Home Forums Non Siasi ریپ کی وجہ- طاقت کا اظہاریا بھٹکی ہوئی جنسیت؟ ریپ کی وجہ- طاقت کا اظہاریا بھٹکی ہوئی جنسیت؟

#17
JMP
Participant
Offline
  • Professional
  • Threads: 293
  • Posts: 4639
  • Total Posts: 4932
  • Join Date:
    7 Jan, 2017

Re: ریپ کی وجہ- طاقت کا اظہاریا بھٹکی ہوئی جنسیت؟

صنف مخالف کے لئے کشش فطرت کا حصہ ہے اور یہ کشش انسان اور جانور دونوں میں پائی جاتی ہے. انسانوں کے حوالے سے اس کشش ، خواہش، طلب کو معاشرتی حوالوں سے کہیں دبانے کی کوشش کی گئی ہے ، کہیں اسکو رشتوں سے منسلک کیا گیا ہے اور کہیں اسکو مردوں کے لئے لازم ‘اور عورت کے لئے پابندی سے جوڑا گیا ہے

مذھبی، معاشرتی ، سماجی اور اس طرح کے کئی حوالوں کے باوجود اس فطری خواہش کو ختم نہیں کیا جا سکا ہے

ہمارے پاک مشرقی اعلیٰ اقدار سے مزین معاشروں میں اس طلب کو مرد کی ضرورت اور عورت کی مرد کی اس تابعداری اکے تناظر میں دیکھا جا سکتا ہے . مرد اپنی طاقت یا سماجی حثیت سے اس طلب کو اپنا حق سمجھ کر پورا کرتا ہے اور جہاں عورت ایسا کرنا چاہے وہاں قدغن لگ جاتی ہے . یقینی طور پر اس میں مذہب کے احکامات کی پیروی بھی ایک جزو ہے . ہمارے معاشرے کے سماجی ڈھانچے نے اس حوالے سے ماضی میں کسی حد تک ان واقعات کو قابو میں رکھا تھا مگر اب شاید ایسا کرنا اتنا آسان نہیں

مغربی معاشروں میں بھی میرے خیال میں مرد اور عورت کے درمیان اس طلب کی اتنی ہی خواہش ہے جتنی کسی اور معاشرے میں البتہ مغربی معاشروں میں قانون سازی پر عمل کر کے، اور اس طلب کی تکمیل کو عزت اور غیرت سے الگ کر کے عورت اور مرد کی باہمی رضامندی سے جوڑ کر دونوں جنسوں کو ایک جیسے حقوق میسر کئے گئے ہیں .

جب تک عورت مرد کی غیرت ہو گی، جب تک مرد کی طلب کو عورت کی طلب پر فوقیت ہو گی ، جب تک قانون پر عمل نہیں ہو گا ہمارے معاشرے میں مرد کے کسی عورت پر جنسی حملے ہوتے رہیں گے . اب انکی تعداد کم ہے یا زیادہ اور کیا مغرب میں ایسا زیادہ ہوتا ہے یا کم یہ ایک الگ موضوع ہو سکتا ہے

×
arrow_upward DanishGardi