Home Forums Islamic Corner نازیبا ویڈیو سکینڈل؛ تحقیقاتی افسر کے مفتی عزیز الرحمان سے متعلق اہم انکشافات نازیبا ویڈیو سکینڈل؛ تحقیقاتی افسر کے مفتی عزیز الرحمان سے متعلق اہم انکشافات

#11
Guilty
Participant
Offline
  • Expert
  • Threads: 0
  • Posts: 5404
  • Total Posts: 5404
  • Join Date:
    6 Nov, 2016

Re: نازیبا ویڈیو سکینڈل؛ تحقیقاتی افسر کے مفتی عزیز الرحمان سے متعلق اہم انکشافات

محترم گیلتی صاحب جنسی تعلیم اصل میں علمی ، جذباتی ، جسمانی اور معاشرتی پہلوؤں کے سیکھنے کا عمل ہے جو کہ نصاب میں مجود فضول مضامین جیسے اسلامیات ہو گیا یا جھوٹوں کا پلندہ معاشرتی علوم ہوگیا ان سے قدرے مفید ہے …. اس کا مقصد بچوں اور نوجوانوں کو علم ، ہنر اور معاشرتی اقدار سے آراستہ کرنا ہوتا ہے جو انہیں اپنی صحت ، فلاح و بہبود اور وقار کا احساس دلانے کے قابل بناتی ہے ۔ قابل احترام معاشرتی اور جنسی تعلقات استوار کرنے پر زور دیتی ہے … اب جس نوجوان کے ساتھ مفتی نے کروائی ڈالی مفتی یا اس بچے کو مدرسے میں سیکس ایجوکیشن پڑھائی گئی ہوتی تو آج شائد دونوں اتنے ایسے عمل میں مشغول نہ ہوتے

بہت سارے نوجوان جنوں نے سیکس تعلیم نہیں حاصل کی ہوتی ان کو پتا ہی نہیں ہوتا تعلق کس سے استوار کرنا ہے تو وہ مفتی عزیز کے ساتھ تعلق قائم کر لیتے ہیں جنسی تعلیم کا مقصد نوجوانوں کو محفوظ ، نتیجہ خیز اور تکمیل کرنے والی زندگی کے لئے تیار کرنا ہے اس کے علاوہ جنسی تشدد ، صنفی عدم مساوات ، غیر ارادتا حمل ، ایچ آئی وی اور دیگر جنسی طور پر منتقل ہونے والے انفیکشن (ایس ٹی آئی) کے بارے میں بھی آگاہی دینا ہے

اب میں آپ سے پوچھنا چاہوں گا اسلامیات میں صحابہ کی اتنی لونڈیاں تھیں … انہوں نے انٹی جنگیں لڑیں .. معاشرتی علوم میں افغانی لٹرائیوں کی داستانوں کا بچوں کی پریکٹیکل زندگی پر کیا اثر ہوتا ہے

۔۔۔۔۔

جنسی تعلیم یورپ امریکہ میں بہت دی جاتی ہے ۔۔۔ اور سب سے زیادہ پورن بھی یہیں بنتے ہیں ۔۔۔ سب سے زیادہ عورتیں بھی یہیں زنا ہوتی ہیں

اور سب سے زیادہ حرام کے بچے بھی انہی ملکوں میں پائے جاتے ہیں ۔۔۔۔سب سے زیادہ ریپ پلس قتل بھی  یہاں کے جنسی تعلیم یافتہ لوگ ہی کرتے ہیں ۔۔

۔۔۔ جنسی تعلیم یافتہ  مغرب کی ۔۔۔ سیکس نیو ڈ یٹی ۔۔۔۔  پورنی گرافی  بھی پا کستان کے دیہاتی نوجوانوں کو ریپ پر تیار کرتی ہے ۔۔

تو ھمیں یہ مت بتا ئیں کہ جنسی تعلیم سے ۔۔۔ مردوں کی سیکس طلب ۔۔۔ ختم ہوجائے گی ۔۔۔ عورتیں سڑکوں پر  ٹک ٹاپ پر۔۔۔  ۔۔ ٹا نگیں ۔۔۔ گول مٹول ۔۔۔ اپنے ٹول  اپنی چیزیں ۔۔۔  دکھانے کا سیکس جنون ختم کرلیں گی  ۔۔۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

پرانے زمانے میں لونڈیاں ۔۔۔  رکھی جاتی تھیں بالکل ٹھیک  کیا جاتا تھا ۔۔ معاشرے کو بیلینس رکھنے کا یہ بہتر طریقہ ہے کہ

مردوں کو ایک سے زیادہ عورتیں مہیا کی جائیں ۔۔۔۔ جو معاشرے ایسا نہیں کرتے وھاں عورتیں بھی زیادہ ہیں سٹریس بھی زیادہ ہے  ۔۔ریپ بھی زیادہ ہے ۔۔۔۔۔

آج کے زمانے میں لونڈ یا ں نہیں رکھی جاتیں ۔۔۔۔ اس لیے آج کی لونڈیاں ۔۔۔ سوشل میڈ یا پر ۔۔۔ سیدھا اوندھا ہوکر سیکس جنون  پورا کرتی ہیں

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

افغان لڑائیوں کی داستانوں کا بچوں پر کیا اثر پڑتا ہے مجھے اس کے بارے کچھ زیادہ معلومات نہیں ہیں ۔۔۔

لیکن اتنا میں جا نتا ہوں ۔۔۔ کہ موجودہ  دنیا ۔۔۔ مکمل طور پر فتح ہوچکی ہے ۔۔۔۔ اور ۔۔۔ آئیندہ   دنیا میں کوئی جنگ لڑائی نہیں  لڑی جائے گی

اور نہ ہی پچھلے پچاس  سو سال میں ۔۔۔ دنیا میں کوئی جنگ لڑائی دیکھنے کو ملی ہے  ۔۔ ۔۔

اگر آپ فی زمانہ ۔۔۔ کشمیر جنگ ۔۔۔ افغان جنگ ۔۔۔ عراق جنگ ۔۔۔ لیبیا جنگ ۔۔۔ فلسطین جنگ ۔۔۔ کو جنگ سمجھتے ہیں ۔۔۔

تو اطلاعاً عرض ہے یہ سب ۔۔۔ ما لکوں کی طرف سے ۔۔۔ سکرپٹڈ ۔۔۔۔ فلمیں ہیں ۔۔۔ جن کو چلا کر ۔۔۔۔  کاروبار سلطنت دنیا چلا جاتا ہے ۔۔۔۔

اگر کوئی واقعی ان جنگوں کو اصلی جنگیں سمجھ بیٹھا ہے تو ۔۔۔ اس کو چا ھیے ۔۔۔۔ پا پا ئے دا سیلر ۔۔۔ کارٹون دیکھا کرے ۔۔۔۔۔۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ماضی میں مسلمانوں نے با د شاہوں نے جو بھی جنگیں لڑیں ہیں ۔۔۔۔ ان کو اس وقت  پڑھنے سے کوئی سبق حاصل ہونے والا نہیں ہے

کسی نے سبق حاصل کرنا ہے تو یہ پڑھنے کی کوشش کرے کہ ۔۔۔ موجودہ سلطنت دنیا ۔۔۔ کا اصل بادشاہ کون ہے ۔۔۔ اور اس دنیا کے نئے مذ ھب کا اصل کیا نام ہے ۔۔۔

اور  کیا  آج کا۔۔۔۔ گورا کا لا براؤن   ۔۔۔ انسان ۔۔۔ ۔۔۔ آج کی سلطنت دنیا میں ۔۔ رعا یا ۔۔۔  کا درجہ بھی رکھتا ہے یا ۔۔۔ صرف سلطنت میں مزدور ہے ۔۔۔ یہ پڑھنے کی ضرورت ہے

ورنہ  ۔۔۔۔۔ ٹیکنا لوجی کو سجدے ۔۔۔  سیا ستدانوں پر بہتان ۔۔۔۔ فوج پر سلیوٹ ۔۔۔۔۔ پانی میں وٹے ۔۔۔۔ تو ۔۔۔۔  تعلیم یافتہ پڑھے لکھے لوگ مارتے  ہی رھتے ہیں ۔۔۔۔

  • This reply was modified 1 month ago by Guilty.
×
arrow_upward DanishGardi