نااھل الیون

Home Forums Siasi Discussion نااھل الیون نااھل الیون

#10
Atif Qazi
Participant
Offline
  • Expert
  • Threads: 167
  • Posts: 7821
  • Total Posts: 7988
  • Join Date:
    15 Aug, 2016

Re: نااھل الیون

زیدی صاحب، جب کویی چور، ڈاکو ، قاتل یا آیین کی خلاف ورزی جیسے جرائم کا مرتکب شخص پھڑا جاتا ہے تو مجبوری و شرمندگی میں اپنے ماضی کے اقدامات پر اظہار شرمندگی کرتا ہے اصول و قانون کی دنیا میں اسکی بحالت مجبوری اظہار ندامت کی کویی حیثیت نہیں ہوتی اور اسکو اپنے جرائم کی سزا تو بھگتنی پڑتی ہے ضیاء کی گود میں خالصتا مفاد پرستی کے تحت پرورش پانے والے میاں صاحب نے بےنظیر کی جائز حکومت کے خلاف فوجی اسٹیبلشمنٹ کے ساتھ مل کر جس کھیل کی بنیاد رکھی اور چھانگا مانگا کا کلچر سیاست میں متعارف کروایا اور ایک جائز جمہوری حکومت کو گرانے کے لئے پنجاب کارڈ کا کھیلا اس سارے عمل نے پاکستان کی سیاست کا رخ ہی تقریبا تبدیل کردیا.اور کرپشن اس قوم کی رگوں تک میں سرایت کر گئی اب جبکہ اپنے ہی مفاد کے زیر سایہ میاں صاحب گنگا نہا کر پوتر ہونے کا جو ڈھونگ رچا رہے ہیں اور عمران خان کے انہی کی راہوں پر چہل قدمی پر جمہوریت کا لبادہ اوڑھے ہوے ہیں ایسے میں اگر وہ اپنے ماضی کے جرائم پر اظہار ندامت کرتے ہوے قوم سے معافی مانگتے تو پھر بھی اخلاقی لحاظ سے اس پوزیشن میں نہیں ہوتے کہ دوسرے چور کو چور ، ڈاکو کو ڈاکو یا قاتل کو قاتل کہہ سکتے یہاں تک کہ اپنے جرائم کی سزا بھگت چکے ہوتے. میری نظر سے تو میاں صاحب کا اپنے جرائم پر اظہار ندامت یا معافی بھی نہیں گزری ہے سزا کاٹنے کا تو سوال ہی نہیں پیدا ہوتا. لہذا میاں صاحب کا عمران خان پر اسٹیبلشمنٹ کی کٹھ پتلی کے حوالے سے تنقید جچتی نہیں ہے میاں صاحب کے تمام غیر متنازعہ جرائم سے کافی حد تک آگاہی کے باوجود میرے خیال میں آج بھی میاں صاحب پاکستان کا سب سے بڑا اور قیمتی سیاسی اثاثہ ہیں اور میرے پاس اس نظریہ کی حمایت میں کافی دلائل ہیں جنکا اظہار وقتا فوقتا میں انہی دھاگوں پر کرتا رہا ہوں Zaidi

جی پی بھائی! اس تھریڈ کے شروع میں زیدی صاحب نے انتہائی آسان اردو میں الطاف حسین صاحب /ایم کیو ایم کی ایک غلط پالیسی کا ذکر کیا چاقو چھرے گاڑنا وغیرہ اور پھر عمران خان کے معیشت سے لاعلم ہونے پر طنزکے تیر و تفنگ چلائے۔ اب مجھے سمجھ نہیں آئی کہ اس کے جواب میں آپ نے ہمارے ہردلعزیز لیڈر جناب میاں نواز شریف پر اُنگل نمائی کرنا کیوں مناسب سمجھا؟؟ میاں صاحب اور جیلانی کا اکٹھ محدود عرصے کیلئے اقتدار کی پینگیں پاکر اپنا راستہ ہموار کرنے کیلئے تھا جس کے بعد میاں صاحب نے اس غلطی کی تلافی کرنے کیلئے تین بار اپنے اقتدار کی قربانی دی ہے۔ جب کہ جناب الطاف حسین بھائی جنہیں اکثر جذباتی نوجوان اپنا یعنی قوم کا باپ بھی قرار دیتے ہیں بار بار یہی غلطی دہرائی اور ندامت یا تلافی کا کوئی موقع جبرا” آنے نہیں دیا۔ ایں چیست است؟؟ بسیار دغابازی است۔

آپ نظام تعلیم پر چاقو چھریوں سے وار کرنے کے سوال کا جواب دیں ، میاں صاحب کی ماضی کی غلطیوں کا حساب ہم نئے پٹواری اچھے طریقے سے لینا جانتے ہیں۔ ہم کوئی امریکہ یا کینیڈا میں بیٹھے پرانے بوسیدہ پٹواری نہیں کہ ذہنی غلامی کا مظاہرہ کریں اور بعد میں پچھتاتے پھریں۔

Navigation

Do NOT follow this link or you will be banned from the site!