts: 2360
    • Join Date:
      11 Feb, 2017
    • Location: عالمِ غیب

    Re: یوم پلٹن گراونڈ والی

    It’s wrong to claim that Pakistan will disintegrate if something happens to him or pnln. Keep in mind that we (wrongly) hanged a popular PM from a minority province and absolutely nothing happened. ( I am all for repeating this practice, this time with the PM of hearts from a majority province and see what happens, my bet is on absolutely nothing will happen). :bigsmile:

    کیوں ایسی باتیں کرتے ہو۔۔۔۔۔ اگر ایسا ہوگیا تو کہیں اِس فورم کے لیگی حضرات لسی کا فل سائز گلاس پی کر، خواب آور گولیاں کھا کر، میاں صاحب کی تصویر تکیے کے نیچے رکھ کر اور مریم نواز کی بطور وزیراعظم حلف برداری کے تصور کو دل میں بسا کر باجماعت خودکشی نہ کرلیں۔۔۔۔۔

    ;-)   :cwl:   ;-)

    Altaf bhai would have been the best specimen for repeating the Bhutto experiment but unfortunately he is in UK. Hypothetically if Altaf was hanged by Pakiatani courts, would Karachi separate from Pakistan? I think absolutely not!! :lol:
    #achasorry

    کیوں گھوسٹ صاحب کا خون جلاتے ہو۔۔۔۔۔

    ویسے آپ کی بات سے کچھ کچھ اتفاق ہے۔۔۔۔۔

    :cwl:   ;-)   :cwl:

    Ghost Protocol

    #42
    Guilty
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 0
    • Posts: 4421
    • Total Posts: 4421
    • Join Date:
      6 Nov, 2016

    Re: یوم پلٹن گراونڈ والی

    میری بے وقوف مخلوق۔۔۔ مذہب بیشتر لوگوں کی اپنی چوائس نہیں ہوتا، تم خود ہی سوچو، اگر میں تمہیں مسلمان گھرانے میں پیدا کرنے کی بجائے امیزون کے جنگل میں پیدا کردیتا تو تم آج ننگے نہ گھوم رہے ہوتے اور مذہب کے نام تک سے واقف نہ ہوتے۔۔۔؟؟

    امیزون کے جنگل میں جو ننگے گھوم رھے ہیں وہ ۔۔۔۔ سب لا دین   مذ ھب کے نام سے نا واقف ۔۔۔۔۔۔۔ ملحدین ۔۔۔۔ ہیں ۔۔۔۔ جن کو نہ آگے کا پتہ نہ پیچھے کا ۔۔۔۔۔۔

    اسلام کے ماننے والے ۔۔۔۔۔۔ اللہ کے فضل سے ۔۔۔۔۔  شہروں  قصبوں میں  کپڑے پہن کر گھومتے ہیں ۔۔۔۔۔۔

    ننگے لا مذ ھب ملحد ۔۔۔۔۔ امیزون کے جنگل میں ہوتے ہیں  ۔۔۔۔ سنی لیون کی پرانی فلموں میں ہوتے ہیں  اور ملحدوں کی پرون فلموں میں ہوتے ہیں  ۔۔۔۔۔۔

    #43
    Awan
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 121
    • Posts: 2396
    • Total Posts: 2517
    • Join Date:
      10 Jun, 2017

    Re: یوم پلٹن گراونڈ والی

    سنی اکثریت بنگالیوں نے سنی پاکستانیوں کے منہ پر کالک ملتے ہوئے ہندووں کی گود میں بیٹھنا پسند کیا . لہٰذا ثابت ہوا کہ سنی کوئی قوم نہیں بلکے ایک مفاد پرست گروہ ہے

     شاہ جی مہربانی کر کے اسے سنی شیعہ مسلہ نہ بناہیں – اگر آپ سنیوں کے بارے میں ایسا کوممنٹ دیں گے تو کوئی سنی بھی فورم پر سے بول سکتا ہے اور بحث غلط رخ پھر سکتی ہے بہتر ہے موزوح پر ہی رہیں –

    #44
    Bawa
    Participant
    Offline
    Thread Starter
    • Expert
    • Threads: 147
    • Posts: 12982
    • Total Posts: 13129
    • Join Date:
      24 Aug, 2016

    Re: یوم پلٹن گراونڈ والی

    یوم پلٹن گراونڈ والی کا پیغام یہ ہے کہ

    جو میدان جنگ میں مر گیا وہ شہید اور جو میدان جنگ میں بچ گیا وہ غازی
    جو بے شرمی سے پچانوے ہزار فوجیوں کے ساتھ ہتھیار ڈال گیا وہ نیازی

    #45
    Qarar
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 101
    • Posts: 2516
    • Total Posts: 2617
    • Join Date:
      5 Jan, 2017

    Re: یوم پلٹن گراونڈ والی

    یہاں چھوٹے سر والی فکری بیوہ دو قومی نظریے کا سیاپا کرتی پائی گئی ہے :hilar: :hilar: :hilar: کیا فکری بیواؤں کو کچھ پتہ بھی ہے کہ دو قومی نظریہ کیا تھا؟ کیا مشرقی پاکستان کی علیحدگی سے دو قومی نظریے کی نفی ہوئی ہے؟ فکری بیوہ کی معلومات کے لیے دو قومی نظریے اور اس کے پس منظر پر تھوڑی روشنی ڈال دیتا ہوں دو قومی نظریہ انڈین نیشنل کانگریس کے اس دعوے کے جواب میں پیش کیا گیا تھا کہ ہندوستان میں صرف اور صرف ایک قوم آباد ہے اور وہ قوم ہندو ہے اور باقی سب اسکا حصہ ہیں اس کے جواب میں آل انڈیا مسلم لیگ نے دو قومی نظریہ پیش کرکے اسکی نفی کی تھی اور کہا تھا کہ ہندوستان میں مسلمان کسی لحاظ ہے ہندو قوم کا حصہ نہیں ہیں بلکہ وہ ایک الگ قوم ہیں. ہندوستان میں یہ قوم اسی وقت وجود میں آ گئی تھی جب ہندوستان میں پہلے ہندو نے اسلام قبول کیا تھا۔ یہ اس زمانے کی بات ہے جب یہاں مسلمانوں کی حکومت قائم نہیں ہوئی تھی۔ مسلمانوں کی قومیت کی بنیاد کلمۂ توحید’ ہے۔ نہ وطن ہے اور نہ نسل۔ ہندوستان کا پہلا فرد جب مسلمان ہوا تو وہ اپنی پہلی قوم کا فرد نہیں رہا بلکہ وہ ایک جداگانہ قوم کا فرد ہو گیا۔ ہندوستان میں ایک نئی قوم وجود میں آ گئی۔ یہ ایک تاریخی حقیقت ہے کہ ہندو اور مسلمان ایک ہی قصبہ اور ایک ہی شہرمیں رہنے کے باوجود کسی ایک قوم میں مدغم نہیں ہوسکتے۔ وہ ہمشیہ دو علیحدہ قوموں کی حیثیت سے رہتے چلے آرہے ہیں دو قومی نظریے کا تعلق پاکستان سے نہیں بر صغیر کے مسلمانوں سے ہے. دو قومی نظریے نے پاکستان کو جنم دیا لیکن پاکستان نے دو قومی نظریے کو جنم نہیں دیا. پاکستان وجود میں نہ بھی آتا تو بھی دو قومی نظریہ زندہ ہوتا. یہ دو قومی نظریۂ پاکستان بننے سے پہلے بھی موجود تھا اور پاکستان بننے کے بعد بھی موجود ہے. اور اسوقت تک موجود رہے گا جب تک برصغیر میں ایک بھی مسلمان باقی ہے. پاکستان کا قیام یا بنگلہ دیش کا قیام کسی طرح بھی دو قومی نظریۂ ختم نہیں کر سکتا. نہ تو پاکستان بننے سے مسلمانوں کا علیحدہ تشخص ختم ہوتا ہے اور نہ ہی بنگلہ دیش بننے سے. آج بھی پاکستان اور بنگلہ دیش دونوں ممالک کا سرکاری مذھب اسلام ہے http://bdlaws.minlaw.gov.bd/print_sections_all.php?id=367 بنگلہ دیش بننے سے دو قومی نظریے کے خاتمے کا ذکر کرنے والے بتا سکتے ہیں کہ کیا مشرقی پاکستان کے مسلمانوں نے اپنا الگ وجود ختم کر دیا ہے اور خود کو ہندو قوم کا حصہ تسلیم کر لیا ہے؟ اگر مشرقی پاکستان کے مسلمانوں کا ہندوؤں سے الگ تشخص قایم ہے تو دو قومی نظریہ زندہ ہے کیا آپ کواںدرا گاندھی کا وہ بیان یاد ہے جو اس نے مشرقی پاکستان کی علیحدگی کے وقت دیا تھا؟ کیا اندرا گاندھی کے بیان سے بھی پتہ نہیں چلا کہ دو قومی نظریہ کیا ہے؟ اندرا گاندھی نے انڈین نیشنل کانگریس کے وہی پرانے موقف کا اعادہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ ہم نے دو قومی نظریہ اٹھا کر خلیج بنگال میں غرق کر دیا ہے اور مسلمانوں سے ہزار سال پرانا بدلہ لے لیا ہے کیا اندرا گاندھی نے پاکستان کو مخاطب کیا تھا یا برصغیر کے مسلمانوں کو یاد دلایا تھا کہ ہم نے آپ سے ہزار سال پرانا بدلہ لے لیا ہے؟ پاکستان کو تو وجود میں آئے ہوئے ابھی صرف پچیس سال ہوئے تھے، پھر ایک ہزار سال پرانا بدلہ پاکستان سے کیسے ہو سکتا تھا؟ اندرا گاندھی کے بیان میں کہیں بھی پاکستان کا ذکر نہیں ہے بلکہ مسلمانوں کا ذکر ہے. پاکستان قایم ہوئے تو جمعہ جمعہ آٹھ دن ہوئے ہیں. اس نے پاکستانیوں سے نہیں بلکہ مسلمانوں سے ہزار سال پرانا بدلہ لینے کا ذکر کیا ہے اور یقینا ہزار سال پہلے پاکستان کا وجود نہ تھا. اندرا گاندھی کے مخاطب پاکستانی نہیں بلکہ مسلمان تھے، وہی مسلمان جو کہتے ہیں کہ ہم ہندو قوم کا حصہ نہیں ہیں اور جنہوں نے ہندوستان پر ایک ہزار سال حکومت کی تھی. اندرا گاندھی کا بیان یہ سمجھنے کے لیے کافی ہے کہ دو قومی نظریے کا تعلق مسلمانوں سے ہے پاکستان سے نہیں مختصر یہ کہ دو قومی نظریہ اسی روز وجود میں آگیا تھا جب ہندوستان میں پہلے ہندو نے اسلام قبول کیا تھا اور اسوقت تک زندہ رہے گا جب تک بر صغیر میں ایک بھی مسلمان زندہ ہے

    مطلب یہ کہ آپ لوگوں نے اپنی ڈیڑھ اینٹ کی مسجد بنا کر ہی رہنا ہے

    باوا جی ….مجھے آپ بتائیے کہ ایک پاکستانی مسلمان اپنی زبان اور رسوم و رواج کے حوالے سے کس کے زیادہ قریب ہے …ایک جاپانی مسلمان یا انڈیا میں رہنے والا ہندو؟

    آپ کی نظر میں پاکستان کا مسلمان …جاپان  اور بوسنیائی مسلمان ایک قوم ہیں ….لیکن مشرقی اور مغربی پنجاب میں رہنے والے …ایک قوم نہیں ہیں

    #46
    Shirazi
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 169
    • Posts: 2196
    • Total Posts: 2365
    • Join Date:
      6 Jan, 2017

    Re: یوم پلٹن گراونڈ والی

    To me this is not a tragedy at all, we are all better off without Bangladesh. Old Pakistan was set up for a failure from the get go, a country geographically separated by its arch nemesis had no chance of survival. It was a tactical defeat by military not a political defeat. If Pakistan shared its boundaries with Bangladesh there was absolutely no chance that it would have gained independence. Mukti Bahni with the help of India played a crucial role in this battle. As far as Bangali rights etc are concerned than India is committing far more heinous crimes against Kashmiris and as of right now Kashmir has absolutely no chance of separation or independence because of its geographical connection to India. Nawaz Sharif was ousted for his corruption which was exposed in Panama scandal. It’s wrong to claim that Pakistan will disintegrate if something happens to him or pnln. Keep in mind that we (wrongly) hanged a popular PM from a minority province and absolutely nothing happened. ( I am all for repeating this practice, this time with the PM of hearts from a majority province and see what happens, my bet is on absolutely nothing will happen). :bigsmile: Altaf bhai would have been the best specimen for repeating the Bhutto experiment but unfortunately he is in UK. Hypothetically if Altaf was hanged by Pakiatani courts, would Karachi separate from Pakistan? I think absolutely not!! :lol: #achasorry

    In one sentence you said ZAB was wrongly hanged and in next two you want establishment to repeat the same wrong with Nawaz and Altaf, self contradicting like your leader. US wouldn’t be a super power if Abraham Lincoln had same mentality North is better off w/o south. Creation of Bangladesh was a great feat for East Pakistan but for West Pakistan it was an epic failure both tactical and military.

    Not so long ago Bawa Jee used to applaud establishment for hanging Bhutto like you are demanding establishment to repeat the same with Nawaz and Altaf. The differences that establishment had with Jinnah, Laiqat, Fatima Jinnah, Bhutto, Benzair, Nawaz will soon be with Imran. Imran is no Musharaaf he is stilla bloody civilian. Soon his head will be on the chopping block and then you will be after establishment like Bawa jee & co.

    • This reply was modified 1 year, 1 month ago by  Shirazi.
    #47
    Shirazi
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 169
    • Posts: 2196
    • Total Posts: 2365
    • Join Date:
      6 Jan, 2017

    Re: یوم پلٹن گراونڈ والی

    یہاں چھوٹے سر والی فکری بیوہ دو قومی نظریے کا سیاپا کرتی پائی گئی ہے :hilar: :hilar: :hilar: کیا فکری بیواؤں کو کچھ پتہ بھی ہے کہ دو قومی نظریہ کیا تھا؟ کیا مشرقی پاکستان کی علیحدگی سے دو قومی نظریے کی نفی ہوئی ہے؟ فکری بیوہ کی معلومات کے لیے دو قومی نظریے اور اس کے پس منظر پر تھوڑی روشنی ڈال دیتا ہوں دو قومی نظریہ انڈین نیشنل کانگریس کے اس دعوے کے جواب میں پیش کیا گیا تھا کہ ہندوستان میں صرف اور صرف ایک قوم آباد ہے اور وہ قوم ہندو ہے اور باقی سب اسکا حصہ ہیں اس کے جواب میں آل انڈیا مسلم لیگ نے دو قومی نظریہ پیش کرکے اسکی نفی کی تھی اور کہا تھا کہ ہندوستان میں مسلمان کسی لحاظ ہے ہندو قوم کا حصہ نہیں ہیں بلکہ وہ ایک الگ قوم ہیں. ہندوستان میں یہ قوم اسی وقت وجود میں آ گئی تھی جب ہندوستان میں پہلے ہندو نے اسلام قبول کیا تھا۔ یہ اس زمانے کی بات ہے جب یہاں مسلمانوں کی حکومت قائم نہیں ہوئی تھی۔ مسلمانوں کی قومیت کی بنیاد کلمۂ توحید’ ہے۔ نہ وطن ہے اور نہ نسل۔ ہندوستان کا پہلا فرد جب مسلمان ہوا تو وہ اپنی پہلی قوم کا فرد نہیں رہا بلکہ وہ ایک جداگانہ قوم کا فرد ہو گیا۔ ہندوستان میں ایک نئی قوم وجود میں آ گئی۔ یہ ایک تاریخی حقیقت ہے کہ ہندو اور مسلمان ایک ہی قصبہ اور ایک ہی شہرمیں رہنے کے باوجود کسی ایک قوم میں مدغم نہیں ہوسکتے۔ وہ ہمشیہ دو علیحدہ قوموں کی حیثیت سے رہتے چلے آرہے ہیں دو قومی نظریے کا تعلق پاکستان سے نہیں بر صغیر کے مسلمانوں سے ہے. دو قومی نظریے نے پاکستان کو جنم دیا لیکن پاکستان نے دو قومی نظریے کو جنم نہیں دیا. پاکستان وجود میں نہ بھی آتا تو بھی دو قومی نظریہ زندہ ہوتا. یہ دو قومی نظریۂ پاکستان بننے سے پہلے بھی موجود تھا اور پاکستان بننے کے بعد بھی موجود ہے. اور اسوقت تک موجود رہے گا جب تک برصغیر میں ایک بھی مسلمان باقی ہے. پاکستان کا قیام یا بنگلہ دیش کا قیام کسی طرح بھی دو قومی نظریۂ ختم نہیں کر سکتا. نہ تو پاکستان بننے سے مسلمانوں کا علیحدہ تشخص ختم ہوتا ہے اور نہ ہی بنگلہ دیش بننے سے. آج بھی پاکستان اور بنگلہ دیش دونوں ممالک کا سرکاری مذھب اسلام ہے http://bdlaws.minlaw.gov.bd/print_sections_all.php?id=367 بنگلہ دیش بننے سے دو قومی نظریے کے خاتمے کا ذکر کرنے والے بتا سکتے ہیں کہ کیا مشرقی پاکستان کے مسلمانوں نے اپنا الگ وجود ختم کر دیا ہے اور خود کو ہندو قوم کا حصہ تسلیم کر لیا ہے؟ اگر مشرقی پاکستان کے مسلمانوں کا ہندوؤں سے الگ تشخص قایم ہے تو دو قومی نظریہ زندہ ہے کیا آپ کواںدرا گاندھی کا وہ بیان یاد ہے جو اس نے مشرقی پاکستان کی علیحدگی کے وقت دیا تھا؟ کیا اندرا گاندھی کے بیان سے بھی پتہ نہیں چلا کہ دو قومی نظریہ کیا ہے؟ اندرا گاندھی نے انڈین نیشنل کانگریس کے وہی پرانے موقف کا اعادہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ ہم نے دو قومی نظریہ اٹھا کر خلیج بنگال میں غرق کر دیا ہے اور مسلمانوں سے ہزار سال پرانا بدلہ لے لیا ہے کیا اندرا گاندھی نے پاکستان کو مخاطب کیا تھا یا برصغیر کے مسلمانوں کو یاد دلایا تھا کہ ہم نے آپ سے ہزار سال پرانا بدلہ لے لیا ہے؟ پاکستان کو تو وجود میں آئے ہوئے ابھی صرف پچیس سال ہوئے تھے، پھر ایک ہزار سال پرانا بدلہ پاکستان سے کیسے ہو سکتا تھا؟ اندرا گاندھی کے بیان میں کہیں بھی پاکستان کا ذکر نہیں ہے بلکہ مسلمانوں کا ذکر ہے. پاکستان قایم ہوئے تو جمعہ جمعہ آٹھ دن ہوئے ہیں. اس نے پاکستانیوں سے نہیں بلکہ مسلمانوں سے ہزار سال پرانا بدلہ لینے کا ذکر کیا ہے اور یقینا ہزار سال پہلے پاکستان کا وجود نہ تھا. اندرا گاندھی کے مخاطب پاکستانی نہیں بلکہ مسلمان تھے، وہی مسلمان جو کہتے ہیں کہ ہم ہندو قوم کا حصہ نہیں ہیں اور جنہوں نے ہندوستان پر ایک ہزار سال حکومت کی تھی. اندرا گاندھی کا بیان یہ سمجھنے کے لیے کافی ہے کہ دو قومی نظریے کا تعلق مسلمانوں سے ہے پاکستان سے نہیں مختصر یہ کہ دو قومی نظریہ اسی روز وجود میں آگیا تھا جب ہندوستان میں پہلے ہندو نے اسلام قبول کیا تھا اور اسوقت تک زندہ رہے گا جب تک بر صغیر میں ایک بھی مسلمان زندہ ہے

    There are some balls that you have to let go. You don’t have to play every ball. After building very strong case on epic failures of Pakistan military that lead to Dec 16th ‘ 71 you started defending indefensible two nation theory.

    #48
    Gulraiz
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 35
    • Posts: 1268
    • Total Posts: 1303
    • Join Date:
      16 May, 2017
    • Location: Santa Barbara

    Re: یوم پلٹن گراونڈ والی

    باوا جی ٠ ہمیشہ کی طرح ایک بہترین تحریر – ان باتوں کا کافی لوگوں کا علم نہی

    Which generals: Yahya, Omer, Niazi, Tikka, Naseer ulla Baber, Rao Farmaan —-hahaha

    وہ جو ملک کا بازو تڑوا چکے تھے اور جنہیں چھپنے کے لئیے جگہ نہیں مل رہی تھی ، اور بزدل چوہوں کی طرح بلوں میں گھسے ہوئے تھے
    |
    بھٹو بھی قوم کو خوب چوتیا بناتا تھا، آخر میں سیانہ کوا گو ہی کھاتا ہے

    صحرائی

    #49
    Gulraiz
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 35
    • Posts: 1268
    • Total Posts: 1303
    • Join Date:
      16 May, 2017
    • Location: Santa Barbara

    Re: یوم پلٹن گراونڈ والی

    اگر بھارت میں کئی قومیں رہ سکتی ہیں تو بنگالی بھی رہ سکتے تھے ہمارے ساتھ مگر ان کی لوکیشن کی وجہ سے ان کا ہمارے ساتھ طویل عرصہ رہنا مشکل تھا – اس دو ٹکرے ہونے میں فوج کے ساتھ بھٹو کا بھی قصور تھا جسے آدھے ملک کا اقتدار منظور تھا مگر پورے ملک کو بچانے کے لئے اقتدار کسی اور کو دینا منظور نہ تھا – کس کس کو کوسیں جہاں سے کپڑا ہٹاتے ہیں خود ہی ننگا ہوتے ہیں – ایک قوم کی حثیت سے ہمارا کردار مثالی نہ تھا کیا فوج اور کیا سیاستدان سب نے بنگالیوں سے زیادتیاں کی اور مسلے کو اتنا آگے جانے دیا کہ بنگالی خود ہی ہمارے خلاف ہو گئے – الله ہمارے باقی ملک کو سلامت رکھے –

    وہاں سے کپڑا مت ہٹائیے گا، نہیں تو آبپارہ ، پارہ پارہ ہوجائیگا

    #50
    Bawa
    Participant
    Offline
    Thread Starter
    • Expert
    • Threads: 147
    • Posts: 12982
    • Total Posts: 13129
    • Join Date:
      24 Aug, 2016

    Re: یوم پلٹن گراونڈ والی

    مطلب یہ کہ آپ لوگوں نے اپنی ڈیڑھ اینٹ کی مسجد بنا کر ہی رہنا ہے باوا جی ….مجھے آپ بتائیے کہ ایک پاکستانی مسلمان اپنی زبان اور رسوم و رواج کے حوالے سے کس کے زیادہ قریب ہے …ایک جاپانی مسلمان یا انڈیا میں رہنے والا ہندو؟ آپ کی نظر میں پاکستان کا مسلمان …جاپان اور بوسنیائی مسلمان ایک قوم ہیں ….لیکن مشرقی اور مغربی پنجاب میں رہنے والے …ایک قوم نہیں ہیں

    قرار جی

    آپکو قومیت اور وطنیت / شہریت میں فرق سمجھنے کی ضرورت ہے

    قومیت کی بنیاز مذھب پر ہے اور وطنیت / شہریت کی بنیاد وطن، زبان اور کلچر پر ہے

    اسلام مسلم امہ کا تصور پیش کرتا ہے جس کے مطابق ساری دنیا کے مسلمان ایک قوم ہے. یہ کوئی الگ تصور تو نہیں ہے. سارے مذاہب کے ماننے والے خود کو ایک قوم سمجھتے ہیں

    کیا ہندو خود کو ایک قوم نہیں سمجھتے ہیں؟ کیا عیسائی خود کو ایک قوم نہیں سمجھتے ہیں؟ کیا سکھ خود کو ایک قوم نہیں سمجھتے ہیں؟ اگر سب مذاہب کو ماننے والے خود کو ایک قوم سمجھتے ہیں تو آپکو مسلمانوں کو خود کو ایک قوم سمجھنے سے تکلیف کیوں ہوتی ہے؟

    اگر عیسائی ایک قوم نہیں ہے تو پوری مغربی دنیا کو آسیہ بی بی کی رہائی کی فکر کیوں لگی ہوئی تھی؟ ایسے ہی اگر مسلمان ایک قوم نہیں ہے تو فلسطین اور کشمیر میں مسلمانوں پر ہونے والے مظالم پر مسلمان ہی آواز کیوں اٹھاتے ہیں؟ اگر ہندو ایک قوم نہیں ہیں تو انڈین نیشنل کانگریس کے ہندو رہنماؤں کو ہندوستان میں ہندو قوم کا دعوا کرنے اور اندرا گاندھی کو پاکستان کی بجائے مسلمانوں کو مخاطب کرنے کی ضرورت کیوں پیش آئی تھی؟

    پاکستانی مسلمان اپنے مذھب کے لحاظ سے جاپانی مسلمان اور دیگر ممالک کے مسلمانوں اور اپنی زبان، رسوم و رواج اور وطن کے حوالے سے انڈیا میں رہنے والے ہندو، سکھ یا عیسائی سے زیادہ پاکستانی ہندو، سکھ اور عیسائی کے زیادہ قریب ہے

    #52
    Bawa
    Participant
    Offline
    Thread Starter
    • Expert
    • Threads: 147
    • Posts: 12982
    • Total Posts: 13129
    • Join Date:
      24 Aug, 2016

    Re: یوم پلٹن گراونڈ والی

    There are some balls that you have to let go. You don’t have to play every ball. After building very strong case on epic failures of Pakistan military that lead to Dec 16th ‘ 71 you started defending indefensible two nation theory.

    شیرازی جی

    میں نے دو قومی نظرئے کا دفاع نہیں بلکہ اسکی حقیقت بیان کی ہے

    مجھے بتا دیں کہ میں نے کونسی بات غلط لکھی ہے؟

    کیا انڈین نیشنل کانگریس کا یہ دعوا نہیں تھا کہ ہندوستان میں صرف اور صرف ایک قوم آباد ہے اور وہ قوم ہندو ہے اور باقی سب اسکا حصہ ہیں؟

    کیا آل انڈیا مسلم لیگ نے انڈین نیشنل کانگریس کے دعوے کے جواب میں دو قومی نظریہ پیش نہیں کیا تھا اور یہ نہیں کہا تھا کہ مسلمان ہندو قوم کا حصہ نہیں ہیں بلکہ وہ ہندوؤں سے ایک الگ قوم ہے؟

    کیا اندرا گاندھی نے مشرقی پاکستان کی علیحدگی پر پاکستان کو مخاطب کیا تھا یا مسلمانوں کو؟

    اندرا گاندھی کی پاکستان سے تو نفرت سمجھ آتی تھی لیکن کیا اندرا گاندھی نے مسلمانوں کو مخاطب کرکے ہندوستان اور بنگلہ دیش کے مسلمانوں کی توہین نہیں کی تھی اور اپنے متعصب ہندو ہونے کا ثبوت نہیں دیا تھا؟

    آپکے نزدیک انڈین نیشنل کانگریس مسلمانوں کو ہندو قوم کا حصہ قرار دے تو ٹھیک ہے لیکن اگر آل انڈیا مسلم لیگ مسلمانوں کو ہندوؤں سے ایک الگ قوم قرار دے تو وہ غلط ہے

    مجھے بتا تو سہی منافقت اور کیا ہے؟

    :)

    #54
    BlackSheep
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 15
    • Posts: 2345
    • Total Posts: 2360
    • Join Date:
      11 Feb, 2017
    • Location: عالمِ غیب

    Re: یوم پلٹن گراونڈ والی

    جہاں تک جمہوری برتری کا تعلق ہے تو ڈھاکہ کو دار الخلافہ اور بنگلہ کو سرکاری زبان ہونا چاہیے تھا مگر ایسا ہو نہ سکا اور اب یہ عالم کے تو نہیں تیری جستجو بھی نہیں

    میرے خیال میں بنگلہ دیش نامی عمارت کی یہ وہ پہلی اِینٹ تھی جو جناح صاحب کے ہاتھوں سے رکھی گئی۔۔۔۔۔

    بات تو شاید یہ بھی مجھے سچ لگتی ہے کہ جناح صاحب میں آمرانہ جراثیم پائے جاتے تھے۔۔۔۔۔

    #56
    Gulraiz
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 35
    • Posts: 1268
    • Total Posts: 1303
    • Join Date:
      16 May, 2017
    • Location: Santa Barbara

    Re: یوم پلٹن گراونڈ والی

    میرے خیال میں بنگلہ دیش نامی عمارت کی یہ وہ پہلی اِینٹ تھی جو جناح صاحب کے ہاتھوں سے رکھی گئی۔۔۔۔۔ بات تو شاید یہ بھی مجھے سچ لگتی ہے کہ جناح صاحب میں آمرانہ جراثیم پائے جاتے تھے۔۔۔۔۔

    اور اسے پایہء تکمیل پہنچایا اپکی منظورنظر استری اصطبل اشمٹ کی گھوڑی نے
    x
    َٹھیک ہے بھئی ، جورو ایکطرف اور ساری خدائی ایکطرف
    وہ سنا ہے نا آپ نے
    x
    چرا کے دل تیرا گھوڑیا چلی—- ھھھھھھھا

    #63
    Atif
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 156
    • Posts: 7304
    • Total Posts: 7460
    • Join Date:
      15 Aug, 2016

    Re: یوم پلٹن گراونڈ والی

    وہاں سے کپڑا مت ہٹائیے گا، نہیں تو آبپارہ ، پارہ پارہ ہوجائیگا

    میرا تو دل چاہتا ہے کہ میں آپ کا نام “فورم کا جون ایلیاء” رکھ ڈالوں :lol: ۔

    #65
    Gulraiz
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 35
    • Posts: 1268
    • Total Posts: 1303
    • Join Date:
      16 May, 2017
    • Location: Santa Barbara

    Re: یوم پلٹن گراونڈ والی

    میرا تو دل چاہتا ہے کہ میں آپ کا نام “فورم کا جون ایلیاء” رکھ ڈالوں :lol: ۔

    :rock:   :rock:   :bhangra:   :bhangra:   :disco:   :disco:   :hilar:   :hilar:   :lol:   :lol:

    #66
    Atif
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 156
    • Posts: 7304
    • Total Posts: 7460
    • Join Date:
      15 Aug, 2016

    Re: یوم پلٹن گراونڈ والی

    میرے خیال میں بنگلہ دیش نامی عمارت کی یہ وہ پہلی اِینٹ تھی جو جناح صاحب کے ہاتھوں سے رکھی گئی۔۔۔۔۔ بات تو شاید یہ بھی مجھے سچ لگتی ہے کہ جناح صاحب میں آمرانہ جراثیم پائے جاتے تھے۔۔۔۔۔

    ویسے اس کا جواب باوا بھائی نے اپنی پوسٹ میں دے دیا ہے کہ اگر کسی صوبے کی زبان کو سرکاری زبان قرار دیا جاتا تو ہر صوبے کی یہی ڈیمانڈ ہوتی کہ ہماری علاقائی زبان کو سرکاری زبان کا درجہ دیا جائے۔

    #73
    BlackSheep
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 15
    • Posts: 2345
    • Total Posts: 2360
    • Join Date:
      11 Feb, 2017
    • Location: عالمِ غیب

    Re: یوم پلٹن گراونڈ والی

    ویسے اس کا جواب باوا بھائی نے اپنی پوسٹ میں دے دیا ہے کہ اگر کسی صوبے کی زبان کو سرکاری زبان قرار دیا جاتا تو ہر صوبے کی یہی ڈیمانڈ ہوتی کہ ہماری علاقائی زبان کو سرکاری زبان کا درجہ دیا جائے۔

    مَیں یہ نہیں کہتا کہ صرف بنگالی کو ہی قومی زبان ہونا چاہئے تھا۔۔۔۔۔

    میری رائے یہ ہے کہ اُردو کے ساتھ ساتھ بنگالی کو بھی ہونا چاہئے تھا۔۔۔۔۔ یہ مسئلہ آرام سے حل کیا جاسکتا تھا۔۔۔۔۔

    آپ خود سوچیں کہ ایک اکثریتی آبادی پر ایک باہر کی زبان نافذ ہو رہی ہے۔۔۔۔۔ کچھ زمینی حقیقتیں بھی ہوا کرتی ہیں۔۔۔۔۔

    سوئٹزرلینڈ جیسے چھوٹے سے ملک کی چار قومی زبانیں ہیں۔۔۔۔۔

    #79
    لُڈن نیپالی
    Participant
    Offline
    • Member
    • Threads: 4
    • Posts: 71
    • Total Posts: 75
    • Join Date:
      27 Sep, 2018

    Re: یوم پلٹن گراونڈ والی

    مَیں یہ نہیں کہتا کہ صرف بنگالی کو ہی قومی زبان ہونا چاہئے تھا۔۔۔۔۔ میری رائے یہ ہے کہ اُردو کے ساتھ ساتھ بنگالی کو بھی ہونا چاہئے تھا۔۔۔۔۔ یہ مسئلہ آرام سے حل کیا جاسکتا تھا۔۔۔۔۔ آپ خود سوچیں کہ ایک اکثریتی آبادی پر ایک باہر کی زبان نافذ ہو رہی ہے۔۔۔۔۔ کچھ زمینی حقیقتیں بھی ہوا کرتی ہیں۔۔۔۔۔ سوئٹزرلینڈ جیسے چھوٹے سے ملک کی چار قومی زبانیں ہیں۔۔۔۔۔

    سوئٹزرلینڈ نے تو اپنی قومیتوں کی زبانوں کو قومیا لیا یہاں تو گھڑمس مچ جانا تھا۔ جب ایک رابطے کی زبان پورے برصغیر میں پہلے سے ہی موجود تھی تو پھر کسی اور زبان کی ضرورت ہی نہیں تھی۔ یہی کافی ہے کہ پنجابی زبان کو قومی زبان کا درجہ نہیں دے دیا ورنہ میری آپ کی اس ڈسکشن میں بھی ساڈی تہاڈی ہورہی ہوتی۔ ویسے بھی پنجابی ٹھیک ٹھاک اکثریت میں تھے تو پھر نیا رولا پڑ جانا تھا۔

    جب پٹھانوں، بلوچوں، سندھیوں اور پنجابیوں نے اردو زبان کو ایشو نہیں بنایا حالانکہ ان کیلئے بھی باہر کی زبان تھی تو پھر بنگالیوں کو بھی اس سے کوئی ایشو نہیں ہونا چاہیئے تھا۔ میرا تو خیال ہے علیحدگی کی پہلی اینٹ بنگالیوں کی طرف سے رکھی گئی تھی۔

    #85
    shahidabassi
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 32
    • Posts: 7197
    • Total Posts: 7229
    • Join Date:
      5 Apr, 2017

    Re: یوم پلٹن گراونڈ والی

    مَیں یہ نہیں کہتا کہ صرف بنگالی کو ہی قومی زبان ہونا چاہئے تھا۔۔۔۔۔ میری رائے یہ ہے کہ اُردو کے ساتھ ساتھ بنگالی کو بھی ہونا چاہئے تھا۔۔۔۔۔ یہ مسئلہ آرام سے حل کیا جاسکتا تھا۔۔۔۔۔ آپ خود سوچیں کہ ایک اکثریتی آبادی پر ایک باہر کی زبان نافذ ہو رہی ہے۔۔۔۔۔ کچھ زمینی حقیقتیں بھی ہوا کرتی ہیں۔۔۔۔۔ سوئٹزرلینڈ جیسے چھوٹے سے ملک کی چار قومی زبانیں ہیں۔۔۔۔۔

    بلیک شیپ صاحب چاہے بنگالی کو قومی زبان کا درجہ دے بھی دیتے تو یہ دو حصے اکٹھے رہ ہی نہیں سکتے تھے۔بھارت کے دو مختلف اطراف میں۲۵۰۰ کلو میٹر کے فاصلے پر واقع دو مختلف قسم کے کلچر، مختلف خوراک لباس اور رہن سہن اورزبانوں کے ساتھ یہ کیسے ایک ملک رہ سکتے تھے۔ اگر ملک امیر ہوتا، تعلیم کی فراوانی ہوتی اور ۱۹۴۷ سے ۷۱ تک ان کے ساتھ زیادتی نہ کی ہوتی تو ہو سکتا ہے بیس پچیس سال مزید اکٹھے گزر جاتے لیکن ۷۱ میں نہیں تو آج اور آج نہیں تو کل انہیں الگ ہونا ہی تھا۔ ۱۹۴۷ میں بنگال کے پرائم منسٹر سہروردی نے تو پوری کوشش کی تھی کہ بنگال تقسیم نہ ہو اور اسے شروع ہی سے الگ ملک کا درجہ مل جائے۔ آپ شاید یہ سن کر حیران بھی ہوں کہ قائداعظم نے کچھ عرصہ سہروردی کی اس معاملے پر سپورٹ بھی کی تھی۔ لیکن کانگریس اس بات پر راضی نہ ہوئی۔ بنگال کی اسمبلی میں پہلا ووٹ پڑا تو شاید ۵۸ کے مقابلے ۱۲۶ کی اکثریت سے یہ فیصلہ ہوا تھا کہ بنگال تقسیم نہی ہوگا اور انڈیا کا حصہ نہیں بنے گا۔ لیکن اس کے بعد کانگریس کی مخالفت پر ماؤنٹ بیٹن نے یہ کلیہ بنایا کہ ویسٹ اور ایسٹ بنگال کے ایم پی الگ الگ ووٹ ڈالیں گے۔

    #88
    Atif
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 156
    • Posts: 7304
    • Total Posts: 7460
    • Join Date:
      15 Aug, 2016

    Re: یوم پلٹن گراونڈ والی

    بلیک شیپ صاحب چاہے بنگالی کو قومی زبان کا درجہ دے بھی دیتے تو یہ دو حصے اکٹھے رہ ہی نہیں سکتے تھے۔بھارت کے دو مختلف اطراف میں۲۵۰۰ کلو میٹر کے فاصلے پر واقع دو مختلف قسم کے کلچر، مختلف خوراک لباس اور رہن سہن اورزبانوں کے ساتھ یہ کیسے ایک ملک رہ سکتے تھے۔ اگر ملک امیر ہوتا، تعلیم کی فراوانی ہوتی اور ۱۹۴۷ سے ۷۱ تک ان کے ساتھ زیادتی نہ کی ہوتی تو ہو سکتا ہے بیس پچیس سال مزید اکٹھے گزر جاتے لیکن ۷۱ میں نہیں تو آج اور آج نہیں تو کل انہیں الگ ہونا ہی تھا۔ ۱۹۴۷ میں بنگال کے پرائم منسٹر سہروردی نے تو پوری کوشش کی تھی کہ بنگال تقسیم نہ ہو اور اسے شروع ہی سے الگ ملک کا درجہ مل جائے۔ آپ شاید یہ سن کر حیران بھی ہوں کہ قائداعظم نے کچھ عرصہ سہروردی کی اس معاملے پر سپورٹ بھی کی تھی۔ لیکن کانگریس اس بات پر راضی نہ ہوئی۔ بنگال کی اسمبلی میں پہلا ووٹ پڑا تو شاید ۵۸ کے مقابلے ۱۲۶ کی اکثریت سے یہ فیصلہ ہوا تھا کہ بنگال تقسیم نہی ہوگا اور انڈیا کا حصہ نہیں بنے گا۔ لیکن اس کے بعد کانگریس کی مخالفت پر ماؤنٹ بیٹن نے یہ کلیہ بنایا کہ ویسٹ اور ایسٹ بنگال کے ایم پی الگ الگ ووٹ ڈالیں گے۔

    آپ کہاں غائب ہیں آجکل؟؟ بیلیور بتا رہا تھا کہ موبائل چوری کے جرم میں ایک ماہ کی سزا ہوئی ہے۔ ضمانت مل گئی کیا؟؟

Viewing 20 posts - 41 through 60 (of 155 total)

You must be logged in to reply to this topic.

Navigation

Do NOT follow this link or you will be banned from the site!