قرضوں کے بوجھ سے نکلنے کیلئے خود کو بدلنا ہوگا، وزیر اعظم

Home Forums Siasi Discussion قرضوں کے بوجھ سے نکلنے کیلئے خود کو بدلنا ہوگا، وزیر اعظم قرضوں کے بوجھ سے نکلنے کیلئے خود کو بدلنا ہوگا، وزیر اعظم

#15
Abdul jabbar
Participant
Offline
  • Advanced
  • Threads: 1
  • Posts: 317
  • Total Posts: 318
  • Join Date:
    24 Sep, 2017

Re: قرضوں کے بوجھ سے نکلنے کیلئے خود کو بدلنا ہوگا، وزیر اعظم

اگر نیازی جی سخت اقدامات کرنا ہی چاہ رہے ہیں تو چند نرم اقدامات سے شروعات کریں یقین کریں اس سے پاکستانیوں کی عادات بھی ٹھیک ہوجائیں گی اور صحت کا بجٹ بھی کم کرنے میں مدد ملے گی ہر طرح کے پان ،گٹکے،سگریٹ پر فی الفور پابندی لگائی جائے سوفٹ ڈرنکس پر پابندی لگائی جائے چائے کی پتی برآمد کرنے پر پابندی لگائی جائے دیکھنے میں یہ چھوٹی چھوٹی چیزیں ہیں لیکن ان پر پاکستان کا کتنا روپیہ خرچ ہوجاتا ہے اور پھر ان کی بنا پر لوگ کس کس بیماری میں مبتلا ہوتے ہیں ان کو سمجھا جائے تو یہ فیصلے ضرور کیئے جانے چائیں۔

جناب آپ پان، گٹکے، سگریٹ،سافٹ ڈرنک اور چائے کی پتی بر آمد کرنے پر بابندی کی بات کر رہے، یہاں تو ہر ممنوعہ جنس کی کھلے عام فروخت کرنے کا اجازت دینے کی سوچ پروان چرھائی جا رہی ہے۔ نیا پاکستان بنانے کا آسان طریقہ کہ ملک کو دبئی طرز پر دنیا بھر کے لئے عیاشی کا اڈہ بنا دیا جائے۔جہاں شراب، شباب اور دیگر سروسز بلا روک ٹوک دستیاب ہوں،اس سوچ کے مطابق عیاشی کے متلاشی دنیا بھر سے اس طرف کھنچتے چلے آئیں گے اور ان سروسز پر بھرپور ٹیکسز سے ملکی معاشی حالات میں انقلاب برپا ہو جائے گا۔ دنوں میں ملک کینڈا بن جائےگا۔
پوسٹ نمبر تین میں تو صرف چرس،نسوار کی فروخت لیگلائز کرنے کی بات کی گئی ہے مگر اس سلسلے میں بارہ ستمبر کو دنیا نیوز میں چھپنے والے ایاز امیر کے کالم سے اس سوچ سے کماحقہ آگہی حاصل کی جا سکتی ہے۔ شراب کی کھلے عام فروخت کی دلی خواہش کا اظہار تو دانشور کئی بار ڈھکے چھپے الفاط میں کر چکے ہیں اس بار تو موصوف نے تو بھارت کے لئے سرحدوں کو نرم کرنے کی تجویز دیتے ہوئے یہاں تک کہہ دیا ہے کہ بھارت سے لوگ کھلے عام لاہور آئیں تاکہ سردار ہیرا سنگھ کے نام سے منصوب بازار کی پھرپور رونقیں لوٹ آئیں۔ جس سے اس کے خیال میں لاہور کی معیشت میں انقلاب آ جائے گا۔
بہر حال تبدیلی کی ہوا چل رہی ہے۔ دیکھئے نیا پاکستان ایک با وقار،غیرت مند اور عزت نفس رکھنے والا پاکستان بنتا ہے یا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

Navigation