گوجرانوالہ کے قریب پولیس کی موجودگی میں احمدیوں کی عبادت گاہ کے مینار مسمار کر دیے گئے

Home Forums Non Siasi گوجرانوالہ کے قریب پولیس کی موجودگی میں احمدیوں کی عبادت گاہ کے مینار مسمار کر دیے گئے گوجرانوالہ کے قریب پولیس کی موجودگی میں احمدیوں کی عبادت گاہ کے مینار مسمار کر دیے گئے

#43
Believer12
Participant
Offline
  • Expert
  • Threads: 395
  • Posts: 9051
  • Total Posts: 9446
  • Join Date:
    14 Sep, 2016

Re: گوجرانوالہ کے قریب پولیس کی موجودگی میں احمدیوں کی عبادت گاہ کے مینار مسمار کر دیے گئے

بیلیور بھیا، قادیانیوں کے متعلق مسلمانوں کی غالب اکثریت کا یہ کامل یقین ہے (یہ نہ میری ذاتی رائے ہے اور نہ میں اس پر یقین رکھتا ہوں) کہ یہ مسلمانوں کو مزید تقسیم در تقسیم کرنے کا ایک فتنہ ہے جو کہ انگریزوں نے اپنے تقسیم اور لڑاؤ کی پالیسی کے تحت تشکیل دیا تھا اس غالب اکثریت کا یہ بھی خیال ہے کہ قادیانی دشمنان اسلام جنمیں یہود و ہنود شامل ہیں کہ ایجنٹ ہیں اور انکی ایما پر ملک کی جڑوں کو کھوکھلا کرنے کی سازشوں میں ملوث ہیں ، لہذا مملکت خدا داد کو انکے ناپاک وجود سے پاک کرنا از حد ضروری ہے . کیا درج بالا بیانیہ قادیانیوں کے خلاف ہونے والی کاروائیوں کو جواز فراہم کرتا ہے یا نہیں؟ اسکے جواب میں آپ اپنی “پر امن کمیونیٹی” کا راگ الاپتے رہیں وہ بے اثر رہے گی آپ مجھے مذہبی و لسانی و سیاسی تفریق سمجھانے کا کشٹ کرنے کے بجائے اپنے سوچ کی رفوع گیری کا کام انجام دیں تو یہ سڑک آپ کو معاشرتی امن کی طرف لے جائے گی ملک میں ہونے والے ہر احمدی مخالف واقع پر جسطرح آپ اور ہمنواؤں کو دریاں بچھانے کی عادت سی پڑ گئی ہے اس کی بنیاد پر اگر آپ غور کریں تو آپ کو یہ تحفظ آئین میں دئے گئے ہر شہری کے انفرادی حقوق کی حفاظت کی ضمانت کے طور پر حاصل ہیں اگر آپ آیین کو جوتے کی نوک پر رکھ کر اسکو نظر انداز کرنے کی کوشش کریں گے تو شائد آپ بھول رہے ہیں کہ اپنے دریاں بچھانے کی بنیاد کو ختم کررہے ہیں آپ اس بات پر غور کریں کہ آیین شہری حقوق کی ضمانت اجتمائی یا گروہی بنیادوں پر نہیں دیتا بلکہ انفرادی بنیادوں پر فراہم کرتا ہے آپ کا یہ فرمانا کہ بلوچوں کے مسنگ پرسنز ہیں تو یقینا انہوں نے بہت سارے لوگوں کو قتل کیا ہے انتہائی شرمناک اور افسوسناک ہے . کیا ایک گروہ نے دوسرے گروہ کو بطور گروہ مارا ہے یا کسی انفرادی شخص کا کویی عمل پورے گروہ کے سر منڈ کر اس گروہ کو نشانہ بنانے کا جواز فراہم کیا جارہا ہے؟ اسی اصول کے تحت اگر چند ملک دشمنی پر مبنی احمدیوں کی سزا پوری احمدیوں کو دینی پڑھ رہی ہے تو اعتراض کس بات پر ہے؟ پھر تو ہر گروہ کو چاہئے کہ دوسرے گروہ کے کسی بھی فرد سے معاملہ نپٹالینا چاہئے . اسی اصول کو آپ برطانیہ میں اپنے آپ پر نافذ کرکے دیکھئے کہ آپ برطانیہ میں پاکستانی ، پنجابی ، احمدی گروہوں سے تعلق رکھتے ہیں اب کسی انتہا پسند سفید فام آپ کو سات جو لائی کے دہشت گردانہ حملوں کا ذمہ دار سمجھ کر یا کسی اور گروہی جرم میں ملوث پاکر حساب بے باک کرلے تو آپ کسطرح اپنا تحفظ کریں گے اور دریاں بچائیں گے معاف کیجئے گا مجھے کچھ سخت مثالیں دینی پڑیں ہیں مگر یہ سب محض آپ کی سوچ کے دھارے میں موجود انتہائی بنیادی سقم کو سامنے رکھ کر دی گئیں ہیں اور انکا مقصد آپ کو غصہ یا تکلیف پہنچانا ہرگز نہیں ہے

میں نے یہ نہیں کہا کہ کون گناہ گار ہے اور کون پاک صاف اور نہ ہی میں کسی کی صفای دینی اتنی اہم سمجھتا ہوں، میں تو صرف اتنا عرض کررہا تھا کہ براے مہربانی بے جوڑ شاعری مت کریں  لسانی اور سیاسی مقاصد کیلئے جو قتل و غارت ہوتی ہے اس میں منشیات اور ڈاکے اور اغوا براے تاوان بھی کئے جاتے ہیں کیونکہ تنظیموں کے اخراجات پورے کرنے ہوتے ہیں

ملک دشمن سرگرمیوں والی بات تو ایجنسیون کو سجتی ہے آپ کو نہیں ،ان ساری پارٹیوں کے جھگڑوں سے ایک مذہبی جماعت کا کیا جوڑ جو کبھی احتجاج ہی نہ کرتی ہو ؟

پولیس افسران سے بھی بات کرکے دیکھ لی ان کے پاس بھی کوی ملک دشمن سرگرمی کی رپورٹ نہیں ملتی ہاں مزہبی اختلافات ہیں جنکی بنا پر احمدیوں کی قتل و غارت ہوتی ہے۔ موجودہ دور حکومت میں اس میں کافی تیزی دیکھنے کو مل رہی ہے

×

Navigation

DanishGardi