Home Forums Siasi Video کاش برطانیہ میں بھی ثاقب ناسور جج ہوتا کاش برطانیہ میں بھی ثاقب ناسور جج ہوتا

#6
Believer12
Participant
Offline
  • Expert
  • Threads: 407
  • Posts: 9268
  • Total Posts: 9675
  • Join Date:
    14 Sep, 2016

Re: کاش برطانیہ میں بھی ثاقب ناسور جج ہوتا

برطانوی عدالتیں انصاف دینے میں لگ بھگ ایک صدی سے زائد کا تجربہ اور کڑا معیار رکھتی ہیں۔ کرپشن کے متعلق بہت سیدھا سادا طریقہ ہے بینکنگ لا یا کارپوریٹ لا پڑھ کر جج بننے والے انتہای ذہین ججز کسی بھی شخص یا کمپنی کے سورسز چیک کرتے ہیں اگر پیسہ قانونی طریقے سے لایا گیا ہو اس پر سٹیٹ کا ٹیکس پورا دیا گیا ہو۔ اس کے علاوہ یہ بھی دیکھا جاتا ہے کہ آنے والی انویسٹمینٹ کہیں بلیک منی تو نہیں یعنی جس ملک سے لای جارہی ہے اس پیسے کو وہاں کیسے کمایا گیا اور وہاں کتنا ٹیکس دیا گیا۔ جس رقم پر اس ملک کے قانون کے مطابق ٹیکس ادا کیا گیا ہووہ رقم (اتنی ہی زیادہ نہیں) قانونی  سمجھی جاتی ہے کیونکہ اس کے کمانے کے سورسز غیر قانونی نہیں تھے اور اس پر ٹیکس دیا گیا تھا اور یہ بینک سے بینک میں ٹرانسفر ہوی تھی۔ کوی بوری بھر کر نہیں لایا تھا۔

اگر ہم اپنی رقم گھروں میں رکھنے کی بجاے بینکس میں رکھتے ہیں تو اس پر کوی اعتراض کرہی نہیں سکتا کیونکہ بینک اس پر تمام کٹوتیاں کرلیتا ہے نیز سورسز بھی سامنے آجاتے ہیں جس کے بعد اسی بینک سے ہم اپنی رقم دنیا میں جہاں چاہیں ٹرانسفر کرسکتے ہیں مثلا اگر میں اپنی تین کروڑ کی رقم کینیڈا منتقل کروں تو وہ مجھے نہ صرف رہائش کا ویزہ دے دیتے ہیں بلکہ کاروبار کرنے کے مواقع بھی دیتے ہیں اور میرے بچوں کو وہی حقوق مل جاتے ہیں جو کینیڈا کے بچوں کو ہیں یعنی فری ایجوکیشن

یوتھیئے سنا ہے کہ اب برطانوی نظام انصاف پر انگلیاں اٹھانے لگ گئے ہیں جس نظام نے ان یوتھیوں کو برطانیہ میں ایک اچھی زندگی گزارنے کی اجازت دی، انکے بچوں اور عورتوں کو پاکستانی اور ہندوستانی ملا کی چیر پھاڑ سے محفوظ کیا اور ان کو تعلیم حاصل کرنے کے برابر مواقع فراہم کئے ورنہ پاکستان میں کوی کتنا بھی لائق ہو اگر اس کی جیب میں چالیس پچاس لاکھ نہیں تو وہ ڈاکٹر نہیں بن سکتا مگر یہاں ان کے بچے فری میں بڑی بڑی ڈگریاں لے کر موج کررہے ہیں اور ان لوگوں کی ناشکری اور احسان فراموشی کا یہ عالم کہ اب یہ برطانوی نظام انصاف پر انگلیاں اٹھا رہے ہیں۔ ہمارے بزرگ کہا کرتے تھے کہ پاکستان بنا تو بڑے بوڑھے کہا کرتے تھے کہ آزادی تو مل گئی مگر انصاف گورے کے ساتھ ہی چلا گیا۔ احسان فراموشی اللہ کو بھی پسند نہیں آپ دیکھیں گے جلد یوتھیئے ان ملکوں سے چھتر مار کر نکالے جائیں گے

  • This reply was modified 3 weeks, 4 days ago by Believer12.
×
arrow_upward DanishGardi