Home Forums Non Siasi رقص رقص

#3
Ghost Protocol
Participant
Offline
  • Expert
  • Threads: 164
  • Posts: 5438
  • Total Posts: 5602
  • Join Date:
    7 Jan, 2017

Re: رقص

JMP

یہ ایک ایسا موضوع ہے جس پر میں لکھنا تو چاہ رہا تھا مگر کچھ سمجھ نہیں آرہا تھا کہ کیا اور کس طرح لکھا جائے.
جے بھیا نے مشکل حل کردی اور ایک خوبصورت موضوع کو زیر قلم لائے.
ذاتی طور پر مجھے رقص بہت پسند ہیں خصوصا ثقافتی رقص. پاکستان میں مقیم تقریبا سبھی قدیم اقوام کے اپنے انتہائی پر وقار اور خوبصورت رقص ہیں جو انکی قیمتی اور علاقائی ثقافت کا حصہ ہیں. سب سے زیادہ مجھے پشتونوں کا رقص پسند ہے جو وہ ایک دایرے میں گھومتے ہوے کرتے ہیں بہت ہی پر وقار رقص لگتا ہے جو بات اچھی لگتی ہے کہ ہر عمر کے افراد اس رقص کو کرسکتے ہیں اور انکے چہرے خوشی سے دمک رہے ہوتے ہیں اسی طرح بلوچی ، سندھی اور پنجابی رقص بھی اپنی طرز میں منفرد ہیں عرب بھی تلواروں کے ساتھ مخصوس رقص کرتے ہیں جو پشتون رقص سے ملتا جلتا ہوتا ہے. علاقائی اور ثقافتی رقصوں میں ایک بات جو محسوس ہوتی ہے وہ ہے کہ اسمیں عموما مرد حضرات ہی نظر آتے ہیں کبھی کبھی یہ سوال ذہن میں آتا ہے کہ کیا انکی خواتین بھی اسی طرح ان رقصوں سے محفوظ ہوتی ہیں یا ان پر بھی صرف مردوں کی اجارہ داری ہے؟
اسی طرح بولی ووڈ نے بھی رقص میں نئی نئی جہتیں متعارف کر وائی ہیں مغربی رقص بھی اپنے اندر ایک خاص قسم کی توانائی اور مہارت رکھتے ہیں
سب سے زیادہ واہیات رقص (رقص شائد کہنا بھی توہین ہوگا) وہ مجروں میں ہونے والا تماشا ہے نہ جانے کس قماش اور ذہنیت کے لوگ انمیں شرکت کرتے ہیں اور ان سے کیا لطف حاصل کرتے ہیں؟ مغرب میں ہونے والا پول ڈانس بھی اسی قسم کا قبیح لگتا ہے مگر اس کو کرنے والی رقاصاؤں کی محنت اور مہارت میں کمی نہیں ہوتی ہے
قصہ مختصر میرے مشاہدے کے مطابق قطع نظر اس بات کہ فن رقص میں فرد کی مہارت کس درجہ کی ہے رقص کرکے ہر انسان کو ایک خاص قسم کی مسرت اور توانائی ملتی ہے اور یہ انسانی جذبات کے اظہار کا ایک انتہائی خوبصورت طریقه ہے

×
arrow_upward DanishGardi