Thread: گہرے مالیاتی گڑھے

Home Forums Siasi Discussion گہرے مالیاتی گڑھے

This topic contains 71 replies, has 12 voices, and was last updated by  Javaid 4 days, 3 hours ago. This post has been viewed 1473 times

Viewing 20 posts - 1 through 20 (of 72 total)
  • Author
    Posts
  • #1
    Believer12
    Participant
    Online
    Thread Starter
    • Expert
    • Threads: 283
    • Posts: 6481
    • Total Posts: 6764
    • Join Date:
      14 Sep, 2016

    Re: گہرے مالیاتی گڑھے

    گہرے مالیاتی گڑھے

    ڈاکٹرمفتاع اسماعیل
    فرض کریں ایک کمپنی کے ذمہ پچیس ہزار روپے قرض ہے، اُس کی انتظامیہ تبدیل ہو جاتی ہے، کچھ عرصے کے بعد، نئی انتظامیہ کے دور میں، قرض کا حجم اٹھائیس ہزار روپے تک پہنچ جاتا ہے۔ جب انتظامیہ سے پوچھا جاتا ہے کہ جب اُنہوں نے اثاثے نہیں بڑھائے تو قرض کیوں بڑھا تو انتظامیہ جواب دیتی ہے کہ پچھلا قرض اور سود ادا کرنے کے لئے مزید تین ہزار روپے لئے ہیں۔ یہ جواب قرینِ قیاس معلوم ہوتا ہے لیکن جب آپ پوچھتے ہیں کہ قرض اور سود کی مد میں کتنی قسط ادا کرنا تھی تو جواب ملتا ہے کہ سات سو روپے۔ اب آپ کو احساس ہوتا ہے کہ شراکت داروں پر دراصل تیئس سو روپے قرض کا مزید بوجھ پڑ چکا ہے اور یہ اضافی خسارہ ہے۔

    اس کا بھی انتظامیہ کے پاس تیار شدہ جواب موجود ہے۔ اُس کا کہنا ہے کہ پرانی انتظامیہ بدعنوان تھی اور وہ کمپنی کے مفادکے خلاف کام کر رہی تھی۔ موجودہ انتظامیہ دیانتدار، اہل اور محنتی ہے۔ اس پر آپ سوچ میں پڑ جاتے ہیں۔ اگر پچھلی انتظامیہ بدعنوان، نااہل ہونے کے ساتھ ساتھ کمپنی کے مفاد کے خلاف کام کر رہی تھی تو اب جبکہ ایک بہترین انتظامیہ کام کر رہی ہے، تو اب قرض میں کمی اور شراکت داروں کے منافع میں اضافہ ہوتا دکھائی کیوں نہیں دیتا؟ اب کمپنی کو اپنی تاریخ کے تیز ترین خسارے اور قرض میں اضافے کا کیوں سامنا ہے؟

    قارئین سمجھ گئے ہوں گے کہ میں کسی کمپنی کی نہیں، اپنے ملک کی بات کر رہا ہوں۔ اس ملک کو موجودہ حکومت نے بہت کم وقت میں معاشی بحران سے دوچار کر دیا ہے۔ جون 2018ء میں، گزشتہ مالی سال کے اختتام پر، ہمارا مجموعی قومی قرضہ پچیس ہزار بلین روپے کے قریب تھا۔ گزشتہ سات ماہ کے دوران، جنوری 2019 ء کے اختتام تک، موجودہ حکومت نے اس میں تین ہزار بلین روپوں کا اضافہ کر دیا ہے۔ اس کا مطلب ہے کہ اُس نے اپنی آئینی مدت کے دس فیصد میں ہمارا قومی قرضہ بارہ فیصد بڑھا دیا ہے۔ بے شک پی ٹی آئی کے بعض رہنما ہمیں بتاتے ہیں کہ قومی قرضے میں اضافے کی وجہ وہ سود ہے جو پی پی پی اور مسلم لیگ (ن) کے لئے گئے قرضوں پر ادا کرنا پڑتا ہے۔ (میراخیال ہے کہ پی ٹی آئی رہنما مشرف دور اور اس سے پہلے ادوار میں لئے گئے قرضوں سے اغماض برت رہے ہیں، ذرا حوصلہ کریں) حقیقت یہ ہے کہ جنوری تک حکومت نے صرف سات سو بلین روپے قرض ادا کیا ہے۔ باقی تیئس سو بلین روپے کہاں گئے؟ یہاں اس بات کا ذکر کرنا مناسب ہو گا کہ مسلم لیگ (ن) اور پی پی پی حکومتیں بھی سابق حکومتوں کیلئے گئے قرضوں پر سود ادا کرتی تھیں۔ درحقیقت گزشتہ سال مسلم لیگ (ن) حکومت نے سود کی مد میں چودہ سو بلین روپے ادا کئے تھے۔ ہم نے موجودہ مالی سال میں قرض کی ادائیگی کے لئے پندرہ سو بلین روپے بجٹ میں رکھے تھے۔ پی ٹی آئی کو زیادہ قرض اس لئے ادا کرنا پڑ رہا ہے کیونکہ اس نے آتے ہی سود کی شرح میں اضافہ کر دیا تھا۔ میری سمجھ سے بالاتر ہے کہ سود کی شرح بڑھا کر معاشی ترقی کی رفتار کو سست کرنے سے کیا حاصل ہوا؟ کیا اس سے افراطِ زر یا مہنگائی میں کمی آئی؟

    رقم میں قدر کے اثرات کو سمجھنا ضروری ہے تاکہ پتا چل سکے کہ قرض کیسے اوپر چلا گیا۔ اس کا مطلب قرض میں اضافے کو درست قرار دینا ہرگز نہیں کیونکہ اس کی وجہ سے ملک پر بوجھ میں اضافہ ہو گیا۔ اگر ہم 1250بلین روپوں سے کرنسی کی قدر میں ہونے والی کمی کے اثرات نکال دیں تو بھی سات ماہ کے دوران 1050بلین روپوں کا ہوشربا فرق دکھائی دیتا ہے۔ اور یہ تو ابھی سال کا پہلا نصف ہے۔ زیادہ تر بل سال کے دوسرے نصف میں آتے ہیں۔ چنانچہ یہ کہنا غلط نہ ہو گا کہ موجودہ حکومت ہماری تاریخ کے سب سے بڑے مالیاتی خسارے کی وجہ بن رہی ہے۔ اس سے بھی بدتر یہ کہ گزشتہ سال جب ہم بلند خسارے کا شکار ہوئے تو کم از کم ہماری معاشی شرح نمو بہت اونچی تھی۔ اس نے قومی آمدنی میں 2ہزار بلین روپوں کا اضافہ کیا تھا۔ ہم نے 7سو بلین روپے ترقیاتی منصوبوں پر لگائے تھے۔ لیکن موجودہ حکومت نہ تو ترقیاتی منصوبوں میں سرمایہ کاری کر رہی ہے اور نہ ہی معاشی شرح نمو بڑھا پا رہی ہے۔

    حکومت بجلی کے بلوں میں پندرہ فیصد اور گیس کے بلوں میں45فیصد اضافہ کرنے کے بعد بھی گردشی قرضوں میں یومیہ 127کروڑ روپوں کا اضافہ کر رہی ہے۔ مسلم لیگ (ن) کے پانچ سالوں کے دوران گردشی قرضوں میں اوسط اضافہ یومیہ 7.7کروڑ روپے تھا۔ ثابت ہوا کہ ہم بہت برے تھے اور گردشی قرضوں میں یومیہ سولہ گنا اضافہ کرنے والی پی ٹی آئی اچھی ہے۔ گردشی قرضے میں یومیہ 127کروڑ کا اضافہ بجٹ خسارے کے علاوہ ہے۔ اس طرح حکومت عوام پر ایک بوجھ تیزی سے لاد رہی ہے لیکن یہ وہ بوجھ ہے جو لوگ بلوں میں اضافے کے برعکس فوری طور پر محسوس نہیں کرتے۔ حکومت گردشی قرضوں میں یومیہ سولہ گنا اور قومی قرضے میں مسلم لیگ (ن) کی نسبت 2.5 گنا تیزی سے اضافہ کر رہی ہے۔ اگر مسلم لیگ (ن) کے رہنما بدعنوان تھے تو پی ٹی آئی کے رہنما کیا کر رہے ہیں؟ میں ٹھوس ثبوت کے بغیر بدعنوانی کا الزام لگانا پسند نہیں کرتا لیکن ہر اعتبار سے موجودہ حکومت نے مایوس کیا ہے۔ چلیں! ستم ظریفی نہ کہیں لیکن کتنی دلچسپ بات ہے کہ تینوں بڑی جماعتوں کے اربن ٹرانسپورٹ منصوبے اُن کی کارکردگی کے عکاس نکلے۔ اگر کراچی کی ’’نامعلوم میٹرو بس سروس‘‘ پی پی پی کی گورننس اور لاہور کی فعال میٹرو بس مسلم لیگ (ن) کی گورننس کی مظہر ہے تو ایک سو بلین روپے پی کر بھی پکڑائی نہ دینے والی پشاور میٹرو بس سروس پی ٹی آئی کی کارکردگی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ امید کی جانی چاہئے کہ پشاور میٹرو اور ہماری معیشت اُن گہرے گڑھوں سے نکلیں گی جو موجودہ حکومت نے کھود رکھے ہیں۔

    #2
    Believer12
    Participant
    Online
    Thread Starter
    • Expert
    • Threads: 283
    • Posts: 6481
    • Total Posts: 6764
    • Join Date:
      14 Sep, 2016

    Re: گہرے مالیاتی گڑھے

    اراکین اسمبلی تو بھوک سے مر بھی نہیں رہے تھے پھر بھی ان کی تنخواہوں میں اضافہ ایکدن کے نوٹس پر کردیا گیا، کاش اسی اسپیڈ سے غریبوں کے مسائل پر بھی فیصلے کئے جائیں

    ڈاکٹر مفتاع اسمعیل کے بارے میں بہت سی باتیں تنقید کے رنگ میں کی جاتی تھیں، حکومت ختم ہونے کے بعد  بھی اس کا اکانومی پر یوں کھل کر اظہار خیال کرنا اس بات کا ثبوت ہے کہ وہ ہر فورم پر اس حکومت کے چول وزیر خزانہ کو جھوٹا اور نکما ثابت کرنے کیلئے موجود ہے، اگر کوی اس کا سامنا کرنے سے کترا رہا ہے تو وہ خود چور ہے، اسحاق ڈار نے بھاگ کر لندن میں پناہ لی اور اس کی پراپرٹی بھی یو اے ای میں بہت زیادہ ہے جس کی وجہ سے میں اسے چور سمجھتا ہوں لیکن مفتاع اسمعیل ایک ذہین اکانومسٹ اور بددیانت بھی نہیں ہے ورنہ وہ بھی غائب ہوجاتا

    حکومت پر واجب ہے کہ مفتاع اسمعیل کے اٹھاے گئے اشوز کا جواب دے، سیدھی سی بات ہے کہ ایک کمپنی جو بددیانتی کی وجہ سے خسارے میں چل رہی تھی، دیانت دار انتظامیہ کے آتے ہی اس کا خسارہ ختم نہ بھی ہو تو ریورس ضرور ہونا چاہئے، اگر خسارہ نہ ختم ہو اور نہ ہی کم ہو بلکہ پہلے سے بڑھنا شروع ہوجاے تو کیا کہا جاسکتا ہے؟؟؟

    یہی کہ موجودہ انتظامیہ پہلی والی سے بھی زیادہ کرپٹ ہے

    :thinking:

    #3
    Naeem
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 1
    • Posts: 198
    • Total Posts: 199
    • Join Date:
      10 Oct, 2017
    • Location: London

    Re: گہرے مالیاتی گڑھے

    گر خسارہ نہ ختم ہو اور نہ ہی کم ہو بلکہ پہلے سے بڑھنا شروع ہوجاے تو کیا کہا جاسکتا ہے؟؟؟

    یہی کہ موجودہ انتظامیہ پہلی والی سے بھی زیادہ کرپٹ ہے

    No, it means, the commentator does not understand Economics, especially, national and international Economics.

    #4
    Athar
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 84
    • Posts: 1565
    • Total Posts: 1649
    • Join Date:
      21 Nov, 2016

    Re: گہرے مالیاتی گڑھے

    میرے دوست کا مالی ہے اُس نے نواز لیگ کو ووٹ دیا اُس کی ایک اور گھر کی مالکن نے اُس کو بہت برا بھلا کہا کہ تم ان پڑھ جاہل لوگ ہی نون لیگ کو ووٹ دیتے ہو

    اُس مالی نے کہا باجی نواز شریف کے وقت میں گھی کتنے روپے کلو تھاتو اُنہوں نے کہا پتہ نہیں اُس نے پوچھا باجی پیاز کیا بھاو تھاتو بھی اُس کا یہی جواب تھا کہ معلوم نہیں خانساماں ہی سارا سامان لاتا ہے

    تو اُس مالی نے مجھے بتایا کہ اُس نے اُن سے کہا باجی نواز شریف کے دور میں گھی 165روپے کلو اور پیاز 25روپے تھا اب گھی 195روپے اور پیاز 40روپے ملتا ہے بس ہم ان پڑھوں کو یہی حساب کتاب نواز لیگ کے ساتھ رکھتا ہے تو وہ خاتون چپ سی ہوکر اپنے موبائل پر مصروف ہوگئی۔

    #5
    SaleemRaza
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 639
    • Posts: 11293
    • Total Posts: 11932
    • Join Date:
      13 Oct, 2016
    • Location: سہراب گوٹھ ۔

    Re: گہرے مالیاتی گڑھے

    اراکین اسمبلی تو بھوک سے مر بھی نہیں رہے تھے پھر بھی ان کی تنخواہوں میں اضافہ ایکدن کے نوٹس پر کردیا گیا، کاش اسی اسپیڈ سے غریبوں کے مسائل پر بھی فیصلے کئے جائیں ڈاکٹر مفتاع اسمعیل کے بارے میں بہت سی باتیں تنقید کے رنگ میں کی جاتی تھیں، حکومت ختم ہونے کے بعد بھی اس کا اکانومی پر یوں کھل کر اظہار خیال کرنا اس بات کا ثبوت ہے کہ وہ ہر فورم پر اس حکومت کے چول وزیر خزانہ کو جھوٹا اور نکما ثابت کرنے کیلئے موجود ہے، اگر کوی اس کا سامنا کرنے سے کترا رہا ہے تو وہ خود چور ہے، اسحاق ڈار نے بھاگ کر لندن میں پناہ لی اور اس کی پراپرٹی بھی یو اے ای میں بہت زیادہ ہے جس کی وجہ سے میں اسے چور سمجھتا ہوں لیکن مفتاع اسمعیل ایک ذہین اکانومسٹ اور بددیانت بھی نہیں ہے ورنہ وہ بھی غائب ہوجاتا حکومت پر واجب ہے کہ مفتاع اسمعیل کے اٹھاے گئے اشوز کا جواب دے، سیدھی سی بات ہے کہ ایک کمپنی جو بددیانتی کی وجہ سے خسارے میں چل رہی تھی، دیانت دار انتظامیہ کے آتے ہی اس کا خسارہ ختم نہ بھی ہو تو ریورس ضرور ہونا چاہئے، اگر خسارہ نہ ختم ہو اور نہ ہی کم ہو بلکہ پہلے سے بڑھنا شروع ہوجاے تو کیا کہا جاسکتا ہے؟؟؟ یہی کہ موجودہ انتظامیہ پہلی والی سے بھی زیادہ کرپٹ ہے :thinking:

    بیلور صاحب

    آپ اکثر و بیشتر شکوہ شکایت کرتے  نظر آتے ہیں ۔کہہ مجھے سیریس بھی لیا جائے ۔۔۔۔۔تو آپ مجھے بتائیں ۔کہہ غربیوں کی مدد کیوں کی جائے ۔۔۔۔۔اگر آپ امیر ہیں یا تو آپ آپنی محنت سے امیر بنے ہیں یا پھر آپکے آباواجداد  آپکے لیے چھوڑ گئے ہیں ان دونوں صورتوں میں۔خدا کی مرضی شامل ہے ۔۔۔۔اب دوسری طرف ایک بندہ ہڈ حرام ہے کام کاج بھی نہیں کرتا بچوں کی فوج تیار کی جارہا ہے ۔۔۔ اور اس کے ماں باپ بھی مرتے وقت کچھ چھوڑ کر نہیں گئے ۔۔۔۔۔۔تو ان دونوں چیزوں میں بھی خدا کی مرضی شامل ہے ۔۔۔۔۔اب آپ مجھے بتائیں خدائی کاموں میں ٹانگ کیوں کر پھسائی جائے۔۔۔اور مفتے کا گناہ حاصل کیاجائے اور ساتھ ساتھ ان کو اور ہڈ حرام بنایا جائے ۔۔۔۔۔

    مجھے میرے سوال کا تفصیل سے جواب دیں کہہ کیوں غریب بندوں کی مدد کی جائے۔۔۔

    :please:

    پھر آپکی اس بات پر غور کیا جائے گا کہہ آپ کو سیریس لیا جائے ۔۔یا سیریس کیا جائے ۔۔

    • This reply was modified 1 week, 2 days ago by  SaleemRaza.
    #6
    Athar
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 84
    • Posts: 1565
    • Total Posts: 1649
    • Join Date:
      21 Nov, 2016

    Re: گہرے مالیاتی گڑھے

    مجھے 165کی جگہ 265 اور 195 کی جگہ 295 لکھنا تھا۔

    • This reply was modified 1 week, 2 days ago by  Athar.
    #7
    Believer12
    Participant
    Online
    Thread Starter
    • Expert
    • Threads: 283
    • Posts: 6481
    • Total Posts: 6764
    • Join Date:
      14 Sep, 2016

    Re: گہرے مالیاتی گڑھے

    بیلور صاحب آپ اکثر و بیشتر شکوہ شکایت کتے نظر آتے ہیں ۔کہہ مجھے سیریس بھی لیا جائے ۔۔۔۔۔تو آپ مجھے بتائیں ۔کہہ غربیوں کی مدد کیوں کی جائے ۔۔۔۔۔اگر آپ امیر ہیں یا تو آپ آپنی محنت سے امیر بنے ہیں یا پھر آپکے آباواجداد آپکے لیے چھوڑ گئے ہیں ان دونوں صورتوں میں۔خدا کی مرضی شامل ہے ۔۔۔۔اب دوسری طرف ایک بندہ ہڈ حرام ہے کام کاج بھی نہیں کرتا بچوں کی فوج تیار کی جارہا ہے ۔۔۔ اور اس کے ماں باپ بھی مرتے وقت کچھ چھوڑ کر نہیں گئے ۔۔۔۔۔۔تو ان دونوں چیزوں میں بھی خدا کی مرضی شامل ہے ۔۔۔۔۔اب آپ مجھے بتائیں خدائی کاموں میں ٹانگ کیوں کر پھسائی جائے۔۔۔اور مفتے کا گناہ حاصل کیاجائے اور ساتھ ساتھ ان کو اور ہڈ حرام بنایا جائے ۔۔۔۔۔ مجھے میرے سوال کا تفصیل سے جواب دیں کہہ کیوں غریب بندوں کی مدد کی جائے۔۔۔ :please: پھر آپکی اس بات پر غور کیا جائے گا کہہ آپ کو سیریس لیا جائے ۔۔یا سیریس کیا جائے ۔۔

    غریبوں کی مدد اس لئے کی جاے کہ یہ حکم خدا ہے اور سنت انبیا ہے

    اگر بندہ ھڈ حرام ہے تو اس میں خدا کی مرضی کیسے ہوگئی؟

    خدا نے بندے کو عقل و شعور دے دیا ہے کہ اب اپنے اچھے برے میں تمیز خود کرو، ایک بینک کا مینیجر جس کی اچھی بھلی تنخواہ ہے وہ بھی اگر مالی فراڈ کرکے بھاگ جاتا ہے تو اس میں خدا کی مرضی کہاں سے آگئی؟

    دولت کا ہونا کوی عیب نہیں ہے ویسے بھی دولت ہمیشہ ایک کے پاس نہیں رہتی، کبھی کسی کے پاس تو کبھی کسی کے پاس، ہاں اگر دولت اکٹھی کرنے کیلئے دوسروں کا حق مار رہے ہیں، ملاوٹ کرکے زیادہ منافع کما رہے ہیں، ٹیکس چوری کررہے ہیں، بینکوں سے قرضے لے کر جانتے بوجھتے کمپنی دیوالیہ شو کرکے قرضہ معاف کروا لیتے ہیں تو یہ ناجائز دولت ہے

    تیسری بات کا جواب یہ کہ کسی کی مدد کرنا یا کسی کو جرم سے روکنا خدای کاموں میں ٹانگ اڑانا نہیں کیونکہ خدا نے خود حکم دے رکھا ہے کہ برای کو بزور طاقت روکو، طاقت نہ ہو تو زبان سے روکو اور اگر یہ توفیق بھی نہ ہو تو دل میں ہی برا جانو

    آپ تو تیسری شرط پر بھی پورا نہیں اتر رہے، یعنی دل سے برا سمجھنے والی

    آپ بھلے ہی مجھے سیریس نہ لیں پر اپنے آپ کو سیریس تو لیں

    :thinking:

    #8
    Believer12
    Participant
    Online
    Thread Starter
    • Expert
    • Threads: 283
    • Posts: 6481
    • Total Posts: 6764
    • Join Date:
      14 Sep, 2016

    Re: گہرے مالیاتی گڑھے

    گر خسارہ نہ ختم ہو اور نہ ہی کم ہو بلکہ پہلے سے بڑھنا شروع ہوجاے تو کیا کہا جاسکتا ہے؟؟؟ یہی کہ موجودہ انتظامیہ پہلی والی سے بھی زیادہ کرپٹ ہے No, it means, the commentator does not understand Economics, especially, national and international Economics.

    کمنٹیٹر اکانومی کو نہیں سمجھتا اسی لئے میں نے ماہر اقتصادیات اور سابق وزیر خزانہ کا کالم پوسٹ کیا ہے

    یو

    :angry_smile:

    #9
    SaleemRaza
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 639
    • Posts: 11293
    • Total Posts: 11932
    • Join Date:
      13 Oct, 2016
    • Location: سہراب گوٹھ ۔

    Re: گہرے مالیاتی گڑھے

    غریبوں کی مدد اس لئے کی جاے کہ یہ حکم خدا ہے اور سنت انبیا ہے اگر بندہ ھڈ حرام ہے تو اس میں خدا کی مرضی کیسے ہوگئی؟ خدا نے بندے کو عقل و شعور دے دیا ہے کہ اب اپنے اچھے برے میں تمیز خود کرو، ایک بینک کا مینیجر جس کی اچھی بھلی تنخواہ ہے وہ بھی اگر مالی فراڈ کرکے بھاگ جاتا ہے تو اس میں خدا کی مرضی کہاں سے آگئی؟ دولت کا ہونا کوی عیب نہیں ہے ویسے بھی دولت ہمیشہ ایک کے پاس نہیں رہتی، کبھی کسی کے پاس تو کبھی کسی کے پاس، ہاں اگر دولت اکٹھی کرنے کیلئے دوسروں کا حق مار رہے ہیں، ملاوٹ کرکے زیادہ منافع کما رہے ہیں، ٹیکس چوری کررہے ہیں، بینکوں سے قرضے لے کر جانتے بوجھتے کمپنی دیوالیہ شو کرکے قرضہ معاف کروا لیتے ہیں تو یہ ناجائز دولت ہے تیسری بات کا جواب یہ کہ کسی کی مدد کرنا یا کسی کو جرم سے روکنا خدای کاموں میں ٹانگ اڑانا نہیں کیونکہ خدا نے خود حکم دے رکھا ہے کہ برای کو بزور طاقت روکو، طاقت نہ ہو تو زبان سے روکو اور اگر یہ توفیق بھی نہ ہو تو دل میں ہی برا جانو آپ تو تیسری شرط پر بھی پورا نہیں اتر رہے، یعنی دل سے برا سمجھنے والی آپ بھلے ہی مجھے سیریس نہ لیں پر اپنے آپ کو سیریس تو لیں :thinking:

    بیلور صاحب ۔۔

    آپکی یہ سنجیدگی سے لکھی گئی پوسٹ پڑھکر  بھی نہیں لگتا ۔کہہ آپکو سیریس لیا جائے ۔۔

    #10
    shahidabassi
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 28
    • Posts: 6690
    • Total Posts: 6718
    • Join Date:
      5 Apr, 2017

    Re: گہرے مالیاتی گڑھے

    hamad

    hammad

    Posted by Siasat.inffo on Thursday, March 14, 2019

    #11
    shahidabassi
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 28
    • Posts: 6690
    • Total Posts: 6718
    • Join Date:
      5 Apr, 2017

    Re: گہرے مالیاتی گڑھے

    میرے دوست کا مالی ہے اُس نے نواز لیگ کو ووٹ دیا اُس کی ایک اور گھر کی مالکن نے اُس کو بہت برا بھلا کہا کہ تم ان پڑھ جاہل لوگ ہی نون لیگ کو ووٹ دیتے ہو اُس مالی نے کہا باجی نواز شریف کے وقت میں گھی کتنے روپے کلو تھاتو اُنہوں نے کہا پتہ نہیں اُس نے پوچھا باجی پیاز کیا بھاو تھاتو بھی اُس کا یہی جواب تھا کہ معلوم نہیں خانساماں ہی سارا سامان لاتا ہے تو اُس مالی نے مجھے بتایا کہ اُس نے اُن سے کہا باجی نواز شریف کے دور میں گھی 165روپے کلو اور پیاز 25روپے تھا اب گھی 195روپے اور پیاز 40روپے ملتا ہے بس ہم ان پڑھوں کو یہی حساب کتاب نواز لیگ کے ساتھ رکھتا ہے تو وہ خاتون چپ سی ہوکر اپنے موبائل پر مصروف ہوگئی۔

    اطہر صاحب آپ اس مالی سے کہیں گھی مشرف کے زمانے میں ۹۵ روپئے تھا اور پیاز ۱۲ روپئے اس لئے اسے ووٹ مشرف کی پارٹی کو دینا چاہیے تھا یا پھر پی پی پی کو کہ بے نظیر کی حکومت میں گھی ۶۵ روپئے تھا۔

    #12
    SaleemRaza
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 639
    • Posts: 11293
    • Total Posts: 11932
    • Join Date:
      13 Oct, 2016
    • Location: سہراب گوٹھ ۔

    Re: گہرے مالیاتی گڑھے

    اطہر صاحب آپ اس مالی سے کہیں گھی مشرف کے زمانے میں ۹۵ روپئے تھا اور پیاز ۱۲ روپئے اس لئے اسے ووٹ مشرف کی پارٹی کو دینا چاہیے تھا یا پھر پی پی پی کو کہ بے نظیر کی حکومت میں گھی ۶۵ روپئے تھا۔

    وہ مالی  اطیر صاحب خود ہی ہیں ۔۔۔مفت لیپ ٹاپ ملنے کی وجہ سے مالک بن بیٹھے ہیں ۔۔۔جیسے کوئی پگ باندھ کے چوہدری بن جائے ۔

    • This reply was modified 1 week, 1 day ago by  SaleemRaza.
    #13
    Anjaan
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 26
    • Posts: 1303
    • Total Posts: 1329
    • Join Date:
      2 Mar, 2017
    • Location: Kent

    Re: گہرے مالیاتی گڑھے

    اطہر صاحب آپ اس مالی سے کہیں گھی مشرف کے زمانے میں ۹۵ روپئے تھا اور پیاز ۱۲ روپئے اس لئے اسے ووٹ مشرف کی پارٹی کو دینا چاہیے تھا یا پھر پی پی پی کو کہ بے نظیر کی حکومت میں گھی ۶۵ روپئے تھا۔

    Can someone explain to the Mali. the interaction of demand and supply and price mechanism!

    #14
    shami11
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 644
    • Posts: 6160
    • Total Posts: 6804
    • Join Date:
      12 Oct, 2016
    • Location: Pakistan

    Re: گہرے مالیاتی گڑھے

    آج تو اس تھریڈ پر دو مہان ہستیوں کو ایک ساتھ دیکھنا نصیب ہو رہا ہے

    #15
    Believer12
    Participant
    Online
    Thread Starter
    • Expert
    • Threads: 283
    • Posts: 6481
    • Total Posts: 6764
    • Join Date:
      14 Sep, 2016

    Re: گہرے مالیاتی گڑھے

    آج تو اس تھریڈ پر دو مہان ہستیوں کو ایک ساتھ دیکھنا نصیب ہو رہا ہے

    جتنی دلیلیں یہ بھک منگوں کی حمایت میں دیتے ہیں انہیں ڈنمارک میں ہیڈ فقیر بنا دینا چاہئے

    :serious:

    #16
    Believer12
    Participant
    Online
    Thread Starter
    • Expert
    • Threads: 283
    • Posts: 6481
    • Total Posts: 6764
    • Join Date:
      14 Sep, 2016

    Re: گہرے مالیاتی گڑھے

    اطہر صاحب آپ اس مالی سے کہیں گھی مشرف کے زمانے میں ۹۵ روپئے تھا اور پیاز ۱۲ روپئے اس لئے اسے ووٹ مشرف کی پارٹی کو دینا چاہیے تھا یا پھر پی پی پی کو کہ بے نظیر کی حکومت میں گھی ۶۵ روپئے تھا۔

    آپ کا مطلب ہے حکومت جو بھی آے مالی کے حالات نہیں بدلنے، ویسے مالی کو آپ کی بات بتای تھی اس نے مسکرا کر صرف اتنا کہا ہے کہ شاہد ڈینش کو بتا دینا کہ مہنگای بڑھنے کا جواز اگر یہ ہے کہ سابقہ حکومتوں میں بھی یہ بڑھتی رہی تھی تو پھر انجام بھی سابقہ حکومتوں والا ہوگا

    :bhangra:

    #17
    Athar
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 84
    • Posts: 1565
    • Total Posts: 1649
    • Join Date:
      21 Nov, 2016

    Re: گہرے مالیاتی گڑھے

    وہ مالی اطیر صاحب خود ہی ہیں ۔۔۔مفت لیپ ٹاپ ملنے کی وجہ سے مالک بن بیٹھے ہیں ۔۔۔جیسے کوئی پگ باندھ کے چوہدری بن جائے ۔

    مسٹر سلیم رضا اگر کسی پر کیچڑ اُچھالنی ہوتو اُس کو آگاہ ضرور کیجئے

    بے شک یہ پوسٹ آپ نےاپنے گھٹیا کردار کو سامنے رکھتے ہوئے لکھی ہے

    کیونکہ ناں تو میں مالی ہوں نہ میں نے کبھی کسی بھی قسم کا کوئی فائدہ حاصل کیا

    البتہ اہلیان یوطیان کی وہ پود ضرور پیدا ہوئی ہے کہ تمک حرامی میں اپنا ثانی نہیں رکھتی اور شبہاز سے لیپ ٹاپ لےکر اُنہی کے خلاف تحریں لکھتی رہتی ہے۔

    #18
    Athar
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 84
    • Posts: 1565
    • Total Posts: 1649
    • Join Date:
      21 Nov, 2016

    Re: گہرے مالیاتی گڑھے

    اطہر صاحب آپ اس مالی سے کہیں گھی مشرف کے زمانے میں ۹۵ روپئے تھا اور پیاز ۱۲ روپئے اس لئے اسے ووٹ مشرف کی پارٹی کو دینا چاہیے تھا یا پھر پی پی پی کو کہ بے نظیر کی حکومت میں گھی ۶۵ روپئے تھا۔

    تو کیا میں اب اُس کو لیاقت علی خان کو ووٹ دینے کو بھی کہتا۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ :lol:   :lol:   :lol: ۔

    اُس نے صرف چند روزہ مہنگائی کی اُڑان کے حساب سے بات کی ہوشائد۔

    #19
    SaleemRaza
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 639
    • Posts: 11293
    • Total Posts: 11932
    • Join Date:
      13 Oct, 2016
    • Location: سہراب گوٹھ ۔

    Re: گہرے مالیاتی گڑھے

    مسٹر سلیم رضا اگر کسی پر کیچڑ اُچھالنی ہوتو اُس کو آگاہ ضرور کیجئے بے شک یہ پوسٹ آپ نےاپنے گھٹیا کردار کو سامنے رکھتے ہوئے لکھی ہے کیونکہ ناں تو میں مالی ہوں نہ میں نے کبھی کسی بھی قسم کا کوئی فائدہ حاصل کیا البتہ اہلیان یوطیان کی وہ پود ضرور پیدا ہوئی ہے کہ تمک حرامی میں اپنا ثانی نہیں رکھتی اور شبہاز سے لیپ ٹاپ لےکر اُنہی کے خلاف تحریں لکھتی رہتی ہے۔

    میاں اطہر شریف صاحب ۔۔

    میں نے آپنی ہر پوسٹ میں آپ کو رگڑا دینا ہے جب تک آپ لیپ ٹاپ واپس نہیں کردیتے۔۔۔۔۔آپ میری ہر پوسٹ کو دھیان سے پڑھئے گا ۔۔۔اور بائی دا وے۔۔۔یہ گھیٹا کردار کیا ہوتا ہے ۔۔۔۔۔۔۔ذرا تفصیل سے بتایئے گا ۔۔

    #20
    shahidabassi
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 28
    • Posts: 6690
    • Total Posts: 6718
    • Join Date:
      5 Apr, 2017

    Re: گہرے مالیاتی گڑھے

    مجھے 165کی جگہ 265 اور 195 کی جگہ 295 لکھنا تھا۔

    یعنی سو روپئے کی ڈنڈی مار ہی گئے ہو۔ بس ثابت ہوا کہ جہاں پیسوں کی بات ہوگی وہاں  نونی ڈنڈی ضرور مارے گا۔

    :hilar:

Viewing 20 posts - 1 through 20 (of 72 total)

You must be logged in to reply to this topic.

Navigation