Home Forums Siasi Discussion قومی حکومت قومی حکومت

#3
کک باکسر
Participant
Offline
  • Advanced
  • Threads: 26
  • Posts: 1211
  • Total Posts: 1237
  • Join Date:
    9 Dec, 2016

Re: قومی حکومت

جے بھای۔ میں نہیں سمجھتا کہ ہم ایک قوم ہیں۔ ترانے گا لینے سے ہم ایک قوم کے معزز درجے پر فائز نہیں ہوجاتے۔ ہم کیسی قوم ہیں جو پٹھان، پنجابی، سندھی اور بلوچی کے ٹکڑوں میں بٹی ہوی ہے؟ پھر ان ٹکڑوں کے اندر بھی ہم جاٹ ، ارائیں، ملک خواجے اور سینکڑوں ذاتوں میں بٹے ہوے ہیں جو ایک قوم میں نہیں ہونے چاہیئں؟ اس کے بعد رہتی سہتی کسر مذہب کے اندر فرقوں نے پوری کردی بلکہ یہ سب سے بڑا سلگتا ہوا مسئلہ ہے۔ باقی تقسیم میں قتل وغارت نہیں ہوتی مگر مذہبی تقسیم اکثر قتل و غارت پر بھی پنہچ جاتی ہے سیاسی جماعتیں تو بہت بعد میں آتی ہیں اگرچہ ان کو بھی اس تقسیم میں کافی درجہ تک گند گھولنے کی سعادت حاصل ہے۔ نوازشریف نے پنجابی پگ کا نعرہ لگایا اور الطاف حسین نے مہاجر کا اور پٹھان حضرات نے تو اپنے اچھے بھلے صوبے کا نام ہی بگاڑ کر ایک لسانی نام رکھ لیا جس کی سب سے زیادہ کمپین سلیم صافی جیسے جنرلسٹس نے چلای تھی دنیا میں اگر کوی قوم میں نے دیکھی ہے تو وہ نارویجن ہیں۔ نارویجن پروفیسر کے ساتھ دوستی تھی اکثر ہم ایکدوسرے کو انوائیٹ کرکے ایکدوسرے کے کھانے چکھتے تھے اسے میرے سالن بہت پسند تھے اور مجھے نارویجن انداز میں تیار کی گئی فش اور مزیدار چٹنیاں۔ قوم کسے کہتے ہیں یہ میں نے زندگی میں پہلی بار اسی نارویجن سے سیکھا تھا۔ ایکدن میں نے اس سے پوچھا کہ تمہاری کیا ذات ہے تو وہ کہنے لگا ” نارویجن”۔ میں نے ہنس کر پھر پوچھا کہ “نارویجن تو سارے ہی ہیں مگر تم کیا ہو”؟ جیسے میں جاٹ ہوں اور میرا پاکستانی دوست پٹھان ہے جس پر اس نے قطعی لہجے میں بتایا کہ ہمارے فیملی نام ہوتے ہیں جو صرف فیملی کی پہچان کیلئے استعمال ہوتے ہیں ناکہ کسی قسم کی نسلی برتری کیلئے مگرہم میں سب کاسٹ نہیں ہوتی ہم صرف نارویجن ہیں پاکستان میں آپ کسی سرکاری بڑے افسر سے بات کرہی نہیں سکتے پہلے اس کے درجن بھر ماتحت ہی ٹرخا دیتے ہیں یا جو کام ہو وہ رشوت لے کر کروا دیتے ہیں بڑے افسر تک جانے کی حاجت ہی نہیں ہوتی مگر ناروے میں اسی پٹھان دوست کا ویزہ کا مسئلہ تھا اس نے کہا کہ اس نارویجن دوست کو کہہ کر کچھ کرواو۔ میں نے کہا کہ ہوم آفس میں کوی بھی وکیل کے علاوہ بات نہیں کرسکتا وہ تو وزیراعظم کی بھی نہیں سنتے اس پروفیسر کی کہاں سنیں گے ؟ دوست نے کہا کہ بات کرنے میں کیا حرج ہے؟ میں نے حامی بھرلی اور اگلے دن جب ہم سیر کیلئے نکلے تو میں نے پروفیسر سے بات کی اس نے اسی وقت فون ہوم آفس ملا دیا ادھر جو بھی تھا اسے اپنا تعارف کروا کر کہا کہ جو بندہ اس کیس پر ورک کررہا ہے اس سے میری بات کروا جب اس افسر سے بات ہوی تو پتا چلا کہ وہ ہوم ڈپارٹمنٹ کا بہت اہم اور سینئیر افسر ہے میں دونوں کی بات سن کر حیران ہورہا تھا کیونکہ وہ اپنے نارویجن سیٹیزن کی بات بہت دھیان اور احترام سے سن رہا تھا۔ اس نے اپنی کوشش کا وعدہ کیا اور پھر ایک ہفتے بعد ہی اس دوست کا لیٹر آگیا جس میں اس کا کارڈ تھا جس پر ورک کرنے کی پرمیشن پرنٹ تھا۔ یہی نارویجن دوست ایکدن مجھے وزیراعظم ناروے کے ساتھ اپنی تازہ سیلفی دکھا رہا تھا ۔ یہ سیر کیلئے شپ پر ناروے سے ڈنمارک جارہا تھا تو یکدم اس کے روم والے کورویڈو میں وزیراعظم ناروے اپنے کمرے سے نکلتا دکھای دیا، اس کے پیچھے اس کی سیکرٹری اور ایک دو سٹاف ممبر تھے اس کو دیکھ کر اس نے ہای ہیلو کی اور دونوں بالکل عام سے انداز میں چند منٹ بات وات کرتے رہے ایک بار ایک اخبار نے فوٹو چھاپی جس میں دو چار افغانی ایک گیراج میں سرد ماحول میں رہ رہے تھے۔ دو چار کالے کالے برتن کھانا بنانے کیلئے اور ایک بالٹی میں پانی گرم کرکے وہیں کپکپاتے ہوے نہا لیتے تھے اس بات کا نوٹس ڈائیریکٹ وزیراعظم نے لیا اورٹی وی پر یہ بیان دیا کہ “ناروے میں کوی سردی سے فریز نہیں ہوگا اور نہ ہی کوی بھوکا سوے گا” اس بیان میں ایک طرح کا اعتماد بھی تھا کہ ہم ایک امیر ترین قوم ہیں اور ہماری یہ بے عزتی ہے کہ کوی ہمارے ہی ملک میں ایسے حالات میں رہے۔ اس وقت ان افغان مہاجروں کو جنکے ویزے ریفیوز ہوچکے تھے دوبارہ کسی ہوسٹل میں روم دیا گیا اور کھانا پینا بحال کردیا گیا جے بھای، کچھ یاد آیا اسی طرز کا بیان جو وزیراعظم ناروے نے دیا تھا دراصل عمر فاروق کا بھی تھا، انہوں نے بھی فرمایا تھا کہ دجلہ کے کنارے کوی کتا بھی بھوک سے مرجاے تو میں ذمہ دار ہوں گا؟ یہ ہوتی ہیں قومیں آپ کن لوگوں کو قوم کہہ رہے ہیں جو ایک لڑکی کو کمزوراور اکیلا سمجھ کر ٹینس بال سمجھ لیتے ہیں۔ کبھی کھیل رہے ہیں کبھی اوپر پھینک رہے ہیں کبھی اس کو فرش اور کبھی جنگلے پر مار رہے ہیں ،،،ان کو آپ قوم سمجھتے ہیں ؟؟ قومی حکومت بنانے سے پہلے ہمیں ایک قوم بننا چاہئے اگر ایسا ہوجاے تو قومی حکومت کی ضرورت ہیں نہیں رہے گی جو بھی پارٹی آے گی وہ ملک کیلئے مخلص ہوگی

چل جھوٹے 

:hilar: :lol:

×
arrow_upward DanishGardi