Thread: مولوی مالدار کیسے ہوا ؟

Home Forums Siasi Discussion مولوی مالدار کیسے ہوا ؟

This topic contains 0 replies, has 1 voice, and was last updated by  حسن داور 5 months ago. This post has been viewed 61 times

Viewing 1 post (of 1 total)
  • Author
    Posts
  • #1
    حسن داور
    Participant
    Offline
    Thread Starter
    • Professional
    • Threads: 2747
    • Posts: 1702
    • Total Posts: 4449
    • Join Date:
      8 Nov, 2016

    Re: مولوی مالدار کیسے ہوا ؟

    مولوی مالدار کیسے ہوا ؟ یہ بہت دلچسپ سوال ہے۔ میں چونکہ ہوں مولوی لیکن زندگی صحافت کی نسبت سے دانشور طبقے میں ہی گزاری ہے اس لئے ان دونوں طبقات کو یکساں جانتا ہوں۔ دونوں کی بود باش، شوق و ذوق اور سوچنے کے معیارات سمیت ہر خوبی اور عیب سے آگاہ ہوں۔ سو یہ میں ہی جانتا ہوں کہ مولوی مالدار کیسے ہوا۔ ہوا کچھ یوں کہ 80 کی دہائی کے آخر میں امریکہ میں ایک رپورٹ شائع ہوئی جس میں مولوی کو پاکستان آرمی کے بعد سب سے بڑی قوت بتایا گیا۔ اتنی بڑی قوت کہ “جاگیردار” کا نمبر بھی ان کے بعد آتا تھا۔ افغان جہاد کے دوران پاک فوج اور مولوی یعنی پاکستان کی پہلی دو بڑی قوتیں متحد ہوگئی تھیں۔ یہ اسی اتحاد کی “برکت” تھی کہ جنرل ضیاء سے قبل والے فوجی سربراہوں کا کلیدی بیان تو یہ ہوتا

    پاک فوج وطن کی جغرافیائی سرحدوں کی محافظ ہے

    جبکہ جنرل ضیاء اور ان کے بعد والے فوجی سربراہوں کا بیان یہ ہوگیا

    پاک فوج ملک کی جغرافیائی و نظریاتی سرحدوں کی محافظ ہے

    ظاہر ہے یہ “نظریاتی ریاستوں” کے مخالف امریکہ کے لئے قابل قبول نہ تھا۔ لیکن امریکہ کو اپنے ڈالروں پر بڑا ناز ہے، جس کی ایک جھلک آپ ڈونلڈ ٹرمپ کے حالیہ بیانات میں بھی دیکھ چکے۔ پاکستان میں اپنے مفادات کو لاحق مستقبل کے اس خطرے کے تدارک کے لئے امریکہ نے 80 کی دہائی کے آخر میں این جی اوز کی پاکستان میں بھرمار کردی۔ یہ این جی اوز در اصل ڈالروں کی وہ نئی پائپ لائنیں تھیں جو لبرلز کے لئے بچھائی جا رہی تھیں۔ اور لبرلز نے ان کی مدد سے مولوی کے راستے روکنے تھے۔ یوں مولوی پر 80 کی دہائی کے آخر سے وہ سائیکو لاجیکل وار فیئر مسلط ہوگئی جس میں مین  اسٹریم میڈیا سے ایسے کالمز، رپورٹس اور کارٹون آنے لگے جن میں دبا کر مولوی کی تذلیل، تحقیر اور توہین ہوتی۔ جب احمد ندیم قاسمی کے پائے کے آدمی نے بھی جنگ جیسے بڑے اخبار میں یہ لکھنا شروع کردیا کہ “زکوۃ پر پلنے والا مولوی کھائے گا کہاں سے ؟  تو کراچی کے بڑے بڑے سیٹھ یہ سوچ کر پریشان ہوگئے کہ

    “اگر مولوی غربت کی حالت میں ہی مر گئے تو محشر میں خدا کو کیا منہ دکھائیں گے ؟ لعنت ہو اس دولت پر جس میں مولوی جیسے “سب سے بڑے غریب” کا حصہ نہ ہو

    یوں سیٹھوں نے تجوریوں کا رخ مولویوں کی جانب موڑ دیا۔ اگر آپ کو یقین نہیں آتا تو گرم کافی کی چسکیاں لیتے ہوئے خود ہی غور کر لیجئے کہ 80 کی دہائی تک مولویوں کی مالی حالت کیا تھی اور احمد ندیم قاسمی و ہمنواؤں کے پروپیگنڈوں کے بعد اس میں کس تیزی سے تبدیلی رونما ہوئی۔ سو ہم مولوی عالی مرتبت احمد ندیم قاسمی مرحوم کو اپنے ان محسنوں کا سرخیل سمجھتے ہیں جنہوں نے ہماری غربت کا ڈھول تب تک پیٹا جب تک ہمیں امیر نہ بنوا دیا۔ میری تو تجویز ہوگی کہ جامعۃ الرشید والے اپنے زیر تعمیر لاہور کیمپس میں احمد ندیم قاسمی صاحب کی کوئی یادگار بھی تعمیر کرائیں جہاں دورہ لاہور کے موقع پر ہم پھولوں کی چادر چڑھا کر اپنے اس عظیم محسن کی خدمات کو خراج عقیدت پیش کر لیا کریں

    بشکریہ ….. رعایت اللہ فاروقی

    مولوی مالدار کیسے ہوا ؟::::::::::::::::::::::::::::::مولوی مالدار کیسے ہوا ؟ یہ بہت دلچسپ سوال ہے۔ میں چونکہ ہوں مولو…

    Posted by Riayatullah Farooqui on Sunday, December 24, 2017

Viewing 1 post (of 1 total)

You must be logged in to reply to this topic.

Navigation