Thread: جج ملک محمد ارشد کی مبینہ ویڈیو کے بعد پہلی سماعت: آج اتنی سنجیدگی کیوں ہے بھائ

Home Forums Siasi Discussion جج ملک محمد ارشد کی مبینہ ویڈیو کے بعد پہلی سماعت: آج اتنی سنجیدگی کیوں ہے بھائ

This topic contains 0 replies, has 1 voice, and was last updated by  حسن داور 2 weeks, 1 day ago. This post has been viewed 46 times

Viewing 1 post (of 1 total)
  • Author
    Posts
  • #1
    حسن داور
    Participant
    Offline
    Thread Starter
    • Expert
    • Threads: 3845
    • Posts: 2066
    • Total Posts: 5911
    • Join Date:
      8 Nov, 2016

    Re: جج ملک محمد ارشد کی مبینہ ویڈیو کے بعد پہلی سماعت: آج اتنی سنجیدگی کیوں ہے بھائ

    اسلام آباد کی احتساب عدالت کے جج ملک محمد ارشد کی مبینہ ویڈیو سامنے آنے کے بعد پیر کو احتساب عدالت میں مقدمات کی سماعت کرنے کا ان کا پہلا دن تھا۔
    مقدمات کی سماعت میں سب سے اہم مقدمہ سابق صدر اور پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری اور ان کی بہن فریال تالپور کے خلاف منی لانڈرنگ کا تھا۔
    پیر کو ہونے والی عدالتی کارروائی اور اس سے پہلے ہونے والی عدالتی کارروائیوں میں جو ایک واضح فرق نظر آیا وہ جج ارشد ملک کے رویے کی صورت میں تھا۔ ایک تو ماحول پہلے کے مقابلے میں نہ صرف سنجیدہ تھا بلکہ اُنھوں نے مکمل جج کا لباس بھی پہنا ہوا تھا یعنی سفید شرٹ، کالی ٹائی اور کالا کوٹ جبکہ اس سے پہلے وہ مختلف رنگوں کی ٹائیاں پہن کر آتے تھے جو کہ محض اتفاق بھی ہو سکتا ہے۔
    اہم مقدمات کی سماعت کی کوریج کے لیے جب صحافی جج ارشد ملک کی عدالت میں جاتے تو وقت گزرنے کا اندازہ بھی نہیں ہوتا تھا کیوں کہ سماعت کے دوران طنز و مزاح کے ایسے نشتر چلاتے کہ کمرہ عدالت میں بیٹھا ہوا کوئی بھی شخص مسکرائے بغیر نہیں رہ سکتا تھا لیکن آج تو حالات اس کے بالکل برعکس تھے۔
    ملزمان آصف علی زرداری اور ان کی بہن فریال تالپور جب کمرہ عدالت کی طرف آرہے تھے تو ایک صحافی نے سوال پوچھا کہ ارشد ملک کی مبینہ ویڈیو منظر عام پر آنے کے بعد کیا آپ کو اس عدالت سے انصاف کی توقع ہے جس پر آصف علی زرداری نے مسکراتے ہوئے اس صحافی کا موبائل پکڑ لیا اور چند لمحوں کے بعد اس کو واپس کردیا۔
    کمرہ عدالت میں داخل ہوتے ہوئے چند صحافی ایک دوسرے کو کہنے لگے کہ ’آج اتنی سنجیدگی کیوں ہے بھائی‘۔
    کمرہ عدالت میں فریال تالپور کے ساتھ دو خواتین پولیس اہلکاروں کو بٹھایا گیا تو فریال تالپور نے اس پر ناراضگی کا اظہار کیا اور ان خواتین پولیس اہلکاروں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ’میں یہاں عدالت سے بھاگ کر کہاں جاؤں گی‘۔ جس کے بعد وہ خواتین پولیس اہلکار وہاں سے اُٹھ گئیں اور فریال تالپور نے پاکستان پیپلز پارٹی کی سینیٹر سسی پلیجو کو اپنے ساتھ بیٹھنے کا اشارہ کیا۔
    آصف علی زرداری اور ان کی بہن کے خلاف مقدمات کی سماعت ختم ہونے کے بعد جج ارشد ملک آدھے گھنٹے کے لیے اپنے چیمبر میں گئے اور جب واپس آئے تو آصف علی زرداری کمرہ عدالت میں ہی موجود تھے جس پر احتساب عدالت کے جج نے اپنے عملے سے کہا کہ یہ ابھی تک بیٹھے ہیں۔
    عدالتی عملے نے آصف علی زرداری اور ان کے وکلاء کو کمرہ عدالت سے اُٹھ جانے کو تو نہیں کہا البتہ جس جگہ پر سابق صدر اور ان کے ساتھی بیٹھے ہوئے تھے اس طرف کا پنکھا بند کردیا۔ تاہم اس کے باوجود بھی آصف علی زرداری اپنے وکلاء اور پارٹی رہنماؤں کے ساتھ کمرہ عدالت میں موجود رہے۔
    پاکستان پیپلز پارٹی نے آصف علی زرداری کو قومی اسمبلی کی 6 قائمہ کمیٹیوں کا رکن بنوایا ہے اور ان قائمہ کمیٹیوں کے اجلاس میں شرکت کرنے کے لیے قانون کے مطابق ان کے پروڈکشن آرڈر جاری کرنا ہوتے ہیں۔ پیر کو بھی انڈسٹریز سے متعلق قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی کا اجلاس ہونا تھا اور آصف علی زرداری اس کمیٹی کے رکن ہیں۔

    https://www.bbc.com/urdu/pakistan-48909836

Viewing 1 post (of 1 total)

You must be logged in to reply to this topic.

Navigation