Thread: طاقت

Home Forums Siasi Discussion طاقت

This topic contains 324 replies, has 23 voices, and was last updated by  پرولتاری درویش 3 weeks, 6 days ago. This post has been viewed 7922 times

Viewing 20 posts - 41 through 60 (of 325 total)
  • Author
    Posts
  • #41
    BlackSheep
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 15
    • Posts: 1986
    • Total Posts: 2001
    • Join Date:
      11 Feb, 2017
    • Location: عالمِ غیب

    Re: طاقت

    آپ نے کہا کہ کوئی ریاست یہ برداشت نہیں کرسکتی کہ واحد بندرگاہ کو ایک مقامی ”غنڈہ” جب مرضی بند کردے …آپ شاید یہ لکھنا چاہ رہے تھے کہ فوج یہ برداشت نہیں کر سکتی تھی

    نہیں، مَیں ریاست ہی لکھنا چاہتا تھا۔۔۔۔۔

    ایم کیو ایم کے خلاف جو آپریشن بینظیر بھٹو کے دور میں ہوا تھا اُس کے انچارج نصیر اللہ بابر تھے(آف کورس بینظیر کی مرضی شامل تھی) اور وہ آپریشن زیادہ تر پولیس افسران کے ذریعے کیا گیا تھا۔۔۔۔۔ اور نصیر اللہ بابر صاحب اِس آپریشن کی مکمل ذمہ داری لیتے تھے۔۔۔۔۔

    ہوسکتا ہے کہ آپ کہیں کہ نصیر اللہ بابر صاحب بھی ایک ریٹائرڈ فوجی تھے مگر یہ آپریشن بے نظیر کی مرضی سے شروع ہوا تھا۔۔۔۔۔

    • This reply was modified 1 month, 1 week ago by  BlackSheep.
    #42
    پرولتاری درویش
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 1
    • Posts: 219
    • Total Posts: 220
    • Join Date:
      29 May, 2019
    • Location: Lea

    Re: طاقت

    بلیک شیپ صاحب ….اس تھریڈ میں بحث یہ ہے کہ سیاستدان اور فوج والے اپنی طاقت کیسے دکھاتے ہیں …یا ان کی طاقت کا منبع کیا ہے آئیڈیل ہوکر سوچا جاۓ ظاہر ہے کوئی بھی غنڈہ گردی کی حمایت نہیں کرے گا …لیکن آپ ہی نے تو اتنی بار لکھا ہے کہ طاقت کی اپنی نفسیات ہوتی ہے …اور میں سمجھتا ہوں کہ ہر طاقتور اپنی طاقت کا تحفظ کرنا چاہتا ہے فوج اور الطاف کو آپ بڑا بدمعاش چھوٹا بدمعاش کہ سکتے ہیں …فوج الطاف کو سرنگوں کرنا چاہتی تھی اور نوے کی دہائی کے آپریشن اسی سلسلے کی کڑی تھے …آپ نے کہا کہ کوئی ریاست یہ برداشت نہیں کرسکتی کہ واحد بندرگاہ کو ایک مقامی ”غنڈہ” جب مرضی بند کردے …آپ شاید یہ لکھنا چاہ رہے تھے کہ فوج یہ برداشت نہیں کر سکتی تھی …کیونکہ سیاسی جماعتیں اب ایم کیو ایم کی عادی ہوچکی تھیں …انہیں الطاف سے کوئی مسئلہ نہیں تھا …اور ویسے بھی مشرف دور میں امن رہا ہے …نواز کے پانچ سال بھی برے نہیں گزرے …پی پی کے دور میں ان کی آپس کی رسہ کشی نے امن و امان کا کچھ مسئلہ پیدا کیا تھا …لہذا کراچی کہاں ہر روز بند ہوتا تھا … الطاف کا خیال تھا کہ مشرف دور میں اس کی فوج سے صلح ہوچکی تھی …لیکن ایسا نہیں تھا ..فوج کے لیے وہ ہمیشہ سے ناقابل قبول تھا …لہذا راحیل شریف اور باجوہ دونوں کے ادوار میں ایم کیو ایم کے پیچ کسے گئے …الطاف کواپنی زبان پر قابو نہیں اور حالات زیادہ خراب ھوئے لیکن میں دو بدمعاشوں کی لڑائی میں فوج کی سپورٹ کیسے کرسکتا ہوں …کیونکہ فوج الطاف سے بھی بڑے پیمانے پر بدمعاشی کرتی ہے …مخالف خبر لگانے پر اغوا اور پھر قتل ….کبھی صرف وارننگ …چینلز پر پابندی کہ میر شکیل کو بھی گھٹنے ٹیکنے پڑے …اب تو میڈیا کا کام صرف یہ رہ گیا ہے کہ آئ ایس پی آر کی پریس ریلیز کو مصدقہ خبر کے طور پر نشر کیا جاتا ہے …کوئی پوچھتا نہیں کہ قومی اسمبلی کے ممبران محسن داوڑ اور علی وزیر نے واقعی پولیس چوکی پر حملہ کیا تھا صرف الطاف کو ہی قصوروار کیوں گردانا جاۓ کہ اس نے میڈیا کو یرغمال بنایا ہوا ہے؟ وہ کہتا ہے کہ میڈیا عمران کی سارا دن کوریج کرتا تھا مگر الطاف کو کوئی لفٹ نہیں کرواتا …لہذا اس نے بلیک میلنگ والا حربہ اپنایا ….یہاں صحیح غلط کی بات نہیں ہورہی صرف یہ کہ طاقتور اپنی طاقت استعمال کرنا جانتا ہے میں الطاف کی سپورٹ اس لیے کرتا ہوں کہ وہ بہرحال ووٹ لے کر آتا تھا …اور جمہوریت میں واحد اصول یہی ہے کہ اکثریت کا فیصلہ ماننا پڑتا ہے لیکن لازمی نہیں کہ فیصلہ درست ہو …اگر کراچی والے اس سے اتنا ہی تنگ تھے تو اسے ووٹ کیوں دیتے تھے …میں ذاتی طور پر شاید کراچی میں گزارا نہ کرسکوں مگر اکثریت کے لیے الطاف اور اس کی سیاست قابل قبول تھی میرا خیال نہیں کہ وسعت الله نے یہ کہا ہے کہ الطاف کا مینڈیٹ جعلی تھا ..اس کی باقی باتیں شاید ٹھیک ہیں …الطاف کے زوال میں اس کا اپنا بھی ہاتھ ہے

    This is all good except the lines in red which require breif comments.

    Does a small time city urchin stand any chance against the biggest goon of the country? Secondly, if this is a fight between two goons then the terms like political ideology/party, principles and morality should not figure in any debate about their tussle. And what about the people who suffer from it?

    Altaf secures vote but for what purpose? Ballots secured with the help of the bullet, if not fake, would always be questionable

    Shall we call this lesser-evil-syndrome the entire country is suffering from? Will there ever be any cure for this?

    #43
    BlackSheep
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 15
    • Posts: 1986
    • Total Posts: 2001
    • Join Date:
      11 Feb, 2017
    • Location: عالمِ غیب

    Re: طاقت

    کیونکہ سیاسی جماعتیں اب ایم کیو ایم کی عادی ہوچکی تھیں …انہیں الطاف سے کوئی مسئلہ نہیں تھا …اور ویسے بھی مشرف دور میں امن رہا ہے …نواز کے پانچ سال بھی برے نہیں گزرے …پی پی کے دور میں ان کی آپس کی رسہ کشی نے امن و امان کا کچھ مسئلہ پیدا کیا تھا …لہذا کراچی کہاں ہر روز بند ہوتا تھا … الطاف کا خیال تھا کہ مشرف دور میں اس کی فوج سے صلح ہوچکی تھی لیکن ایسا نہیں تھا ..فوج کے لیے وہ ہمیشہ سے ناقابل قبول تھا
    میں الطاف کی سپورٹ اس لیے کرتا ہوں کہ وہ بہرحال ووٹ لے کر آتا تھا …اور جمہوریت میں واحد اصول یہی ہے کہ اکثریت کا فیصلہ ماننا پڑتا ہے لیکن لازمی نہیں کہ فیصلہ درست ہو …اگر کراچی والے اس سے اتنا ہی تنگ تھے تو اسے ووٹ کیوں دیتے تھے

    قرار صاحب۔۔۔۔۔

    کراچی میں دو صورتوں میں امن رہ سکتا ہے۔۔۔۔۔ یا تو آپ کراچی کو ہینڈ اوور کردو ایم کیو ایم کیلئے(مشرف دور)، یا پھر ایم کیو ایم کے ساتھ اُسی زبان میں بات کی جائے جو وہ اچھی طرح سمجھتی ہے یعنی ڈنڈا(بانوے کا فوج والا، چورانوے پچانوے کا بے نظیر والا اور حالیہ راحیل و نواز شریف کے آپریشن)۔۔۔۔۔ اور اگر تیسرا آپشن اگر ہو تو وہ یہ ہوگا کہ باقی سیاسی جماعتیں بھی اپنے اپنے مسلح ونگ بنا کر ٹرف وار لڑیں جو کہ زرداری نے ذوالفقار مرزا کے ذریعے کرنا چاہا تھا لیکن اِس تیسرے آپشن میں امن نہیں ہوگا(البتہ ایک طرف رحمٰن ملک کو الطاف بھائی کو ٹھنڈا کرنے کیلئے لندن اسلام آباد کے درمیان شٹل بھی بنایا ہوا تھا)۔۔۔۔۔

    ایم کیو ایم کیلئے جیو جی نے ایک دفعہ ایک بات کہی تھی کہ ایم کیو ایم ایک ڈنڈا پیر پارٹی ہے۔۔۔۔۔ اور میرا بھی یہی مشاہدہ ہے کہ ایم کیو ایم صرف ڈنڈے کی زبان سمجھتی ہے۔۔۔۔۔ یا تو ایم کیو ایم کے پاس ڈنڈا ہوگا یا ایم کیو ایم پر ڈنڈا ہوگا۔۔۔۔۔

    اور آج کے کراچی کے حالات یہ ہیں کہ وہاں اِس وقت بہت حد تک سُکون ہے۔۔۔۔۔ بھتہ تشدد وغیرہ بہت حد تک کم ہوچکے ہیں۔۔۔۔۔ کیا آپ کو پچھلے ایک دو سالوں میں وہاں فوج کے آپریشنز کے خلاف روزانہ کی بنیاد پر کوئی بڑے بڑے احتجاجی مظاہرے ہوتے نظر آرہے ہیں۔۔۔۔۔ مجھے تو نظر نہیں آئے۔۔۔۔۔ البتہ اِن فورمز پر عقیدت مندوں کا رنڈی رونا ضرور نظر آئے گا۔۔۔۔۔ اِس کی فکر کرنے کی کوئی ضرورت نہیں، یہ رونا پیٹنا معمول کا حصہ ہے۔۔۔۔۔

    اور جہاں تک جمہوریت اور ووٹ لینے کی بات ہے تو ریاست ہمیشہ سیاسی جماعتوں سے بڑی ہوتی ہے۔۔۔۔۔ جیسا کہ مَیں نے پہلے کہا کہ ایم کیو ایم کو کسی نے پُرامن ہڑتالیں کرنے سے کسی نے نہیں روکا تھا۔۔۔۔۔ لیکن ایم کیو ایم کی جو پُرامن ہڑتال ہوتی تھی وہ واقعی بہت پُرامن ہوتی تھی۔۔۔۔۔ مجھے لگتا ہے کہ آپ غالباً کبھی کراچی میں نہیں رہے ہیں۔۔۔۔۔

    اور جہاں تک ووٹ کی بات ہے تو کراچی کے جس علاقے میں میرا گھر ہوا کرتا تھا وہ ایم کیو ایم کی پکی نشست تصور ہوتی تھی۔۔۔۔۔ میرے بہت سارے دوست جاننے والے گلی محلے والے ایم کیو ایم کے ووٹر تھے۔۔۔۔۔ اِس پچھلے الیکشن میں، مَیں نے پتا نہیں کتنے ہی جاننے والوں سے پوچھا تھا کہ کس کو ووٹ دیا۔۔۔۔۔ انتہائی بڑی اکثریت کا کہنا تھا کہ عمران خان کو۔۔۔۔۔ کہنے کا مقصد ہے کہ اگر کراچی میں عمران خان نے اتنی زیادہ نشستیں لی ہیں تو یہ صرف محکمہِ زراعت کا کارنامہ نہیں ہے۔۔۔۔۔ اور اِس کے پیچھے ایک بنیادی ثقافتی وجہ بھی ہے کہ یہ نشستیں کبھی پی پی کو یا نون لیگ کو کیوں نہیں ملیں۔۔۔۔۔

    • This reply was modified 1 month, 1 week ago by  BlackSheep.
    #44
    پرولتاری درویش
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 1
    • Posts: 219
    • Total Posts: 220
    • Join Date:
      29 May, 2019
    • Location: Lea

    Re: طاقت

    نہیں، مَیں ریاست ہی لکھنا چاہتا تھا۔۔۔۔۔ ایم کیو ایم کے خلاف جو آپریشن بینظیر بھٹو کے دور میں ہوا تھا اُس کے انچارج نصیر اللہ بابر تھے(آف کورس بینظیر کی مرضی شامل تھی) اور وہ آپریشن زیادہ تر پولیس افسران کے ذریعے کیا گیا تھا۔۔۔۔۔ اور نصیر اللہ بابر صاحب اِس آپریشن کی مکمل ذمہ داری لیتے تھے۔۔۔۔۔ ہوسکتا ہے کہ آپ کہیں کہ نصیر اللہ بابر صاحب بھی ایک ریٹائرڈ فوجی تھے مگر یہ آپریشن بے نظیر کی مرضی سے شروع ہوا تھا۔۔۔۔۔

    It is a bit surprising for me that two bloggers who understand the real dynamics of the issue are trying the differentiate between the state and the security establishment. Friends, they are one and the same thing. That is how they have shaped this nation thru their control over the media and the curriculum, built an unquestionable narrative and framed corresponding laws to protect this narrative.

    There were two periods when MQM rank and file and their supremo enjoyed unadulterated absolute power in urban Sindh: during Jam Sadiq CM ship and Mush’s pol/civil dispensation. These periods did a lot of damage to their psyche as individuals as well as an org. Maj Kaleem incident was the start of their undoing which GHQ never forgot.

    Baber led operation was (1) the continuation of Janjua initiated operation after Maj Kaleem incident and (2) convergence of interests of various quarters (military, political. civil, commercial, etc) because it was becoming increasingly hard to cope up with MQM’s psyche/hunger for absolute power they had already tasted.

    MQM could have mended its ways after 1992, but unfortunately, it got a second chance under Mush that proved really toxic.

    #45
    shahidabassi
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 31
    • Posts: 6918
    • Total Posts: 6949
    • Join Date:
      5 Apr, 2017

    Re: طاقت

    بغیر نظرئے اور کردار کی طاقت ایک نہج پر پہنچ کر ہمیشہ ہی کرپٹ ہو جاتی ہے بلکہ بعض اوقات تو نظریئے اور کردار بھی طاقت کے نشے میں بہہ جاتے ہیں۔ میرے خیال میں یہ صرف ایک لیڈر یا تنظیم (فوج) ہی کا مسئلہ نہی بلکہ اقوام بھی اسی ڈگر پر چل نکلتی ہیں۔ ہمارے ملک میں فوج کے اقدام کو طاقت کی کارستانیاں کہا جاتا ہے لیکن اگر ہم فوجی طاقت اور ان کی غلط کاریوں کا موازنہ ان سے کم طاقت وروں یا ان سے زیادہ طاقت وروں سے کریں تو آپ کا مشاہدہ ہر صورت اسی نتیجہ پر پہنچے گا کہ طاقت جہاں بھی موجود ہے وہاں سے اپنی اپنی اوقات کے مطابق اسی طرح کی غلط کاریاں کی جارہی ہوں گی۔

    .

    ملک میں فوج سے کم تر طاقت کا منبہ سیاسی جماعتوں کی قیادت ہے اور ان کی کرتوتوں میں آپ کو فوج کی کرتوتوں کا عکس خود سے نیچے کے نظام(بلدیاتی ) کو ساز باز سے اپنی منشا ء کے مطابق چلانے میں بھی نظر آئے گا میڈیا اور الیکشنز کو مینیپولیٹ کرنے میں بھی اور ماورائےقانون پولیس سے لوگوں کو مروانے میں بھی نظر آئے گا۔ اسی طرح کسی پولیس آفس چلے جائیں یا ڈی سی آفس، آپ کو ہر جگہ طاقت کے ایسے ہی رنگ نظر آئیں گے۔

    .
    فوج سے بڑی کسی طاقت کو دیکھنا ہے تو دنیا کی سپر پاور اور اس کے حواریوں کو دیکھ لیں کہ کیسے اقوام متحدہ سے مینڈیٹ لئے بغیر بھی دو چار ملین انسانوں کو موت کے گھاٹ اتار کر اور پانچ سات ممالک میں آگ لگا کر انہیں دہائیوں پیچھے چھوڑ دینا ان کے بائیں ہاتھ کا کام ہے لیکن مجال ہے فوج کی بدمعاشیوں پر دن رات لکھنے والے اپنی ملکہ سے ایسے اقدامات پر احتجاج کریں یا دو لائینیں لکھنے کی جسارت ہی۔ امریکہ بہادر طاقت ہی کے بلبوتے پر ہی موسمیاتی تبدیلی کے معائدے اور ایران معائدے سے یکطرفہ دستبردار ہونے ، اقوام متحدہ کے اداروں یونیسکواور انسانی حقوق کونسل سے نکلنے کے علاوہ عالمی عدالت کا بھی انکاری ہے یعنی عالمی جمہوری نظام (اقوام متحدہ) کے ساتھ وہی کر رہا ہے جو پاکستانی فوج پاکستانی جمہوری حکومتوں کے ساتھ کرتی ہے۔

    .
    میرے خیال میں فوج کی طاقت کنٹرول کی جاسکتی ہے اور کی جاتی رہی ہے۔ لیکن اس کے لئے قوم میں ایک نظریہ، اپنے انفرادی اور اجتماعی مفادات سے آگاہی (جو موجودہ سیاست دانوں کے ہوتے ہوئے ناممکن ہے) اور پرائیرٹیز ، اور قومی اور انفرادی کریکٹر بلڈنگ کی ضرورت ہے۔ سیاست دان چاہیں تو ایسا کر سکتے یا کم از کم اپنے تئیں کوشش کر سکتے ہیں لیکن وہ ایسا کبھی کریں گے نہی کہ فوج کی طاقت کو نتھ ڈالتے ڈالتے وہ اپنی طاقت عوام کے ہاتھوں گنوانا نہی چاہتے۔

    • This reply was modified 1 month, 1 week ago by  shahidabassi.
    #46
    BlackSheep
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 15
    • Posts: 1986
    • Total Posts: 2001
    • Join Date:
      11 Feb, 2017
    • Location: عالمِ غیب

    Re: طاقت

    convergence of interests of various quarters (military, political. civil, commercial, etc) because it was becoming increasingly hard to cope up with MQM’s psyche/hunger for absolute power they had already tasted. MQM could have mended its ways after 1992, but unfortunately, it got a second chance under Mush that proved really toxic.

    پُرولتاری دُرویش۔۔۔۔

    مَیں قرار صاحب کے سامنے یہی نکتہ رکھنا چاہ رہا تھا جو یہاں آپ نے لکھا کہ ایم کیو ایم سے نارملی ڈیل کرنا(جیسا دوسری سیاسی جماعتوں کے ساتھ ہوتا ہے، چاہے آپس میں سیاسی جماعتوں کے درمیان معاملات) مسئلہ تھا اور ہے۔۔۔۔۔

    یہی مَیں کہہ رہا ہوں کہ یا تو ایم کیو ایم کو ابسولوٹ پاور چاہئے(اور ایسی پاور جہاں دوسری سیاسی جماعتوں کیلئے کوئی گنجائش نہیں ہوگی یعنی کراچی ایم کیو ایم کو ہینڈ اوور کردیا جائے) اور یا پھر اِن پر ڈنڈا استعمال ہوگا۔۔۔۔۔ بیچ کا کوئی راستہ نہیں ہے۔۔۔۔۔ اور ایم کیو ایم شاید اب یہ بات سمجھ گئی ہو تو الگ بات ہے ورنہ حالیہ رینجرز آپریشن سے پہلے تک تو نہیں سمجھی تھی۔۔۔۔۔

    یہاں یہ بھی پہلو اٹھایا جاسکتا ہے کہ اگر ایم کیو ایم کراچی کے بجائے کسی اور شہر میں ہوتی یعنی کراچی مالیاتی مرکز یا واحد بندرگاہ نہ ہوتا تو پھر بھی اِن کو یہ ابسولوٹ طاقت دی جاسکتی تھی لیکن ملک کے مالیاتی مرکز میں ایسا نہیں ہوسکتا۔۔۔۔۔ کوئی ریاست یہ نہیں کرسکتی۔۔۔۔۔

    • This reply was modified 1 month, 1 week ago by  BlackSheep.
    #47
    BlackSheep
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 15
    • Posts: 1986
    • Total Posts: 2001
    • Join Date:
      11 Feb, 2017
    • Location: عالمِ غیب

    Re: طاقت

    It is a bit surprising for me that two bloggers who understand the real dynamics of the issue are trying the differentiate between the state and the security establishment. Friends, they are one and the same thing.

    میرا بھی یہی کہنا ہے کہ ایم کیو ایم کے خلاف آپریشن میں کم و بیش تمام ہی مقتدر طبقات کی مرضی شامل رہی ہے۔۔۔۔۔

    چورانوے پچانوے کے آپریشن میں بھی سول حکومت و جی ایچ کیو کی مرضی شامل تھی۔۔۔۔۔

    البتہ ابھی حالیہ آپریشن میں پیپلز پارٹی کی شرکت ذرا پس و پیش کے بعد ہوئی تھی۔۔۔۔۔ اور پھر وہ ڈاکٹر عاصم وغیرہ کا کیس۔۔۔۔۔

    #48
    BlackSheep
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 15
    • Posts: 1986
    • Total Posts: 2001
    • Join Date:
      11 Feb, 2017
    • Location: عالمِ غیب

    Re: طاقت

    There were two periods when MQM rank and file and their supremo enjoyed unadulterated absolute power in urban Sindh: during Jam Sadiq CM ship and Mush’s pol/civil dispensation. These periods did a lot of damage to their psyche as individuals as well as an org.

    بارہ مئی کے دن یہی بات ایم کیو ایم کے ایک رہنما(غالباً بابر غوری) کے مُنہ سے نکلی تھی کہ پاکستان سب کا ہے لیکن کراچی ایم کیو ایم کا ہے۔۔۔۔۔

    #49
    Ghost Protocol
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 123
    • Posts: 3721
    • Total Posts: 3844
    • Join Date:
      7 Jan, 2017

    Re: طاقت

     کیا آپ کو نہیں لگتا کہ کبھی کبھار ہم جیسے لبرل قسم کے لوگ انسانی حقوق وغیرہ کی جنگ میں اِس قدر اندھے ہوجاتے ہیں کہ دھونس دھمکی تشدد قتل و غارت کے دوبارہ اِجراء کرنے کو بھی تیار رہتے ہیں۔۔۔۔۔ کیا آپ نہیں سمجھتے کہ یہ ہمارا ایک شدید قسم کا تعصب ہے۔۔۔۔۔

    بلیک شیپ صاحب،
    خیریت ہے بلکل ہی سٹھیا گئے ہیں

    لبرل ہوتا نہیں ہر افیم پینے والا

    پھوجی ٹٹو صرف فوجی ٹٹو ہوتا ہے اور کچھ نہیں

    :cwl: :cwl: :cwl: :cwl:

    #50
    Ghost Protocol
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 123
    • Posts: 3721
    • Total Posts: 3844
    • Join Date:
      7 Jan, 2017

    Re: طاقت

    شعور سب سے بڑی طاقت ہوتی ہے
    وقوف دو نمبری دانشوروں اور اصلی پھوجی ٹٹووں اتنا اسلحہ اور طاقت تو ہر ملک کی فوج کے پاس ہوتی ہے کہ کم سے کم اپنے ملک کو فتح کرسکیں
    اگر یہ ٹٹو پھوجی اتنے طاقت ور ہوتے تو مین سٹریم اور سوشل میڈیا کو کنٹرول کرنے کی اتنی بھونڈی کوششیں نہ کررہے ہوتے –

    #51
    Ghost Protocol
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 123
    • Posts: 3721
    • Total Posts: 3844
    • Join Date:
      7 Jan, 2017

    Re: طاقت

    بات پنجابی یا غیر پنجابی کی نہیں ہے، جو سیاست دان میدان سے بھاگ جاتا یے، وہ نہ صرف عوام کی حمایت سے محروم ہو جاتا یے بلکہ اسکے حمایتی بھی اس سے بد دل ہو جاتے ہیں اور اسکی پارٹی بھی ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہو جاتی ہے نواز شریف بھی اگر واپس آنے کی بجائے برطانیہ کی شہریت لے کر وہاں بیٹھ جاتا اور پاکستان کے خلاف باتیں کرتا تو اس کا انجام بھی الطاف حسین جیسا ہی ہوتا نواز شریف نے واپس آ کر نہ صرف اپنی سیاست بچا لی بلکہ پارٹی کو بھی ایم کیو ایم والے انجام سے بچا لیا۔ نتیجہ یہ ہوا کہ عوام نے اسے اپنے اعتماد سے نواز کر تیسری بار اقتدار ایوانوں میں پہنچا دیا سیاست کرنے کے لیے سیاست دان کا اپنی عوام کے درمیان ہونا ضروری ہے۔ جو سیاست دان عوام کو چھوڑ جاتا ہے، عوام بھی اس سیاست دان کو چھوڑ دیتی ہے جہاں تک انتخابات میں سیٹیں کم ملنے کی بات ہے تو یہ تو ملک میں رہ کر بھی ہو سکتا ہے۔ انیس سو ستانوے کے الیکشن میں بینظیر بھٹو کی پاکستان میں موجودگی کے باوجود پی پی پی کی اٹھارہ سیٹیں آئیں تھیں، اگر نواز شریف کی ملک میں غیر موجودگی کی وجہ سے مسلم لیگ نون کی اٹھارہ سیٹیں آئی تھیں تو یہ کوئی بہت بڑی بات نہیں ہے

    باوا جی،
    آپ کی بات اصولی طور پر درست ہے سیاستدان عوام کی طاقت عوام ہی ہوتے ہیں یہاں نواز شریف اور الطاف حسین کے حالات کا تقابل نہیں بنتا ہے
    نواز شریف کو بہرحال پنجاب کا بیٹا ہونے کا بہت بڑا فائدہ حاصل تھا یہ اتنا بڑا فائدہ تھا کہ وہ موت کی کال کوٹھری سے دو سو سوٹ کیسوں کے ساتھ شاہی مہمان بن گیا -الطاف حسین کو تو یہ لوگ ایک دن بھی برداشت کرنے کے لئے تیار نہیں تھے انکا بس چلتا تو اکانوے میں اسکے جانے سے پہلے ہی مروا دیتے الطاف حسین کی بہت بڑی غلطی تھی کہ مشرف کے دور میں بھی وطن واپس نہیں آسکا
    اگر عوام الطاف حسین کو مسترد کرتی تو پھر بھی اور بات تھی عوام کو آج بھی موقع ملے تو ہونا وہی ہے جو قرار صاحب کھلم کھلا لکھ رہے ہیں اور ہر شخص کو دل میں معلوم ہے

    #52
    Abdul jabbar
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 1
    • Posts: 373
    • Total Posts: 374
    • Join Date:
      24 Sep, 2017

    Re: طاقت

    اخلاقیات اور کردار کی عظمت بہت اچھی بات ہے مگر اقتدار اور حصول اقتدار کی جنگ میں یہی سب کچھ نہیں ہے،بلکہ بہت حد تک اس کی حیثیت کچھ بھی نہیں۔ بیلیور 12 نے بالکل درست لکھا “بعض دفعہ کردار کی عظمت والے فرد کے خلاف بدکردار اکٹھے ہوجاتے ہیں کیونکہ اس کا قائم رہنا ان کی موت ہوسکتا ہے، امام حسین رضی اللہ سے بڑھ کر عظمت کردار کس کے پاس تھی؟ ان کے خلاف شیطانی طاقتیں اکٹھی ہوگئیں جس کا نتیجہ سب کے سامنے ہے”
    مزے کی بات یہ ہے کہ طاقت بلکہ اندھی طاقت کے نشے میں بستیاں تاراج کرنے والے اور بے گناہ انسانوں کے سروں کے مینار بنانے والے فاتحین کو انہی کے دور میں “ظل الہی” جیسے القابات سےبظاہر بلند کردار والوں کی طرف سے پکارا جاتا رہا، گویا یونیورسل ٹروتھ یہی ہے کہ
    “MIGHT IS ALWAYS RIGHT”
    پہلے بھیڑیا بھی چھوٹے سے میمنے کو کھانے سے پہلے اس پر جھوٹی،سچی فرد جرم عاید کرنے اور خود کو اس عمل کے لئے حق بجانب تصور کرنے کی کوشش کیا کرتا تھا مگر آج اس کی بھی ضرورت محسوس نہیں کی جاتی،امریکہ جیسی سپر طاقت حفظ ما تقدم کے نام پر دنیا کے کسی بھی نلک میں آگ و خون کی ہولی کھیل سکتی ہے۔اقوام متحدہ جیسی قوموں کے حقوق کی نگہداشت کرنے والی تنظیم طاقت وروں کے لئے ویٹو پاورکے استعمال کو ان کا حق قرار دے سکتی ہے تو ہم جیسے ممالک میں جہاں عوام کی کثیر تعداد، ان پڑھ ہےاور اپنے حقوق سے آگاہی ہی نہیں رکھتی ، یہ کتابی باتیں بس کتابوں کی حد تک ہی اچھی لگتی ہیں۔
    انور مسعود نے کیا خوب لکھا ہے
    تمہاری بھینس کیسے ہے کہ جب لاٹھی ہماری ہے
    اب اس لاٹھی کی زد پر جو بھی آئے، سو ہمارا ہے
    مذمت کاریوں سے تم ہمارا کیا بگاڑو گے
    تمہارے ووٹ کیا ہوتے ہیں جب ویٹو ہمارا ہے

    #53
    Bawa
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 138
    • Posts: 10910
    • Total Posts: 11048
    • Join Date:
      24 Aug, 2016

    Re: طاقت

    باوا جی، آپ کی بات اصولی طور پر درست ہے سیاستدان عوام کی طاقت عوام ہی ہوتے ہیں یہاں نواز شریف اور الطاف حسین کے حالات کا تقابل نہیں بنتا ہے نواز شریف کو بہرحال پنجاب کا بیٹا ہونے کا بہت بڑا فائدہ حاصل تھا یہ اتنا بڑا فائدہ تھا کہ وہ موت کی کال کوٹھری سے دو سو سوٹ کیسوں کے ساتھ شاہی مہمان بن گیا -الطاف حسین کو تو یہ لوگ ایک دن بھی برداشت کرنے کے لئے تیار نہیں تھے انکا بس چلتا تو اکانوے میں اسکے جانے سے پہلے ہی مروا دیتے الطاف حسین کی بہت بڑی غلطی تھی کہ مشرف کے دور میں بھی وطن واپس نہیں آسکا اگر عوام الطاف حسین کو مسترد کرتی تو پھر بھی اور بات تھی عوام کو آج بھی موقع ملے تو ہونا وہی ہے جو قرار صاحب کھلم کھلا لکھ رہے ہیں اور ہر شخص کو دل میں معلوم ہے

    گھوسٹ پروٹوکول بھائی

    نواز شریف پنجاب کا بیٹا ہونے کی وجہ سے موت کی کال کوٹھری سے دو سو سوٹ کیسوں کے ساتھ شاہی مہمان نہیں بنا تھا. اگر پنجاب کا بیٹا ہونے کا اتنا فائدہ ہوتا تو اسے کبھی نہ لی جانے والی تنخواہ کو بنیاد بنا کر نہ تو تا حیات نا اہل قرار دیا جاتا اور نہ ہی وہ پورے خاندان کے ساتھ جے آئی ٹی کے سامنے خوار ہوتا اور اپنی بیٹی کے ساتھ جیل کی سلاخوں کے پیچھے ہوتا

    میں نے پہلے بھی لکھا ہے کہ وردی پوش دہشتگردوں کی بدمعاشی کو وہی لگام دے سکتا ہے تو ان سے بڑا بدمعاش ہو یا بھی جس کے ٹکروں پر وردی پوش دہشتگرد پلتے ہوں

    نواز شریف موت کی کال کوٹھری سے دو سو سوٹ کیسوں کے ساتھ شاہی مہمان اس لیے بنا تھا کہ اسوقت اسکے پیچھے وہ لوگ کھڑے تھے جن کے ٹکروں پر یہ ہمارے وردی پوش دہشتگرد پلتے ہیں. وہی نواز شریف کو کال کوٹھری سے نکال کر اپنے شاہی مہمان بنا کر اپنے پاس لے لیے تھے. انکے ٹکروں پر پلنے والوں کی اتنی جرات نہ تھی کہ وہ انکے حکم کے سامنے سر نہ جھکاتے. جنرل پرویز مشرف آج لندن کے جس پر تعش گھر میں رہتا ہے وہ انہی لوگوں کی طرف سے اسے انکی اسی اطاعت شعاری کے صلے میں ملا ہوا ہے جس کا اعتراف جنرل پرویز مشرف خود نیشنل میڈیا پر کر چکا ہے

    جب تک انکا دست شفقت نواز شریف کے سر پر رہا تب تک ان وردی پوش دہشتگردوں کو اسکی طرف آنکھ اٹھانے کی جرات نہ ہوئی لیکن جیسے ہی پارلیمنٹ کی قرار داد کے مطابق نواز شریف نے یمن کے ساتھ لڑنے کیلیے فوجیوں بھیجنے سے انکار کیا تو انہوں نے نواز شریف کے سر سے دست شفقت اٹھا لیا اور پھر فوجی اسے تنہا اور بے یارو مدد گار دیکھکر بھوکے کتوں کی طرح اس پر پل پڑے

    #54
    Qarar
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 95
    • Posts: 2247
    • Total Posts: 2342
    • Join Date:
      5 Jan, 2017

    Re: طاقت

    قرار صاحب۔۔۔۔۔ کراچی میں دو صورتوں میں امن رہ سکتا ہے۔۔۔۔۔ یا تو آپ کراچی کو ہینڈ اوور کردو ایم کیو ایم کیلئے(مشرف دور)، یا پھر ایم کیو ایم کے ساتھ اُسی زبان میں بات کی جائے جو وہ اچھی طرح سمجھتی ہے یعنی ڈنڈا(بانوے کا فوج والا، چورانوے پچانوے کا بے نظیر والا اور حالیہ راحیل و نواز شریف کے آپریشن)۔۔۔۔۔ اور اگر تیسرا آپشن اگر ہو تو وہ یہ ہوگا کہ باقی سیاسی جماعتیں بھی اپنے اپنے مسلح ونگ بنا کر ٹرف وار لڑیں جو کہ زرداری نے ذوالفقار مرزا کے ذریعے کرنا چاہا تھا لیکن اِس تیسرے آپشن میں امن نہیں ہوگا(البتہ ایک طرف رحمٰن ملک کو الطاف بھائی کو ٹھنڈا کرنے کیلئے لندن اسلام آباد کے درمیان شٹل بھی بنایا ہوا تھا)۔۔۔۔۔ ایم کیو ایم کیلئے جیو جی نے ایک دفعہ ایک بات کہی تھی کہ ایم کیو ایم ایک ڈنڈا پیر پارٹی ہے۔۔۔۔۔ اور میرا بھی یہی مشاہدہ ہے کہ ایم کیو ایم صرف ڈنڈے کی زبان سمجھتی ہے۔۔۔۔۔ یا تو ایم کیو ایم کے پاس ڈنڈا ہوگا یا ایم کیو ایم پر ڈنڈا ہوگا۔۔۔۔۔ اور آج کے کراچی کے حالات یہ ہیں کہ وہاں اِس وقت بہت حد تک سُکون ہے۔۔۔۔۔ بھتہ تشدد وغیرہ بہت حد تک کم ہوچکے ہیں۔۔۔۔۔ کیا آپ کو پچھلے ایک دو سالوں میں وہاں فوج کے آپریشنز کے خلاف روزانہ کی بنیاد پر کوئی بڑے بڑے احتجاجی مظاہرے ہوتے نظر آرہے ہیں۔۔۔۔۔ مجھے تو نظر نہیں آئے۔۔۔۔۔ البتہ اِن فورمز پر عقیدت مندوں کا رنڈی رونا ضرور نظر آئے گا۔۔۔۔۔ اِس کی فکر کرنے کی کوئی ضرورت نہیں، یہ رونا پیٹنا معمول کا حصہ ہے۔۔۔۔۔ اور جہاں تک جمہوریت اور ووٹ لینے کی بات ہے تو ریاست ہمیشہ سیاسی جماعتوں سے بڑی ہوتی ہے۔۔۔۔۔ جیسا کہ مَیں نے پہلے کہا کہ ایم کیو ایم کو کسی نے پُرامن ہڑتالیں کرنے سے کسی نے نہیں روکا تھا۔۔۔۔۔ لیکن ایم کیو ایم کی جو پُرامن ہڑتال ہوتی تھی وہ واقعی بہت پُرامن ہوتی تھی۔۔۔۔۔ مجھے لگتا ہے کہ آپ غالباً کبھی کراچی میں نہیں رہے ہیں۔۔۔۔۔ اور جہاں تک ووٹ کی بات ہے تو کراچی کے جس علاقے میں میرا گھر ہوا کرتا تھا وہ ایم کیو ایم کی پکی نشست تصور ہوتی تھی۔۔۔۔۔ میرے بہت سارے دوست جاننے والے گلی محلے والے ایم کیو ایم کے ووٹر تھے۔۔۔۔۔ اِس پچھلے الیکشن میں، مَیں نے پتا نہیں کتنے ہی جاننے والوں سے پوچھا تھا کہ کس کو ووٹ دیا۔۔۔۔۔ انتہائی بڑی اکثریت کا کہنا تھا کہ عمران خان کو۔۔۔۔۔ کہنے کا مقصد ہے کہ اگر کراچی میں عمران خان نے اتنی زیادہ نشستیں لی ہیں تو یہ صرف محکمہِ زراعت کا کارنامہ نہیں ہے۔۔۔۔۔ اور اِس کے پیچھے ایک بنیادی ثقافتی وجہ بھی ہے کہ یہ نشستیں کبھی پی پی کو یا نون لیگ کو کیوں نہیں ملیں۔۔۔۔۔

    بلیک شیپ صاحب …اگر تو ریاست سے مراد سیکورٹی اسٹیبلشمنٹ ہے تو پھر تو آپ کی بات بجا ہے ورنہ پچھلے بیس سال میں تو کسی سیاسی جماعت کو ایم کیو ایم سے مسئلہ نہیں رہا …آج بھی یہ جماعت حکومت میں شامل ہے …جہاں تک نوے میں بینظر دور کا آپریشن تھا تو وہ کراچی پر قبضے کی کوشش تھی …نون اور پی پی نے جلد ہی احساس کرلیا کہ ایم کیو ایم ایک حقیت تھی

    اس تھریڈ کا بنیادی نکتہ یہ تھا کہ فوج کے پاس تو ہتھیار ہیں فوجی ہیں ٹرک ہیں ٹینک ہیں …ایک سیاستدان کے پاس کیا ہے …جس کو استعمال کرکے وہ طاقتور بن سکتا ہے …میری نظر میں پاکستان اور انڈیا جیسے ملک میں کردار زیادہ اہم نہیں ہے بلکہ یہ کہ سیاستدان کا کلٹ کتنا مضبوط ہے …ٹرمپ کہتا ہے کہ وہ ففتھ ایونیو پر کسی کو گولی مار دے تو اس کے ووٹر پھر بھی اس کا ساتھ نہیں چھوڑیں گے …یہ کلٹ ہے ..الطاف نواز عمران اور الطاف کلٹ لیڈر ہیں …ان کے عقیدت مندوں کے لیے کاں چٹا ہے …البتہ تبدیلی آہستہ آہستہ آتی ہے اور ایک جماعت کی جگہ دوسری جماعت بھی لے لیتی ہے …آپ نے کہا کہ کراچی کی پکی سیٹیں پی ٹی آئی لے گئی …یہ صرف کراچی میں ہی نہیں ہوا ..میرے اپنے لاہور کے حلقے میں نون لیگ ہار گئی ورنہ کچھ سال پہلے تک اس کا تصور بھی نہیں کیا جاسکتا تھا …کراچی میں یوتھ ووٹ فیکٹر تھا …نون لیگ پنجابی پارٹی ہے اور مہاجروں کا ووٹ ملنا اسے مشکل تھا ..پی پی کو کبھی بھی شہری علاقوں کا مہاجر ووٹ نہیں ملا …عمران خان اور جماعت ہی مہاجروں کی آپشنز تھے …اور ویسے بھی جب الطاف کی تقریروں پر پابندی ہو …پارٹی کا لیڈر نہ ہو …بہادر آباد اور پی آئی بی کے اپنے گروپ ہوں تو کیا پارٹی کے سیٹیں ہارنے پر حیرانگی ہونی چاہیے

    #55
    Qarar
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 95
    • Posts: 2247
    • Total Posts: 2342
    • Join Date:
      5 Jan, 2017

    Re: طاقت

    پُرولتاری دُرویش۔۔۔۔ مَیں قرار صاحب کے سامنے یہی نکتہ رکھنا چاہ رہا تھا جو یہاں آپ نے لکھا کہ ایم کیو ایم سے نارملی ڈیل کرنا(جیسا دوسری سیاسی جماعتوں کے ساتھ ہوتا ہے، چاہے آپس میں سیاسی جماعتوں کے درمیان معاملات) مسئلہ تھا اور ہے۔۔۔۔۔ یہی مَیں کہہ رہا ہوں کہ یا تو ایم کیو ایم کو ابسولوٹ پاور چاہئے(اور ایسی پاور جہاں دوسری سیاسی جماعتوں کیلئے کوئی گنجائش نہیں ہوگی یعنی کراچی ایم کیو ایم کو ہینڈ اوور کردیا جائے) اور یا پھر اِن پر ڈنڈا استعمال ہوگا۔۔۔۔۔ بیچ کا کوئی راستہ نہیں ہے۔۔۔۔۔ اور ایم کیو ایم شاید اب یہ بات سمجھ گئی ہو تو الگ بات ہے ورنہ حالیہ رینجرز آپریشن سے پہلے تک تو نہیں سمجھی تھی۔۔۔۔۔ یہاں یہ بھی پہلو اٹھایا جاسکتا ہے کہ اگر ایم کیو ایم کراچی کے بجائے کسی اور شہر میں ہوتی یعنی کراچی مالیاتی مرکز یا واحد بندرگاہ نہ ہوتا تو پھر بھی اِن کو یہ ابسولوٹ طاقت دی جاسکتی تھی لیکن ملک کے مالیاتی مرکز میں ایسا نہیں ہوسکتا۔۔۔۔۔ کوئی ریاست یہ نہیں کرسکتی۔۔۔۔۔

    بلیک شیپ صاحب …چونکہ بات اسٹیبلشمنٹ اور طاقت کی ہو رہی ہے تو تھائی لینڈ پر بھی بات کر لیتے ہیں …وہاں فوج کی ہر ممکن کوشش کے باوجود تھاکسن شینا وترا کی پارٹی ہر بار الیکشن جیت جاتی تھی …مارشل لاء لگا …تھاکسن کو جلاوطن ہونا پڑا ..مگر اس کی پارٹی الیکشن جیت گئی اور اس کی بہن ینگ لک شینا وترا وزیراعظم بن گئی …اسے بھی عدلیہ کے ذریعے جھوٹے اور بوگس الزامات پر برطرف کیا گیا اور اسے بھی جلا وطن ہونا پڑا …کئی سال کے مارشل لاء کے بعد اس سال پھر الیکشن ہوتے ہیں …اور تھاکسن کی پارٹی پھر سب سے زیادہ سیٹیں جیت جاتی ہے ..دونوں بڑی جماعتیں آرمی کی حمایت یافتہ جماعت کو اقتدار سے باہر رکھنے کے لیے اتحاد کا اعلان کرتی ہیں …اتحاد کو پانچ سو رکنی پارلیمنٹ میں اکثریت ہے تاہم آرمی نے الیکشن سے پہلے ایک ترمیم کی ہوتی ہے جس میں سینٹ کے دو سو پچاس ممبر بھی وزیر ا عظم کو ووٹ ڈال سکتے ہیں …اور ان دو سو پچاس ممبران کو فوج نامزد کرے گی

    قصہ مختصر …آرمی چیف تھائی لینڈ کا وزیراعظم بنا بیٹھا ہے

    لہذا پاکستان میں بھی ایک فریق آرمی نے تو ات مچائی ہوئی ہے …لیول پلیئنگ فیلڈ نہیں ہے مگر وسعت اللہ اور نصرت جاوید شکایات کرتے پاۓ جاتے ہیں کہ الطاف کی تقریر سننی پڑ رہی ہے

    میرے لیے یہ ہضم کرنا بہت مشکل ہے کہ آرمی سیاستدانوں کو مائنس کرنا شروع کردے

    یہاں باکردار ہے کون اور کردار کو گندا کرنا تو اس فوج اور میڈیا کے بائیں ہاتھ کا کھیل ہے

    پس تحریر
    بھٹو واحد لیڈر تھا جس کے لیے لوگ نکلے مگر آرمی نے انہیں آسانی سے کرش کردیا …لہذا میں نہیں سمجھتا کہ پاکستانی قوم کے خمیر میں بغاوت وغیرہ کے جراثیم ہیں …اور آرمی کے لیے یہ اچھی خبر ہے

    #56
    Qarar
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 95
    • Posts: 2247
    • Total Posts: 2342
    • Join Date:
      5 Jan, 2017

    Re: طاقت

    گھوسٹ پروٹوکول بھائی نواز شریف پنجاب کا بیٹا ہونے کی وجہ سے موت کی کال کوٹھری سے دو سو سوٹ کیسوں کے ساتھ شاہی مہمان نہیں بنا تھا. اگر پنجاب کا بیٹا ہونے کا اتنا فائدہ ہوتا تو اسے کبھی نہ لی جانے والی تنخواہ کو بنیاد بنا کر نہ تو تا حیات نا اہل قرار دیا جاتا اور نہ ہی وہ پورے خاندان کے ساتھ جے آئی ٹی کے سامنے خوار ہوتا اور اپنی بیٹی کے ساتھ جیل کی سلاخوں کے پیچھے ہوتا میں نے پہلے بھی لکھا ہے کہ وردی پوش دہشتگردوں کی بدمعاشی کو وہی لگام دے سکتا ہے تو ان سے بڑا بدمعاش ہو یا بھی جس کے ٹکروں پر وردی پوش دہشتگرد پلتے ہوں نواز شریف موت کی کال کوٹھری سے دو سو سوٹ کیسوں کے ساتھ شاہی مہمان اس لیے بنا تھا کہ اسوقت اسکے پیچھے وہ لوگ کھڑے تھے جن کے ٹکروں پر یہ ہمارے وردی پوش دہشتگرد پلتے ہیں. وہی نواز شریف کو کال کوٹھری سے نکال کر اپنے شاہی مہمان بنا کر اپنے پاس لے لیے تھے. انکے ٹکروں پر پلنے والوں کی اتنی جرات نہ تھی کہ وہ انکے حکم کے سامنے سر نہ جھکاتے. جنرل پرویز مشرف آج لندن کے جس پر تعش گھر میں رہتا ہے وہ انہی لوگوں کی طرف سے اسے انکی اسی اطاعت شعاری کے صلے میں ملا ہوا ہے جس کا اعتراف جنرل پرویز مشرف خود نیشنل میڈیا پر کر چکا ہے جب تک انکا دست شفقت نواز شریف کے سر پر رہا تب تک ان وردی پوش دہشتگردوں کو اسکی طرف آنکھ اٹھانے کی جرات نہ ہوئی لیکن جیسے ہی پارلیمنٹ کی قرار داد کے مطابق نواز شریف نے یمن کے ساتھ لڑنے کیلیے فوجیوں بھیجنے سے انکار کیا تو انہوں نے نواز شریف کے سر سے دست شفقت اٹھا لیا اور پھر فوجی اسے تنہا اور بے یارو مدد گار دیکھکر بھوکے کتوں کی طرح اس پر پل پڑے

    باوا جی …نواز شریف کے زوال میں دو واقعات کا سب سے بڑا ہاتھ ہے
    ایک دان لیکس اور آرمی کے ٹویٹ کی واپسی

    اور دوسرا نواز شریف کا باجوہ کی نامزدگی کے موقع پر اسے اپنے ماتحت کی طرح سامنے بیٹھا کر تصویر کھچوانا اور اسے میڈیا کو جاری کرنا

    جس لیڈر کی جذباتی فالوونگ نہیں وہ بار بار نواز شریف کی طرح ذلیل ہو کر نکالا جاۓ گا

    • This reply was modified 1 month, 1 week ago by  Qarar.
    #57
    Qarar
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 95
    • Posts: 2247
    • Total Posts: 2342
    • Join Date:
      5 Jan, 2017

    Re: طاقت

     Shall we call this lesser-evil-syndrome the entire country is suffering from? Will there ever be any cure for this?

    شیراز صاحب …پاکستان میں بلکہ ہر ملک میں لوگ صرف پاور کے لئے سیاست میں آتے ہیں …پتا نہیں آپ کس مسیحا کا انتظار کر رہے ہیں …حضرت جبرئیل سے ہی گزارش کی جاسکتی ہے کہ آکر پاکستان کا انتظام سنبھالیں …ورنہ جیسے عوام ویسے سیاستدان

    #58
    Bawa
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 138
    • Posts: 10910
    • Total Posts: 11048
    • Join Date:
      24 Aug, 2016

    Re: طاقت

    باوا جی …نواز شریف کے زوال میں دو واقعات کا سب سے بڑا ہاتھ ہے ایک دان لیکس اور آرمی کے ٹویٹ کی واپسی اور دوسرا نواز شریف کا باجوہ کی نامزدگی کے موقع پر اسے اپنے ماتحت کی طرح سامنے بیٹھا کر تصویر کھچوانا اور اسے میڈیا کو جاری کرنا جس لیڈر کی جذباتی فالوونگ نہیں وہ بار بار نواز شریف کی طرح ذلیل ہو کر نکالا جاۓ گا

    قرار جی

    سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات نواز شریف سے ناراض نہ ہوتے تو سو ڈاؤن لیکس، سو ٹویٹس کی واپسی اور جرنیلوں کو ما تحتوں کی طرح سامنے بٹھا کر سو تصویریں بھی میڈیا کو جاری کر دی جاتیں تو عربوں کے ٹکروں پر پلنے والے کسی فوجی کو نواز شریف کے ساتھ یہ سلوک کرنے کی جرات نہ ہوتی

    میں نے پہلے بھی نواز شریف کے حامی صرف اسے ووٹ دینے والے ہیں، جاہلوں اور بے وقوفوں کی طرح اس کی خاطر سڑکوں پر مار کھانے والے نہیں ہیں

    #59
    Qarar
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 95
    • Posts: 2247
    • Total Posts: 2342
    • Join Date:
      5 Jan, 2017

    Re: طاقت

     میں نے پہلے بھی نواز شریف کے حامی صرف اسے ووٹ دینے والے ہیں، جاہلوں اور بے وقوفوں کی طرح اس کی خاطر سڑکوں پر مار کھانے والے نہیں ہیں

    یعنی لیڈر کو مار کھانے کے لئے چھوڑ رکھا ہے؟

    خدا ایسے کارکن کسی کو نہ دے

    :lol:

    #60
    Bawa
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 138
    • Posts: 10910
    • Total Posts: 11048
    • Join Date:
      24 Aug, 2016

    Re: طاقت

    یعنی لیڈر کو مار کھانے کے لئے چھوڑ رکھا ہے؟ خدا ایسے کارکن کسی کو نہ دے :lol:

    قرار جی

    اگر مسلم لیگ نون والوں نے نواز شریف کو مار کھانے کیلیے چھوڑ دیا ہے تو اس میں حیرت کی کیا بات ہے؟

    آپکے پی پی پی والوں نے تو آپکے پیغمبری کے مستحق بھٹو کو پھانسی پر لٹکنے اور آئی ایس آئی سے ختنے چیک کروانے کیلیے چھوڑ دیا تھا

    :bigsmile: :lol: :hilar:

Viewing 20 posts - 41 through 60 (of 325 total)

You must be logged in to reply to this topic.

Navigation