کچھ فورم کے بارے میں

Home Forums Siasi Discussion کچھ فورم کے بارے میں کچھ فورم کے بارے میں

#21
Awan
Participant
Offline
  • Professional
  • Threads: 144
  • Posts: 2863
  • Total Posts: 3007
  • Join Date:
    10 Jun, 2017

Re: کچھ فورم کے بارے میں

Awan sahib

محترم اعوان صاحب

امید ہے آپ خیریت سے ہیں

میرے خیال میں آپکا کہنا درست ہے کے اس محفل میں مسلم لیگ نون کے حمایت کرنے والے زیادہ ہیں گو میں غلط بھی ہو سکتا ہوں

جہاں تک اینٹی آرمی کا تعلق ہے میرے خیال میں اس محفل میں کوئی بھی فوج کے اینٹی یا خلاف نہیں ہے. میرے خیال میں کچھ محترم شرکاء محفل فوج کے چند حلقوں ‘ کی سیاست میں مبینہ دخل اندازی کے خلاف ہیں . میں گو کے غلط بھی ہو سکتا ہوں

میرے خیال میں اس محفل اور اس کے شرکاء کو اینٹی آرمی یا فوج مخالف کہنا ایک انتہائی سنگین بات ہو سکتی ہے اس محفل کے مالک اور شرکاء کے لئے اور اگر آپکی بات سچ ہے تو میرے خیال میں ایسی سوچ رکھنا غلط ہے. فوج کے کسی اقدام کو ناپسند کرنا ایک بات ہے اور فوج کے مخالف ہونا کچھ اور. مجھے پاکستان کے قانون کی زیادہ خبر نہیں مگر شاید یہ ایک سنگین جرم ہو سکتا ہے .

مجھے یقین کامل ہے کے میں آپکی راۓ کو بلکل غلط سمجھا ہوں

جے بھائی میرے خیال میں زیدی صاحب نے جتنا اچھا لکھا ہے میں اتنی اچھی وضاحت نہیں کر سکتا تھا -جب ہم اینٹی اسٹیبلشمنٹ یا اینٹی آرمی کہتے ہیں تو اس کا واضح مطلب فوج میں شامل ایسے عناصر سے ہوتا ہے جنہوں نے اپنی حد سے تجاوز کیا اور اپنی آئینی اور قانونی ذمے داری کی بجائے ملک کے ایسے محاملات میں مداخلت کی جو صرف سویلین کا حق تھے خواہ وہ ڈائریکٹ مارشل لاء کی صورت میں ہوں یا ایک سیاسی دور میں ایک کٹ پتھلی حکمران کی صورت میں ہوں – کچھ لوگ اس نفرت میں اتنا آگے نکل جاتے ہیں کہ پوری فوج سے ہی نفرت کرنے لگتے ہیں ، میں بحرحال ان میں سے نہیں ہوں – ہمارا جغرافیہ ایسا ہے کہ ہمیں ایک مظبوط فوج کی ہمیشہ سے ضرورت رہی ہے اور رہے گی – مظبوط فوج کی ضرورت نے ہی ہمیں یہاں تک پوھنچاتا ہے – جب پاکستان بنا تو شرطیں لگیں کہ یہ ملک چھ مہینے سے زیادہ نہیں چل سکتا – ایک طرف انڈیا اور دوسری طرف شورش زدہ افغانستان کے ہوتے ہوئے ہم نے اپنی قومی آمدنی یا قرض امداد وغیرہ کا ستر فیصد فوج پر لگانا شروع کر دیا – ایوب خان کے دور میں امریکہ سے زیادہ امداد بھی ہم نے جنگی ہتھیاروں کی شکل میں لی – ایک غریب اور چھوٹے ملک کی فوج اتنی طاقت ور ہو جائے تو وہ طاقت سے پھٹنا شروع ہو جاتی ہے اور اسے لگتا ہے اس کا صرف بارڈر کنٹرول کا دائرہ بہت محدود ہے اور وہ طاقت کے دوسرے مراکز میں بھی دخل اندازی شروع کر دیتی ہے – یہی ہمارے ساتھ بھی ہوا ہے – اس میں پوری فوج کو مورد الزام ٹھہرانا درست نہیں ہے – بحرحال موجودہ بندوبست میں فوج کے سیاسی کردار کی وجہ سے ان کی جتنی بے عزتی ہوئی ہے کم از کم اگلے دو الیکشن تک وہ سیاسی عمل میں مداخلت سے باز رہے گی -ممکن ہے یہ میری خوش فہمی ہو مگر مجھے لگتا ہے کہ عمران خان فوج کی مدد سے وزیر اعظم بننے والوں کا بہادر شاہ ظفر ثابت ہو گا -آج مولانا فضل ا رحمٰن کا ایک بیان چھپا ہے جس میں وہ کہتا ہے کہ طاقت وروں نے اس سے کہا ہے کہ تم لوگ جانو اور خان جانے ہم بیچ میں نہیں آئینگے – یہ ایک تبدیلی ہے جو اشارہ کرتی ہے کہ ممکنہ طور پر فوج اگلے الیکشن میں کسی بھی قسم کی مداخلت سے باز رہے گے اور یہی ہم چاہتے ہیں –

Navigation

Do NOT follow this link or you will be banned from the site!