مذھب اور سیاست

Home Forums Hyde Park / گوشہ لفنگاں مذھب اور سیاست مذھب اور سیاست

#20
Ghost Protocol
Participant
Offline
Thread Starter
  • Expert
  • Threads: 161
  • Posts: 5357
  • Total Posts: 5518
  • Join Date:
    7 Jan, 2017

Re: مذھب اور سیاست

سیاسی رویے بھی کسی حد تک تو کردار سازی سے منسلک ہیں ۔ جھوٹ بولنا ایک انسانی بنیادی ضرورت صرف اسی صورت بنتا ہے جب جھوٹ ، فرد کے اپنے قائم کیے ہوئے ذاتی اخلاقی معیار کی کسوٹی پر کسی تردد کے بغیر ایک مقررہ سانچے میں فٹ بیٹھتا ہے ۔

مذھب اپنے آفاقی اصولوں کو ممکنہ حد تک صاف صاف کھول کر بیان کرتا ہے ، لیکن اسپر عمل کرنے یا نہ کرنے کی آزادی اس انتباہ کے ساتھ دیتا ہے کہ ان اصولوں کی خلاف ورزی سے جو اخلاقی گراوٹ جنم لے سکتی ہے اس کے مضمرات انسانی شخصیت پر کیا اور کونسے گہرے نقوش چھوڑ جاتے ہیں ۔

یہ مذھب کا قصور نہیں ہو سکتا کہ اس پر عمل کرنے والے اپنے دل میں منافقت کی ایک لمبی فصل مسلسل بوتے رہے ہیں ۔ اس بات میں بحث کی گنجائش موجود ہے کہ کیا یہ منافقت مذھبی تعلیمات کے حتمی نتیجے کے طور پر ظہور پذیر ہوئ ہے ؟ لیکن پھر ہمیں تاریخ کے اوراق کو الٹ کر واپس اس مقام تک پہنچنا ہوگا جہاں سے یہ گراوٹ اپنی ابتدا کرتی ہے ۔

آج بھی ہو جو براھیم کا ایماں پیدا آگ کر سکتی ہے ، انداز گلستاں پیدا

زیدی صاحب،
ایک مرتبہ پھر وضاحت کردیتا ہوں میرا موضوع یا مقصد ہر گز مذھب کو کٹہرے میں کھڑا کرکے اس پر جرح کرنا نہیں ہے بلکہ اسکے بر عکس ان لوگوں کے کردار کو سمجھنا ہے جو مدعی ہیں کہ انکا ایمان مذھب پر بغیر کسی شک و شبہ کی گنجائش کے موجود ہے جو مذھب کی اپنے تئیں حفاظت کے لئے “ہر گھڑی تیار ہیں ہم” کے مصداق چوکس رہتے ہیں اس کی سچائی کے لئے دلائل کے انبار لگا دیتے ہیں .اب جیسا کہ آپ نے کہا
“مذھب آفاقی اصولوں کو کھول کر بیان کردیتا ہے ”
ظاہر ہے کہ اگر مدعی کا دعوی ہے یہ آفاقی اصول وہ مانتا ہے اور بغیر کسی پس و پشت کے ان پر کاربند رہتا ہے تو مسلہ یہ ہے کہ یہ آفاقی اصول زندگی کے ہر معاملہ بشمول سیاسی رویہ پر بھی اثر انداز ہوتے ہیں مشاہدہ ہے کہ جیسے ہی انسان سیاسی اینیمل کی کھال پہنتا ہے اب وہ ان آفاقی اصولوں کی چیری پکنگ شروع کردیتا ہے جو اسکو کسی خاص سمت میں فائدہ دیتے ہیں اور دیگر آفاقی اصولوں کو کنوننٹلی پس پشت ڈال دیتا ہے اب میرے علم میں نہیں ہے کہ مذھب اس دھرے معیار یا کردار کی اجازت دیتا ہے
درج بالا مشاھدہ کسی غیر مرعی مخلوق کے بارے میں نہیں ہے بلکہ ہمارے اور آپ جیسے احباب کے متعلق ہے ہمارے دوست احباب رشتہ داروں کولیگس ہمارے آئیڈیلز میں پایا جاتا ہے. کیا آپ اس مشاہدے سے اتفاق کرتے ہیں؟ اگر کرتے ہیں تو میرے خیال میں اسکی صرف دو ہی وجوہات ہو سکتی ہیں
اول -مذھب پر ایمان کے حوالے سے ہمارا دعوی مشکوک ہے
دوئم -مذھب کے آفاقی رہنما اصول درست نہیں ہیں

Navigation

DanishGardi