Thread: میثاق جمهوریت 2.0

Home Forums Siasi Discussion میثاق جمهوریت 2.0

This topic contains 100 replies, has 16 voices, and was last updated by  Bawa 5 months, 4 weeks ago. This post has been viewed 3028 times

Viewing 20 posts - 81 through 100 (of 101 total)
  • Author
    Posts
  • #81
    BlackSheep
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 15
    • Posts: 2318
    • Total Posts: 2333
    • Join Date:
      11 Feb, 2017
    • Location: عالمِ غیب

    Re: میثاق جمهوریت 2.0

    یہ بہت اچھا ترجمہ کر دیا آپ نے۔ جمہوری عزادار بھی گوارہ ہیں بلکہ ضروری ہیں اور ایسے خواب دیکھنے والے ہر معاشرے میں ہونے چاہییں تا کہ کوئی معاشرہ اندھا بہرہ نہ ہو جائے۔

    پرانے فورم پر میرے ایک مینٹور ہوتے تھے۔۔۔۔۔ بہت کچھ سکھایا انہوں نے مجھے۔۔۔۔۔

    سالوں پہلے جب معاملات کو ایک ہی زاویہ نگاہ سے دیکھا کرتا تھا تو اُس وقت اُنہوں نے مجھے معاشروں میں تنوع(ڈائیورسٹی) کے تصور کو بہت اچھی طرح سمجھایا کہ انسانی معاشروں میں یہ کیوں ضروری ہے۔۔۔۔۔

    تو مجھے مثالیت پسند حضرات قطعاً برے نہیں لگتے بلکہ مَیں خود اِن کا وجود کسی بھی معاشرے کیلئے ضروری سمجھتا ہوں۔۔۔۔۔ مختلف نکتہِ نظر رکھنا کوئی مسئلہ نہیں ہوتا بلکہ میرے ذاتی خیال میں ایک زندہ معاشرے میں ایسا ہی ہونا چاہئے۔۔۔۔۔

    اور جہاں تک اِس فورم کے یا پچھلے فورم کے دو نمبر آئیڈلسٹ حضرات کی بات ہے تو یہ بھی ضرور معاشرے میں ہونے چاہئے۔۔۔۔۔  ویسے بھی عزیز میاں کی ایک قوالی میں ایک شاندار جملہ ہے کہ کُفر ہے اتنا پارسا رہنا۔۔۔۔۔ اِن کی دو نمبریاں بھی بالکل گوارا ہیں۔۔۔۔۔

    لیکن اس فورم پر کتنے جمہوری عزادار ہیں جو واقعتاً سُخن فہم، نہ کہ غالب کے طرفدار؟؟ لیکن ان مجاوروں کیلئے ایک سرمایہ دار شریف جو ہر وقت مناسب قیمت پر جرنیلوں سے سودے بازی پر تیار رہتا ہے (جسے یہ شریفانہ سرمستئی عشق میں حکمت کا نام دیتے ہیں کہ جان ہے تو جدو جہد ہے) جمہوری دیوتا کا اوتار ہے

    میرے خیال میں تو ہر ایک کے اپنے اپنے اوتار ہیں۔۔۔۔۔

    اور میرے جیسے بدنصیب لوگ، جن کے پاس حتیٰ کہ دکھاوا کرنے کیلئے بھی ایسے ایسے جمہوری دیوتا نہیں ہیں، وہ آستانہِ جمہوریہ کے نکالے ہوئے ہیں، راندہِ درگاہ ہیں۔۔۔۔۔

    :.( ;-) :.(

    #82
    Qarar
    Participant
    Offline
    Thread Starter
    • Professional
    • Threads: 101
    • Posts: 2485
    • Total Posts: 2586
    • Join Date:
      5 Jan, 2017

    Re: میثاق جمهوریت 2.0

    حقیقی زمینی صورتحال پر ایاز امیر کا ایک پرانا کالم کافی اچھا تھا۔۔۔۔۔ کچھ باتوں سے اختلاف کیا جاسکتا ہے لیکن مرکزی خیال سے مَیں کافی حد تک اتفاق کرتا ہوں۔۔۔۔۔

    بلیک شیپ صاحب …میں آپ سے اختلاف کرنے کی جسارت کرنا چاہوں گا ..ایاز امیر کا کالم اپنے آپ میں تضادات کا شکار ہے اور اس کا کالم ادھوری معلومات پر بھی مشتمل ہے

    جمہوریت اور اظہار راۓ کی آزادی کا ساتھ ساتھ ہونا ضروری ہے …جس معاشرے میں بھی اظہار راۓ کی آزادی نہیں ہے وہاں جمہوریت کمزور ہی رہے گی …ایاز امیر نے بھی وہی راگ سلطانی الاپا ہے کہ سیاستدان کرپٹ ہیں اور ان کا کردار اس قابل نہیں کہ یہ فوج کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال سکیں ….لیکن آپ اور میں اچھی طرح جانتے ہیں کہ کرپشن میں آرمی شاید سب سے آگے ہے …اربوں کے دفاعی بجٹ کا نہ تو کوئی پبلک آڈٹ ہوتا ہے اور نہ ہی کوئی فوج سے ایک روپے کا حساب مانگ سکتا ہے ….صرف قومی بجٹ میں یک سطری حصہ ہوتا ہے کہ فوج کو کتنے پیسے فراہم کیے جارہے ہیں …اگر میڈیا کو فوج کا گند عوام کے سامنے لانے کا موقع ہو تو عوام میں فوج کی مقدس گاۓ والی حیثیت ختم ہوجاۓ …اور اکثریت جمہوریت پر زیادہ اعتماد بھی کرے گی …سنسر شپ شدہ میڈیا آپ کو ہمیشہ ایک تصویر دکھاتا ہے

    ایاز امیر نے کتنی کور کمانڈر میٹنگز میں شرکت کی ہے جو اتنے وثوق سے ان کے پروفیشنلزم کی قسمیں کھا رہا ہے…ان ڈگریوں کا کیا فائدہ جس کو اپنے حلف کی پاسداری کرنا نہیں آتی

    بڑے بڑے پرہے لکھے لوگوں کو میں نے جمہوریت کے بارے میں کہتے سنا ہے کہ عوام کو تو بجلی چاہیے ..نوکری چاہیے ..قیمتیں سستی چاہئیں ..انہیں کیا غرض کہ ڈکٹیٹر انہیں یہ چیزیں دے یا ایک جمہوری نظام

    جمہوریت کا ڈلیور کرنے یا خوشالی لانے یا بجلی لانے سے کوئی تعلق نہیں …جمہوریت صرف آپ کو حق دیتی ہے کہ آپ اپنے لیڈر کو چن سکیں (یہ حق آرمی رول میں عوام کے پاس نہیں) جیسا لیڈر عوام چنیں گے ویسی ہی کاردگی سامنے آئے گی …فائدہ صرف یہ ہے کہ چار پانچ سال بعد عوام کو اپنی غلطی درست کرنے کا موقع بھی ملتا ہے …لیکن یہ بھی ممکن ہے کہ چار پانچ جمہوری حکومتیں بھی کچھ نہ ڈلیور کرسکیں …لیکن عوام کی مشق جاری رہتی ہے

    بعض دفعہ عوام خود بھی اپنی بدحالی  کے ذمہ ہوتے ہیں … پاکستان کی اکثریت افغانستان میں پاکستانی جھنڈا لہرانے (یعنی مداخلت کرنے) کے خلاف نہیں .اور طالبان کی حمایت کرتے ہیں ..اور کوئی بھی جمہوری حکمران اس پالیسی کو تبدیل نہیں کروا سکتا …فوج اور عوام دونوں ایک پیج پر ہیں
    اسی طرح کشمیر اور جہاد والے مسئلے میں بھی عوام کی اکثریت اور فوج ساتھ ساتھ ہیں
    آپ بتائیے کہ پاکستان کی اکانومی ساڑھے تین فیصد پر کیوں نہ آئے؟ …خارجہ پالیسی نے پاکستان کو دنیا میں تنہا کردیا ہے اور اندرونی امن امان کی حالت کسی بھی بیرونی سرمایا کاری کے لیے موزوں نہیں …تو ملک آگے کیسے بڑھے؟ جو بھی جمہوری حکمران …پہلے بینظر اور بعد میں نواز شریف انڈیا سے تعلقات بہتر بنانا چاہتا ہے اس پر غداری کے لیبل چسپاں کردیے جاتے ہیں …جمہوری لیڈر بھی کیا کریں ..ساری قوم جہادی ہے …پھر عوام بھی کیا معصومیت سے سوال کرتے ہیں کہ ملک انڈیا کی طرح ترقی کیوں نہیں کرتا

    #83
    Qarar
    Participant
    Offline
    Thread Starter
    • Professional
    • Threads: 101
    • Posts: 2485
    • Total Posts: 2586
    • Join Date:
      5 Jan, 2017

    Re: میثاق جمهوریت 2.0

    اس میں کوئی دو رائے نہیں کہ شخصی آزادیوں کو ہر صورت احترام اور تحفظ ملنا چاہیے، خاص طور پر معاشرے کے رائے ساز طبقے سے تعلق رکھنے والوں کیلئے۔ لیکن ایسا معاشرتی بگاڑ (انارکی، اک حد تک تخلیقی بگاڑ قابلَ قبول ہونا چاہیے، موت کے سے سکوت میں معاشرتی نشوونما اور ارتقاء واقع نہیں ہو سکتا) کی قیمت پر نہیں ہونا چاہیے، اور دیکھا جائے تو اس طرح کی کم از کم پابندی اور نتیجے میں حاصل ہونے والا معاشرتی توازن ان رائے سازوں/دانشور طبقات کے اپنے مفاد میں بھی ہے
    کائنات بذاتِ خود تو کوئی اہمیت نہیں رکھتی اگر سوچ اور احساس رکھنے والی انواع اس سے تمتّع نہ ہو سکیں، اس لئے کسی نوع کی اس میں مداخلت غیر ضروری یا ظلم کیسے کہلا سکتی ہے، ہاں اندھا دھند مداخلت یا ہوس ضرور اس توازن میں بگاڑ پیدا کرتی ہے۔ لیز فیئر کی بنیاد اور تہہ میں ہوس ہے
    میرا نہیں خیال کہ معاشرے اور پھر ریاست کا قیام فطرت کے خلاف ہے، میں اسے فطرت کی توسیع کہوں گا
    لیز فیئر ایک عملی سے زیادہ تصوراتی نظریہ ہے جو ایک کامل جبری معیشت کی دوسری انتہا پر ہے، کسی بھی معشیت کے اندار معاشرے اور ریاست کے وسائل کے استعمال سے منافع کمانے والوں کو کم از کم اسی تناسب سے محصول دینے میں بھی کوئی عُذر نہیں ہونا چاہیے

    یہ بہت اچھا ترجمہ کر دیا آپ نے۔ جمہوری عزادار بھی گوارہ ہیں بلکہ ضروری ہیں اور ایسے خواب دیکھنے والے ہر معاشرے میں ہونے چاہییں تا کہ کوئی معاشرہ اندھا بہرہ نہ ہو جائے۔ لیکن اس فورم پر کتنے جمہوری عزادار ہیں جو واقعتاً سُخن فہم، نہ کہ غالب کے طرفدار؟؟ لیکن ان مجاوروں کیلئے ایک سرمایہ دار شریف جو ہر وقت مناسب قیمت پر جرنیلوں سے سودے بازی پر تیار رہتا ہے (جسے یہ شریفانہ سرمستئی عشق میں حکمت کا نام دیتے ہیں کہ جان ہے تو جدو جہد ہے) جمہوری دیوتا کا اوتار ہے

    پرولتاری درویش

    Welcome back!

    #84
    BlackSheep
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 15
    • Posts: 2318
    • Total Posts: 2333
    • Join Date:
      11 Feb, 2017
    • Location: عالمِ غیب

    Re: میثاق جمهوریت 2.0

    ایاز امیر صاحب کو چاہئے تھا کہ چور کمانڈر کے اجلاس میں بھی شرکت فرماکر ان سورماؤں کی دانشورانہ مغز ماریوں سے بھی قوم کو آگاہ فرماتے جو یہ اعلی دماغ اور عظمت کے حامل اس قوم کے غم میں کرتے ہیں.
    شاید دانش کے چند موتی جو پہلے ہی ایوب ، یحیی ،ضیاء ،مشرف کیانی ، شریف، باجوہ یا انکے ٹاوٹوں کے ذرئیے ہم تک پہنچنے سے محروم رہیں ہیں ہم تک پہنچ ہی جاتے
    :cwl: :cwl: :cwl:

    ایاز امیر صاحب سے بات ہوئی تو آپ کا پیغام پہنچا دوں گا۔۔۔۔۔

    ;-) :cwl: ;-)

    مزید برآں آپ کا مرض بہت تیزی سے لاعلاج ہونے کی حالت تک پہنچتا دکھائی دے رہا ہے کہیں ایسا دن نہ آجائے کہ لوگوں کو آپ کے ساتھ بحث کے فوراً بعد احتیاطی تدابیر کے طور پر انجیکشن لگوانا پڑیں۔۔۔۔۔۔

    ابھی کچھ وقت ہے۔۔۔۔۔ اِس بارے میں بھی کچھ کیجئے۔۔۔۔۔

    آپ کی خیریت چاہنے والا۔۔۔۔۔ بلیک شیپ۔۔۔۔۔

    :) ;-) :)

    #85
    Qarar
    Participant
    Offline
    Thread Starter
    • Professional
    • Threads: 101
    • Posts: 2485
    • Total Posts: 2586
    • Join Date:
      5 Jan, 2017

    Re: میثاق جمهوریت 2.0

    قرار جی اسکا مطلب یہ ہے کہ آپ اپنے منہ سے نوالا نکال کر بھی فوج کے منہ میں ڈالیں لیکن فوج وہ بچھو ہے جسے سویلینز کو ڈنگ مارنے کی عادات ہے. آپ فوج کیلیے کچھ بھی کر لیں فوج نے اپنی عادات سے مجبور ہو کر سویلین حکومت کو ڈنگ مارنا ہی مارنا ہے. یہ فوج ڈنگ مارتے ہوئے نہ اپنے محسن کو دیکھتی ہے اور نہ اپنے دشمن کو میثاق جمہوریت والا ڈرامہ پہلے بھی فلاپ ہوا تھا اور اب بھی مسلم لیگ نوں اور پی پی پی میں کسی میثاق جمہوریت کے ہونے اور اسکی کامیابی کے کوئی چانسز نہیں ہیں. دونوں پارٹیوں کی اسٹبلشمنٹ سے آنکھ مچولی چلتی رہتی ہیں. کبھی انکے لیڈر اسٹبلشمنٹ کو آنکھیں دکھاتے ہیں اور کبھی پاؤں پڑ جاتے ہیں. ویسے بھی دونوں پارٹیاں خصوصا انکی قیادت اب ایک دوسرے پر بھروسہ نہیں کرتی ہے اور جانتی ہے کہ جسے بھی موقع ملا وہ اسٹبلشمنٹ سے ہاتھ ملانے میں دیر نہیں کرے گا لیڈر بننے کیلیے کسی شخصیت میں جو صلاحیتیں درکار ہوتی ہیں وہ نہ مریم میں ہیں اور نہ ہی حمزہ اور شہباز شریف میں ہیں. سچ پوچھیں تو مجھے مریم اور حمزہ تو ویسے ہی دو نمبری لگتے ہیں. اسکی وجہ غالبا یہ ہو سکتی ہے کہ میں سیاست میں وراثت کا قائل نہیں ہوں. یہ لوگ اپنی محنت اور قابلیت کی بنیاد پر پارٹی میں آگے آئے ہوتے تو وہ الگ بات ہوتی لیکن انہیں جس طریقے سے پارٹی کے سر پر بٹھایا گیا ہے مجھے اس سے نفرت ہے. شہباز شریف البتہ ایک اچھا منتظم ہے لیکن اچھا سیاست دان نہیں ہے. اس نے پنجاب میں ڈیلیور کرکے دکھایا ہے اور پنجاب کو ترقی دی ہے جسے ہر کوئی دیکھ سکتا ہے. میں شہباز شریف کے کو اداروں کا ماما بننے اور اسٹبلشمنٹ کے کھل کر بوٹ چاٹنے کی وجہ سے نا پسند کرتا ہوں. ممکن ہے کہ پاکستان کی سیاست کو مد نظر رکھتے ہوئے کچھ لوگ اسے درست سمجھتے ہوں لیکن اسے اسٹبلشمنٹ کے بوٹ چاٹنے سے کیا حاصل ہوا ہے؟ اس پر اور اسکی فیملی کے ساتھ بھی اسٹبلشمنٹ وہی کچھ کر رہی ہے جو کچھ اس نے نواز شریف اور اسکی فیملی کے ساتھ کیا ہے. شہباز شریف جو کچھ بھی ہے وہ نواز شریف کی وجہ سے ہے. نواز شریف کی حمایت کے بغیر اسکی اسٹبلشمنٹ کے نزدیک تو کوئی حیثیت ہو سکتی ہے لیکن عوام میں اسکی حیثیت زیرو ہوگی

    باوا جی …شہباز شریف  نے آرمی کے ٹنوں وزنی بالز اٹھانے میں کوئی کسر نہیں اٹھا رکھی لیکن اس پر برا وقت اس لیے آیا ہے کہ وہ  مائنس نواز و مریم آپریشن کرنے میں ناکام رہا ہے …اس کی دو وجوہات ہیں …یا تو وہ مروت میں بڑے بھائی کی پیٹھ میں چھرا گھونپنا نہیں چاہتا یا اس قابل نہیں کہ بغاوت کرکے پارٹی پر قبضہ کرسکے …مجھے ذاتی طور پر آخر الذکر بات ٹھیک لگتی ہے

    اور شہباز شریف کیا خاک اچھا منتظم ہے ….اگر پنجاب نے تھوڑی بہت ترقی کر بھی لی ہے تو شہباز شریف کی وجہ سے نہیں بلکہ شہباز شریف کے باوجود کی ہے

    جلسوں میں مائیک توڑنے ..گانے گانے …اور میٹرو بس اور اورنج ٹرین کے منصوبوں میں اربوں روپیہ ترکوں کو سونپنے کے علاوہ اس کی کیا کارکردگی ہے…ایک چپراسی بھی اس کی منظوری کے بغیر بھرتی نہیں ہوسکتا …اختیارات کے انتہائی ارتکاز اس کے عھدے میں تھا ..درجنوں  وزارتیں اپنی بغل میں دبائے رکھتا تھا …یہ ایک میئر تو ہوسکتا تھا مگر وزیراعظم؟

    • This reply was modified 6 months ago by  Qarar.
    #86
    SaleemRaza
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 668
    • Posts: 11981
    • Total Posts: 12649
    • Join Date:
      13 Oct, 2016
    • Location: سہراب گوٹھ ۔

    Re: میثاق جمهوریت 2.0

    باوا جی …شہباز شریف نے آرمی کے ٹنوں وزنی بالز اٹھانے میں کوئی کسر نہیں اٹھا رکھی لیکن اس پر برا وقت اس لیے آیا ہے کہ وہ مائنس نواز و مریم آپریشن کرنے میں ناکام رہا ہے …اس کی دو وجوہات ہیں …یا تو وہ مروت میں بڑے بھائی کی پیٹھ میں چھرا گھونپنا نہیں چاہتا یا اس قابل نہیں کہ بغاوت کرکے پارٹی پر قبضہ کرسکے …مجھے ذاتی طور پر آخر الذکر بات ٹھیک لگتی ہے اور شہباز شریف کیا خاک اچھا منتظم ہے ….اگر پنجاب نے تھوڑی بہت ترقی کر بھی لی ہے تو شہباز شریف کی وجہ سے نہیں بلکہ شہباز شریف کے باوجود کی ہے جلسوں میں مائیک توڑنے ..گانے گانے …اور میٹرو بس اور اورنج ٹرین کے منصوبوں میں اربوں روپیہ ترکوں کو سونپنے کے علاوہ اس کی کیا کارکردگی ہے…ایک چپراسی بھی اس کی منظوری کے بغیر بھرتی نہیں ہوسکتا …اختیارات کے انتہائی ارتکاز اس کے عھدے میں تھا ..درجنوں وزارتیں اپنی بغل میں دبائے رکھتا تھا …یہ ایک میئر تو ہوسکتا تھا مگر وزیراعظم؟

    اقرار صاحب ۔۔

    ن لیگ میں دہ دھڑے ہیں ۔۔۔۔ایک دھڑا خالص شہباز کا حامی ہے ۔۔۔۔۔اور دوسرا نواز شریف کا ۔۔۔۔اب طرف کے دھڑے  اس غم میں مبتلا ہیں کہہ انہوں نے آپنے وارث لانچ کر دیے ہیں ۔۔ہم کبھی بھی پارٹی کی قیادت نہیں سمبھال سکیں گے ۔۔۔آپ دیکھ لیجے گا اگر  مریم صاحبہ نے کوئی تحریک چلانے کی کوشش کی تو وہ بھی کامیاب نہیں ہوگی ۔۔اور اگر حمزہ نے کی تو وہ بھی کامیاب نہیں ہوگا ۔۔۔۔

    جب نواز لندن سے واپس آیا تو جس طرح شہباز شریف  ایرپورٹ نہیں پہنچا تھا۔ اسی طرح شہبازشریف کے آنے پر بہت سارے لیگی  لیڈر ائرپورٹ نہیں گئے ۔۔۔اور خاص کرکے خواجہ برادر کو تو آپنی قیادت پر بہت رنج ہے کہہ پارٹی نے انہوں کا مقدمہ صیح طور پر نہیں لڑا ۔۔۔۔۔

    #87
    SaleemRaza
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 668
    • Posts: 11981
    • Total Posts: 12649
    • Join Date:
      13 Oct, 2016
    • Location: سہراب گوٹھ ۔

    Re: میثاق جمهوریت 2.0

    ایاز امیر صاحب سے بات ہوئی تو آپ کا پیغام پہنچا دوں گا۔۔۔۔۔ ;-) :cwl: ;-) مزید برآں آپ کا مرض بہت تیزی سے لاعلاج ہونے کی حالت تک پہنچتا دکھائی دے رہا ہے کہیں ایسا دن نہ آجائے کہ لوگوں کو آپ کے ساتھ بحث کے فوراً بعد احتیاطی تدابیر کے طور پر انجیکشن لگوانا پڑیں۔۔۔۔۔۔ ابھی کچھ وقت ہے۔۔۔۔۔ اِس بارے میں بھی کچھ کیجئے۔۔۔۔۔ آپ کی خیریت چاہنے والا۔۔۔۔۔ بلیک شیپ۔۔۔۔۔ :) ;-) :)

    :lol: :lol: :lol: :lol: :lol: :lol: :lol: :lol: :lol:

    #88
    SaleemRaza
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 668
    • Posts: 11981
    • Total Posts: 12649
    • Join Date:
      13 Oct, 2016
    • Location: سہراب گوٹھ ۔

    Re: میثاق جمهوریت 2.0

    پرانے فورم پر میرے ایک مینٹور ہوتے تھے۔۔۔۔۔ بہت کچھ سکھایا انہوں نے مجھے۔۔۔۔۔ سالوں پہلے جب معاملات کو ایک ہی زاویہ نگاہ سے دیکھا کرتا تھا تو اُس وقت اُنہوں نے مجھے معاشروں میں تنوع(ڈائیورسٹی) کے تصور کو بہت اچھی طرح سمجھایا کہ انسانی معاشروں میں یہ کیوں ضروری ہے۔۔۔۔۔ تو مجھے مثالیت پسند حضرات قطعاً برے نہیں لگتے بلکہ مَیں خود اِن کا وجود کسی بھی معاشرے کیلئے ضروری سمجھتا ہوں۔۔۔۔۔ مختلف نکتہِ نظر رکھنا کوئی مسئلہ نہیں ہوتا بلکہ میرے ذاتی خیال میں ایک زندہ معاشرے میں ایسا ہی ہونا چاہئے۔۔۔۔۔ اور جہاں تک اِس فورم کے یا پچھلے فورم کے دو نمبر آئیڈلسٹ حضرات کی بات ہے تو یہ بھی ضرور معاشرے میں ہونے چاہئے۔۔۔۔۔ ویسے بھی عزیز میاں کی ایک قوالی میں ایک شاندار جملہ ہے کہ کُفر ہے اتنا پارسا رہنا۔۔۔۔۔ اِن کی دو نمبریاں بھی بالکل گوارا ہیں۔۔۔۔۔ میرے خیال میں تو ہر ایک کے اپنے اپنے اوتار ہیں۔۔۔۔۔ اور میرے جیسے بدنصیب لوگ، جن کے پاس حتیٰ کہ دکھاوا کرنے کیلئے بھی ایسے ایسے جمہوری دیوتا نہیں ہیں، وہ آستانہِ جمہوریہ کے نکالے ہوئے ہیں، راندہِ درگاہ ہیں۔۔۔۔۔ :.( ;-) :.(

    آستانہ میں واپسی کا ٹکٹ 5 پونڈ کا ہے ۔۔کہیں تو لگاوں فون الطاف بھائی کو ۔

    :bigsmile:

    #89
    پرولتاری درویش
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 5
    • Posts: 341
    • Total Posts: 346
    • Join Date:
      29 May, 2019
    • Location: Lea

    Re: میثاق جمهوریت 2.0

    جمہوریت اور اظہار راۓ کی آزادی کا ساتھ ساتھ ہونا ضروری ہے …جس معاشرے میں بھی اظہار راۓ کی آزادی نہیں ہے وہاں جمہوریت کمزور ہی رہے گی

    Is democracy weak in India? If yes, then what is making it weak and what is the purpose of having a futile exercise every five years?

    India’s example is quoted here because we are twin nations with a lot of similarities and India has the democracy we or more appropriately our pol leaders dream for. From this perspective, the above correlation appears a fallacy.

    Again, excluding the Western democracies, is there any region or the country in the world whose progress (both growth and development) in the last 70 years (our age as a nation) can be attributed to the existence of the twin factors of press freedom and democratic process? From this perspective also, the above correlation appears a fallacy.

    Therefore, what we need to understand is that pol evolution and credible democratic decision making are a subset of socio-eco evolution. The latter is a prerequisite for the former to have a meaningful transition. Otherwise harking on and harping for democracy, we would be stuck in time like we have been for the last 50 years or be toiling and trudging along like India; and life will remain a crucifying punishment for faceless and voiceless teeming millions and their aspirations.

    #90
    BlackSheep
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 15
    • Posts: 2318
    • Total Posts: 2333
    • Join Date:
      11 Feb, 2017
    • Location: عالمِ غیب

    Re: میثاق جمهوریت 2.0

    بلیک شیپ صاحب …میں آپ سے اختلاف کرنے کی جسارت کرنا چاہوں گا ..ایاز امیر کا کالم اپنے آپ میں تضادات کا شکار ہے اور اس کا کالم ادھوری معلومات پر بھی مشتمل ہے جمہوریت اور اظہار راۓ کی آزادی کا ساتھ ساتھ ہونا ضروری ہے …جس معاشرے میں بھی اظہار راۓ کی آزادی نہیں ہے وہاں جمہوریت کمزور ہی رہے گی …ایاز امیر نے بھی وہی راگ سلطانی الاپا ہے کہ سیاستدان کرپٹ ہیں اور ان کا کردار اس قابل نہیں کہ یہ فوج کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال سکیں ….لیکن آپ اور میں اچھی طرح جانتے ہیں کہ کرپشن میں آرمی شاید سب سے آگے ہے …اربوں کے دفاعی بجٹ کا نہ تو کوئی پبلک آڈٹ ہوتا ہے اور نہ ہی کوئی فوج سے ایک روپے کا حساب مانگ سکتا ہے ….صرف قومی بجٹ میں یک سطری حصہ ہوتا ہے کہ فوج کو کتنے پیسے فراہم کیے جارہے ہیں …اگر میڈیا کو فوج کا گند عوام کے سامنے لانے کا موقع ہو تو عوام میں فوج کی مقدس گاۓ والی حیثیت ختم ہوجاۓ …اور اکثریت جمہوریت پر زیادہ اعتماد بھی کرے گی …سنسر شپ شدہ میڈیا آپ کو ہمیشہ ایک تصویر دکھاتا ہے ایاز امیر نے کتنی کور کمانڈر میٹنگز میں شرکت کی ہے جو اتنے وثوق سے ان کے پروفیشنلزم کی قسمیں کھا رہا ہے…ان ڈگریوں کا کیا فائدہ جس کو اپنے حلف کی پاسداری کرنا نہیں آتی بڑے بڑے پرہے لکھے لوگوں کو میں نے جمہوریت کے بارے میں کہتے سنا ہے کہ عوام کو تو بجلی چاہیے ..نوکری چاہیے ..قیمتیں سستی چاہئیں ..انہیں کیا غرض کہ ڈکٹیٹر انہیں یہ چیزیں دے یا ایک جمہوری نظام جمہوریت کا ڈلیور کرنے یا خوشالی لانے یا بجلی لانے سے کوئی تعلق نہیں …جمہوریت صرف آپ کو حق دیتی ہے کہ آپ اپنے لیڈر کو چن سکیں (یہ حق آرمی رول میں عوام کے پاس نہیں) جیسا لیڈر عوام چنیں گے ویسی ہی کاردگی سامنے آئے گی …فائدہ صرف یہ ہے کہ چار پانچ سال بعد عوام کو اپنی غلطی درست کرنے کا موقع بھی ملتا ہے …لیکن یہ بھی ممکن ہے کہ چار پانچ جمہوری حکومتیں بھی کچھ نہ ڈلیور کرسکیں …لیکن عوام کی مشق جاری رہتی ہے بعض دفعہ عوام خود بھی اپنی بدحالی کے ذمہ ہوتے ہیں … پاکستان کی اکثریت افغانستان میں پاکستانی جھنڈا لہرانے (یعنی مداخلت کرنے) کے خلاف نہیں .اور طالبان کی حمایت کرتے ہیں ..اور کوئی بھی جمہوری حکمران اس پالیسی کو تبدیل نہیں کروا سکتا …فوج اور عوام دونوں ایک پیج پر ہیں اسی طرح کشمیر اور جہاد والے مسئلے میں بھی عوام کی اکثریت اور فوج ساتھ ساتھ ہیں آپ بتائیے کہ پاکستان کی اکانومی ساڑھے تین فیصد پر کیوں نہ آئے؟ …خارجہ پالیسی نے پاکستان کو دنیا میں تنہا کردیا ہے اور اندرونی امن امان کی حالت کسی بھی بیرونی سرمایا کاری کے لیے موزوں نہیں …تو ملک آگے کیسے بڑھے؟ جو بھی جمہوری حکمران …پہلے بینظر اور بعد میں نواز شریف انڈیا سے تعلقات بہتر بنانا چاہتا ہے اس پر غداری کے لیبل چسپاں کردیے جاتے ہیں …جمہوری لیڈر بھی کیا کریں ..ساری قوم جہادی ہے …پھر عوام بھی کیا معصومیت سے سوال کرتے ہیں کہ ملک انڈیا کی طرح ترقی کیوں نہیں کرتا

    قرار صاحب۔۔۔۔۔

    فیض صاحب سے منسوب ایک واقعہ ہے۔۔۔۔۔ ایک دفعہ اُن کا ایک جاننے والا اُن سے ملنے آیا، ملکی حالات پر بات ہورہی تھی، اُن صاحب نے فیض صاحب سے کہا ہے کہ فیض صاحب اِس ملک کا کیا بنے گا، یہ ملک کیسے چلے گا، فیض صاحب نے اطمینان سے سگریٹ سُلگائی کش لیا اور پھر انتہائی سُکون سے کہا کہ بھئی جیسے چل رہا ہے ویسے ہی چلتا رہے گا۔۔۔۔۔ تو قرار صاحب میرا بھی فیض صاحب کی اِس بات پر یقین ہے یہ ملک ایسے ہی چلتا رہے گا، ملک کی کیا فکر کرنی۔۔۔۔۔ جمہوری عزادار ہیں ناں ملک کی فکر گھلنے کیلئے۔۔۔۔۔ یہ کافی ہیں۔۔۔۔۔

    دیکھیں۔۔۔۔۔ مَیں آپ ہم سب مختلف اوقات میں رئیلسٹ اور آئیڈلسٹ کی ٹوپیاں پہنتے رہتے ہیں۔۔۔۔۔ کسی معاملہ میں ہم آئیڈلسٹ ہوجاتے ہیں تو کبھی انتہائی پریگمٹسٹ۔۔۔۔۔ اور مَیں اِس عمل کو اَیزسچ کوئی بہت بُرا نہیں سمجھتا۔۔۔۔۔ البتہ اِس پر ضرور زور دیتا ہوں کہ جو بھی پوزیشن لی ہے چاہے وابستگی ہو، عقیدت ہو، نفرت ہو اُس کو کم از کم اون ضرور کرو۔۔۔۔۔   اب جہاں تک پاکستانی ملٹری کی سیاسی معاملات میں مداخلت ہے تو یقینی طور پر یہ میرے لئے یہ غلط ہے۔۔۔۔۔  عمومی طور پر سیاسی معاملات اچھے سیاستدان ہی بخوبی چلاسکتے ہیں(البتہ ڈکٹیٹرشپ میں بھی مادی ترقی بالکل ممکن ہے، چائنا اور دبئی اِس کی مثالیں ہیں، مگر نظریاتی طور پر ترقی ممکن نہیں)۔۔۔۔۔ یہ تو ہے ایک آئیڈلسٹ پوزیشن۔۔۔۔۔ ایک مکمل کتابی بات ہے۔۔۔۔۔ اور مَیں ایک مثالیت پسند کے طور پر اِس سے بالکل اتفاق کرتا ہوں کہ ایسا ہی ہونا چاہئے۔۔۔۔۔

    لیکن اگر تھوڑا رئیلسٹ ہو کر دیکھا جائے تو پاکستانی ملٹری ساٹھ پینسٹھ سال سے ملک پر ایک بالادست قوت کے طور پر موجود ہے۔۔۔۔۔ طاقت کا توازن ملٹری کی طرف جھکا ہوا ہے۔۔۔۔۔ میں بالکل مانتا ہوں۔۔۔۔۔ لیکن حقیقی زمینی صورتحال میں چاہے وہ فوج ہو کوئی اور ادارہ، اگر اُس ادارے کے پاس سویلینز سے زیادہ طاقت ہے تو وہ ادارہ سیاستدانوں کو ایسے ہی وہ طاقت واپس نہیں کرے گا۔۔۔۔۔ یہ سیاستدانوں کو لینی پڑے گی۔۔۔۔۔   لہٰذا بلی کے گلے میں گھنٹی کیسے اور کون باندھے گا۔۔۔۔۔ سیاستدانوں کو یہ طاقت بغیر کچھ کئے واپس نہیں ملنے والی۔۔۔۔۔ اور اِس کیلئے سیاستدانوں کو محنت کرنی پڑے گی۔۔۔۔۔  کیا فورم پر روزانہ کی بنیاد پر صبح شام سیاپا ڈالنے سے، رنڈی رونا مچانے سے حالات بہتر ہوسکتے ہیں۔۔۔۔۔ ملٹری کو گالیاں دینے سے حالات بہتر ہوسکتے ہیں۔۔۔۔۔ میرے خیال میں نہیں۔۔۔۔۔ کیا میاں صاحب کہیں گے کہ چونکہ اب مَیں اب نظریاتی بن گیا ہوں لہٰذا اب میری چلے گی اور ملٹری پیچھے ہٹ جائے۔۔۔۔۔ کیا ایسا ہوسکتا ہے۔۔۔۔۔ آپ خود سوچیں۔۔۔۔۔

    کیا آپ کو فی الوقت کوئی ایسا سیاستدان نظر آتا ہے جو فوج کے ساتھ طاقت کے توازن کو کچھ حد تک سیاستدانوں کی طرف جھکا سکے۔۔۔۔۔ مجھے تو نظر نہیں آتا۔۔۔۔۔ میرے خیال میں زرداری یہ معاملات نواز شریف سے زیادہ بہتر سمجھتا ہے اِسی وجہ سے اپنے پانچ سال نکال گیا۔۔۔۔۔ میاں صاحب کے بارے میں تو ایک لطیفہ مشہور ہے کہ تیر کہیں بلندی پر جارہا ہو اور میاں صاحب کی اُس پر نظر پڑجائے تو اچھل کر تیر پکڑ کر اپنی پیٹھ میں گھونپ لیں گے(کابونگا)۔۔۔۔۔

    تو ایاز امیر کے کالم کا جو اصل نکتہ تھا وہ یہ ہے کہ جو طاقت آج ملٹری کے پاس ہے آپ(سیاستدان) وہ کیسے واپس حاصل کرسکتے ہو۔۔۔۔۔ اور وہ نکتہ یہی ہے کہ سیاستدان کے پاس ہتھیار کبھی بھی نہیں ہوں گے، اُن کے پاس صرف اپنا کردار، معاملہ فہمی، اہلیت، دانش مندی اور طرزِ عمل ہوگا جس کی بنیاد پر  وہ ملٹری سے کچھ لے سکتے ہیں۔۔۔۔۔ اور مَیں اِس نکتہ سے متفق ہوں۔۔۔۔۔

    اور آپ خود کہتے ہیں کہ پاکستان کے عوام بھی ملٹری کو پسند کرتے ہیں، اور میرے خیال میں پاکستان میں فوج کو عمومی طور پر عوام میں اپنی حمایت حاصل کرنے کیلیے ہتھیار استعمال کرنے کی ضرورت نہیں پڑتی بلکہ وہ سیاستدانوں کے مقابلے میں دوسرے زیادہ بہتر نفسیاتی حُربے استعمال کرتے ہیں، جیسا کہ مذہب اور حُب الوطنی۔۔۔۔۔

    اور جہاں تک ملٹری میں کرپشن کی بات ہے تو میرے خیال میں یقیناً پردے کے پیچھے ہوتی ہوگی، تو پھر معاملہ دو چوروں کے درمیان ہے، سیاستدان اور ملٹری، لیکن ایک چور بہت طاقتور ہے، اب کیا کیا جائے۔۔۔۔۔ اُس طاقتور چور کا آخر کیا کیا جائے کہ وہ سُدھر جائے۔۔۔۔۔

    #92
    پرولتاری درویش
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 5
    • Posts: 341
    • Total Posts: 346
    • Join Date:
      29 May, 2019
    • Location: Lea

    Re: میثاق جمهوریت 2.0

     اور جہاں تک اِس فورم کے یا پچھلے فورم کے دو نمبر آئیڈلسٹ حضرات کی بات ہے تو یہ بھی ضرور معاشرے میں ہونے چاہئے۔۔۔۔۔ ویسے بھی عزیز میاں کی ایک قوالی میں ایک شاندار جملہ ہے کہ کُفر ہے اتنا پارسا رہنا۔۔۔۔۔ اِن کی دو نمبریاں بھی بالکل گوارا ہیں۔۔۔۔۔ میرے خیال میں تو ہر ایک کے اپنے اپنے اوتار ہیں۔۔۔۔۔

    You are entitled to that poetic license for these good for nothing do-numbris. For me, however, the idiocy and the stubbornness of these pseudo idealists who are bereft of any alternative solution or strategy and the sheer selfishness of existing pol class is very very demeaning and excruciating. There must be a way out of this impasse and some balm for the pain and sufferings for the voiceless and the faceless millions.

    In the words of Faiz:

    Abb bhi dil-kash hy tera husn, magr kia kejiye

    Laut jati hy udher ko bhi nazr, magr kia kejiye

    #93
    پرولتاری درویش
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 5
    • Posts: 341
    • Total Posts: 346
    • Join Date:
      29 May, 2019
    • Location: Lea

    Re: میثاق جمهوریت 2.0

    Until their mother is alive, forget that younger Sharif will ever revolt against or part ways with the elder. Even after her death, there is very little likelihood that anything to that effect will happen, simply for the reason that both older Sharifs are brought up by classical eastern tradition where younger ones have the utmost respect for the elders.

    To realize this dream of effectively breaking PMLn into two, GHQ would have to wait for the natural death of MnS or play some other trick to that effect.

    #94
    BlackSheep
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 15
    • Posts: 2318
    • Total Posts: 2333
    • Join Date:
      11 Feb, 2017
    • Location: عالمِ غیب

    Re: میثاق جمهوریت 2.0

    In the words of Faiz:
    Abb bhi dil-kash hy tera husn, magr kia kejiye
    Laut jati hy udher ko bhi nazr, magr kia kejiye

    پرولتاری دُرویش۔۔۔۔۔

    باقی باتیں بعد میں لیکن میرے خیال میں فیض کی یہ لازوال سطریں رومن اُردو میں لکھنا فیض کی رُوح کے ساتھ بھی زیادتی ہے۔۔۔۔۔

    :omg: ;-) :omg:

    • This reply was modified 6 months ago by  BlackSheep.
    #94
    casanova
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 0
    • Posts: 472
    • Total Posts: 472
    • Join Date:
      4 Sep, 2018
    • Location: گلشن گلشن

    Re: میثاق جمهوریت 2.0

    Until their mother is alive, forget that younger Sharif will ever revolt against or part ways with the elder. Even after her death, there is very little likelihood that anything to that effect will happen, simply for the reason that both older Sharifs are brought up by classical eastern tradition where younger ones have the utmost respect for the elders. To realize this dream of effectively breaking PMLn into two, GHQ would have to wait for the natural death of MnS or play some other trick to that effect.

    درویش جی! آپ  کا اتنی  گہرائی میں جا کر دانش کو لتاڑنے کا ہنر ۔۔ کمال ہو گیا۔۔اقتدار و طاقت کا نشہ مشرقی تہذیب کی مؤدبانہ چھتر چھایہ میں پلتے ہوئے گنجا ہو گیا لیکن اسکے ارمانوں میں  مچلنے، پھڑکانے، تڑپانے کا شائبہ بھی نہ رہا۔۔کمال ہو گیا

    #95
    Guilty
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 0
    • Posts: 4298
    • Total Posts: 4298
    • Join Date:
      6 Nov, 2016

    Re: میثاق جمهوریت 2.0

    پھدو ایاز میر ۔۔۔۔۔ نے اپنے کا لم میں ایک دو باتیں بہت ہی ۔۔۔۔۔ تاریخی رقم کرنے والی کردی ہیں ۔۔۔۔۔۔

    پھدو دانشور ایاز میر ۔۔۔۔ فرماتے ہیں کہ ۔۔۔۔۔۔ بے نظیر کی کیبنٹ میں ۔۔۔۔۔ نوازشریف کی کیبنٹ میں ۔۔۔۔۔۔ کسی پیچیدہ قوم فارن پا لیسی پر گفتگو نہیں ہوتی تھی ۔۔۔۔

    بے نظیر ۔۔۔۔ یا نوازشریف ۔۔۔۔ کی کیبنٹ ۔۔۔ یا مینٹنگ میں ۔۔۔۔۔۔ صرف ۔۔۔۔۔ خوشامدانہ ۔۔۔۔۔ ستا ئشتی ۔۔۔۔۔ جملہ بازیاں ہوتی تھین ۔۔۔۔

    اور سیا ستدانوں کو ۔۔۔۔ افغانستان کے ۔۔۔۔ نقشے تک کا پتہ نہیں ہوتا تھا۔۔۔۔۔۔۔

    جب  کہ ملٹری والوں کو افغا نستان ۔۔۔ ترکی ۔۔۔۔ ملا ئیشا کے سارے نقشوں کا پتہ ہوتا تھا اور وہ تیاری سے آتے تھے ۔۔۔۔۔۔

    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

    یہ تاریخی ۔۔۔۔ اندرونی کمنٹری ۔۔۔۔۔ واضح کرتی ہے ۔۔۔۔۔ پا کستان کے تمام پیچیدہ ۔۔۔۔۔ قومی فارن ۔۔۔۔۔ مسائل ۔۔۔۔ سیاستدان طے نہیں کرتے تھے وہ صرف زاتی خوشامد انہ معاملات  کرتے تھے ۔۔۔۔

    پیچدہ مسائل ۔۔۔۔ فارن نقشوں کی تیاری ۔۔۔۔۔ ملٹری کرتی تھی ۔۔۔۔۔۔۔۔

    ۔۔۔۔۔۔اور بنگلہ دیش سے لیکر ۔۔۔۔۔ کشمیر ۔۔۔۔ کابل ۔۔۔۔ کوئٹہ ۔۔۔۔ وزیرستان ۔۔۔۔ تک ۔۔۔۔ ملک کا بیٹرہ غرق کرنے والے ۔۔۔۔۔

    وہ چوتیا ۔۔۔۔ جرنیل ہی ہیں ۔۔۔۔ جن کا سارے نقشے زبانی یاد ہوتے تھے اور جو تیاری کرکے آتے تھے ۔۔۔۔۔۔

    ملک کے سیاستدان چونکہ صرف ۔۔۔۔ خوشامدا نہ ۔۔۔۔ زاتیا نہ ۔۔۔۔۔ مسائل طے کرتے تھے ۔۔۔۔۔

    اس لیئے ۔۔۔۔۔ ملک کی جڑوں میں  ۔۔۔۔ ملڑی ۔۔۔۔ اکیلے ہی نقشوں کی تیاری کے ۔۔۔۔۔ ساتھ ۔۔۔۔۔ تیل دیتی رھتی تھی ۔۔۔۔۔

    ۔۔۔۔۔

    مطلب مستقبل کی جنریشن ان پھدو دا نشوروں ۔۔۔۔ اور پھدو عوام ۔۔۔۔ کے ایسے کا لم کو ۔۔۔۔ وٹ نیس کریں گی ۔۔۔ کہ

    پا کستان ایک مکمل طور پر فوجی ملک تھا ۔۔۔۔۔ جس کے فارن پڑوس کے معاملات اور ۔۔۔ جنگی تناو ۔۔۔۔ جنگی جنون میں مبتلا فوج کے ھاتھوں میں رھتے تھے ۔۔۔۔

    بلکہ اس ملک کے اندرونی ۔۔۔۔ سیاسی ۔۔۔۔ معا ملات بھی ۔۔۔۔ فوجی ۔۔۔ اور ۔۔۔ سرکاری عد لیہ  کی ملی بھگت سے ۔۔۔۔  تیاری کرکے چلا تے تھے ۔۔۔۔۔۔۔

    اور اس لیئے یہ ملک ۔۔۔۔۔ بیڑہ غرق ہوگیا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔

    • This reply was modified 6 months ago by  Guilty.
    #96
    Qarar
    Participant
    Offline
    Thread Starter
    • Professional
    • Threads: 101
    • Posts: 2485
    • Total Posts: 2586
    • Join Date:
      5 Jan, 2017

    Re: میثاق جمهوریت 2.0

    Is democracy weak in India? If yes, then what is making it weak and what is the purpose of having a futile exercise every five years? India’s example is quoted here because we are twin nations with a lot of similarities and India has the democracy we or more appropriately our pol leaders dream for. From this perspective, the above correlation appears a fallacy. Again, excluding the Western democracies, is there any region or the country in the world whose progress (both growth and development) in the last 70 years (our age as a nation) can be attributed to the existence of the twin factors of press freedom and democratic process? From this perspective also, the above correlation appears a fallacy. Therefore, what we need to understand is that pol evolution and credible democratic decision making are a subset of socio-eco evolution. The latter is a prerequisite for the former to have a meaningful transition. Otherwise harking on and harping for democracy, we would be stuck in time like we have been for the last 50 years or be toiling and trudging along like India; and life will remain a crucifying punishment for faceless and voiceless teeming millions and their aspirations.

    جناب … شاید آپ نے میرے پوسٹ پر سرسری  نظر ہی  ڈالی ہے کیونکہ میں نے یہ  نہیں لکھا کہ جمہوریت خوشحالی لاتی ہے بلکہ یہ کہا تھا کہ جمہوریت عوام کو اپنا لیڈر خود چننے کا اختیار دیتی ہے …یہ عوام پر منحصر ہے کہ وہ کونسا لیڈر چنتے ہیں …آپ  فیراری  کار خرید کر ایک سائیکل چلانے والے کو ڈرائیور رکھ لیں تو قصور کار کا نہیں ہوگا

    آپ سے سوال یہ بھی ہے کہ جب تک سوشیو اکنامک ریفارمز کی شکل میں پہلا مرحلہ مکمل نہیں ہوجاتا تو اس وقت تک …جمہوریت نہیں تو کس نظام کے تحت ملک کو  چلایا جاۓ؟

    بھارت میں جمہوریت کافی کامیاب ہے اور پریس کی آزادی بھی …اور وہاں آرمی والے اخباروں  اشتہارات پر پابندی نہیں لگاتے …کیبل آپریٹرز کو دھمکی آمیز کالیں کرکے ٹی وی چینل بند نہیں کرتے …صحافیوں کی ٹارگٹ کلنگ نہیں کرتے …اور نہ ہی دھرنے والوں کو پیسے بانٹتے ہیں…اور پارلیمنٹ میں کہے گئے ہر لفظ کو مکمل تحفظ حاصل ہے

    پاکستان میں جمہوریت ہوتی ..مارشل لاء ہوتا یا کچھ اور ….ترقی کی رفتار بھارت کے لگ بھگ ہی ہوتی اگر قوم جہادی سرگرمیوں میں ملوث ہو کر اکانومی کا بیڑا غرق نہ کرتی

    کسی قوم کی نظریاتی اور فکری آسودگی … اور بنیادی انسانی حقوق کے لیے جمہوریت بہت ضروری ہے …جمہوریت ایسے قوانین کی شکل میں  ٹولز فراہم کرتی ہے جن کو استعمال کرکے کمزور اور پسے ھوئے طبقات کا تحفظ ممکن ہے ….چیک اینڈ بیلنس کا نظام اپنی افادیت رکھتا ہے …معاشرے میں ہم آہنگی قائم کرنے کے لیے جس ڈائلاگ کی ضرورت ہے وہ جمہوریت میں ہی ممکن ہے
    لیکن یہ بھی ممکن ہے کچھ  حضرات کو صرف اکانومی سے غرض ہو اور انسانی حقوق زیادہ اہم نہ لگتے ہوں …میں کچھ عرصہ  چین میں رہا ہوں اور وہاں عام لوگوں کا نقطہ نظر یہ ہے کہ چین میں جمہوریت کی کوئی ضرورت نہیں …جمہوریت میں صرف لوگ بحث کرکے وقت ضائع کرتے ہیں …لہذا انہیں وہ لیڈر چاہیے جوکہ فوراً اور جلدی فیصلہ کرسکے
    میں ذاتی طور پر ایسے معاشرے میں نہیں  رہ سکتا جہاں مجھے بولنے اور لکھنے کی آزادی نہ تک نہ ہو …آزادیوں کی ویلیو صرف وہی انسان سمجھ سکتا ہے جس نے آزادی انجوے کی ہو ..اور پھر وہ آزادی  اس سے لے لی  جاۓ

    #97
    پرولتاری درویش
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 5
    • Posts: 341
    • Total Posts: 346
    • Join Date:
      29 May, 2019
    • Location: Lea

    Re: میثاق جمهوریت 2.0

    پرولتاری دُرویش۔۔۔۔۔ باقی باتیں بعد میں لیکن میرے خیال میں فیض کی یہ لازوال سطریں رومن اُردو میں لکھنا فیض کی رُوح کے ساتھ بھی زیادتی ہے۔۔۔۔۔ :omg: ;-) :omg:

    I respect your sensibility and can appreciate your ire with this issue. Unfortunately, my usual device has some keyboard glitch which makes it very cumbersome to type in Urdu. Whenever I get to use an alternative device, I prefer writing in Urdu, though I miss on the flow which comes relatively easily in English.

    #98
    پرولتاری درویش
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 5
    • Posts: 341
    • Total Posts: 346
    • Join Date:
      29 May, 2019
    • Location: Lea

    Re: میثاق جمهوریت 2.0

    جناب … شاید آپ نے میرے پوسٹ پر سرسری نظر ہی ڈالی ہے کیونکہ میں نے یہ نہیں لکھا کہ جمہوریت خوشحالی لاتی ہے بلکہ یہ کہا تھا کہ جمہوریت عوام کو اپنا لیڈر خود چننے کا اختیار دیتی ہے …یہ عوام پر منحصر ہے کہ وہ کونسا لیڈر چنتے ہیں …آپ فیراری کار خرید کر ایک سائیکل چلانے والے کو ڈرائیور رکھ لیں تو قصور کار کا نہیں ہوگا

    Thanks for addressing me.

    Your perception is not correct. I paid due attention to all the points you raised. Perhaps, I am unable to fully articulate the point I am trying to make on this thread.

    I am not deriding democracy for its inability to create wealth, not I am correlating the two. I am making a totally different point: advocating the rights to survival and shelter for 38% (or there about) of the 210 millio who are living below the poverty line in Pakland.

    آپ سے سوال یہ بھی ہے کہ جب تک سوشیو اکنامک ریفارمز کی شکل میں پہلا مرحلہ مکمل نہیں ہوجاتا تو اس وقت تک …جمہوریت نہیں تو کس نظام کے تحت ملک کو چلایا جاۓ؟

    Let me once again state my moral/principled position on security establishment and democracy: the former is a monster with an imperialistically exploitative character that is at the root of all ills this country is suffering from, while the latter is the best mechanism that human mind has discovered thru millennia of thought evolution to make collective decisions/solutions  by consensus or majority for the problems faced by a society.

    We both agree that the democratic process with all its slow grinding is the best alternative for our problem. now I have a counter question for you. What should we do if the best alternative is not available to or workig for us for any reason?? While answering please keep in mind the 38% of 210 million. What is the next best alternative when you cannot conquer the monster?

    بھارت میں جمہوریت کافی کامیاب ہے اور پریس کی آزادی بھی …اور وہاں آرمی والے اخباروں اشتہارات پر پابندی نہیں لگاتے …کیبل آپریٹرز کو دھمکی آمیز کالیں کرکے ٹی وی چینل بند نہیں کرتے …صحافیوں کی ٹارگٹ کلنگ نہیں کرتے …اور نہ ہی دھرنے والوں کو پیسے بانٹتے ہیں…اور پارلیمنٹ میں کہے گئے ہر لفظ کو مکمل تحفظ حاصل ہے

    The last I checked world press freedom index for Pak and India, we were almost at the same level. Before the advent of PTM, we were even better and we had more freedom on political expression.

     پاکستان میں جمہوریت ہوتی ..مارشل لاء ہوتا یا کچھ اور ….ترقی کی رفتار بھارت کے لگ بھگ ہی ہوتی اگر قوم جہادی سرگرمیوں میں ملوث ہو کر اکانومی کا بیڑا غرق نہ کرتی کسی قوم کی نظریاتی اور فکری آسودگی … اور بنیادی انسانی حقوق کے لیے جمہوریت بہت ضروری ہے …جمہوریت ایسے قوانین کی شکل میں ٹولز فراہم کرتی ہے جن کو استعمال کرکے کمزور اور پسے ھوئے طبقات کا تحفظ ممکن ہے ….چیک اینڈ بیلنس کا نظام اپنی افادیت رکھتا ہے …معاشرے میں ہم آہنگی قائم کرنے کے لیے جس ڈائلاگ کی ضرورت ہے وہ جمہوریت میں ہی ممکن ہے

    I think I have already answered this by the repetition of moral statement above and have absolutely no reason not to agree with you on this in theory. I have also given you the example of India where this theory does not apply fully. Would you still insist on its utmost effectiveness for a country having socio-eco make up like ours?

     لیکن یہ بھی ممکن ہے کچھ حضرات کو صرف اکانومی سے غرض ہو اور انسانی حقوق زیادہ اہم نہ لگتے ہوں …میں کچھ عرصہ چین میں رہا ہوں اور وہاں عام لوگوں کا نقطہ نظر یہ ہے کہ چین میں جمہوریت کی کوئی ضرورت نہیں …جمہوریت میں صرف لوگ بحث کرکے وقت ضائع کرتے ہیں …لہذا انہیں وہ لیڈر چاہیے جوکہ فوراً اور جلدی فیصلہ کرسکے

    I can easily relate to this as I also have had the opportunity to live in one such country. It is a psychological thing and understandable.

    میں ذاتی طور پر ایسے معاشرے میں نہیں رہ سکتا جہاں مجھے بولنے اور لکھنے کی آزادی نہ تک نہ ہو …آزادیوں کی ویلیو صرف وہی انسان سمجھ سکتا ہے جس نے آزادی انجوے کی ہو ..اور پھر وہ آزادی اس سے لے لی جاۓ

    In principle, no issue with this as well, as it is a matter of personal liberty and choice. However, I would refer you to Maslow’s hierarchy of needs for a little reflection while keeping mind 38% of 210 million.

    #99
    پرولتاری درویش
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 5
    • Posts: 341
    • Total Posts: 346
    • Join Date:
      29 May, 2019
    • Location: Lea

    Re: میثاق جمهوریت 2.0

    درویش جی! آپ کا اتنی گہرائی میں جا کر دانش کو لتاڑنے کا ہنر ۔۔ کمال ہو گیا۔۔اقتدار و طاقت کا نشہ مشرقی تہذیب کی مؤدبانہ چھتر چھایہ میں پلتے ہوئے گنجا ہو گیا لیکن اسکے ارمانوں میں مچلنے، پھڑکانے، تڑپانے کا شائبہ بھی نہ رہا۔۔کمال ہو گیا

    Thanks, dear Casanove!

    Feel humbled . . . .and kudos to yur expression . . :) . . .

    #100
    Ghost Protocol
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 135
    • Posts: 4230
    • Total Posts: 4365
    • Join Date:
      7 Jan, 2017

    Re: میثاق جمهوریت 2.0

    ایاز امیر صاحب سے بات ہوئی تو آپ کا پیغام پہنچا دوں گا۔۔۔۔۔ ;-) :cwl: ;-) مزید برآں آپ کا مرض بہت تیزی سے لاعلاج ہونے کی حالت تک پہنچتا دکھائی دے رہا ہے کہیں ایسا دن نہ آجائے کہ لوگوں کو آپ کے ساتھ بحث کے فوراً بعد احتیاطی تدابیر کے طور پر انجیکشن لگوانا پڑیں۔۔۔۔۔۔ ابھی کچھ وقت ہے۔۔۔۔۔ اِس بارے میں بھی کچھ کیجئے۔۔۔۔۔ آپ کی خیریت چاہنے والا۔۔۔۔۔ بلیک شیپ۔۔۔۔۔ :) ;-) :)

    فورم پر مختلف رنگی بھیڑوں کی تعداد بڑھنے پر آپ کی خوشی تو دیدنی ہے
    اللہ آپ کو ایسے ہی خوش خرم اور آباد رکھے

    :cwl: :cwl: :cwl:

Viewing 20 posts - 81 through 100 (of 101 total)

You must be logged in to reply to this topic.

Navigation

Do NOT follow this link or you will be banned from the site!