سابقہ حکومت قرضوں میں نیازی کا کردار؟

Home Forums Siasi Discussion سابقہ حکومت قرضوں میں نیازی کا کردار؟ سابقہ حکومت قرضوں میں نیازی کا کردار؟

#123
Athar
Participant
Offline
Thread Starter
  • Professional
  • Threads: 96
  • Posts: 1816
  • Total Posts: 1912
  • Join Date:
    21 Nov, 2016

Re: سابقہ حکومت قرضوں میں نیازی کا کردار؟

بس تازہ تازہ ہوش سمبھالا تھا :lol:

ام م م اس کا مطلب ہوا کہ تقریباً دس بارہ سال کی عمر تھی آپ کی

اس عمر میں  پاکستان سے محبت14اگست کو اچھی لگتی ہے اور فوجی جوانوں سے محبت6ستمبر تک محدود ہوتی ہے

آپ سے عمر عزیز کے بارے میں اسی لیئے پوچھا کہ کتابی قصے سننے اور خود ان کا چشیم دید گواہ ہونے میں کافی فرق ہوتا ہے

ترتیب کے حساب سے آپ کے پوچھے گئے تین سوالات کو کچھ اوپر نیچے کرنے لگا ہوں اُمید ہے برا نہیں منائیں گے

آپ نے اپنی پوسٹ نمبر 75میں پوچھا ہے کہ 99 کے مارشل لا میں کتنے لوگ سڑکوں پر نکلے تھے؟

سن 99 کا مارشل لا کسی فوری الیکشن کے بعد نہیں لگا تھا جیسا کہ 77میں الیکشن کے بعد اکثریتی جماعت کو حکومت بنانے سے روکنے کے لیئے مارشل لا لگ گیا تھا چونکہ ہونے والے الیکشنز کی بنا پر ایک سیاسی فضا بنی ہوتی ہے اسی وجہ سےبھٹو صاحب کے لیئے فوری ری ایکشن ہوا اور عوام منتخب کی گئی جماعت کو حکومت نہ بنانے دینے کی وجہ سے سڑکوں پر آنے پر مجبور ہوگئی

سن 99 کا مارشل لا کسی بھی الیکشن کے فوری بعد نہیں لگا تھا جس کی بنا پر عوامی سطح پر ایک خاص قسم کا سیاسی ماحول نہیں تھا دوسرے سب سے بڑی وجہ کہ

شرفو گدھے نے یہ نہیں کہا تھا کہ نواز شریف کرپٹ ہے ملک میں انتشار ہے ،ملکی ادارے تباہ ہورہے ہیں بلکہ اُس نے واویلا مچایا کہ “نواز شریف نے طیارہ اغوا”کر لیا تھا

فوج کے جنریل سمیت کئی لوگوں کی جانوں کو خطرے میں ڈال دیا تھا

اب ایک پی ٹی وی ایک ریڈیو اور پابند سلاسل پرنٹ میڈیا جب تواتر کے ساتھ یہی نغمے گائے جائیں کہ

ایہہ پتر ہٹاں تے نئی وکدے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔اور اپنی جاں نظر کروں اپنی وفا پیش کروں ؟

تو ایسے بنائے گئے ماحول میں لوگ کس طرح سڑکوں پر نکلتے سیاسی چاہت اپنی جگہ لیکن فوج کے ساتھ محبت”اُس دور میں “ابھی لوگوں کے دلوں میں موجود تھی

البتہ پھر لوگوں نے دیکھا تاریخ گواہ ہے کہ جب کلثوم نواز سڑکوں پر نکلیں عوام باہر آئے تو نہ صرف شرفو نواز شریف کی سزائے موت کو عمر قید میں بدلنے اور عمر قید سے رہائی تک دینے پر مجبور ہوا(اب اس کو آپ اپنے دل کی تسلی کے لیئے کوئی بھی نام دے لیں )۔

اسی  پوسٹ نمر75 میں آپ نے پوچھا کہ 99 میں کونسا دھرنا تھا کہ ملک ڈیفالٹ کرنے والا تھا

اگر اُس وقت آپ کی عمر عزیز شعور و آگہی کی پختگی کو پہنچی ہوتی تو آپ کو یاد ہوتا کہ

سن 98 میں پاکستان نے ایٹمی دھماکے کیئے تھے جس کی وجہ سے امریکی پابندیوں سمیت  عالمی مالیاتی  ادارے بھی پاکستان کا ہاتھ پکڑنے کو راضی نہیں تھے اور غیر ملکی سرمایہ دار بھی غیر یقینی صورتحال کی بنا پر پاکستان میں سرمایہ نہیں لگا رہا تھا “اُمید ہے اُس وقت کے حالات کا ادراک حاصل کرنے کی کوشش کریں گے،پی ٹی آئی ممبر کی حیثیت سے نہیں صرف ایک پاکستانی ہونے کی حیثیت سے”۔

پوسٹ نمبر 7 میں جو آپ نے پوچھا کہ لیئے گئے قرض کہاں خرچ ہوئے

تو اُس بارے میں تو پہلے آپ مبارکباد وصول کیجئے کہ آپ بھی نون لیگ کے اس دعوے کو سچ مان گئے کہ لاہور کی میٹرو بس 30ارب میں بنی تھی (نیازی اینڈ کمپنی تو اس کو 70ارب سے نیچے ماننے کو تیار ہی نہیں ہوتی تھی)۔

آپ بھی یہ مان گئے کہ لیئے گئے قرض ملکی منصوبوں پر بھی خرچ ہوئے

باقی ماندہ رقم کے بارے میں نیازی جی سے کہیں اپنے پہلے والے پاپا راحیل شریف اور موجودہ پاپا جی سے پوچھیں کے دہشت گردی کے نام پر جو بجٹ وصول کرتے رہے ہیں اُس کا حساب دے دیں یقین مانیں آپ کو باقی قرضے کی رقم کا کھرا مل جائے گا

نیازی کے پاپا صاحبان وہ لوگ ہیں جن سے حساب کتاب مانگا جائے تو یہ “اوجڑی کیمپ”کرواکےدس بارہ ہزار بلڈی سولینز تو مروا دیتے ہیں لیکن حساب کتاب نہیں دیتے۔

عامر بھائی اُمید ہے کہ آپ کو اپنی پوسٹ نمبر 77 کا شافی جواب مل گیا ہوگا۔

میں نہ مانوں کی توقع مجھے آپ سے ہمیشہ رہی ہے اُمید ہے اب بھی نا اُمید نہیں کریں گے۔

والسلامُ علیکم ورحمتہ اللہ۔

  • This reply was modified 2 months, 1 week ago by  Athar. Reason: نامکمل جملے

Navigation