ریما خان کورونا ویکسین لگوانے والی پہلی پاکستانی اداکارہ

Home Forums Non Siasi ریما خان کورونا ویکسین لگوانے والی پہلی پاکستانی اداکارہ ریما خان کورونا ویکسین لگوانے والی پہلی پاکستانی اداکارہ

#34
Believer12
Participant
Offline
  • Expert
  • Threads: 388
  • Posts: 8914
  • Total Posts: 9302
  • Join Date:
    14 Sep, 2016

Re: ریما خان کورونا ویکسین لگوانے والی پہلی پاکستانی اداکارہ

جواب میں تاخیر پر انتہائی معذرت

سب سے پہلے تو مجھے اس بات کا اعتراف کرنا چاہیے کہ مجھے آپ اور محترم بلیور صاحب کے درمیان گفتگو میں اپنی لنگڑی لولی ٹانگ نہیں اڑانی چاہیے تھی. شروع میں کوشش کی کہ خاموش رہا جاۓ مگر اس عمر میں کسی بھی چیز پر کافی دیر تک قابو رکھنا ممکن نہیں ہے میرے لئے . مجھے برا لگا لہٰذا میں نے ذکر کیا

١) میں ذاتی طور پر شخصیت کی نسبت بات کو زیادہ اہم سمجھتا ہوں . میں شخصیت کو بھی اہم سمجھتا ہوں مگر شخصیت کافی عادتوں، صلاحیتوں ، رویوں ، افکار اور پرچار کا مجموع ہوتی ہے. کہیں ایک چیز کسی میں کمزور ہوتی ہے یا نہیں اچھی لگتی تو چار چیزیں اچھی بھی لگتی ہیں . آپ نے اس ہی محفل میں ذکر کیا جہاں تک مجھے یاد پڑتا ہے کے آپ شخصیت پر زیادہ توجہ دیتے ہیں اور میرے نزدیک اس میں مضائقہ نہیں. میں بھی دیتا ہوں مگر کچھ کم

٢) اگر کوئی جھوٹ بولتا ہے تو اسکو عموماً جھوٹا بولا جاتا ہے کیوں کہ صفت ہی انسان کا تعیین کرتی ہے. میں بھی اکثر ایسا کرتا ہوں کہ فوری طور پر کہوں کے جھوٹا ہے اور اب کوشش ہے کے بجاۓ کسی کو جھوٹا کہنے کہ یہ کہوں کے اس شخص نے جھوٹ بولا یا غلط بیانی کی. شاید بات ایک ہی ہو مگر میری نظر میں بات بہت مختلف ہے.

٣) اگر ثبوت ہوں تو ہاں یہ ظاہر کیا جا سکتا ہے کے کسی نے جھوٹ بولا. آپ جھوٹا کہیں اور میں یہ کہنے کی کوشش کرتا رہوں گا کہ جھوٹ بولا

٤) میرے نزدیک اگر محترم بلیور صاحب کہتے ہیں کے ان کو ٹیلیفون آے تو اس بات میں صداقت ہو سکتی ہے اور اگر آپ کہتے ہیں کہ ایسا ممکن نہیں تو یہ بھی سچ ہو سکتا ہے اور یہ بھی ممکن ہے کے دونوں ہی باتیں سچ ہوں. کچھ جگہوں پر لوگوں سے رابطہ کیا گیا ہو اور کچھ جگہوں پر نہیں

٥) سیاست ، ادب، فلسفہ ، مذہب، تاریخ، مزاح ، نفسیات ، طب ، معاشیات ، موسیقی ، کھیل اور پتا نہیں کتنے لاتعداد مضامین ہیں جن پر محترم بلیور صاحب کھل کر اظہار خیال کرتے ہیں. میں نے اس محفل اور زندگی میں ایک آدھ اور شخص دیکھا ہے جن کو تقریباً ہر مضمون پر کچھ نہ کچھ معلوم ہو اور محترم بلیور صاحب ان ایک دو میں سے ایک ہیں. جو شخص اتنا کچھ جانتا ہو وہ میرے خیال میں یقیناً صاحب علم ہو گا اور بغیر مطالعہ اور تحقیق کے اتنے سارے مضامین پر عبور نہیں رکھ سکتا لہٰذا جھوٹ بولنا ممکن نہیں لگتا مجھے

اگر آپ کہیں گے کے جھوٹ بولنے والے کو جھوٹا نہ کہیں تو کیا کہیں تو ہاں اکثر جھوٹ بولنے والے کو جھوٹا ہی بولا جاتا ہے مگر اس بات کا کوئی مدلل جواب نہیں ہے میرے پاس کہ ایسا نہ کیا جاۓ BlackSheep Believer12 sahib

محترم جے بھای، میری عادت ہے کہ کوی بھی علم کی بات کرے میں اس کا احترام کرتا ہوں اور دھیان سے سنتا ہوں، اسکو جھوٹا ثابت کرنا مجھے پسند نہیں خواہ مجھے معلوم ہو کہ اس کی بات غلط ہے ، میں جھوٹ نہیں بولتا اس لئے لوگوں پر بھی اعتبار کرلیتا ہوں اور ان کی مہیاکردہ معلومات کو معتبر سمجھ کر بعض اوقات شئیر بھی کردیتا ہوں جس پر مجھے نقصان ہوتا ہے مگر میری عادت ہے اعتبار کرنا اور کرتا رہوں گا

میں نے دو ممبران کی عادت کو جانتے ہوے بھی کہ یہ صرف مزاق اڑانا چاہتے ہیں نطرانداز کرتے ہوے اپنی بات کو سنجیدگی سے جاری رکھا لیکن جب یہ دیکھا کہ ان پر شیطان سوار ہے تو بات ختم کردی

قرآن مجید پر کوی اعتراض کرتا ہے تو عام مسلمانوں کی طرح میں آپے سے باہر ہوکر ہنگامہ کرنے کی بجاے اس الزام کو دلیل سے رد کرتا ہون جس پر بلیک شیپ کو بہت غصہ آتا ہے کیونکہ اس سے پہلے موصوف کے کسی الزام کا  درست جواب نہیں دیا جاتا تھا اور یہ بغلیں بجاتے تھے کہ دیکھو اسلام کسقدر خون بہانے کی تعلیم دیتا ہے

جب کوی مسلمان توہین مذہب پر قتل کی بات کرتا ہے تو میں اس کی مخالفت کرتا ہوں کیونکہ اسلام اور سنت میں ایسی کوی مثال نہین ملتی۔ اکثر ہم نبی پاک :pbuh:   پر کوڑا پھینکنے والی مای کی بات سنتے آے ہیں جس کو کسی نے قتل کا فتوی نہین دیا بلکہ اسکی بیماری پر عیادت کرنے سے اس کی ساری نفرت ایک پل میں جاتی رہی

میرا پوائینٹ میرا اپنا ہی اخذ کردہ ہے یا پھر کہیں سے سنا ہوگا اور وہ پوائینٹ یہ ہے کہ سب سے بڑھ کر عزت والا تو خدا ہے جس نے تمام مخلوقات اور تما رسول پیدا کئے خواہ وہ کسی بھی مذہب کے تھے یا کسی بھی قوم کی طرٖف بھیجے گئے تھے، اگر خدا جو سب سے بڑا ہے اور سب کو پیدا کرنے والا ہے  وہ اپنی توہین پر کسی کو سزا نہیں دیتا تو ہم کون ہوتے ہیں کہ خدا کے نہ بناے ہوے قانون کو خود بنانے کی کوشش کریں ، اسے ہماری رکھشا کی کوی ضرورت نہیں ہے وہ اپنی حفاطت خود کرسکتا ہے ، ہم کون ہوتے ہیں کہنے والے کہ فلاں بندے نے خدا کی توہین کی ہے لہذا اسے قتل کردیا جاے؟ خدا کی توہین صبح شام کی جاتی ہے۔ ملحدین سے یہ دنیا بھری ہوی ہے مگر اس کے باوجود خدا ا ن کو سزا نہین دیتا اور نہ ہی بھوکا مارتا ہے بلکہ سب کو رزق دیتا ہے اور میں نے دیکھا ہے کہ لادین معاشروں میں رزق کی فراوانی ہے اور خدا کو ماننے والے اکثر غریب ہیں، پاکستان اور ہندوستان میں مذہب کو ماننے والے دنیا میں سب سے زیادہ ہیں مگر غربت بھی یہیں زیادہ ہے

اگر خدا اپنی توہین پر کسی کو قتل کرنے کی سزا نہیں دیتا تو انبیا کا معاملہ بھی اسی کے ہاتھ میں رہے تو بہتر ہوگا ورنہ اپنی ذاتی دشمنیاں نبھانے کیلئے لوگ ایکدوسرے کو مارتے رہیں گے جو آجکل پاکستان میں ہورہا ہے، بلیک شیپ سے مجھے سخت اختلاف ہے وہ خدا کو نہیں مانتا تو نہ مانے یہ اس کا ذاتی معاملہ ہے قومی یا گروہی نہیں، اگر مسلمان اس کو بھی توہین مذہب پر مارنا چاہیں تو میں اس کی مخالفت کرون گا کیونکہ مذہب اس کی اجازت نہین دیتا، اسی لئے یہ لوگ میرے مخالف ہیں کہ یہ  جو بات کرتا ہے اس سے مذہب کو پسند کرنے والوں کی تعداد میں اضافہ ہوسکتا ہے نیز لوگوں کے مذہب پر لگاے گئے جھوٹے الزامات مسترد ہوجائیں گے

  • This reply was modified 3 weeks, 4 days ago by Believer12.

Navigation

DanishGardi