Thread: ناھل شخص پارٹی سربراہ نہں بن سکتا-عدلیہ کا تاریخی فیصلہ آ گیا

Home Forums Non Siasi ناھل شخص پارٹی سربراہ نہں بن سکتا-عدلیہ کا تاریخی فیصلہ آ گیا

This topic contains 373 replies, has 24 voices, and was last updated by  SaleemRaza 1 year, 4 months ago. This post has been viewed 7588 times

Viewing 20 posts - 1 through 20 (of 374 total)
  • Author
    Posts
  • #1
    Sohail Ejaz Mirza
    Participant
    Offline
    Thread Starter
    • Professional
    • Threads: 61
    • Posts: 2180
    • Total Posts: 2241
    • Join Date:
      28 Oct, 2017
    • Location: Middle East

    Re: ناھل شخص پارٹی سربراہ نہں بن سکتا-عدلیہ کا تاریخی فیصلہ آ گیا

    عدلیہ کا تاریخی فیصلہ

    نا اہل شخص کے کیے گئے تمام فیصلےمُسترد۔ 62 اور 63 کے تحت نااھل شخص پارٹی صدر نہیں ہو سکتا۔سینٹ الیکشن منسوخ۔ نوازش شریف کے جادی کردہ سینٹ ٹِکٹس منسوخ اِسلئے الیکشن نہیں ہو گا۔ الیکشن کمشن کو اِس فیصلے کی روشنی میں فیصلے کرنے ہوں گے۔لودھراں کا ٹکٹ مُتنازع۔۔۔نااہل شخص نے بحثیت پارٹی صدر جو بھی فیصلے کیے وہ بھی کالعدم قرار۔مریم نواز کے وزیرِ اعظم بننے پر اُوس پڑ گئی۔۔۔

    #2
    SaleemRaza
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 661
    • Posts: 11809
    • Total Posts: 12470
    • Join Date:
      13 Oct, 2016
    • Location: سہراب گوٹھ ۔

    Re: ناھل شخص پارٹی سربراہ نہں بن سکتا-عدلیہ کا تاریخی فیصلہ آ گیا

    اسلام آباد: (دنیا نیوز) سپریم کورٹ آف پاکستان نے سابق وزیرِ اعظم میاں محمد نواز شریف کو پارٹی صدارت کیلئے بھی نااہل قرار دیدیا ہے۔اسلام آباد: (دنیا نیوز) سپریم کورٹ آف پاکستان نے سابق وزیرِ اعظم میاں محمد نواز شریف کو نااہلی کے بعد بھی پارٹی صدارت کیلئے بھی نااہل قرار دیدیا ہے۔ چیف جسٹس نے اپنے فیصلے میں کہا ہے کہ کوئی نااہل شخص پارٹی سربراہ نہیں بن سکتا۔سپریم کورٹ آف پاکستان نے سابق وزیرِ اعظم میاں محمد نواز شریف کو پاکستان مسلم لیگ (ن) کی صدارت سے بھی نااہل قرار دیتے ہوئے ان کی جانب سے ماضی میں کیے گئے تمام فیصلوں کو کالعدم قرار دیدیا ہے۔ فیصلے میں نواز شریف کی جانب سے جاری کیے گئے تمام سینیٹ ٹکٹ بھی منسوخ کر دیے گئے ہیں۔سپریم کورٹ الیکشن ایکٹ 2017ء کے خلاف دائر درخواستوں پر سماعت چیف جسٹس ثابق نثار کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے کی۔ ایڈیشنل اٹارنی جنرل رانا وقار نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ سیاسی جماعت بنانے کا حق آئین فراہم کرتا ہے، اس بنیادی حق کو ختم نہیں کیا جا سکتا۔ آئین کے آرٹیکل 17 کے آگے کسی دوسرے آئینی آرٹیکل کی رکاوٹ نہیں لگائی جا سکتی۔چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے کہا کہ آپ کا مطلب ہے عدالت صرف آرٹیکل 17 کو مدنظر رکھے؟ جس پر رانا وقار نے کہا کہ آرٹیکل 17 کا سب سیکشن سیاسی جماعت بنانے کی اجازت دیتا ہے۔شیخ رشید احمد کے وکیل فروغ نسیم نے اپنے دلائل میں کہا کہ ایسا شخص جو آرٹیکل 62 اور 63 پر پورا نہیں اترتا تو یہ عوامی اقتدار کا معاملہ ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اپنے بنیادی حقوق کے لیے غلط کام کرنا بھی جائز نہیں، کوئی ایسا شخص جس کے خلاف بدعنوانی، ڈرگ مافیا یا چوری کا ڈکلئیریشن ہو وہ کیسے پارٹی سربراہ بن سکتا ہے؟ وکیل بابر اعوان نے کہا کہ ہمارا سیاسی نظام کئی سیاسی جماعتوں پر مشتمل ہے، سینیٹ ٹکٹ کے اس شخص نے جاری کیے جو نااہل ہیں۔چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار کا اپنے فیصلے میں کہنا تھا کہ کوئی بھی نااہل شخص پارٹی کا سربراہ نہیں بن سکتا۔ طاقت کا سرچشمہ صرف اللہ تعالیٰ کی ذات ہے، عوام اپنی طاقت کا استعمال عوامی نمائندوں کے ذریعے کرتے ہیں۔ آرٹیکل 62 اور 63 پر پورا نہ اترنے والا پارٹی صدارت بھی مہیں کر سکتا۔ آرٹیکل 17 سیاسی جماعت بنانے کا حق دیتا ہے جس میں بھی قانونی شرائط موجود ہیں۔خیال رہے کہ آج سپریم کورٹ نے الیکشن ایکٹ 2017ء کیخلاف دائر درخواستوں پر سماعت مکمل کی، اس موقع پر چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے ریمارکس دیے کہ کسی پارلیمینٹرین کو چور اچکا نہیں کہا ، الحمد اللہ ہمارے لیڈر اچھے ہیں۔ چیف جسٹس نے کہا پارٹی سربراہ کا عہدہ انتہائی اہم ہوتا ہے۔ لوگ اپنے لیڈر کے لیے جان قربان کرنے کے لیے تیار ہوتے ہیں ، ہمارے کلچر میں سیاسی جماعت کے سربراہ کی بڑی اہمیت ہے۔چیف جسٹس نے کہا کہ تمام چیزیں پارٹی سربراہ کے گرد گھومتی ہیں، لوگ پارٹی سربراہ کے کہنے پر چلتے ہیں اور پارٹی سربراہ پر لوگ جان دینے کے لیے تیار رہتے

    #3
    Bawa
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 138
    • Posts: 10898
    • Total Posts: 11036
    • Join Date:
      24 Aug, 2016

    Re: ناھل شخص پارٹی سربراہ نہں بن سکتا-عدلیہ کا تاریخی فیصلہ آ گیا

    Judicial Mashal Law

    سقوط ڈھاکہ کے بعد پاکستان کی تاریخ کا سیاہ ترین دن

    کل آبادی کے لحاظ سے ملک کے سب سے بڑے صوبے کی سب سے بڑی پارٹی کو اقتدار سے باہر رکھنے کیلیے ملٹری آپریشن کیا گیا تھا اور آج آبادی کے لحاظ سے ملک کے سب سے بڑے صوبے کی سب سے بڑی پارٹی کو اقتدار سے باہر رکھنے کیلیے جوڈیشل آپریشن کیا گیا ہے

    کل ملک کے سب سے بڑے صوبے کی سب سے بڑی پارٹی کے خلاف ملٹری آپریشن شروع کرنے پر خوشیاں منائی گئی تھیں اور کہا گیا تھا کہ خدا کا شکر ہے کہ پاکستان بچا لیا گیا ہے اور آج ملک کے سب سے بڑے صوبے کی سب سے بڑی پارٹی کے خلاف جوڈیشل آپریشن شروع کرنے پر خوشیاں منائی جا رہی ہیں اور کہا جا رہا ہے کہ خدا کا شکر ہے کہ پاکستان بچا لیا گیا ہے

    کل ملک کے سب سے بڑے صوبے کی سب سے بڑی پارٹی فتح یاب ہوئی تھی اور ملٹری آپریشن کرنے والے ڈھاکہ کے پلٹن گراونڈ میں ذلیل و خوار ہوئے تھے اور اب پھر ملک کے سب سے بڑے صوبے کی سب سے بڑی پارٹی فتح یاب ہوگی اور جوڈیشل آپریشن کرنے والے لاہور کے قذافی سٹیڈیم میں اسی طرح ذلیل و خوار ہونگے

    کل ملٹری آپریشن کرنے والوں نے ملک کے سب سے بڑے صوبے کی سب سے بڑی پارٹی کے سربراہ کو جیل سے رہا کرکے سیلیوٹ کیا تھا اور اب جوڈیشل آپریشن کرنے والے ملک کے سب سے بڑے صوبے کی سب سے بڑی پارٹی کے سربراہ کو جیل سے رہا کرکے سیلیوٹ کریں گے

    عوام کے فیصلے تسلیم نہ کرنے سے اور عوام کی منتخب قیادت کو جیلوں میں ڈال کر شخصی فیصلے زبردستی عوام پر مسلط کرنے سے نہ صرف تاریخ بدل جاتی ہے بلکہ جغرافیہ بھی

    تاریخ کا یہ سبق ہے کہ تاریخ اپنے آپ کو دہراتی ہے اور تاریخ سے کوئی سبق نہیں سیکھتا ہے

    ساز کی شوخیاں بتاتی ہیں کوئی نغمہ مچلنے والا ہےاب بھی اچھا ہے گر سنبھل جاؤ، وقت کروٹ بدلنے والا ہے

    • This reply was modified 1 year, 5 months ago by  Bawa.
    #4
    Sohail Ejaz Mirza
    Participant
    Offline
    Thread Starter
    • Professional
    • Threads: 61
    • Posts: 2180
    • Total Posts: 2241
    • Join Date:
      28 Oct, 2017
    • Location: Middle East

    Re: ناھل شخص پارٹی سربراہ نہں بن سکتا-عدلیہ کا تاریخی فیصلہ آ گیا

    Jodicial Mashal Law

    باوا جیمارشل لا اب ماضی کے قصے ہو گیا۔ انشاءاللہ اب مارشل لا سے نہیں قانون کی بالادستی یعنی پالیمنٹ اور سُپریم کورٹ کے ذریعے ہی معاملے چلا  کریں گے۔

    #5
    Atif
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 145
    • Posts: 6940
    • Total Posts: 7085
    • Join Date:
      15 Aug, 2016

    Re: ناھل شخص پارٹی سربراہ نہں بن سکتا-عدلیہ کا تاریخی فیصلہ آ گیا

    تاریخی ذلالت ہے یہ ۔ اس فیصلے کو لوگ صدیوں تک عدلیہ کا منہ کالا کرنے کیلئے استعمال کریں گے۔ یہ عدلیہ کا کام ہی نہیں کہ سیاسی پارٹیوں کے سربراہوں کی اہلیت مقرر کرتی پھرے۔حکومت کو چاہیے کہ وقت ضائع کئے بغیر پارلیمنٹ میں قانون پاس کروائے کہ پی سی او ججز سپریم کورٹ میں کسی قسم کا عہدہ سنبھالنے کے لائق نہیں، اور جو اس وقت تک موجود ہیں انہیں فارغ کیا جاتا ہے۔ جیسے کو تیسا۔ان ججز کو عزت راس نہیں آرہی

    #6
    Atif
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 145
    • Posts: 6940
    • Total Posts: 7085
    • Join Date:
      15 Aug, 2016

    Re: ناھل شخص پارٹی سربراہ نہں بن سکتا-عدلیہ کا تاریخی فیصلہ آ گیا

    ان ججز کیلئے بہترین سلوک یہ ہوگا کہ آج رات ہی صدارتی آرڈیننس کے ذریعے ان پی سی او  ججز کو فارغ کیا جائے۔

    #7
    حسن داور
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 3845
    • Posts: 2066
    • Total Posts: 5911
    • Join Date:
      8 Nov, 2016

    Re: ناھل شخص پارٹی سربراہ نہں بن سکتا-عدلیہ کا تاریخی فیصلہ آ گیا

    سپریم کورٹ نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کو مسلم لیگ (ن) کی صدارت کے لیے نااہل قرار دے دیا۔

    انتخابی اصلاحات ایکٹ کیس کا متفقہ فیصلہ چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے تین رکنی بینچ نے سنایا۔

    چیف جسٹس نے کیس کا مختصر فیصلہ پڑھ کر سناتے ہوئے کہا کہ آئین کے آرٹیکل 62 اور 63 پر پورا نہ اترنے والا یا نااہل شخص پارٹی صدارت کا عہدہ نہیں رکھ سکتا۔

    فیصلے میں نواز شریف کے بطور پارٹی صدر اٹھائے گئے تمام اقدامات کو کالعدم قرار دیتے ہوئے کہا گیا کہ نواز شریف فیصلے کے بعد جب سے پارٹی صدر بنے تب سے نااہل سمجھے جائیں گے۔

    عدالتی فیصلے کے بعد نواز شریف کے بطور پارٹی صدر سینیٹ انتخابات کے امیدواروں کی نامزدگی بھی کالعدم ہوگئی اور مسلم لیگ (ن) کے تمام امیدواروں کے ٹکٹ منسوخ ہوگئے۔

    عدالت کی جانب سے آئندہ ماہ ہونے والے سینیٹ انتخابات کو بھی معطل کرتے ہوئے نواز شریف کی جانب سے سینیٹ کے جاری کردہ ٹکٹ بھی منسوخ کر دیئے گئے۔

    قبل ازیں سپریم کورٹ الیکشن ایکٹ 2017 کے خلاف دائر درخواستوں پر سماعت چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے کی۔

    ایڈیشنل اٹارنی جنرل رانا وقار نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ سیاسی جماعت بنانے کا حق آئین فراہم کرتا ہے، آئین کے کسی دوسرے آرٹیکل سے اس بنیادی حق کو ختم نہیں کیا جاسکتا۔

    ان کا کہنا تھا کہ قومی اسمبلی انتخابی اصلاحات کمیٹی میں تمام سیاسی جماعتیں متفق تھیں تاہم صدر سے منظوری کے بعد قانون کا جائزہ مختلف تین بنیادوں پر لیا جاتا ہے۔

    ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے کہا کہ قانون سازی بنیادی حقوق کے منافی ہو تو جوڈیشل نظر ثانی ہوسکتی ہے۔

    رانا وقار کا کہنا تھا کہ آئین کی بنیاد جمہوریت ہے، آئین کے آرٹیکل 17 کے آگے کسی دوسرے آئینی آرٹیکل کی رکاوٹ نہیں لگائی جاسکتی۔

    چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے کہا کہ آپ کا مطلب ہے عدالت صرف آرٹیکل 17 کو مدنظر رکھے جس پر رانا وقار نے کہا کہ آرٹیکل 17 کا سب سیکشن سیاسی جماعت بنانے کی اجازت دیتا ہے۔

    ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے کہا کہ آرٹیکل 17 کےسب آرٹیکل 2 پر کسی قسم کی کوئی قدغن نہیں ہے۔

    شیخ رشید احمد کے وکیل فروغ نسیم نے اپنے جواب الجواب دلائل میں کہا کہ آئین میں لکھا ہے کہ تمام بنیادی حقوق اخلاقیات کے خلاف نہیں ہونے چاہیں، ایسا شخص جو آرٹیکل 62 اور ٦٣ پر پورا نہیں اترتا تو یہ معاملہ عوامی اقتدار کا معاملہ ہے۔

    فروغ نسیم کا کہنا تھا کہ اپنے بنیادی حقوق کے لیے غلط کام کرنا بھی جائز نہیں، کوئی ایسا شخص جس کے خلاف بدعنوانی، ڈرگ مافیا یا چوری کا ڈکلئیریشن ہو وہ کیسے پارٹی سربراہ بن سکتا ہے۔

    ان کا کہنا تھا کہ پارٹی سربراہ کوئی ربڑ اسٹمپ یا پوسٹ آفس نہیں بلکہ وہ ہدایات دینے کا اختیار رکھتا ہے۔

    چیف جسٹس نے کہا کہ میں صرف اس کیس کے لیے خصوصی طور پر بات نہیں کر رہا، تمام چیزیں پارٹی سربراہ کے گرد گھومتی ہیں، لوگ پارٹی سربراہ کے کہنے پر چلتے ہیں اورپارٹی سربراہ پر لوگ جان دینے کے لیے تیار رہتے ہیں۔

    ان کا کہنا تھا کہ ہمارا نظام امریکا سے مکمل طور پر مختلف ہے۔

    وکیل بابر اعوان نے کہا کہ ہمارا سیاسی نظام کئی سیاسی جماعتوں پر مشتمل ہے، سینیٹ ٹکٹ کے اس شخص نے جاری کیے جو نااہل ہیں۔

    چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ کسی پارلیمینٹیرین کوچور اچکا نہیں کہا بلکہ مفروضے پرمبنی سوالات کررہے تھے، الحمداللہ اور ماشااللہ کے لفظ اپنی لیڈر شپ کے لیے استعمال کیے۔

    انہوں نے کہا کہ ہم نے کہا تھا کہ ہماری لیڈر شپ اچھی ہے، ہم اپنے لیڈرزکے لیے چور کا لفظ کیوں استعمال کرسکتے ہیں، ہم تو قانونی سوالات پوچھ رہے تھے لیکن کسی وضاحت کی ضرورت نہیں اور وضاحت دینے کا پابند نہیں ہوں۔

    چیف جسٹس نے کہا کہ ان سوالات پر جو ردعمل آیا وہ قابل قبول نہیں۔

    پیپلز پارٹی کے وکیل لطیف کھوسہ نے کہا کہ بنیادی حقوق کے تحفظ کا اختیار عدالت کوعوام نے دیا، نواز شریف کی نااہلی کا فیصلہ عدالت کا نہیں بلکہ عوام کا تھا۔

    جسٹس اعجازالاحسن نے کہا کہ سیاسی جماعت بنانے کا مقصد حکومت بنانا ہوتا ہے۔

    اس موقع پر چیف جسٹس نے لطیف کھوسہ سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ آپ لاہور میں جلسہ کریں گے تو کتنے لوگ آئیں گے اور آپ کی سیاسی جماعت کا لیڈر جلسہ کرے تو لوگ زیادہ آئیں گے۔

    جسٹس اعجازالاحسن نے کہا کہ سیاسی جماعتوں میں ون مین شو ہوتا جبکہ چیف جسٹس نے کہا کہ عام لیڈر اور پارٹی سربراہ کے جلسے میں فرق ہوتا ہے، جس کے بعد بنچ نے سماعت مکمل کرتے ہوئے فیصلہ محفوظ کرلیا تھا۔

    https://www.dawnnews.tv/news/1073812/

    #8
    Sohraab
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 437
    • Posts: 3792
    • Total Posts: 4229
    • Join Date:
      23 Aug, 2016

    Re: ناھل شخص پارٹی سربراہ نہں بن سکتا-عدلیہ کا تاریخی فیصلہ آ گیا

    باوا جی مارشل لا اب ماضی کے قصے ہو گیا۔ انشاءاللہ اب مارشل لا سے نہیں قانون کی بالادستی یعنی پالیمنٹ اور سُپریم کورٹ کے ذریعے ہی معاملے چلا کریں گے۔

    mirza sahab lagta hai aap hum ko paagal samajhte hainyeh Judicial Martial Law hi hai

    #9
    Sohraab
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 437
    • Posts: 3792
    • Total Posts: 4229
    • Join Date:
      23 Aug, 2016

    Re: ناھل شخص پارٹی سربراہ نہں بن سکتا-عدلیہ کا تاریخی فیصلہ آ گیا

    Supreme Court aur Judges ke Peechay aik Shaitan haiBaqi aap loog khud Samajhdar hain

    #10
    SaleemRaza
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 661
    • Posts: 11809
    • Total Posts: 12470
    • Join Date:
      13 Oct, 2016
    • Location: سہراب گوٹھ ۔

    Re: ناھل شخص پارٹی سربراہ نہں بن سکتا-عدلیہ کا تاریخی فیصلہ آ گیا

    باوا جی مارشل لا اب ماضی کے قصے ہو گیا۔ انشاءاللہ اب مارشل لا سے نہیں قانون کی بالادستی یعنی پالیمنٹ اور سُپریم کورٹ کے ذریعے ہی معاملے چلا کریں گے۔

    سہیل بھائیمیری نظر میں یہ فیصلہ ایک بہت ہی اچھا اقدام ہے ۔۔ہمارا لیڈر نااہل ہوگیا ہے ۔۔۔۔۔ٹھیک ہوا ہے یہ اس سے بھی بڑی سزا کا مستحق تھا۔۔۔جو شخص  5 سال تک عوامی ایشو پر ایک بار بھی قومی اسمبلی میں آٹھ کر تقریر نہ کر سکا ۔جب اپنے مفاد پر صرب پڑی ہے ۔۔۔تو گدھا گاڑی کو جیٹ کا انجن لگ گیا ہے ۔۔۔۔سپریم کورٹ کو اگلے دس سال تک اس کی شکل پر بھی پابندی عائد کر دینی چاہئے ۔۔۔۔تاکہ یہ پبلک اجتماع میں لوگوں کا وقت برباد نہ کرے ۔۔۔

    #11
    SaleemRaza
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 661
    • Posts: 11809
    • Total Posts: 12470
    • Join Date:
      13 Oct, 2016
    • Location: سہراب گوٹھ ۔

    Re: ناھل شخص پارٹی سربراہ نہں بن سکتا-عدلیہ کا تاریخی فیصلہ آ گیا

    Supreme Court aur Judges ke Peechay aik Shaitan hai Baqi aap loog khud Samajhdar hain

    سیراب جگر ہم کو بتاو وہ کون ہے ہم کو نہیں پتا۔اگر ہم اتنے الہامی ہوتے تو ان کرپٹ لوگوں کو ووٹ دیتے  ۔۔۔یار فورم پر بھی نام لکھتے ہوئے ڈرتے ہو ۔۔حانکہ ہم دوسروں کو گالیاں دینا قومی فریضہ سمجھتے ہیں ۔۔۔بتاو وہ کون شیطان ہے جس نے شیطانی کی ہے ۔۔۔۔

    #12
    Sohail Ejaz Mirza
    Participant
    Offline
    Thread Starter
    • Professional
    • Threads: 61
    • Posts: 2180
    • Total Posts: 2241
    • Join Date:
      28 Oct, 2017
    • Location: Middle East

    Re: ناھل شخص پارٹی سربراہ نہں بن سکتا-عدلیہ کا تاریخی فیصلہ آ گیا

    سہیل بھائی میری نظر میں یہ فیصلہ ایک بہت ہی اچھا اقدام ہے ۔۔ہمارا لیڈر نااہل ہوگیا ہے ۔۔۔۔۔ٹھیک ہوا ہے یہ اس سے بھی بڑی سزا کا مستحق تھا۔۔۔جو شخص 5 سال تک عوامی ایشو پر ایک بار بھی قومی اسمبلی میں آٹھ کر تقریر نہ کر سکا ۔جب اپنے مفاد پر صرب پڑی ہے ۔۔۔تو گدھا گاڑی کو جیٹ کا انجن لگ گیا ہے ۔۔۔۔سپریم کورٹ کو اگلے دس سال تک اس کی شکل پر بھی پابندی عائد کر دینی چاہئے ۔۔۔۔تاکہ یہ پبلک اجتماع میں لوگوں کا وقت برباد نہ کرے ۔۔۔

    سلیم بھائی

    یہ واقعی ایک مُناسب اور بروقت فیصلہ ہے۔مرحوم بھٹو نے بھی بطور سِول مارشل لا ایڈمنسٹریٹر کے، چند سال مزے لوٹے۔ اب ایک نااہل شخص اُنہی خطوط پر چلتے ہوئے ہر چیز اپنے کنٹرول میں رکھنے کا تحیّہ کے ہوئے تھا۔اُن راستوں کو بند کر دیا گیا ہے۔

    نااہل کے حامیوں کو اس فیصلے میں مارشل لا نظر آ رہا ہے۔ عدلیہ کے ایوانوں سے مارشل لا کے فرمان نہیں نِکلتے ۔ مارشل لا کا خواب دیکھنے والوں کو اب کوئی اور طریقہ اپنانا ہو گا۔ فوج پھر بھی نہیں آئے گی اور یہ ایک اچھی بات ہے۔

    #13
    shahidabassi
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 31
    • Posts: 6911
    • Total Posts: 6942
    • Join Date:
      5 Apr, 2017

    Re: ناھل شخص پارٹی سربراہ نہں بن سکتا-عدلیہ کا تاریخی فیصلہ آ گیا

    تاریخی ، بہترین اور اصولی فیصلہ ہے۔ جو بندہ پارلیمنٹ میں بیٹھنے کا اہل نہیں اسے کسی سیاسی پارٹی کا سربراہ بننے کا بھی حق نہیں۔ صرف پاکستان ہی نہیں بلکہ پوری دنیا میں پارلیمنٹیرینز اپنے پارٹی ہیڈ سے ہدایات لیتے ہیں، پارلیمنٹ میں بھی پارٹی پالیسی پارٹی چیرمین کی دی گئی ہدایات پر چلتی ہے تو ایک ایسا شخص جو خود پالیمنٹ کے لئے نا اہل ہو اس کی ہدایات پر پارلیمنٹ کا چلنا کسی بھی صورت صحیح نہیں۔ میرے اس بیانیہ کو میرے پرانے بیانئے سے ملا کر پڑھا جائے جہاں میں نے نواز شریف کو نا اہل قرار دئیے جانے کے کو غلط کہا تھا۔ یعنی میرے مطابق نواز شریف کو اقامہ پر نا اہل قرار دینا ایک غلط فیصلہ ہے اور ایک نا اہل شخص کے پارٹی صدر بننے پر قدغن ایک بلکل صحیح فیصلہ ہے۔

    • This reply was modified 1 year, 5 months ago by  shahidabassi.
    #14
    Sohail Ejaz Mirza
    Participant
    Offline
    Thread Starter
    • Professional
    • Threads: 61
    • Posts: 2180
    • Total Posts: 2241
    • Join Date:
      28 Oct, 2017
    • Location: Middle East

    Re: ناھل شخص پارٹی سربراہ نہں بن سکتا-عدلیہ کا تاریخی فیصلہ آ گیا

    ان ججز کیلئے بہترین سلوک یہ ہوگا کہ آج رات ہی صدارتی آرڈیننس کے ذریعے ان پی سی او ججز کو فارغ کیا جائے۔

    ایسا قدم اور اِس جیسا کوئی بھی فیصلہ ڈیکلیرائشن آف ایمرجنسی ایکٹ کے نفاذ کی راہ ہموار کرنے میں ایک قدم ثابت ہو گا۔اگلا قدم حالیہ وزیرِ اعظم کی نامزدگی جو کہ پنجاب ہاؤس سے ہوئی اور اب کے دوبار نااھل قرار دیے گیے شخص  نے کی بھی مُتنازع ہو چکی ہے۔ممکنہ اگلا قدم نواز شریف اور مریم نواز پر مکمل میڈیا بلیک آؤٹ کا نافذ کیا جانا ہے اگر ان کی میڈیا کمپینز میں وہی وطیرہ برقرار رہے جو چلتا آ رہا ہے۔

    #15
    SaleemRaza
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 661
    • Posts: 11809
    • Total Posts: 12470
    • Join Date:
      13 Oct, 2016
    • Location: سہراب گوٹھ ۔

    Re: ناھل شخص پارٹی سربراہ نہں بن سکتا-عدلیہ کا تاریخی فیصلہ آ گیا

    سلیم بھائی

    یہ واقعی ایک مُناسب اور بروقت فیصلہ ہے۔مرحوم بھٹو نے بھی بطور سِول مارشل لا ایڈمنسٹریٹر کے، چند سال مزے لوٹے۔ اب ایک نااہل شخص اُنہی خطوط پر چلتے ہوئے ہر چیز اپنے کنٹرول میں رکھنے کا تحیّہ کے ہوئے تھا۔اُن راستوں کو بند کر دیا گیا ہے۔

    نااہل کے حامیوں کو اس فیصلے میں مارشل لا نظر آ رہا ہے۔ عدلیہ کے ایوانوں سے مارشل لا کے فرمان نہیں نِکلتے ۔ مارشل لا کا خواب دیکھنے والوں کو اب کوئی اور طریقہ اپنانا ہو گا۔ فوج پھر بھی نہیں آئے گی اور یہ ایک اچھی بات ہے۔

    آپ نے درست کہا ہے ۔۔مارشل لاء  نہیں آئے گا ۔۔ان لٹیروں نے آخر کار آپنے آپکو ایک گلی میں بند کرلیا ہے ۔۔۔۔۔خدا کے ہاں دیر ہے اندھیر نہئں ۔۔۔۔۔ایک وہ وقت تھا شہباز شریف  فون کرکے ایک جج کو فرما رے تھے ۔۔۔۔۔اس کو اتنی سزا دو۔۔اس کو اتنی دو ۔۔۔۔۔۔جس عطار کے لونڈے سے دوا لیتے تھے ۔۔اب اسی عطار کے لونڈے سے بیمار ہوئے ہو ۔۔۔۔۔۔۔۔۔اب جو جو عدلیہ کے درمیان آئے اس کو اڑا دو ۔۔۔زرادری ۔۔۔عمران ان سب کو جو جو جس جس پر  عوام کا خون چوسنسے کا شہبہ تک بھی لٹکا دو ۔۔۔۔۔اب قیامت ڈھانے کا وقت آپہنچا ہے ۔۔۔۔۔:jhanda: :jhanda:   :jhanda:   :jhanda::bhangra: :bhangra:   :bhangra:   :bhangra:

    • This reply was modified 1 year, 5 months ago by  SaleemRaza.
    #16
    SaleemRaza
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 661
    • Posts: 11809
    • Total Posts: 12470
    • Join Date:
      13 Oct, 2016
    • Location: سہراب گوٹھ ۔

    Re: ناھل شخص پارٹی سربراہ نہں بن سکتا-عدلیہ کا تاریخی فیصلہ آ گیا

    ان ججز کیلئے بہترین سلوک یہ ہوگا کہ آج رات ہی صدارتی آرڈیننس کے ذریعے ان پی سی او ججز کو فارغ کیا جائے۔

    ان کی جگہ  طلال چوہدری دنیاال عزیز ۔نہال ہاشمی کو جج لگا دیا جائے ۔۔۔۔۔۔۔اور میرا سب سے پسندیدہ  جسٹس ۔جسٹس۔۔ قیوم ۔۔۔جس کی عظمت کو آج بھی لوگ سلام کرتے ہیں ۔۔۔۔۔ :bhangra: :bhangra:   :bhangra:   :bhangra:لیڈر ہمارا نااہل ہوا ہے غم آپکو لگے ہوئے ہیں ۔۔جائیں جکر اپنے لیڈر کے ولیمے کے چاول تنازل فرمائیں ۔۔:bhangra: :bhangra:   :bhangra:   :bhangra: https://youtu.be/S9EXDEIHhrc

    • This reply was modified 1 year, 5 months ago by  SaleemRaza.
    #17
    SaleemRaza
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 661
    • Posts: 11809
    • Total Posts: 12470
    • Join Date:
      13 Oct, 2016
    • Location: سہراب گوٹھ ۔

    Re: ناھل شخص پارٹی سربراہ نہں بن سکتا-عدلیہ کا تاریخی فیصلہ آ گیا

    https://youtu.be/rttSHbsVLB0احد چیمہ گرفتار ۔

    #18
    SaleemRaza
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 661
    • Posts: 11809
    • Total Posts: 12470
    • Join Date:
      13 Oct, 2016
    • Location: سہراب گوٹھ ۔

    Re: ناھل شخص پارٹی سربراہ نہں بن سکتا-عدلیہ کا تاریخی فیصلہ آ گیا

    ایک متوازن تجزیہ ۔۔۔روف کلاسرا کی زبانی ۔:bigsmile:https://youtu.be/IPmIpaizO3g

    #19
    shami11
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 662
    • Posts: 6815
    • Total Posts: 7477
    • Join Date:
      12 Oct, 2016
    • Location: Pakistan

    Re: ناھل شخص پارٹی سربراہ نہں بن سکتا-عدلیہ کا تاریخی فیصلہ آ گیا

    وہ کرپٹ یہ کرپٹ – ابھی تک پاکستان کے خزانے کو چونی بھی موصول نہی ہوئی

    #20
    Guilty
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 0
    • Posts: 3812
    • Total Posts: 3812
    • Join Date:
      6 Nov, 2016

    Re: ناھل شخص پارٹی سربراہ نہں بن سکتا-عدلیہ کا تاریخی فیصلہ آ گیا

    بہت ہی اچھا فیصلہ ہے ۔۔۔۔۔۔ اس سے  ۔۔۔ عد لیہ اور پارلیمنٹ  دشمنی میں ۔۔۔۔ تیزی سے اضافہ ہوگا ۔۔۔۔۔سول نظام مزید کمزور ترین ہوگا ۔۔۔۔ عد لیہ اور فوج  کے خلاف ۔۔۔ محاز آرائی بڑھے گا ۔۔۔۔۔۔۔اور ۔۔۔۔  وہ ما حول تیار ہوسکے گا جہاں ۔۔۔۔ عد لیہ اور فوج ۔۔۔۔۔ کے انجام کو پہنچنے کے امکان مزید روشن ہوجائیں گے ۔قوم کے لیئے خوشی کی بات یہ ہے ۔۔۔۔ سیا ستدانوں کو ۔۔۔ توپ ۔۔۔ ٹینک استمعال نہیں کرنے پڑیں گے ۔۔۔۔یکے بعد دیگرے ۔۔۔۔۔۔ سیا سی  منفی فیصلے  ہی ۔۔۔۔ مکروہ سیاسی اداروں کی ۔۔۔ قبر ۔۔۔ کھود دیں گے ۔۔۔۔اور سب سے زیادہ شغل اس وقت لگے گا ۔۔ جب ایران انڈیا افغان ۔۔۔ جنگی حکمت عملی پر پیرا ہونگےاور ۔۔ پا کستان میں ۔۔۔ عد لیہ ۔۔۔ فوج ۔۔۔ پارلیمنٹ میں ۔۔۔ گھمسان کا ۔۔۔۔ رن پڑا ہوا ہوگا۔۔۔۔۔بہت ہی آئیڈیل صورت حال ہوگی ۔۔۔۔۔  ڈ ھاکہ کی ۔۔۔ یا دیں تازہ  کرنے کی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

    • This reply was modified 1 year, 5 months ago by  Guilty.
Viewing 20 posts - 1 through 20 (of 374 total)

You must be logged in to reply to this topic.

Navigation