مفت خور نااھل

Home Forums Siasi Discussion مفت خور نااھل مفت خور نااھل

#9
Zaidi
Participant
Offline
Thread Starter
  • Advanced
  • Threads: 17
  • Posts: 796
  • Total Posts: 813
  • Join Date:
    30 May, 2020
  • Location: دل کی بستی

Re: مفت خور نااھل

زیدی صاحب، ایئر لائنز کا بزنس ایک مشکل ماڈل ہے اور عموما ریاستیں کسی نہ کسی طرح اپنی اس انڈسٹری کی مدد کرتی رہتی ہیں پرانے زمانے میں (کووڈ کی وبا سے پرانا زمانہ) جبکہ دنیا اور خطہ کی دیگر ہوائی کمپنیاں کافی نفع بخش تھیں تو دیگر قومی اداروں کی طرح پی آئ اے کو بھی جمہوری وائرس لڑا ہوا تھا جس نے اسکی بنیادوں کو تقریبا کھوکھلا کیا ہوا تھا .اب پوسٹ کوڈ دور میں تو جن دیگر کاروباروں کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے انمیں ایک ایئر لائنز کا بزنس بھی ہے ممکن ہے کہ جیسے ہی کووڈ کی پابندیاں نرم ہوں گیں تو ہوائی سفر میں ایک بڑ ہوتری آئے گی مگر میرا خیال ہے کہ یہ صنعت کبھی بھی پرانی جیسی نہیں رہے گی خصوصا کاروباری سفر بہت محدود ہو جائے گا اب اس انڈسٹری کو اپنے بزنس ماڈل کو مزید لین اور ایفی شینٹ بنانا ہوگا اب اس تناظر میں اپنی وائرس لگی پی آئی اے کا جائزہ لیں تو اسکی صورتحال تو پہلے ہی لاغر تھی ارشد ملک اپنی سی کوششیں تو کررہا تھا اور شائد یہ لیز پر لئے گئے جہاز بھی پی آئی اے کو بحال کرنے کی کوششوں کا حصہ ہی ہو ظاہر سی بات ہے پی آئ اے کا مقابلہ گلف کی ایئر لائنز کے ساتھ ساتھ ٹرکش ، ملائشین اور دیگر ایئر لائنز کے ساتھ بھی ہے بد قسمتی کہہ لیجئے کہ کووڈ کی وجہ سے کاروبار تباہ ہو گیا تو ظاہر ہے لیز کی قسطیں کہاں سے دیں گے؟ اب کچھ حضرات کہتے ہیں کہ یہ والا جہاز باہر جانے ہی کیوں دیا؟ میرے خیال میں یہ غیر سنجیدہ سوچ ہے اگر آپ ڈیفالٹ کریں گے تو جو بھی اثاثے ہوں گے وہ ضبط ہو جائیں گے اگر اسکی لیز کے پیچھے گارنٹی ریاست پاکستان کی ہے تو اسکے دیگر اثاثے بھی زیر خطرہ رہیں گے

گھوسٹ صاحب ، کووڈ نے واقعی ساری ہوائ کمپینیوں کو مالی خسارے سے ہمکنار کیا ہے تاہم پی آئ اے تو موجودہ حکومت کے نااہل وزیر کی چرب زبانی کی نظر ہوگئ تھی جب بغیر سوچے سمجھے احمق نے ایک پریس میں یہ انکشاف کیا تھا کہ پی آئ اے میں جعلی پائیلٹز کی بہتات ہے ۔ یورپ نے آج تک پابندی لگائ ہوئ ہے صرف کچھ سیکٹرز ہیں جن پر ان کی پروازیں جاری ہیں ۔
پی آئ کی بربادی میں ساری سیاسی جماعتیں شامل ہیں لیکن سب سے زیادہ خرابی سندھ اور پھر کراچی میں کی گئ جہاں پی پی پی اور ایم کیو ایم نے بھاری تعداد میں اپنے حمایتی کو بھرتی کروایا ۔
مجھے اچھی طرح سے یاد ہے جب 2015 میں حکومت پی آئ اے میں ریفارم اور چھانٹی کروانا چاہتی تھی اس وقت پی ٹی آئ اور پی پی پی اس کے خلاف سڑکوں پر احتجاج کرتی نظر آئیں تھیں ، اور آج وہی پی ٹی آئ مسلم لیگ نون کو کوئ ریفامز نہ لانے کا الزام دے رہی ہے ۔

Navigation

DanishGardi