مذہب اور سائنس دو الگ چیزیں ہیں

Home Forums Non Siasi مذہب اور سائنس دو الگ چیزیں ہیں مذہب اور سائنس دو الگ چیزیں ہیں

#17
Salman
Participant
Offline
  • Advanced
  • Threads: 0
  • Posts: 240
  • Total Posts: 240
  • Join Date:
    27 Oct, 2019

Re: مذہب اور سائنس دو الگ چیزیں ہیں

اگر مذہب اور سائنس دو الگ الگ موضوع ہیں جیسا کہ وہ ہیں تو دونوں کی طرف انسانی رویہ بھی ایک جیسا، ممکن حد تک تعصب سے پاک اور غیر جانبدر ہونا چاہیے لیکن نہیں ہوتا یا ہو سکتا

انسان کو جذبات اور تعصب جو اس کا جھکاؤ متعین کرتے ہیں، سے مفر نہیں

مذہب مخالفین کی یہ بات تو کسی حد تک صحیح ہے کہ سائنسی علم کے انفرادی اجزاء، تھیوریز اور ایجادات کے ساتھ تعصب ممکن ہی نہیں

لیکن یہ بات صحیح نہیں کہ سائنس کے ساتھ بحثیتِ موضوع یا مضمون ان کا کوئی تعصب، جذباتی وابستگی یا اس کی طرف ان کا کوئی جھکاؤ نہیں ہوتا

یہ جھکاؤ ان کے الفاظ، بیان، اسلوب اور طرزِ بیان میں بہت واضح ہوتا ہے

مذہب کا بگ وے میں فوکس اخلاقیات ہیں اور کسی حد تک مو ضوع کائنات اور زندگی بارے میں نظریات و آراء

قرآن یا دوسری الہامی یا مذہبی کتب میں مسٹ (نص یا حدود) بہت کم اور مے، مائٹ، شُدّ بہت زیادہ

مذہب کے مخالفین اپنا سارا بیانیہ، ساری کہانی، ساری تنقید مے، مائٹ، شڈ اور فروعیات کے گرد ترتیب دیتے ہیں جس کا کسی بھی مذہب کی روح سے کوئی واسطہ نہیں ہوتا

سائنس مادے سے ڈیل کرتی ہے اسلئے سٹینڈرڈ ہے جبکہ مذہب روحانی تجربے سے ڈیل کرتا ہے جو ہر انسان کا ان گنت ویری ابلز کی انوالومنٹ کی وجہ سے مختلف ہوتا ہے اسلئے بہت حد تک انفرادی ہوتا ہے

مذہب مخالف اپنی تنقید میں مذہبی احمقوں کی سوچ و عمل کو نشانہ بنا کر پورے مذہبی طبقے کو رگیدتے ہیں اور یہی کچھ مذہبی احمق بھی مخالف پارٹی کے ساتھ کرتے ہیں

اب یہ مذہب مخالف لوگوں کی چوائس ہے کہ وہ خود کو مذہبی احمقوں کی سطح پر گرا کر انہی کے ساتھ سینگ پھنسائے رکھنا چاہتے ہیں (یہ چیز انسیڈینٹلی انکے تعصب اور جذباتی وابستگی یا جھکاؤ کا بھی پتا دے گی) یا پھر کشادہ ذہن اور وسیع المشرب مذہبی حلقے کے ساتھ مکالمہ کرنا چاہتے ہیں

Navigation

Do NOT follow this link or you will be banned from the site!