Thread: بلیک میلنگ بذریعہ سپریم جوڈیشل کونسل

Home Forums Siasi Discussion بلیک میلنگ بذریعہ سپریم جوڈیشل کونسل

This topic contains 26 replies, has 11 voices, and was last updated by  Zinda Rood 1 year, 5 months ago. This post has been viewed 1055 times

Viewing 20 posts - 1 through 20 (of 27 total)
  • Author
    Posts
  • #1
    Qarar
    Participant
    Offline
    Thread Starter
    • Professional
    • Threads: 101
    • Posts: 2515
    • Total Posts: 2616
    • Join Date:
      5 Jan, 2017

    Re: بلیک میلنگ بذریعہ سپریم جوڈیشل کونسل

    قرار نامہ
    ٣١ جولائی ٢٠١٨

    پاکستان میں کچھ ادارے یا شخصیات ایسی ہیں جو احتساب سے بالاتر ہیں ..مثال کے طور پر فوج ، عدلیہ اور نیب کا ادارہ ….اگرچہ ان تینوں اداروں کے اندر میں خود احتسابی کا اپنا ایک نظام موجود ہے مگر وہ ایک مذاق سے کم نہیں

    اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس شوکت عزیز صدیقی کے خلاف سپریم جوڈیشل کونسل میں ایک درخواست پر سماعت ہو رہی ہے جس میں جج صدیقی پر اپنے سرکاری گھر کی تزئین و آرائش پر بے جا اخراجات کروانے کا معاملا زیر بحث ہے …..جج صدیقی نے اپنے دفاع میں یہ درخواست دی تھی کہ اسے باقی جج حضرات کے گھروں پر ہونے والے اخراجات کی تفصیل فراہم کی جاۓ تاکہ اس بات کا موازنہ کیا جاسکے کہ کیا واقعی جج صدیقی کے گھر پر لگنے والی رقم باقی جج حضرات سے زیادہ ہے یا ان جیسی ہی ہے .جج صدیقی نے ان ججز کی بھی فہرست حاصل کرنے کی درخواست کی جو کہ نجی رہائش گاہ کو سرکاری کا درجہ ملنے کے باوجود ہزاروں کی تعداد میں الاؤنس وصول کر رہے ہیں …لیکن سپریم جوڈیشل کونسل نے یہ درخواست رد کردی

    میری ذاتی نظر میں جسٹس شوکت عزیز صدیقی ایک اچھا جج نہیں ہے …سوشل میڈیا پر ہونے والے کریک ڈاؤن اور بلاگرز کی ایجنسیوں کے ہاتھوں گرفتاریوں والے معاملے میں اس جج نے انصاف اور اظہار راۓ کی آزادی کی دھجیاں بکھیری تھیں ….سوشل میڈیا پر ایک پرانی ویڈیو اور تصویر بھی موجود ہے جس میں ممتاز قادری کا منہ چومتے ایک شخص کو دکھایا گیا ہے جس کی شکل کافی حد تک تک جج صدیقی سے ملتی ہے…..لہذا مجھے اس شخص سے ذرا سی ہمدردی بھی نہیں ہے اور میری دلی خواہش ہے کہ اسے بے عزت کرکے کورٹ سے نکالا جاۓ

    ہیری پوٹر نامی سیریز میں تمام کہانیاں ایک ہی مرکزی ولن کے گرد گھومتی ہیں …اور عام لوگ اس سے اتنے خوف زدہ ہیں کہ تنہائی میں بھی اس کا نام لینے سے گریزاں نظر آتے ہیں …کبھی اس ولن کو ڈارک لارڈ کہا جاتا ہے اور کبھی

    You know who!

    He who must not be named!

    تاہم میری ذاتی ناپسندیدگی کے باوجود مجھے صدیقی کے حوصلے کو داد دینی پڑتی ہے …جس ملک میں لوگ سیاستدان اور میڈیا والے براہ راست فوج کا نام بھی لے سکیں …جہاں فوج کی طرف اشارہ کرنے کے لیے …خفیہ ہاتھ ..مقتدر حلقے …نادیدہ قوتیں …پس پردہ طاقتیں ..اور محکمہ زراعت جیسی اصطلاح استعمال کرنی پڑے وہاں شوکت صدیقی نے نام لے کر آئی ایس آئی کے کچے چٹھے کھولے ہیں….کہ کس طرح آئی ایس والے عدالتوں پر دباؤ ڈال کر پنسندیدہ ججز پر مشتمل بینچ بنواتے ہیں اور اپنی مرضی کے فیصلے حاصل کرتے ہیں …جج صدیقی نے کوئی نئی بات نہیں کی ..پاکستان میں تقریباً ہر شخص ہی جانتا ہے کہ کس طرح عدالتوں پر اثر انداز ہوا جاتا ہے تاہم میڈیا میں کسی کو اجازت نہیں کہ کھل کر اس معاملے پر لب کشائی کر سکے

    یہاں میں سپریم جوڈیشل کونسل کا خاص طور پر ذکر کرنا چاہوں گا جسے صرف کچھ “باغی” ججوں کو بلیک میل کرنے کے لیے استعمال کیا جارہا ہے …ایک دو سال سے میڈیا میں خبریں لگیں کہ اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس انور کاسی کے خلاف ناجائز بھرتیوں پر ایک ریفرنس دائر کیا گیا تھا …اسی طرح جسٹس شوکت عزیز صدیقی پر بھی اپنی سرکاری رہائش گاہ پر ضرورت سے زیادہ اخراجات کا ریفرنس سامنے آیا ….سپریم جوڈیشل کونسل کی اکا دکا سماعت بھی ہوئی اور بجاۓ ریفرنسز کو منطقی انجام تک پونہچانے کے …سماعت بارہا ملتوی کی ہوتی رہی …کبھی اچانک خبر آجاتی کی سماعت پھر ہو رہی ہے مگر پھر ملتوی ہوجاتی …اور چونکہ سب کچھ خفیہ اجلاسوں میں ہوتا تھا تو پبلک کو کوئی خبر نہیں کہ کس قسم کی کاروائی ہوئی

    میں اگر قیاس کروں تو یہ کچھ حقیقت سے دور نہیں ہوگا کہ اصل میں سپریم جوڈیشل کونسل کی کاروائی محض ججز کو دھمکی دینے کے لیے استعمال کی جاتی ہے کہ بندے کے پتر بنو اور لائن پر آجاؤ …اک دکا کو نکال کر سب کے سب چیف جسٹس (اور خاص طور پر موجودہ چیف جسٹس) ایک مافیا سربراہ کے طور پر عمل کرتے ہیں ..جہاں کسی مقامی ڈان کو سربراہ سے اختلاف کی گنجائش نہیں ہوتی …آپ کو یاد ہوگا کہ جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے شیخ رشید کی نا اہلی کے مقدمے میں کچھ ریمارکس دیے جوکہ بینچ کے دوسرے ججوں اور چیف جسٹس کو ناگوار گزرے کیونکہ وہ ججوں کے سابقہ فیصلوں پر تنقید سمجھی گئی ….اس پر اچانک چیف جسٹس نے جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کی تعیناتی کی ایک پرانی درخواست ….جسے کہ رجسٹرار پہلے ہی مسترد کرچکا تھا …اسے کھول لیا گیا اور سماعت کے لیے بھی لگا دیا گیا …یہ جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کے لیے ایک پیغام تھا کہ سیپریم کورٹ میں رہنا ہے تو مکمل اطاعت کرنی پڑے گی …وہ تو بھلا ہو بلوچستان سندھ اور کے پی کے وکلاء تنظیموں کا جنہوں نے اس پر ہڑتال کا اعلان کردیا اور چیف جسٹس کو اپنا تھوکا چاٹ کر …اور صفائیاں دے کر …جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کے خلاف درخواست مسترد کرنی پڑی

    انور کاسی اور شوکت صدیقی کے ریفرنسز کا بھی کچھ یہی معاملہ لگتا ہے …جب یہ ججز “اوقات سے باہر ہو کر” اپنی مرضی کے بینچ بنانا شروع کرتے ہیں یا پہلے سے لکھا ہوا فیصلہ نہیں سناتے تو سپریم جوڈیشل کونسل کی تلوار ان پر لٹکا دی جاتی ہے …جب ان کی طرف سے سوری سوری کہ دیا جاتا ہے تو حالت نارمل ہوجاتے ہیں سپریم جوڈیشل کونسل کی کاروائی غیر معینہ مدت کے لیے ملتوی بھی ہوجاتی ہے ….تاہم جج صدیقی نے اس دفعہ اپنی ساری کشتیاں جلا لی ہیں ….دنیا کی نمبر ون ایجنسی کا نام لے کے جو “بہتان” تراشی گئی ہے ..اس کے بعد شوکت صدیقی کی نوکری بچنے کا کوئی امکان نظر نہیں آتا

    سپریم جوڈیشل کونسل میں بیشمار ریفرنسز موجود ہیں …آدھ درجن تو شاید ثاقب نثار کے اپنے خلاف ہیں لیکن ان پر ایک بھی سماعت نہیں ہوئی اور نہ ہو گی …اس بات کی وضاحت بھی نہیں کہ وہ کون سے قاعدہ قانون ہے جس کی رو سے سپریم جوڈیشل کونسل کسی ریفرنس کی سماعت کرتی ہے …کیا مرحلہ وار پہلے آنے والے ریفرنس پر کاروائی ہونی چاہیے یا کہ چیف جسٹس کی مرضی کہ وہ سات سال سے پڑی درخواست کو نظر انداز کرکے پرسوں آنے والے ریفرنس کی سماعت شروع کردے

    سپریم جوڈیشل کونسل کی کارکردگی کا جائزہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ آج تک کسی بھی جج کو نہیں ہٹایا گیا ….اس بات پر مجھے پاکستان میں ریپ کے متعلق اعداد و شمار یاد آتے ہیں کہ پچھلے پانچ سات سال میں کسی ایک بھی ریپ کے مجرم کو سزا نہیں ہوئی …کیا اس سے یہ فرض کیا جاۓ کہ پاکستان عورتوں کے لیے محفوظ ترین ملک ہے اور یہاں ریپ ہوتے ہی نہیں؟ کیا اسی طرح یہ بھی فرض کرلیا جاۓ کہ کوئی جج کرپٹ نہیں کیونکہ لاتعداد ریفرنسز کے باوجود کسی ایک بھی جج کو برطرف نہیں کیا گیا؟

    جہاں دوسرے اداروں میں احتساب کو بات ہورہی ہے وہاں یہ بھی ضروری ہے کہ عدلیہ کا احتساب بھی کسی تیسرے ادارے کے پاس ہو اور ان دائر کردہ ریفرنسز پر کاروائی کی کوئی مدت مقرر ہو …اسی طرح ہائی کورٹ اور سپریم کورٹ کے چیف جسٹس سے بینچ بنانے کا اختیار واپس لے کر یا تو پورے کورٹ کو یا پھر پہلے سات یا نو ججز کی ایک کمیٹی کو دے دیا جاۓ ..اس عمل سے بینچ کی تشکیل کا عمل کچھ شفاف ہوجاۓ گا

    آخر میں یہ وضاحت ضروری ہے کہ سپریم جوڈیشل کونسل کو جج کو برطرف کرنے کی سفارش کا تو اختیار ہے مگر حتمی فیصلہ صدر پاکستان کی صوابدید پر ہے …اگر صدر اس سفارش کو مسترد کردے تو جج کو ہٹایا نہیں سکتا ….میری اپنی رائے میں جج شوکت صدیقی کے خلاف کاروائی چلتی رہے گی جب تک کہ ممنون حسین کی جگہ اگلا صدر نہیں آجاتا …لہذا ایک دو مہینے جج صدیقی کی نوکری کو کوئی خطرہ نہیں کیونکہ امکان یہی ہے اگر سپریم جوڈیشل کونسل کا فیصلہ ابھی چند دنوں میں آجاتا ہے تو ممنون حسین سپریم جوڈیشل کونسل کی سفارش کو منظور نہیں کرے گا

    • This topic was modified 1 year, 5 months ago by  Qarar.
    #2
    Atif
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 155
    • Posts: 7302
    • Total Posts: 7457
    • Join Date:
      15 Aug, 2016

    Re: بلیک میلنگ بذریعہ سپریم جوڈیشل کونسل

    بہترین آرٹیکل

    اس کیس کی سماعت غیرمعینہ عرصے تک ملتوی کردی گئی ہے شائید اس کا مقصد بھی یہی بتانا ہو کہ جب ہم اتنا کرسکتے ہیں تو کچھ بھی کرسکتے ہیں۔

    اللہ پاکستان کی خیر ٓکرے، اوپر سے نیچے تک شعبدہ بازوں اور ٹھگوں کی حکمرانی ہے۔

    #3
    Zed
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 113
    • Posts: 1101
    • Total Posts: 1214
    • Join Date:
      17 Feb, 2017

    Re: بلیک میلنگ بذریعہ سپریم جوڈیشل کونسل

    Shaukat Siddiqui’s political bias and close relationship with Irfan Siddiqui is well known.

    He is a terrorist sympathizer who must go. He deserves no sympathies under the guise of idealism, he is no Rana Bhagwan Das.

    • This reply was modified 1 year, 5 months ago by  Zed.
    #4
    GeoG
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 62
    • Posts: 4540
    • Total Posts: 4602
    • Join Date:
      12 Oct, 2016

    Re: بلیک میلنگ بذریعہ سپریم جوڈیشل کونسل

    شوکت صدیقی کو اب جانا تو ہی ہے  – آج نہیں تو کل

    نواز شریف کی طرح مرغابی جیسی آنکھیں بند کرنے کی بجایے کوئی دبنگ فیصلہ لکھ جایے

    کوئی بھی فیصلہ سپریم کورٹ سے فورا” اوور رول تو ہو جایے گا مگر ایک ایسا پینڈورا بکس کھل جایے گا کہ جس کو بند کرنا ناممکن ہو گا

    #5
    Gulraiz
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 35
    • Posts: 1268
    • Total Posts: 1303
    • Join Date:
      16 May, 2017
    • Location: Santa Barbara

    Re: بلیک میلنگ بذریعہ سپریم جوڈیشل کونسل

    Qarar  wrote:

    تاہم میری ذاتی ناپسندیدگی کے باوجود مجھے صدیقی کے حوصلے کو داد دینی پڑتی ہے …جس ملک میں لوگ سیاستدان اور میڈیا والے براہ راست فوج کا نام بھی لے سکیں …جہاں فوج کی طرف اشارہ کرنے کے لیے …خفیہ ہاتھ ..مقتدر حلقے …نادیدہ قوتیں …پس پردہ طاقتیں ..اور محکمہ زراعت جیسی اصطلاح استعمال کرنی پڑے وہاں شوکت صدیقی نے نام لے کر آئی ایس آئی کے کچے چٹھے کھولے ہیں….کہ کس طرح آئی ایس والے عدالتوں پر دباؤ ڈال کر پنسندیدہ ججز پر مشتمل بینچ بنواتے ہیں اور اپنی مرضی کے فیصلے حاصل کرتے ہیں …جج صدیقی نے کوئی نئی بات نہیں کی ..پاکستان میں تقریباً ہر شخص ہی جانتا ہے کہ کس طرح عدالتوں پر اثر انداز ہوا جاتا ہے تاہم میڈیا میں کسی کو اجازت نہیں کہ کھل کر اس معاملے پر لب کشائی کر سکے

    Qarar

    =============================================================================================================================

    حق ، سچ اور بہادری کے اس مقام پر فائز ہونے کے بعد جسٹس شوکت کے تمام گناہ دہل گئے ، بے شک اب وہ ایسے ہوگئے جیسے ماں کے پیٹ سے ابھی پیدا ہوئے ہیں

    زندہ باد اور شاباش جسٹس شوکت

    #6
    Democrat
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 46
    • Posts: 1312
    • Total Posts: 1358
    • Join Date:
      17 Oct, 2016

    Re: بلیک میلنگ بذریعہ سپریم جوڈیشل کونسل

    یہ پاکستان کے نظام کی کمزوری ھے کہ ھر طاقتور محکمے نے اپنا نظام انصاف قائم کر رکھا ھے اور عام عوام کو جن میں سیاستدان بھی آتے ھیں انہیں ان جلاد ججوں کے حوالے کر دیا جاتا ھے جو حادثاتی طور پر وکیل بنے ھیں

    اور ھم عوام بھی ان ججوں،دو ٹکے کے جرنیلوں سے امیدیں لگا بیٹھتے ھیں جن کی اوقات چند ھزار ڈالر سے زیادہ نہیں ھوتی

    یہ سب صدیقی،باجوے اور بابے رحمتے وھمنوا آپس میں ملے ھوئے ھیں اور قوم کو ٹرک کی بتی کے پیچھے لگایا ھوا ھے

    یہی صدیقی کچھ مہینے قبل اچھل اچھل کر اپنی آئینی حدود پھلانگ رھا تھا اور کورٹ میں اپنی محدود زہنی نشونما کی بدولت آنسو بہاتے نہیں تھکتا تھا اور آج یہ آئی ایس آئی کے خلاف دو لفظ بول کر اکثر لوگوں کا ھیرو بنا پھرتا ھے

    #7
    Democrat
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 46
    • Posts: 1312
    • Total Posts: 1358
    • Join Date:
      17 Oct, 2016

    Re: بلیک میلنگ بذریعہ سپریم جوڈیشل کونسل

    ایک واقعہ یاد آ گیا

    محترمہ بینظیر سے کسی نے دریافت کیا کہ آپ امریکہ کی پالیسیوں کے خلاف کھل کر بیان کیوں نہیں دیتیں؟

    تو کہنے لگیں،میں ایسا نہیں کر سکتی کیونکہ یہ جرنیل بعد میں ھماری تقاریر امریکیوں کو سنا کر ان سے نوکریاں مانگ لیتے ھیں

    یہ ھے اس تنخواہ دار طبقے کی اوقات جو ھم پر مسلط ھیں

    #8
    Guilty
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 0
    • Posts: 4412
    • Total Posts: 4412
    • Join Date:
      6 Nov, 2016

    Re: بلیک میلنگ بذریعہ سپریم جوڈیشل کونسل

    Shaukat Siddiqui’s political bias and close relationship with Irfan Siddiqui is well known. He is a terrorist sympathizer who must go. He deserves no sympathies under the guise of idealism, he is no Rana Bhagwan Das.

    شوکت عزیز صد یقی  ۔۔۔۔۔ شیریں مزاری ۔۔۔۔  کا بہنوئی ہے ۔۔۔۔۔۔

    #9
    JMP
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 235
    • Posts: 4192
    • Total Posts: 4427
    • Join Date:
      7 Jan, 2017

    Re: بلیک میلنگ بذریعہ سپریم جوڈیشل کونسل

    عجیب لوگ ہوں ہم. اپنی مرضی کی خلاف کوئی کرے تو انتہائی نا پسندیدہ اور جب وہی شحص اپنی پسند کی کوئی بات کرے تو اس سے بہتر کوئی شخص نہیں. سارے گناہ معاف ساری شکایتیں دور

    بہت آسانی سے لوگ ہمارے جذبات سے کھیل جاتے ہیں

    #10
    Gulraiz
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 35
    • Posts: 1268
    • Total Posts: 1303
    • Join Date:
      16 May, 2017
    • Location: Santa Barbara

    Re: بلیک میلنگ بذریعہ سپریم جوڈیشل کونسل

    مریم اور نواز شریف سے لیکر مولانا فضل الرحمان ، اسفند یار ولی اور شوکت صدیقی اور رانا اقبال , مختلف الخیال لوگ , سب ایک ہی کتے کے کاٹے ہوئے ہیں ،قائداعظم ، قائد ملت، مادر ملت سے لیکر شیخ مجیب اور بھٹو یہ سب بھی اسی کتے کے کاٹے ہوئے ہیں ، اسکے علاوہ لاکھوں ہیں ، اس موقعہ پر اگر کوئی سوچے کہ کس نے کسکا منہہ چوما تھا اور کسکا گو ،،تو کتا مزید ستر سال تک کاٹتا رہیگا
    |
    جب تک کتے کو نہیں پکڑو گے ، بلی تھیلے سے باہر نہیں آئیگی

    #11
    Zinda Rood
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 15
    • Posts: 1895
    • Total Posts: 1910
    • Join Date:
      3 Apr, 2018
    • Location: NorthPole

    Re: بلیک میلنگ بذریعہ سپریم جوڈیشل کونسل

    ہماری عدلیہ کبھی بھی اسٹیبلشمنٹ کے اثر سے آزاد نہیں رہی، نہ کل اور نہ آج۔۔۔ جہاں تک جسٹس شوکت عزیز صدیقی کی بات ہے تو اس قدر شدت پسند اور مذہبی انتہا پسند شخص کو اتنے بڑے منصب پر فائز کرنا ہی بہت بڑی غلطی ہے، اس کو جتنی جلدی ہوسکے اور جیسے بھی ہوسکے اس منصب سے ہٹایا جانا چاہیے اور میں اس کی مکمل حمایت کروں گا۔۔۔ بطور ہائی کورٹ جج اس کو بہت زیادہ اختیارات حاصل ہیں اور وہ ان کا استعمال کرکے معاشرے میں بگاڑ بھی پیدا کرتا رہتا ہے، یہ بندر کے ہاتھ میں کلاشنکوف دینے والی بات ہے، اس جیسے شخص کا جج کے منصب پر فائز ہونا بھی پاکستان جیسی جادونگری میں ہی ممکن ہے اور اب میں امید کرتا ہوں کہ اس مذہبی دہشتگرد کو جتنی جلدی ہوسکے اس عہدے سے اتار پھینکا جائے۔۔۔

    • This reply was modified 1 year, 5 months ago by  Zinda Rood.
    #12
    Zed
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 113
    • Posts: 1101
    • Total Posts: 1214
    • Join Date:
      17 Feb, 2017

    Re: بلیک میلنگ بذریعہ سپریم جوڈیشل کونسل

    Orya and shaukat siddiqui at loggerheads, lol.

    #13
    shahidabassi
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 32
    • Posts: 7191
    • Total Posts: 7223
    • Join Date:
      5 Apr, 2017

    Re: بلیک میلنگ بذریعہ سپریم جوڈیشل کونسل

    قرار صاحب آپ کا لکھا خوبصورت اور پورا سچ ہے لیکن میرے خیال میں یہی کچھ دوسرے اداروں میں بھی ہو رہا ہے۔ یعنی پورا سسٹم ہی گلا سڑا ہے۔ ہر پاور سنٹر ایک مافیا کی طرح اپنے ارد گرد موجود اداروں کو اپنے مقاصد کے لئے استعمال کر رہا ہے۔ فوج چونکہ سب سے پاور فل ادارہ ہے اور آئی ایس آئی کی صورت دور تک پہنچ رکھتا ہے تو میڈیا عدلیہ اور بیوروکریسی کو اپنی مرضی کے مطابق استعمال کرتا ہے۔ اس کے بعد آنے والا پاور سنٹر یعنی حکومتِ پاکستان بھی آئی بی، ایف آئی اے نیب ،پی ٹی وی اور پولیس کو اسی طرح استعمال کرتی ہے۔ یہاں تک کہ ہمارے علاقے کے مقامی ممبر پارلیمنٹ بھی پولیس، سول جج اور پٹواری کے ساتھ یہی کر رہے ہیں۔ اصل چیز بِگر پکچر کو دیکھنے میں پنہاں ہے۔ پورا سماجی اور سیاسی سسٹم ہی گلا سڑا ہے اور سیاست دان اس جن کو ڈبے میں بند کرنے کے لئے متحد ہونے کو تیار نہیں اور اس کے لئے قانون سازی پر راضی نہیں۔

    #14
    GeoG
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 62
    • Posts: 4540
    • Total Posts: 4602
    • Join Date:
      12 Oct, 2016

    Re: بلیک میلنگ بذریعہ سپریم جوڈیشل کونسل

    قرار صاحب آپ کا لکھا خوبصورت اور پورا سچ ہے لیکن میرے خیال میں یہی کچھ دوسرے اداروں میں بھی ہو رہا ہے۔ یعنی پورا سسٹم ہی گلا سڑا ہے۔ ہر پاور سنٹر ایک مافیا کی طرح اپنے ارد گرد موجود اداروں کو اپنے مقاصد کے لئے استعمال کر رہا ہے۔ فوج چونکہ سب سے پاور فل ادارہ ہے اور آئی ایس آئی کی صورت دور تک پہنچ رکھتا ہے تو میڈیا عدلیہ اور بیوروکریسی کو اپنی مرضی کے مطابق استعمال کرتا ہے۔ اس کے بعد آنے والا پاور سنٹر یعنی حکومتِ پاکستان بھی آئی بی، ایف آئی اے نیب ،پی ٹی وی اور پولیس کو اسی طرح استعمال کرتی ہے۔ یہاں تک کہ ہمارے علاقے کے مقامی ممبر پارلیمنٹ بھی پولیس، سول جج اور پٹواری کے ساتھ یہی کر رہے ہیں۔ اصل چیز بِگر پکچر کو دیکھنے میں پنہاں ہے۔ پورا سماجی اور سیاسی سسٹم ہی گلا سڑا ہے اور سیاست دان اس جن کو ڈبے میں بند کرنے کے لئے متحد ہونے کو تیار نہیں اور اس کے لئے قانون سازی پر راضی نہیں۔

    شاہد بھائی تھوڑی تصحیح کر لیجئے جب بھی سیاستدان جن بند کرنے کا سوچتے ہیں یہ جن ایک سیاستدان اٹھا کر لے جاتا ہے اور باقی پھر دبک کر بیٹھ جاتے ہیں

    اب تو جن صاحب نے اپنی رکھیل عدلیہ کو منگیتر کا درجہ بھی دے دیا ہے اب تو سارا نظام ہی الٹے تو جن کو شاید کچھ فرق پڑے

    #15
    Qarar
    Participant
    Offline
    Thread Starter
    • Professional
    • Threads: 101
    • Posts: 2515
    • Total Posts: 2616
    • Join Date:
      5 Jan, 2017

    Re: بلیک میلنگ بذریعہ سپریم جوڈیشل کونسل

    حضرت علی کا قول ہے کہ

    کفر پر مبنی معاشرہ تو قائم رہ سکتا ہے مگر نا انصافی پر مبنی ہرگز نہیں

    میری میرے ذاتی مشاہدے میں تو لاتعداد مثالیں ہیں کہ ظلم اور نا انصافی پر قائم حکومتیں اور معاشرے قائم و دائم ہیں

    یا تو یہ قول غلط ہے یا میں اس کی درست تشریح نہیں کر سکا

    #16
    Atif
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 155
    • Posts: 7302
    • Total Posts: 7457
    • Join Date:
      15 Aug, 2016

    Re: بلیک میلنگ بذریعہ سپریم جوڈیشل کونسل

    حضرت علی کا قول ہے کہ کفر پر مبنی معاشرہ تو قائم رہ سکتا ہے مگر نا انصافی پر مبنی ہرگز نہیں میری میرے ذاتی مشاہدے میں تو لاتعداد مثالیں ہیں کہ ظلم اور نا انصافی پر قائم حکومتیں اور معاشرے قائم و دائم ہیں یا تو یہ قول غلط ہے یا میں اس کی درست تشریح نہیں کر سکا

    آپکا موخر الذکر خیال درست معلوم ہوتا ہے کیونکہ جن معاشروں میں ناانصافی ہے مثلا” پاکستان تو ان معاشروں کو قائم دائم نہیں کہا جاسکتا۔ ہم روز اخلاقی، قانونی و مذہبی گراوٹ کی کوئی نئی مثال دیکھتے ہیں۔ ایسے معاشرے قائم و دائم نہیں کہلاتے۔ قوموں کی زندگی میں ستر سال کوئی حیثیت نہیں رکھتے اسلئے یہ جہاز ڈوبے گا بھی تو کچھ ٹائم لے گا۔

    #17
    shahidabassi
    Participant
    Offline
    • Expert
    • Threads: 32
    • Posts: 7191
    • Total Posts: 7223
    • Join Date:
      5 Apr, 2017

    Re: بلیک میلنگ بذریعہ سپریم جوڈیشل کونسل

    شاہد بھائی تھوڑی تصحیح کر لیجئے جب بھی سیاستدان جن بند کرنے کا سوچتے ہیں یہ جن ایک سیاستدان اٹھا کر لے جاتا ہے اور باقی پھر دبک کر بیٹھ جاتے ہیں

    اب تو جن صاحب نے اپنی رکھیل عدلیہ کو منگیتر کا درجہ بھی دے دیا ہے اب تو سارا نظام ہی الٹے تو جن کو شاید کچھ فرق پڑے

    سیاست دان کو اکٹھا ہونا پڑے گا۔ سال بھر بعد اس نئی حکومت کے فوج کے ساتھ مسائل شروع ہو جائیں گے۔ اور یہ وقت ہوگا کہ
    ووٹ کو عزت دو کا بیانیہ لے کر چلنے والے فوج کے ساتھ مل کر اس حکومت کو اکھاڑ پھینکنے کی بجائے قوانین میں تبدیلی کے لئے گورنمنٹ کو سپورٹ کریں اور دو تہائی اکثریت سے کم از کم وہ تین چار دروازے تو بند کردیں جن کے ذریعے اسٹیبلشمنٹ کا جن کمرے میں داخل ہوتا آیا ہے۔

    • This reply was modified 1 year, 5 months ago by  shahidabassi.
    #18
    GeoG
    Participant
    Offline
    • Professional
    • Threads: 62
    • Posts: 4540
    • Total Posts: 4602
    • Join Date:
      12 Oct, 2016

    Re: بلیک میلنگ بذریعہ سپریم جوڈیشل کونسل

    سیاست دان کو اکٹھا ہونا پڑے گا۔ سال بھر بعد اس نئی حکومت کے فوج کے ساتھ مسائل شروع ہو جائیں گے۔ اور یہ وقت ہوگا کہ ووٹ کو عزت دو کا بیانیہ لے کر چلنے والے فوج کے ساتھ مل کر اس حکومت کو اکھاڑ پھینکنے کی بجائے قوانین میں تبدیلی کے لئے گورنمنٹ کو سپورٹ کریں اور دو تہائی اکثریت سے کم از کم وہ تین چار دروازے تو بند کردیں جن کے ذریعے اسٹیبلشمنٹ کا جن کمرے میں داخل ہوتا آیا ہے۔

    آپکی اس بات سے تو مکمل اتفاق ہے مگر خان صاحب کو چونکہ اپنے اقتدار میں رہنے کی سیڑھی قائم رکھنی ہے اس لئے خان صاحب کم از کم تین سال تو کوئی ایسا پنگا نہیں لیں گے – ہاں البتہ اپوزشن کو روز کوئی نیا قانون لانا چاہیے جس سے خان صاحب جان نہ چھڑا سکیں

    #19
    Democrat
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 46
    • Posts: 1312
    • Total Posts: 1358
    • Join Date:
      17 Oct, 2016

    Re: بلیک میلنگ بذریعہ سپریم جوڈیشل کونسل

    حضرت علی کا قول ہے کہ کفر پر مبنی معاشرہ تو قائم رہ سکتا ہے مگر نا انصافی پر مبنی ہرگز نہیں میری میرے ذاتی مشاہدے میں تو لاتعداد مثالیں ہیں کہ ظلم اور نا انصافی پر قائم حکومتیں اور معاشرے قائم و دائم ہیں یا تو یہ قول غلط ہے یا میں اس کی درست تشریح نہیں کر سکا

    ویسے یہ معاشرہ آپکو کسطرح قائم ودائم لگتا ھے؟

    ملاوٹ،آقرباپروری،رشوت،قتل وغارت ،غاصب،احسان فراموشی اور اگر ان سے فرصت ملے تو کفن چوری کا کام شروع کر دیتے ھیں

    یہ قائم سے زیادہ زوال شدہ معاشرے کی عکاسی کرتا ھے

    باقی عاطف بھائی نے بھی اس کی وضاحت کر دی ھے

    #20
    Democrat
    Participant
    Offline
    • Advanced
    • Threads: 46
    • Posts: 1312
    • Total Posts: 1358
    • Join Date:
      17 Oct, 2016

    Re: بلیک میلنگ بذریعہ سپریم جوڈیشل کونسل

    آپکی اس بات سے تو مکمل اتفاق ہے مگر خان صاحب کو چونکہ اپنے اقتدار میں رہنے کی سیڑھی قائم رکھنی ہے اس لئے خان صاحب کم از کم تین سال تو کوئی ایسا پنگا نہیں لیں گے – ہاں البتہ اپوزشن کو روز کوئی نیا قانون لانا چاہیے جس سے خان صاحب جان نہ چھڑا سکیں

    اور کچھ کریں یا نہ کریں لیکن یہ تو ضرور کرنا چاھیں

    تمام اعلی تقرریاں پارلیمنٹ کے زریعے کی جائیں

    یہ عبوری حکومت والا کت خانہ بند کیا جائے

    طلباء یونین اور سیاست پر سے ھر قسم کی پابندہ ھٹائی جائے
    .بلدیاتی نمائندوں کو بااختیار کیا جائے

    • This reply was modified 1 year, 5 months ago by  Democrat.
Viewing 20 posts - 1 through 20 (of 27 total)

You must be logged in to reply to this topic.

Navigation

Do NOT follow this link or you will be banned from the site!