Thread: جمہوریت کا شب خون

Home Forums Siasi Discussion جمہوریت کا شب خون

This topic contains 10 replies, has 7 voices, and was last updated by  JMP 1 year, 8 months ago. This post has been viewed 493 times

Viewing 11 posts - 1 through 11 (of 11 total)
  • Author
    Posts
  • #1
    JMP
    Participant
    Offline
    Thread Starter
    • Professional
    • Threads: 236
    • Posts: 4197
    • Total Posts: 4433
    • Join Date:
      7 Jan, 2017

    Re: جمہوریت کا شب خون

    کسی بھی جمہوریت پسند سے پوچھیں کے پاکستان میں جمہوریت کا قتل کس کس نے کیا تو بہت حد تک جواب آے گا کے مرحوم فیلڈ مارشل ایوب خان ، مرحوم جرنل یحیٰ خان صاحب، حق اور باطل کی جنگ میں حق کے تنہا مرد مومن مرد حق جرنل ضیاء شہید صاحب اور سب سے بہادر کمانڈو جرنل پرویز مشرف صاحب . اور نہ سوچ نہ نگاہ کہیں اور بھٹکنے کا تامل کرتی ہے

    مرحومہ بینظیر کے قتل کے بعد ملک کی سب سے بڑی سیاسی جماعت سب سے بڑے جمہوری امتحان سے گزری تو جماعت کی سربراہی ایک ایسے نوجوان کے سپرد ہوئی جو ملک میں بہت کم عرصے رہا، جو اپنی تعلیم مکمل کر رہا تھا اور جسکو ملک کی زبان بولنا نہ آتی ہو اور جس کو اپنا نام بھٹو رکھنا پڑا . کیا اعتزاز، کیا جہانگیر بدر، کیا مخدوم، کیا شاہ محمود اور کیا کوئی اور جہاندیدہ اور جماعت کا مخلص، اس سب سے بڑی سیاسی جماعت کا سربراہ بننے کا اہل نہیں قرار پایا. جمہوریت خاندانی سیاست کی نظر ہو گئی .

    آگے بڑھتے ہیں تو ملک کی سب سے بڑی جماعت کے سب سے سے زیادہ ملک بھر میں سب سے محترم رہنما جناب محترم میاں صاحب اس ایوان میں اکا دکا بار تشریف لے گئے جو جمہوریت کا مسکن ہے. جب برا وقت آیا تو دل اور دماغ پر نظریاتی سیاست کے راز کھلنے لگے اور ووٹ کی عزت کا نعرہ بلند ہوا. جب جماعت کی سربراہی کا تعیین کرنے کا جمہوری اور مشکل وقت آ پہنچا تو سب سے اہل محترمہ مریم نواز صاحبہ نظر آئیں . مگر مجبوری تھی کے کسی اور کو چننا تھا تو جمہوریت گھر میں ہی رہی اور جمہوریت کے اور ترقی کے علمبردار اپنے ہی بھائی محترم جناب شہباز شریف ہی اصل حقدار قرار پاۓ . اور جب ماضی کے جاگ پنجابی جاک سے جمہوریت کا نام روشن کرنے والے اپنے ہی صوبے کی خدمت کے جذبے سے سرشار مستقبل کا سوچتے ہیں تو صرف محترم حمزہ شہباز صاحب ہی اہل ٹھہرے . سب سے بڑی سیاسی جماعت میں کیا خواجہ صاحب تو کیا چودھری نثار صاحب تو کیا سعد رفیق صاحب تو کیا کوئی اور، کوئی بھی محترمہ مریم صاحبہ یا محترم شہباز شریف صاحب یا جناب حمزہ صاحب کی سیاسی سوجھ بوجھ، سیاسی جدوجہد، سیاسی تجربہ، سیاسی ساکھ کے آگے بونا ہی ٹھہرا

    ادھر ادھر دیکھیں تو مرحوم ولی خان صاحب کی جماعت ہو یا مرحوم بگٹی صاحب کی یا پھر جمعیت کا ذکر ہو یا پھر قاف کا ذکر ہو حق پرستوں کا ذکر خیر ہو جمہوری سیاسی جماعت کی سربراہی ہمیشہ جمہوریت کے دعویدار، جمہوری عمل سے گزر کر ہی طے کرتے ہیں یعنی یا تو زندگی بھر کے لئے اپنے پاس یا اپنے اہل خانہ کے پاس

    اور سب کچھ تبدیل کرنے کا نام بلند کر کے لوگوں کے لہو کو گرمانے اور دلوں کی دھڑکن کو تیز کرنے کے ماہر اور ہماری آخری امید محترم خان صاحب کا سوچتے ہیں تو کیا نوجوان، کیا نئے چہرے، تو کیا امین اور صادق تو کیا صاف شفاف نام کچھ بھی کام کا نہیں ہے . اگر کچھ کام کا ہے تو سیاسی سائنس کا تجربہ جو کے محترمہ فردوس اعوان، محترم گوندل صاحب، محترم کھوسہ صاحب اور پتا نہیں کتنے اور اہل ناموں میں ہی نظر آتا ہے، ہاں تبدیلی آئ لیکن صرف خان صاحب کے نظریہ میں، خان صاحب کے وعدوں میں، خان صاحب کے دعووں میں. جمہوریت پھر منه تکتی ہی رہ گئی

    محترم باوا صاحب اکثر عدلیہ کو فوج کی لونڈی قرار دیتے ہیں. اکثر اور بیشتر لگتا ہے کے درست فرماتے ہیں .

    اور میں جمہوریت کو گھر کی لونڈی قرار دیتا ہوں جو اپنے ہی بیٹوں اور بیٹیوں کے نام نسل در نسل کبھی وصیت اور کبھی بغیر وصیت کے منتقل ہوتی رہتی ہے

    جمہوریت زندہ باد

    #2
    JMP
    Participant
    Offline
    Thread Starter
    • Professional
    • Threads: 236
    • Posts: 4197
    • Total Posts: 4433
    • Join Date:
      7 Jan, 2017

    Re: جمہوریت کا شب خون

    Bawa sahib

    محترم باوا صاحب

    سلام

    آپکا ذکر خیر کیا ہے لہٰذا آپ کو آگاہ کرنا ضروری ہے

    #3
    Democrat
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 46
    • Posts: 1312
    • Total Posts: 1358
    • Join Date:
      17 Oct, 2016

    Re: جمہوریت کا شب خون

    جمہوری روایات کو پروان چڑھانے اور اسکے بنیادی اصولوں کو اصل روح کے مطابق قائم کرنے  کیلئے ابھی ایک طویل عمر درکار ھے

    خوشقسمتی سے اب قوم کی اکثریت اس پر متفق ھے کہ جمہوریت ھی ھمارے مسائل کا حل ھے اور امریت اور اسکے رویے ملک میں گھٹن ،انتہاپسندی کا باعث بنے ھیں

    ابھی یہ جمہوریہ بیانیہ کمزور ھے سول سوسائٹی اور سول ادارے کمزور وبے بس ھیں لیکن نظام اب چلتا رھے گا اونچ نیچ بھی ھوتی رھے گئی لیکن آمرانہ رویے وقت کے ساتھ دم توڑیں گے اور پھر جمہوری اداروں کو پروان چڑھنے اور روایات کو قائم کرنے میں اسانی ھو گی

    #4
    Guilty
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 0
    • Posts: 4532
    • Total Posts: 4532
    • Join Date:
      6 Nov, 2016

    Re: جمہوریت کا شب خون

    لیکن آمرانہ رویے وقت کے ساتھ دم توڑیں گے اور پھر جمہوری اداروں کو پروان چڑھنے اور روایات کو قائم کرنے میں اسانی ھو گی

    ڈیمو کریٹ اصل مسئلہ ہی یہ ہے کہ ۔۔۔ اس ملک میں ۔۔۔ آمرانہ رویے اور سوچ جب تک مضبوط رھے گی ۔۔۔۔ کچھ پیش رفت نہ ہوگی ۔۔۔۔

    یہ قوم ۔۔۔ جب تک ۔۔۔۔ سیاستدانوں سے حالات جنگ  اور دشمنی سے باز نہیں آجاتی  ۔۔۔  اور جب تک یہ قوم ۔۔۔ فوجی نرسری کے مندر سے با ھر نہیں نکلتی ۔۔۔۔

    یہ اپنے انجام کی طرف کی اسی طرح سفر جاری رکھے گی ۔۔۔۔۔۔

    تب تک ۔۔۔ آمرانہ رویے ۔۔۔۔  اور ۔۔۔ سرکاری نرسریاں ۔۔۔  پروان چڑھتی رھیں گی  ۔۔۔۔ ۔۔۔۔

    #5
    Ghost Protocol
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 138
    • Posts: 4463
    • Total Posts: 4601
    • Join Date:
      7 Jan, 2017

    Re: جمہوریت کا شب خون

    جے بھیا،
    کینیڈا کی جمہوریت پر بھی کچھ ارشاد ہوجاے –
    مجھے یہاں بھی لوگ سیاست اور سیاست دانوں سے اکتاے ہوے لگتے ہیں؟

    #6
    shami11
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 701
    • Posts: 7808
    • Total Posts: 8509
    • Join Date:
      12 Oct, 2016
    • Location: Pakistan

    Re: جمہوریت کا شب خون

    پاکستان میں جمہوریت کی ایک شکل ، ایک الہڑ مٹیار ، جس کو جوانی چڑھی ہو کی طرح ہے ، گاؤں کا چوہدری اس کے سر پر سے دوپٹہ اتارنے کے در بے رہتا ہے
    دوسری جمہوریت کی شکل ، جمہوری دور میں نظر آتی ہے ، جب جھکی گردنوں کے ساتھ یہ لوگ اپنے علاقوں میں ووٹ لینے جاتے ہیں اور اس کے بعد پانچ سال (موجودہ دور میں ) نظر نہی آتے ، اس کے بعد ان کی شکلیں ٹی وی کے پروگراموں میں نظر آتی ہے
    آج کل سب کی کوشش ہے کے اپنے حلقوں میں حاجی صاحب بن کر دکھائیں ، ووٹ اپنی موجودہ ، سابقہ اور مستقبل میں کرنے والی خدمات کے صلے میں گلی گلی میلہ لگانے والے ہیں ، سوشل میڈیا پر میلہ سج گیا ہے

    #7
    Bawa
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 147
    • Posts: 13102
    • Total Posts: 13249
    • Join Date:
      24 Aug, 2016

    Re: جمہوریت کا شب خون

    Bawa sahib محترم باوا صاحب سلام آپکا ذکر خیر کیا ہے لہٰذا آپ کو آگاہ کرنا ضروری ہے

    و علیکم السلام جے بھیا

    آپکی عنایت کا بہت شکریہ

    میرا ذکر کرتے ہوئے فکر کرنے کی ضرورت نہیں ہے

    :)

    #8
    Lovelyday
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 2
    • Posts: 362
    • Total Posts: 364
    • Join Date:
      20 Mar, 2017
    • Location: Danishgardi Forum

    Re: جمہوریت کا شب خون

     اور میں جمہوریت کو گھر کی لونڈی قرار دیتا ہوں جو اپنے ہی بیٹوں اور بیٹیوں کے نام نسل در نسل کبھی وصیت اور کبھی بغیر وصیت کے منتقل ہوتی رہتی ہے

    جمہوریت زندہ باد

    JMP : Hypo sahib, history has it that political families are running democracies in both eastern and western societies. In Canada we have and had Trudeaus, the Bushes in USA, the Ghandis of Congress I, Argentina’s Kirchners, UK’s Millibands and hundreds of politicians who are being elected in western democracies because of their identity. I dont see any reason why Sharif or any other political dynasty participating in a democratic process would be a hindrance to the development of Pakistan. Had it been the case, we would not have been hearing “electable are necessary”. What is bad is, subversive interference from subordinate departments which use controlled chaos to undermine an ongoing process: namely political stability, for their organizational interests and existence.

    #9
    JMP
    Participant
    Offline
    Thread Starter
    • Professional
    • Threads: 236
    • Posts: 4197
    • Total Posts: 4433
    • Join Date:
      7 Jan, 2017

    Re: جمہوریت کا شب خون

    Lovelyday sahib

    hanks for your comments. I am trying to respond but somehow cannot post a comment on this thread.

    • This reply was modified 1 year, 8 months ago by  JMP.
    #10
    JMP
    Participant
    Offline
    Thread Starter
    • Professional
    • Threads: 236
    • Posts: 4197
    • Total Posts: 4433
    • Join Date:
      7 Jan, 2017

    Re: جمہوریت کا شب خون

    Ghost Protocol sahib

    محترم گھوسٹ پروٹوکول صاحب

    سلام عرض ہے

    امید کرتا ہوں کے آپ اور اہل خانہ خیریت سے ہیں

    ذاتی طور پر میں سیاست دنوں اور سیاست کا حامی ہوں . میری نظر میں معاشرے اور قوم کو رہنماؤں کی ضرورت ہوتی ہے اور ہمیشہ رہے گی. سیاست دن ہمارے معاشرے اور قوم کے وہ رہنما ہیں جو معاشرے اور قوم کی درست سمت میں رہنمائی کر سکتے ہیں . جس طرح کاروبار کو منافع بخش اور دیرپا رکھنے کے لئے قیادت ضرورری ہے اسی طرح ملک اور قوم کے لئے سیاسی قیادت ضروری ہے. فرق اتنا ہے کے ذاتی کاروبار میں ذاتی منافع اہم ہوتا ہے اور سیاست میں ذاتی منافع غلط ہوتا ہے میری نظر میں . مرے خیال میں سیاست ایک پیشہ ہونا چاہیے اور سیاست دانوں کو اپنے پیشے میں دوسرے عام لوگوں سے برتر ہونا چاہیے . ہاں جہاں سیاست کاروبار بن جاۓ . دل کچھ رنجیدہ اور اکتا سا جاتاہے

    میرے خیال میں کچھ وجوہات ہو سکتی ہیں جو لوگوں کو عمومی طور پر سیاست یا سیاست دانوں سے بد زن کر سکتی ہیں. کچھ وجوہات درج ذیل ہیں :

    ١) جمہوریت کا تعریف کا صرف ووٹ دینے تک سمٹ جانا
    ٢) ایک جیسی حکومت، وعدوں ، دعوؤں ، طرز عمل ، بیانوں سے اکتاہٹ
    ٣) بیانات اور ذاتی طرز عمل میں زمین آسمان کا فرق
    ٤) عوام کی رہنمائی کرنے میں ناکام ہونا
    ٥) جہاں باقی چیزیں ارتقاء کے عمل سے گزری ہیں گزر رہی ہیں اور گزرتی رہیں گی، سیاست اور سیاست گری میں کوئی خاص ارتقاء نہیں ہوا ہے

    اگر اپنے ملک میں دیکھیں تو محترم میاں صاحب، محترم خان صاحب یا جناب زرادری صاحب کی سیاست میں کیا فرق ہے. اگر میاں صاحب اس دور سے نہ گذرتے جی سے گزر رہے ہیں تو کیا میاں صاحب نظریاتی ہوتے. نظریاتی کہنے کے باوجود انکے قول اور کردار میں کیا فرق نظر آیا ہے .

    خان صاحب کی پختونخواہ میں کارکردگی اور انکی پانچ سال کی منفی سیاست اور انکے نظریات میں روز روز کی تبدیلی کے بعد کیا وہ ہمارے رہنمائی کے قابل ہیں. کیا زرداری صاحب کو ہم فخر سے اپنا رہنما قرار دے سکتے ہیں

    جہاں تک بات کینیڈا کی ہے تو میرے خیال میں سیاست میں یکسانیت کا عنصر بہت زیادہ ہے. البتہ چونکہ اکثر لوگ خوش حال ہیں، اظھار خیال کی آزادی ہے لہٰذا لوگ سوال زیادہ کرتے ہیں

    میرے خیال میں جمہوریت کی تعریف تعیین کرنا ضروری ہے اور سیاست کو کچھ مختلف ہونا پڑے گا اور شاید کوئی اور طرز اپنانا پڑے گا

    #11
    JMP
    Participant
    Offline
    Thread Starter
    • Professional
    • Threads: 236
    • Posts: 4197
    • Total Posts: 4433
    • Join Date:
      7 Jan, 2017

    Re: جمہوریت کا شب خون

    Lovelyday sahib

    Salam

    I hope you are doing well.

    Thanks for your comments. I agree with you that there are other examples of dynastic politics out there. I also agree wholeheartedly that “subordinate” functions, departments and people should not exert their power and influence and undercut the legitimacy and right of civilian set-up elected by people to govern. I think I could not communicate properly my thought process:

    1. The champions of democracy do not themselves follow a democratic process an dnorm when they are managing themselves and their political affairs. The political parties  in Pakistan by and large  have turned into fiefdoms.
    2. The lack of self discipline, examples and following the democratic process by the political leaders has stifled the growth of a democratic process and growth of democracy at grass root levels both within the political parties and within the nation.
    3. Political credentials, political thought process, observance of democracy, political experience, diplomacy and the sense to gauge the pulse of the nation are not important though bearing the surname of the leader of the political party is the single most important criteria.
    4. The founders of the political parties consider it their right to be the life long head of the political party.

    In the very apt examples cited by you, in most cases, I dont think that anyone was nominated through a will to become the head of the party. Justin did not become the leader of Liberal Party just because his father Late Pierre  decided it or chose him as leader of the Liberal party. The Late elder Bush did not passed the baton to junibecome the or Bush to become the leader of Republican party or automatically represent the Republicans as their candidate. In fact he has to go through a process to become the candidate for the Republican party. Jeff Bush didnt automatically go nominated by Republicans to be the nominee for President. In fact he lost out in the process. Can our beloved Mian sahib or equally charming Khan sahib or ever conniving Zardari have the democratic credentials to fight off such democratic challenge from within the party? The name Tureadu, Bush, Kennedy, Gandhi etc does help, no doubt but it is not a guarantee.  When I look at the world politics yes there are many examples in the autocratic run regimes where dynasties continue to rule but in democratic countries we find very very few examples of dynastic politics. However in our country, literally every party is a shining example of dynastic politics.

    As far as Ganhis are concerned, they are doing the same as we are doing in Pakistan so yes they are no different.

    I dont like religion as part of politics nor do I like negative politics nor fear mongering. I am a very big critic of BJP as they are ruining the essence of democracy. Saying so I  like BJP as they have not created r followed any pattern of dynastic politics.

    I am not against anyone who is interested in politics to become a politician, a leader of the political party as well as the nation. I though will like such person to demonstrate that they follow the essence of democracy, that they can demonstrate that on merit they are better than others and that they practice what they preach.

    What makes respectable Maryam Nawaz sahiba, Bilawal Zardari, Hamza Shahbaz sahib, Moons Elahi sahib better than the seasoned politicians in their respective parties is beyond me.

    • This reply was modified 1 year, 8 months ago by  JMP. Reason: Tagged Lovely Day sahib
Viewing 11 posts - 1 through 11 (of 11 total)

You must be logged in to reply to this topic.

Navigation

Do NOT follow this link or you will be banned from the site!