رائے کا احترام

Home Forums Hyde Park / گوشہ لفنگاں رائے کا احترام رائے کا احترام

#33
Shiraz
Participant
Offline
  • Advanced
  • Threads: 19
  • Posts: 827
  • Total Posts: 846
  • Join Date:
    31 May, 2017
  • Location: شمالی امریکہ

Re: رائے کا احترام

شیراز صاحب۔۔۔۔۔ جہاں تک آپ نے بات کی اکثریت کے رائے کے احترام کی، تو مَیں اِس احترام کو صرف اِن معنوں میں لیتا ہوں کہ یہ اِس دنیا میں فیصلہ سازی کرنے کا تقاضہ ہے۔۔۔۔۔ اکثریت کی رائے کا احترام بذاتِ خود کچھ نہیں ہوتا سوائے اُس اکثریتی گروہ کے نقطہِ نظر کے، البتہ اکثریتی گروہ کی رائے اجتماعی اور معاشرتی معنوں میں فیصلہ سازی کیلئے استعمال ہوتی ہے۔۔۔۔۔ اور میرے نزدیک یہی جمہوریت ہے۔۔۔۔۔
جب مَیں یہ کہتا ہوں کہ دنیا میں ہر چیز ایک نقطہِ نظر ہے، صحیح غلط، سچ جھوٹ، سائنسی قوانین و عدالتی فیصلے غرض ہرچیز۔۔۔۔۔ تو پھر یہ کیسے ہوسکتا ہے کہ ایک نقطہِ نظر دوسرے سے افضل ہو۔۔۔۔۔
یہ طے کرنے کیلئے تو آپ کو اِس کائنات سے ماورا کوئی عدالت تخلیق کرنی ہوگی۔۔۔۔۔ لیکن میرے خیال میں وہ کائنات سے ماورا عدالت اِس لئے نہیں ہوسکتی کہ انسان اپنی عقل و سوچ کی حدود سے باہر نہیں جاسکتا۔۔۔۔۔ اسی وجہ سے جب کوئی مذہب پرست یہ کہتا ہے کہ خدا انسانی عقل سے ماورا ہے تو مجھے بڑی حیرت ہوتی ہے کہ اگر ایسا ہی ہے تو اُس شخص نے آخر کیسے اُس خدا کو اپنی عقل سے ماورا ہوکر(اپنی عقل و سوچ سے باہر جاکر) پہچان لیا۔۔۔۔۔
واپس اکثریت کی رائے کے احترام پر آتے ہوئے مَیں ایک مثال دیتا ہوں۔۔۔۔۔ پاکستان کی قومی اسمبلی نے باقاعدہ قانون سازی کر کے احمدیوں(قادیانیوں) کو مذہبِ اسلام سے خارج کیا ہے۔۔۔۔۔ میری نظر میں یہ ایک برا قانون ہے اور مَیں اِس سے شدید اختلاف کرتا ہوں۔۔۔۔۔ مگر میرے یا کسی اور کے اختلاف کرنے کے باوجود پاکستان کی حد تک یہ ایک عین جمہوری فیصلہ ہے۔۔۔۔۔
یہ تحریر کچھ کچھ اِس لڑی کے بنیادی مقدمے سے تھوڑی ہٹ کر ہے۔۔۔۔۔ آپ نے اور شاہد عباسی صاحب نے ایک دو اور پہلو اٹھائے ہیں۔۔۔۔۔ معاشرتی امن اور کتھارسس۔۔۔۔۔ میں کوشش کروں گا کہ اُن پر لکھوں۔۔۔۔۔

نظری طور پر کوئی نظریہ یا شئے دوسرے سے افضل نہیں، ہاں مگر عملی طور پر اور افادیت میں

یہ عقلی محدودیت ہے جس کا یہاں بہت مرتبہ تذکرہ ہو چکا ہے اور بعینہیہ یہی وجودِ خدا پر بھی ایک دلیل ہے لیکن یہ تفہیم، یہ شرحِ صدر اس طرح ایک لمحے میں نہیں ہوتا جس طرح ایک ثانیے میں آپ نے اس کا اظہار کر دیا ہے، انسانی ارتقاء میں اس کیلئے زمانے صرف ہوئے ہیں اور فرد کو اب بھی ایک مدت درکار ہوتی ہے

باقی برے قانون بارے آپ کے نکتے سے میں متفق ہوں، جمہوریت کے بھی لوازمات/تقاضے اور درجے ہوتے ہیں، لوازمات پورے بھی ہوں تو بھی جمہوریت کو کوئی مثالی نظام نہیں بناتے، ہاں الوہی ہدائت سے ماوراء، انسان کے اب تک کے عقلی ارتقاء کا فیصلہ سازی کے ضمن میں یہ بہہترین نچوڑ ہے

Navigation