آرزو

Home Forums Non Siasi آرزو آرزو

#12
Believer12
Participant
Offline
Thread Starter
  • Expert
  • Threads: 378
  • Posts: 8675
  • Total Posts: 9053
  • Join Date:
    14 Sep, 2016

Re: آرزو

بلیور صاحب یہ اپ نو تیرہ والا حوالہ دے سکتے ہیں ورنہ ہم نے تو بخاری میں پڑھا ہے چھ سال کی عمر میں نکاح ہوا تھا اور نو میں رخصی اور طبری شریف میں یہی لکھا ہے

محترم، میری ایک عادت ہے کہ جب بھی میں کوی بات نیچر کے خلاف دیکھتا ہوں تو خواہ وہ مذہبی ہو یا سائینسی اس میں سرچ کرتا ہوں،،،اکثر ایسی باتیں خودساختہ نکلتی ہیں، احادیث چونکہ نبوت کے چھ سو سال بعد مرتب کی گئیں لہذا ان میں بہت سارا مواد اس وقت تک قابل قبول نہیں ہوسکتا جب تک کہ ان کی سند ایک ایسی کتاب سے نہ لے لی جاے جس کا لفظ لفظ محفوظ ہے اور وہ کتاب قرآن مجید ہے، اور یہی اصول ہر پڑھے لکھے عالم کا بھی ہونا چاہئے۔ قرآن مجید فرماتا ہے کہ جب تمہاری اولاد بلوغت کی عمر کو پنہچ جاے تو ان کی شادی کرو۔ دوسرے لفظوں میں قرآن بلوغت سے پہلے شادی کی ممانعت کررہا ہے۔ اب یہ کیسے ہوسکتا ہے کہ صاحب قرآن خود ہی اس کی خلاف ورزی کررہا ہو اور اس وقت عرب میں بہت بڑے قابل انسان تھے خود ابوجہل ابوالحکم کہلاتا تھا جو باریک سے باریک بات پر تنقید کرتا تھا اگر یہاں اسے کوی غلط بات ملتی تو ضرور بولتا،  لہذا مجھے کسی ایسی حدیث پر غور کرنے کی بھی ضرورت نہیں جو اس قرآنی اصول کے خلاف بات کررہی ہو، امام ابو حنیفہ نے اسی مقصد کیلئے ساری زندگی سفر کیا کرتے تھے کہ من گھڑت باتوں کو اصل احادیث سے الگ کیا جاسکے

Navigation

Do NOT follow this link or you will be banned from the site!