خدا ، مذہب، مکالمہ،

Home Forums Hyde Park / گوشہ لفنگاں خدا ، مذہب، مکالمہ، خدا ، مذہب، مکالمہ،

#126
blacksheep
Participant
Offline
  • Advanced
  • Threads: 12
  • Posts: 1309
  • Total Posts: 1321
  • Join Date:
    11 Feb, 2017
  • Location: عالمِ غیب

Re: خدا ، مذہب، مکالمہ،

اب کچھ سنجیدہ نکات آپ کو نہیں لگتا کہ یہ آپ کے احساس (پرسیپشن) کا مسئلہ ہے؟ اوور یہ میرے ساتھ بھی آپکے رویے اور تحریر کے بہت سے پہلوؤں بارے ہو سکتا ہے، اگر اس کا احساس سے ہت کر کوئی آزادانہ اور مصدق پیمانہ ہے تو ہم اس کو اپنانے پر تیار ہو سکتے ہیں، لیکن ہم خود ایک دوسرے کے خلوص، دیانتداری اور سنجیدگی کے جج نہیں ہو سکتے ہیں، اس سلسلے میں مجھے بھی اپ کے انداز سے بہت ساری شکائیتیں ہیں اور وہ یہآ میں نے پیش بھی کی ہیں

آپ یہ نکتہ پہلے بھی اٹھا چکے ہو اور میں اس پر کافی حد تک آپ سے متفق بھی ہوں جب تک کہ مطمحء نظر صرف ایک دوسرے کی ناک رگڑنا ہو، لیکن اگر اس کو ایک دیانتدارانہ علمی مکالمہ/مشق اور سیکھنے سکھانے کا عمل بنا لیا جائے تو یہ وچار وٹاندرا کافی فائدہ مند بھی ثابت ہو سکتا ہے اور ذہنی سڑاند/انحطاط (سٹیگنیشن) سے بچنے کا ذریعہ بھی۔ پنے اگلے دور میں داخل ہو گا تو یہ بھی آہستہ آہستہ واضح ہو جائے گا کہ ملحدین کی عقلیت و دلیل تسبتاً ایک ادنٰی درجے پر ہے

نوٹ۔۔۔۔۔ دونوں تھریڈز میں کم و بیش ایک جیسی ہی بات ہورہی ہے سوائے یہ کہ ایک تھریڈ   میں مسلمانوں کے عظیم ثقافتی ورثہ پر کافی لے دے ہورہی ہے۔۔۔۔۔ اس وجہ سے  کچھ تحاریر ایک جگہ سے دوسری جگہ منتقل کررہا ہوں۔۔۔۔۔۔۔

شیراز صاحب۔۔۔۔۔۔

ایسا بالکل ہوسکتا ہے کہ یہ میرے احساس کا مسئلہ ہو۔۔۔۔۔۔ میں آپ کی بات سے اتفاق کرتا ہوں کہ ہم خود ایک دوسرے کے خلوص، دیانتداری اور سنجیدگی کے جج نہیں ہوسکتے۔۔۔۔۔۔ میں اس بات سے بھی اتفاق کرتا ہوں کہ آپ کو یا کسی اور کو میرے رویے سے، میری تحریر سے بہت ساری شکایتیں ہوں گی یا ہوسکتی ہیں۔۔۔۔۔۔ انگریزی زبان کا ایک بہت پرانا لیکن بڑا ہی خوب صورت محاورہ ہے کہ میں اپنا دل اپنی آستین پرپہنتا(لکھتا) ہوں تو جناب  میں طنز بھی کرتا ہوں، کچھ عالی مقام فنڈوؤں کی تضحیک بھی کرتا ہوں،  یہاں پر اکثر مُرغے بھی لڑاتا ہوں اور خدا پرستوں سے علمی و منطقی بحث سے حتیٰ الامکان پرہیز بھی کرتا ہوں۔۔۔۔۔۔ غرض جو بھی کرتا ہوں کہہ کر کرتا ہوں۔۔۔۔۔۔

آپ کے ساتھ علمی اور سنجیدہ بحث کرنے سے جو اب تک احتراز کرتا آیا ہوں اُس کی کچھ وجوہات ہیں۔۔۔۔۔۔

پہلی وجہ میری ذاتی خود غرضی ہے۔۔۔۔۔۔ مجھے ابھی تک آپ کی تحاریر سے سوچ کے حوالے سے کچھ سیکھنے کو نہیں ملا ہے(البتہ انتہائی خوبصورت اُردو اور انگریزی پڑھنے کو ضرور ملتی ہے)۔۔۔۔۔ پوری سچائی سے کہوں تو آپ کی تحاریر میں سے ایک جملہ بھی ایسا نہیں ملا جس کو میں نُدرتِ خیال کہوں۔۔۔۔۔ جو میرے لئے سوچ کے نئے دروازے کھولے۔۔۔۔۔۔

آپ نے بے شک یورپ و امیریکہ کی کم از کم دس جامعات کی خاک ضرور چھانی ہوگی لیکن معذرت کے ساتھ مُجھ اَن پڑھ اور کم علم بندے کیلئے آپ کی تحاریر میں کچھ نیا نہیں ہے، ہوسکتا ہے میری کم علمی وجہ ہو  ۔۔۔۔۔۔

دوسری وجہ میری رائے میں آپ کی جانب سے بحث و مباحثہ میں  دیانتداری کی کمی ہے۔۔۔۔۔۔ انگریزی کا ہی ایک محاورہ ہے۔۔۔۔۔

play to the gallery

آپ کی تحاریر سے مجھے کئی بار ایسا لگا کہ  آپ تماش بینوں(اس فورم کے زائرین) اور تالیوں کیلئے لکھتے ہیں۔۔۔۔۔۔ آپ شاید اسی خیال کے زیرِ اثر لکھتے ہیں کہ فورم والے فیصلہ کررہے ہیں۔۔۔۔۔۔ آپ نے شاید دو چار دفعہ کچھ ایسا لکھا کہ فورم کے سامنے یہ واضح ہوتا جارہا ہے۔۔۔۔۔

مگر چندا۔۔۔۔۔ میرے چندا۔۔۔۔۔۔

میری نظر میں یہ ایک انتہائی بچگانہ حرکت ہے۔۔۔۔۔۔ مجھے اس بات سے قطعاً کوئی فرق نہیں پڑتادوسرے لوگ میرے نظریات کے بارے میں کیا سوچتے ہیں۔۔۔۔۔۔ کوئی میرے نظریات کی تائید کرے یا مخالفت میرے نظریات پر یا مجھے کوئی فرق نہیں پڑتا۔۔۔۔۔۔

اور جہاں تک علمی و سنجیدہ بحث و مباحثہ کی بات ہے  تو دنیا کی قدیم ترین جامعات میں سے ایک یا شاید دنیا کی قدیم ترین ہی جامعہ، ٹیکسلا یونیورسٹی کے بارے میں کہیں پڑھا تھا کہ وہاں بحث و مباحثہ ذرا دلچسپ ہوتا تھا کہ وہاں علمی مباحثوں میں صحیح و غلط کے فیصلے نہیں ہوتے تھے۔۔۔۔۔۔ ہار جیت کے فیصلے نہیں ہوتے تھے۔۔۔۔۔۔ نصرت جاوید، جن کی تحاریر سے میں نے بہت کچھ سیکھا ہے، نے ایک دفعہ اپنے کالم میں ایک بڑی خوبصورت بات کہی تھی جس کا مفہوم کچھ یوں تھا کہ کسی شخص کو اگر کسی معاملہ کا اچھا تجزیہ کرنا ہو یا اُس کو غیر جانبداری سے دیکھنا ہو تو پہلے اپنے دماغ سے اُس مُلا(خدا) کو نکالنا ہوگا جو آپ کو صحیح اور غلط بتاتا ہے۔۔۔۔۔ نصرت صاحب اب پاکستان میں رہ کر جتنا کہہ سکتے تھے انہوں نے کہہ دیا۔۔۔۔۔۔ جو نہیں کہا وہ بھی آپ سمجھ سکتے ہیں۔۔۔۔۔۔۔

میری ذاتی رائے میں ایک اچھی علمی بحث کو غیر محدود(اوپن اینڈڈ) ہونا چاہئے۔۔۔۔۔۔ علمی بحث و مباحثہ میں معاملات کو طے نہیں کرنا چاہئے۔۔۔۔۔۔  معاملات کو طے(چاہے عارضی طور پر) کرنا صرف فیصلہ سازی کا تقاضہ ہے جیسا کہ پارلیمنٹ میں کئے جاتے بحث و مباحثے۔۔۔۔۔۔

اور آپ یہ نہ سمجھئے گا کہ یہ ہار جیت کے تصور کے ساتھ بحث کرنا صرف خدا پرستوں کا ہی خاصہ ہے بلکہ یہ صِفت آپ کو بہت سارے ملحدیت یا لاداریت(ایگنوسٹزم) کے حامل افراد میں بھی مل جائیگی۔۔۔۔۔۔

جہاں تک آپ نے ذہنی سڑاند یا انحطاط سے بچنے کی بات کی تو جو باتوفیق لوگ اپنے آپ کو پوری سچائی کے ساتھ ایمان کے کھونٹے سے آزاد کرالیتے ہیں تو میں نہیں سمجھتا کہ ان لوگوں میں خیالات میں انحطاط آئے گا مگر واللہ اعلم باالصواب۔۔۔۔۔۔

پسِ تحریر۔۔۔۔۔۔  یہ تحریر لکھتے وقت پسِ پردہ نصرت فتح علی خان کی مشہور قوالی، اللہ ہو، چل رہی ہے۔۔۔۔۔۔

  • This reply was modified 7 months, 3 weeks ago by  blacksheep.

Navigation